Skip to main content

Full text of "Dars e Nizami Darja Sabeaa Maoqoof Alai 7th year"

See other formats


, یل ب روا ۳5 
ولا پھر مونا ال ری 


سیت 3 مر مک ماو ار دا ٩‏ 20 
سا ا ای یرام نارای ادم يفاوق ری 


۳ 2 ش ۲ 
۱ 927 
ا سفن 2 ۳ 


ف 

ولاك ا 

ریاس 
رای 


لالز یٹنا ی 


تفای 


لوان 


مرو قکنروین _ 


ار 


۱ جور ۰۱۳ 


پر 
مکل دای 
8۔ بیش یی 


021-34130020-0321-2115595-0321-2 


اللمعان نارو التبیان 3 


۰ 


ست مضا ممن 


e aê 
85 E وو شمف و‎ 
IKE ھت یو وج‎ 
ET 
یت‎ OT 
PST EI 


رت ےہ 7 
خلض مد یہد ےھ 
ا یں مو اعد _ فد 
]3بت 
EEE‏ 1 
ویر 9ا _ LT‏ 
GELE‏ 
CSE EI‏ 
ET‏ ہت 
ISSR 0 7‏ 
BEETS ATA‏ 
ی هنشت هد 
ا[سریرے DS‏ 
یہ یو 6سس0 
IRS‏ _ ئا 
اتعازضے اما ہد ا 


علوم رآن جا رت بی شش 


4 


IPS 


= 
7 سیف ترش 


HE 


ز ی رکث موضور پرواروہوۓ وا | 111 ٭» 
اعتر اضات اورا نک جاب 
دس ڈور 


لت فرط فرش 


جہ 
ند 


i» 


۳ 
نما 
۳ 
¢ 


e 


0 راوشس 
اءا تاحرف 
یا لہ گر اریت نوج ج 


ہی 


AHH 


اللمعان ارو التبیان 


اب م ایک ہا ری رکچ ہی یک فرا ٹس 
کی ےوجورٹشآ تیں؟ 
ٰ 
ری ۱ 
صقر ارات کے سیل مین 
| تراما سب هگب شہورہوگیں؟ 
| 
e‏ 
ا 
آروبواقدف ٠‏ 1201 


ق رآ نکری مم کی اقا 


e) 7‏ 
ےل ساد 27 
> و وسوے 


آ یا رآ نکواحادیٹ ما رک ےو 
کہا کاے؟ ` 


اللمعان ن اردہ التبيان 6 


77 


3 


٦ 
0 


کہ 
٦‏ 
۵ 


دنسر نایهام 
بغار شرف کی روات 


اللمعان اردو التبیان ۱ ۱ 7 


ایام راغ بصفهالی رح ال کال 
لامر ھی رح ال کا نوور ١‏ 


4 تین - تفت 


شی راشا ری سک پا نے موا رن ے 
وا ی عد یک مطلب 


اللمعان اردد التبیان ٠‏ .۰ 


ححضرت سعیر .نج رر الہ 228 


| 
7 ب ری راش ۰ 
مش ۰۰۰ 8اه و 
2 واج جو 
12 9 ص217 E‏ 
2 
+ 
یی عود oy‏ 
ے یجان _ 
آ ات الا کا مکی شور 
یش رب 
مت ورشیگ شورقا یر 
1 


ی اکر نے میں ق رآ نک ۱ لوب 


N| N 
جہ | خه | جہ‎ 
:- +21 


N 
په‎ 


اح 


و مل 
مف رین ی نک راغ 


۳ 
3 
٦ 


8 
لد 

2 
HHHH 


BRR 
N 
E بدا‎ 
ال5‎ Pt 
۲ ۱): |, 
jÊ 


رت بج نآ رباب رصاللد 
حر کرم موی این ای 27 
خضرت طا کو ی نکیسان بیان رم الد 


N 


از رآن پرایک شال 


اللمغان اروو التییان. 
رہ ابی شرا 
پیل شر تسیل 

دفس یضر طا يل ۱ 
تی ری شراک سیل 


یل 


ت0 


ہکا تا تکی وحدت 
کنات ۱ 
یشیم 

-؟ س یکی 
۵- ر ےک جوز ےک وچو 

-٦‏ رگ مادرییش کی تیال اور پررے 
راون کے ےل از ری 
۸-جدان موی . 
۹سا نکی یس کشا کنارف 
از رآ نکی ساتوک وج 


مه 


ورم 


۱ 
TI پ‎ | ۰ 


N 
ها‎ 
لہ‎ 
9 
چ‎ 


گا 


257 


5 

اخ 
E‏ 
ORS‏ 


از کے با سے علا کرام یآراء 


0 


0 
3 
ومد 
پت 


ki 


مان ےچٹر اش 
تاز رآ نک در یوج 264 


00 
0 
کے 
3 
تم 


© 
4 


باز رآ نک یآ شو ې وجعلوموموارف ۱ 


¢ 

۱ 3 
3 ۳ 
س | 


۹ 5 تاد 
اہرآ لیاصوی تچ کش | 265 ]| عیام 
| اازقرآ نکی نیوج ۱ گقی رہ بود یت 


از رآ نکی کن وج جد ری علوم 
کے سا ت رآ نکاعد تعاش 


کاک ترآ کم دی کش ک سا 


الف سي لزاب 


ق رن ‌کریم کے رای رات 


اللمغان مر اردهالتبیان 11 


۰۰ 
اپ 


مه 


سار سر اعم 

الحمدلله رب العالمین, والصلاة والسلام علی سید المر سلین, 
وعلی آله, وصحابه, ومن والاهملی‌یومالدین, وبعد! 
وناق المدارس الع ہے باکتتان بی بطور نظامتء ری صرررنات 27 
۱ تا کی کن ا کف دای بے ما مرک ےکا اي يطول 
موقع اللہ تی سے غاص قل وکرم اور صر وفاقی وصدر اتاو یمات برارل دیش 
پاکتان ساد الا ام اکرث اچ سم انثر خان صاحب 7 العا ی کی خصوی 
صضعون ات 

درجرسابعہ کے نصاب میں علوم ارآ ن کے جوانے سے جب ی میں بات ہوئ یو 
راقم هفخ لی اوآ کی تالیف ”التبیان في علوم الق رآ نلک » 
بالا تفا اس شور کے نصا بکا حصہ بنا اگیا- ۱ 

ایک موق پر رت صد رفا نگ معیت یل عھر ےکی سعادت نصیب ول ء ہم 
مطاف یی جن نانوی صاحب ےا ن کے ا هثل اقا تک »تا بک 
تب اور یراق امور پر پو حر وضا تگو لگ ارکردمیں ء انہوں نے فر بای افعل یا 
ہنی ثم آرنیہ“ چناغہ وای کم نے نی بک امل ناک بتاک حطر رت مورا نا مزنل 
سلاوٹ اتا چامح فارہ گرا پیک ران رخدمات عا کی انہوں نے شباضددوزعرق 
رز کر مطلو میاه سے کار تیب د ےک لاب رک ؛ جکتہالیشریی ے 
بچپکرسفرمام پرآ ی۔ 

.اس درمیان مب شر هکتاب مولان سف یادن کےتوسط سے جم نے صابوفی 


اللمعان ارده الصیان 12 
صاحب اور ان YET‏ صاح بکوبھی رانء ال رک گر سکم 
انہوں نے ے ہار ےکا مک یی نکی ء اور یں فو نکر کے ڈ ر ہاری دعاوّل کے ساتھ 
کیا تفر ےکی وازا» برش روت ال دہ نیا مرتب شد ہم نے 
درا لگ ایک متب کو پچھاپنے کے لے دی امید س کہ وہاں ےکی ایا شان زوش 

ےا رس ول نع تال : 

جا مت قارو یرای میں نو اغ کےس ات تیان فی علوم ترآ نکی تر رس 
کی سعاوت بفض لہ توالی میں تن چا سا کک نصیب ول ء ال دوران مت لد المرب 
وال درا ات الاسلامیاورجامعہ قارو ت ےکا کی سک بایان مردل وق مولا نا سر عطاء ان 
شماہ ااخاری‌حفظ اد ے ری کے دوران مار ے2 ج وت لاو تفای ون 
3 کی ہتفای ق رحو یکا اضافکیا مل ہونے کے بعدہم نے ھی ن وتو اورت تیب 
رال کی 

مل ھی اوی کے ز مہدارجنا بل طاہ رصاح بک نے نر واشماعت کےا مو 7 
اذیا یکن ککا کا کرفان انول نے لکیا۔ 

اصو ل ایریا علوم ارآ ن کےجوانے ے ماد لیا ہاو یی خدمت ے۔ 

انتا ٹی سے دست بدعا ہو ںکہوفاق الل رار :صددردفاقی؛ جام فاروقیگرایق» 
مولا تا عطاءالرصکن شاه خا ری ءمکتہ لدھیافوگیء جنابع لح طاہر جناب۶رفان افو رل اور 
متعلقہ تام تخصیات زارد ون و یفن سے داز ےء اور مس باو 
رآ نکر مک یتقلیمات پپیکن وک لک نے راکو تی ب فرمائۓے۔ 
وماذلک على الله بعزیز۔ 


بوخ (مول نا ول خان اف 
مو راب الا دب الا سلا ی الم 
انی دس پرست شی لد ربا متا 
خر سد ال 


اللمعان 13 


مہ 
بسماللهالرحمن الرحیم 
الحمدلله رب العالمین, والصلاة على المبعوث رحمةللعالمین وعلی وآله 
. واصحابهوالتابعین لهم باحسان الى يوم إلدين, وبعد : 
علق نت یج رز ڈیں جو یس نے بکرم کی بو نورق کت 
یواست الالام“ کےطلبرکرا مکیلع پار کے ہیں :ناک برتقار هن 
کے لے دی نصا بک ضرور تکوپہداکرییادرمیرے ده لصوم ۱ 
۱ ریت او دورو کت ہیں »کل ان تقار یر سے فا کہ یچ او رافادة عا مہ اون مکی 
روشاع تک خاط رم نے یہ بات مناس بیان کی تا بک کل یل 
ہکرروں۔ 
تفا سے دعا ہ کہ دہ ا کا موتا ای رضا جو وال کام بنادے اور وم 
رواب میں فا دہ پا ےکس می نہ ال ان دے ےگا اورت بی اولا گر 
شطع پا صافدل ےا اما دای کاٹ متس 


لصاو 
کید شید الد رامات الا لا می کر مم 


اللمعان . 14 


مقرم یح ثالث 


E‏ الا عو از ی 
الحمد لله الذى انزل کتابه المبین, تبيانا لکل شيع وهدی ورحمة 
للمؤمنین, و الصلاة والسلام على اشرف الانبیاء والمرسلین, المعبوث 
رحمة للعالمین, وعلی آله واصحابه شموس الهداية ونجوم العرفان, 
والتابعین لهم باحسان الی یوم‌الدین و سلم‌تسلیما کثیر ار اما بعد | 
یک ق رآ نکر بی صلی این علیہ وم مکا دایز را دی او رآ پکی 
رسال تک تیک مزر لول رورت ہے اود یرآ ندال با تک وا ول کرو ووی 
ھی ہے جک ای ای پات کی ےکک ےکی انان ےلو وف کم کلت کیا 
۱ اورت بی اکا علا ے اا لکتاب میں 2 ےکوی استتغاد کات ور امح روف 
»اور ال کےساتحوساتح دو ولکھنا یڑ ھن بھی تجا نے تھے کان ال کے باوجو د یزان 
E‏ ا E‏ چگ رب الام نکی طرف ےرل وک بہونے پر رشن ود اور 
نا قائل 7 دید مت ے :لوم اکدت تحلوا من قبله ...€ (سورةعنکبوت: 
(A9‏ 
ی رآ نکم ا نگنت علوم ومحار فکاخمزانہ ہے اور محاش را یٰءاتضادی اوسیای 
امرس وبا راو EE‏ و ا اه ا ام وسائل نےکرآ یا ےنوس سے 
عنقلیں دنک ره ہیں اور بڑے بڑے ای اہم ووا ال کا وان 
لئے سے عاج وچ ٹیںہ ال کے اندر بلاغت و یا نکیا ایک ایک وجوم موجود ہیں 
جو بااقت کے #سوارول اورارب وکلم کے بلند پایدانشورو نک ےکی الا »اک 
لق لی ححقیقات میں مشخول حص رار یکیل متا سب کرو هلو کوان علوم ومعارف 
کے اصمول وقواعد سے تحار فک را کل« کا رن نے احاطہکیا ہوا ہے ادر رآ نکم 


اللمعان ہے 15 
گے روآ بات ,ی واخباراوراسلوب و بیا نکی وجوو از اورال میس دترم و جو دنز اکن 
وان ران ن 
اورعل نے اکتا ب ”التبیان فی علوم القر آن “س ١‏ ی تصوصیات وخو بیو ںکو 
یا نکرن کشک س اورعلوم قرآن کے بارے میں اپ تین کے سلسلہ میس اس 
اس کے ارا رورمو زوررے فصل کے سا تھا 9 ب میس ذک کے اور 
ایق ال بحت شی کو میں نے و فصلوں کے انر ری مکیا ے جیی اکتا رک ملا عظہ 
۱ رای 
ال اول :علو ق رآ نک یت ریفءفاک لق آن اور ما ن رآ ن ےآداب کے 
الا یاس 
۲- دوم :اسیا ب نزو لک حرفت ہف رآ آیات کی ٹم اسباب نزو لک 
حرفت ٹوا تراورا ییالول کے بیان ٹل ے۔ 
تل موم :رآ که کے پر 0007 کے راا ق رکب سا وم کے 
ار نول سے تاف ہو ےکی کت کے بیان ٹس ہے۔ 
نل جام: نع تن رر SEE‏ 
س رآ اورپ ہمہ شان ٹیس ایک ہی کف مم تع قآ کابیان ے۔ 
۵ صلم رآ کي می ئن Î.‏ ک دع رهام شرب رک 
تی ست بیان شل ہے۔ 
1 نم شی مضہ یرک ادف ول فقو رنب 
کیا کر دا سرا تک شراک کے بیان شل سب 
ا لم :شی راشا ری اورع کال بارس میں موق ف ماش ری ا ےر 
فی میں ف رق ارگ مب تا سی رکے بیان ٹس ہے۔ 
کے یم :ستول خقول اور نار سیرک مشب رکب اورک تخی کی 
تصوصیات کے بیان یل ے۔ ۱ 
0 ۲ رن کے یہ از ہدک شر ے 


اللمعان 16 
ل وتم ق رآ نکرمم کے سات روف پرنزول »راء ات پو مور اور 

اروت ن شش شود رقراءونفصرین کے بیان س ے۔ 
اشتحای سےدع ا کردها کنا باوضا اپ ذات اقدل کے لج بنادے اور 
ہمارے سلمان با ںکوال ےت ناراب وا کاب کے مطابن یی کی 
توق ع نات ف را سے کر مار لوم ساب میں زره هکل دن نہ ما لکا م 
آ-ع گا اورت یی اولا وگ کہ جوش اللتھالی کے یال صاف ول هآ ادر انش ی 
ہعارے کف ہے اور وج کیت رر کا رساز ہے۔ ۱ 

کر رجب ال رچبقام کر ۱۳۰۸ھ 

رتاوم ااب ولد 

یی صابول 

اتاذ چامجرام الق کیم گرمہ 


اللمعان ارش التبيان 7 


مقر مخ ران 


الحمدله الذی انزل على عبده الکتاب و لم‌یجعل له عو جا, والصلاة 
والسلام علی عبده و رسوله المبعوث‌هادیا ورحمةللعالمین فکان نعم 
المبلغ‌للر سالة و نعم المودی‌للامانة وكانرووفارحيماًوبعد! 
رآ کے ایک اہر یچ زہ اورآ عاف کتابول میس و ہآخر یاب ےنس س 
ال تقو گے ےل انراز ہوک اور ندال کے کے سے ہمسلرانوں نے رو ی 
سے رآ کرم کے س ات اتچا ی اتتا م د1کرا مکا موا ملیف مایا اورا لک رآت وحفظ» ‏ 


7 یم فی اس کے شی معان ورموزکااظہار ءا یک آضی دجاو لک یملف صورتو ںکی 


وضاحت اورا سپا بت ول درو تن ی تارج فلز نظرراے۔ 

تہ یب تہ نک تنل جب تک طرف بڑھا توعلوم وو نکی »بتک میں من 
»اد تم اپ داش ےکی مس مل گی بعلو ق رآ نکش کی ایی تق اور 
فی کا تی ےا م وضو رت وہ ددع بڑرارو کتک ء او ہے 
زاب" نییان نی علوم نقرآن' یقت ان تقا یر یرو دروکا 4 4 
:مدا لق رکی سک فسات کے تھے اس کے بر لسن ان درو ںکوسرتب 
کر کے افا عا مکی خاط رشا کرد یاءالڈیتھاٹی نے ا کا باتو لیت ماعطا ال اور 
لور کے عالم می ا لک اشا عت ہو ےکی ہے +سودکیعرب سک ملا ووک لوگ ا .اف 
ما کک میں واه گے ہیں ٠‏ پاکتان می بھی بح لوگوں نے ا کی طرف تو جما 
۱ اورا سے فر مایا هط وم کے لئے نانح اورمغید پایا ہے اور اے اتسا نک نظ رے 
ی 


اللمعان ارش التبیان 18 
ملت البضری کی اتفاميذ چگ و کنو ںکو بترتن اورعد وشکل میں شح 

کر ےکی ذ مددادگی اسر ہے ال لے وا کنا بکی طباعح تک طرف کی متو ج 

و2 ترظ رت ا تب کے اند رش منا سب تبد بر( مر کے ا سے الم اگیاءان 

تپ یلیو ںکولنض علام(ححقرت وا و خان امنظفر اح فک من ۶ ۱ 

لیے انح اورمفی ر ھا ہے مھ سے اسل ل شس مور و یکی مو انل کے زد گے 

“مل دایار ہے اذا سکاب می مت رڈ ل تید یمیا ںکیگئی ہیں : 

فصو ل یی ریب۔ 

علامات تر تم منا سب تید ی 

شلات ماو 

تا بگاصادیث رن - 

ہرس ری اوزڈرویکنوانا تکااضاف.- 

اورا ناب میلع الات رک یدن اتید کک کی _ 

آ س صد ر ونان الم رار الح ری ا اکتا اوروفاقی کے ستو نکا کر یار 
نہو لکراتبول نے ا کا بکوعلو م رآن کے مون میں نصاب میں دال فر مایا سے نجز 
اب کته ابش یکا کش رز ابو ںکانہوں نے ا لکنا بکوعمدہ ورن او رات ین 
صورت شلک فر مایا ے اود کاب کے سا بہت اما مکا معا کیا ہے مشش سکیا دہ 
تن کی ی مکی تخل سے دعاء س کرد ہ ان س بکو ا لیم الا کا م رت 
برل ینا یت رما سے اورا تھا لی یو شی رھت فر مانے واٹے یں۔ 

نے موی ساب 


ھ۳۴١‎ 


ہہب مھا ۱ ۱ ۱ ۱ 


پراش اورناندان : :مر ای متس شام بورشم رعلب میں پیا 
ہو ال شر کے یرو ںکا رٹک سفرید ہو ےک وچ ےا ے ماب شا سامت 
بھی پکاراجاتا ےآ پک اران یز اتکی انان ےی آپ کے اله 
علب کے بے لاوش سے تھے 
تالم و2 بیت ایا لیم آپ نے اپ دادرخ یل رت لٹ سے 
۱ الک لياف برض وکر بترا علوم اپے وال بے اور 
وہیں علا ق کے کتب شنو ری ی خن قآ نیک لکرلیا لپ درج ہنا فو یہ کے 
ابم ے۔ 

کن بی ےا پائ دی کے لک ےا ہتشون ق ساب واب کے 
انزرعلا کے دروک وموا عظ بی اتنا م ےر یک ہو کے تع روعلوم ون کےتعمول کے 
لے ام کےکبارعلاء کے ساٹ ز انو ےتہن ٹےکیاہآپ کے اسا هل چن ر شورعلا 
ا ۱ 

, نیب را (عالماشہیاء) 

اتان 
پت سیر ا رل » 
"سراف فا ۱ 

۱ ۵ی ارام یب خیاطوظیرہد اګ 
ی زبری: آپ نے در تفا یلیل مار کی رجا میک 
کم لک نے کے بعدکا مر ارم دخ لان ایک سال ہیآ پ نےگزاراھ الآپ 
کی بعت اکم سے ایاٹ موی کک گوس می ر E‏ 


3 


اللمعان ۱ : 20 
وکاروپار کے اصصول وضواب بک یلیم ری جا گی ای ےآ پ نے ا لک کوخ رآ کک 
علب تی بی انی کشر کار می و يم کے کے راغلی »الاو ہا ںآ پ بطل پر 
از مرکا شرورپ هقی فق صر یف 
اصول, اور فرش وغمیرہ کال دزن حاص لگ » اور سا کے سا تم علوم اء فس٠‏ 
را افی جخراف وجار او راگ یک وف گرگ یڑ صا اور یو یآپ نے یہاں رهگر 
رس رصن دی اورک ری علوم دوفو گرا دامح ٹسیٹ یرکسع 
آ پک ف رات شاءش ہوئی- 
ییاز یر ول سے پا کر نے کے !عرز ارت اوقا ف شام نے اپتے 
خر چ پ رآ پکوقاھرہ یل جامعہ از رمی لو نیرٹ یک لیم کے ے بھی اور 9۵۲ ء ٹس 
آپ نے دا یتک کرک رون سن ما می او یر روہال کک 
ور تس لن التمنا الشر یک لیم ال »اور ,9۵۴ وی آپ نے قضاء ۳ 
راغت »ال زنل پیت دآ کال کر یکی مادک اورسب 
ہے اکل رغ کک مان گ٢‏ پ سا لگ درجراتیازکو اجان ےکڑل دیا- 
وا ف واعال ذ بام راز ر سے فرفت ‏ !ع دآ پ اپنے ش رواب ںآ گے اور یبال 
آ پکونافو یات اور نکی تس یکر ک کون کا و رکو یاگیا_ 
۵ء ےلیک ر ۱۹۷۴ء ک سس لآ سال یہاں تریس سیف رن نجام دح 

ر ہے اس کے بعد شا مکی وزارت مکی طرف ےآ پکواپنا ستوری عرب کے لے ۱ 
ارہ اور مشروب پناک ریچ ا گیاء ناک ہآپ دبال جامعہ ام ال رکی بکرم کلت 
ار ید وال راسات الا سلامي اور کید ال پا ررش ی ز مدای نیال »اور 
مان با اٹ ال سال 7 سک »امعم ارک کے ببت سے اسا تہ 
نے اس لو عرص اپ سم الیل ہام وام ان رکی _ تین وت لیف شس 
آ پک ی سرگرمیاں هت ہو "رز اسف الاسلای داحیاء لت اث الاضلائی“ گی 
حش ابوں تکام ےکی باحف وت منص بآ کے پر وکرو یہ دی 
ددرا نآ پ نے امام انف ناس متولی ۱-۸ یتفر مھا فی الق رآ نطو ہے تت 


اللمعان 21 
کا شرو کی اور ہل وں بل وہ ای تن کے اتم رکز اج ۱ کی داحیاء اتر اث 
الا سلا“ ہے امھ ام الق ری کے نام پش ہوک رمنففرعام بآ 
ال اح دآپ' روط الام سای" که ی ایا کی فی القرآن ول 
کے اڈ وائز ترس کے وباک یآ پ نے چندسا لک لک میا 
تالیفات وتصنیفات : آپ بہت یکمابوں کے مصنف ہیں ہآ پک "لفات تس 
کے عرد تک پڑت گی ہیں هآ پک ابو ںکو ری دنیاۓ اسلام س یزیا ال 
چ هآ پکی من سکتابوں کلف ز بانوں ت کی اگ کی فر شی ء ملاوگیء ارووویره 
می تر ےگ ہو پے مہیں ہآ پک چٹ ہو رکاش ید 
اح وڈۃاتفا یر : 
٢تقض‏ دم نکر 
7 لق الوا ٹم میم 
۴ فقہالحبادات فی ضوء الاب وال 
۵ -فق اعاملات ف ضوء الاب وال 
موف الث یج الخرا کن وکا اح 
ے-النو الا نیاء 
۸- روا بیان یرآ یات الا ها القرآن 
و یٹ سم نو رالقرآنإکریم ۱ 
۱۰ - رک الا ر ودور اه حت کا نت الترآن 
۱- ا /وار یٹ ف الث يي الاسام 
۰ ا نشم عکنوز ال 
۳- لت لخیو یتنیز مر ل 
۳-۔موسوتۃ الفقہ الشرگی اسم 
۵ - ال دارج الا ایامک سعادۃوحصا ند 
۱ - الد ی انوا ین صلا 3ار ادع 


اللمعان ۱ ا 
ےا۔امتیان فی علوم رن وغیرہ 0 

مواعظ ودرول :ان لیف یکا موں کے تلاو ہآ پک کی سرگرمیاں مواعن ودرو ںکیشل 
ی جا رک دسارکی ہیں رمث لآ پکا لو میرد ر بھی ہوتاے تس نی سل 
ذکہ کے جاتے ہیں ء اور ایا ضر اھ کا تن 
لآ پ درس رآن دس ہیں ءآھ سال سے بیس بھی جاری سے :شس مقر 
دوتھا یق رآ نکی بیان ہدجگی »اور درد ر رش روگ تیا ب ہیں٠‏ ای طرح 
میڈ یا بن یآپ نے چو ماس میل پور ےق رآ ناش میا نک ے۔ 
خصوی الوارژواعر از لتق اد یی میدن پگ گرا درخ ات 
کے لے مج سآ پک هي لتق رازن ار س ےگمیارہو میں اجلاں میں ” تخصیرت 
الام“ کا تحص وی ایدار بھی و ییاچ جوعالم اسلا مکی متا تیا کو اع زا زی طور پر 
دیاجا تاسجب 

سی رعطاءا رن 

مام ونارو ق ایق 


اللمعان ۱ 23 


رآ مید تی آدم کے لے خدا کا آخری یام اور مت تک ۹۷72 
۱ رشدوہدایت ہے۔ اورحلو قکی اضلاغ کے .لے ر بک تھا تکی طرف سے اتا را کی ایک 
دستوزحیات او ر٣‏ عاف ہدایت نامہ ہےہ الام اپ عتا کد وعپادات» احکام وسانل» 
آ داب واخلا قی بے وموا عتا اورعلوم وموارف شل ای ر با کنا بکا سپا راتا سب اور 
می وہ رذحاف قوت ے شس ےآ کے می دنا کی کی اورمعا رل جف راف یک کیک ۱ 
وم یرل ڈالا اور جباات کےکھنا ٹوپ ان دعر گوایق نوراحیت سے دلوڈالا اور اٹل دنا 
مس زت د یکی ایک نی رو و و رال ديا مش ر ےکا ڈ نگ اورط ریت کھایا۔ ۱ 
کک وج ےک شرو بی سے مسلمانو ںکوق رآ ہیر ے با شغ ف را ےول 

اکر مکی الشعلی ول مسب قر1 1 ن ید1 نل تادان ےڈ رع لفوں 
ان یک تر میت و یناجم سکیم وین ت 

ارشادر با جهو الزی‌بعت 7ی 202 

تمہ :دی ےنس نے نا خواند ولوگوں می ان ھی یس سے ایک می رک جوا نو 
اشآ تل باه پڑکرسناتے ہیں اوران او یا ا کرت یرتاب اوردآشنری 
کی باج ںکھاتے ہیں۔ ۱ 
علوم ۲ نک ېړ اول : آپ میٹ نے ال OE‏ ۳ 
برک زممدارک ے ایا م دی او رما ہکا مکی ت نیت وتک لکوئ یکس ربائی نیس ری 
آپ یلک و جودبارک نودقرآن پا کک لصو ےتآ پ ارآ پاک 
4 ها ےک تین فر ہا سے د سے سے اورسما رام ووی رن اک ے بای 
یی رکتے ےہ وراک کے اور ای پلک سے میں کو کرای ہو نے دج ےہ 

ین ناو 7 ت یکا ماو ر کے شید ورای بول تی کل ترآن 


3 


اللمعان 24 
ای کےاسلوب وبیائن ٹل تا زل ہوافھاء ان حط رات کے ےق ر7 فی علوم ومعارف کے 
ید کے پ یه اقول ول اورتقر یر ےق رآ نیا تکام د سے ر ہےءاورسحاب 
امان م تار کاپ وپ می زر ہے چاو کرنے موس 
ترون وتالی فک ضرورت مج نآ »کيوت قوت عافظه با یی نہ بلاغ کلام 
و ائے اک وج ے ان علوم کےضیا کا خرش اء 
ادر ساس ات هآلا کات وطاع تگھی فقوت آپ من ابتاء یر 
ق رآ کت سے بھی ف ماد باتک مآ ن اورخی رق رآ نک ہیل میس التیاس نوماه 
چنا نی بی ص دک تک موم رن علوم مد ی کي طرح سد هید 2 سنام رن 
وسن تکینشرداشاعت کر پورط رل ےقان یی صورت بس ار دار یی 2 
ع رعشا ی میں اسلا ی لطت کا دام و دورج دج ہوگیاء اور جب رپ و کاخ مر ہوالو 
ری صفات دخات می کی1 ےکی + ما فن ےک زور پڑ گے اختلا فک فضا پیر اموک تا 
کک رآن بھی لوک ما ےجس عفر تفن" نے ایک ی کف میں تام 
قش رآ نکوش کر ےکا شای فر مان صادرفر باورا یک کنات تر اء کور فآ زارد ی 
اور ونم الم العش نی لم ریم الت رآ نو جودمی سآ یاء رجض ری ری الف تال 
ع کا دو رآیا اور انہوں 9 چجب میب تکوم بیت قاب آے دیما اورثرآن یں 
لی ںکی اعرا ی نطو نک مشاہد دفر مایا تو 2 ان شا گرد الوا سور وگو چندقو اخین ون 
ا مراب ترآ می یادیڑی۔ 

خلا فت راج ر ہکا فس9 دورآیا »ال وف تم کارا سی اللہ 
تال تم اور مشا ہے رتا تمن اوم رآ نواعت معروف تھ لین رفولین 
رف رواییت ی یک ی ی ار ت 
ان پا ء این سود زین شثابتء الو وی اشع ری او ردان نز ری الڈ م اور 
ویر کاب رآ نکی فرصت م۲ ل نیال افراد »اور گنن سک سل ححضرت میاپدء طا 
تر ,اد تن بصری ہسعید این یر و ید بن الم رم تھے یی رات عم 
تق م ابا ب زو" من وضور اورک مریب القرآن ویر سکم ین 


اللمعان ۱ 25 
شمارہو کے ہیں 
علوم رآ کا برا آوی: روس ری تی ص ری میں علوم وفنون سہینوں ےکاغز لبون 
شرو مو کے مصدور سے سو رک طرف اتر ےکی راہ بصوارہوئیتوسب سے یی لوگو ںی 
تع قرآمیکوزیبت طا کر ےکی طرف ہوک علوم رآن می ںبھ یع تقر چوک 
اد یحثیت عیشی کا حوائل اورام العلوم ال رآ ےکادرج رک تاھاء ای ےا نکی رست یس یل 
۱ وت ارم 

شع بن ی سفیان نیت ور وی بن جا کا نام نائیالیاجا جا ےہ یدرک 
صصددکی کے مایا ء ل سے ہیں٠‏ اس کے بحد: علا ء امن چ طب ری مون ١١‏ ٣ا‏ یآم باہرکت 
ہوئی اور ایک شان دار اور م الا ن تفر وجود می آ کی ءا نک کو جامعیت کے بن لنظر 
اس موضور س ابت ا نی کہا ہا کا ے١۱‏ کے بعد پھر بے شا رو بے صاب تفا یرو جور 
شآ ری ژؤں اور 1 یم ہہ تلور یک 2 رآ 
گے ہڈا تی ری دک ریک جن مب نے اسباب نزو" اور یبن 
ملام ےا وضور“ “ کے موضو روز لا یتسه ریب ال رز 
می نیف فا یہنوی ص ری کے ملاس سے ہیںء پا وی ری کےعلا م ےکی 
ین سی رحو کے بڑ سھے اور“ اع راب الق رآ ن“ کوسطور لت لکیاء عر کی ال 
دار _ذه مہات رن" سے موضو کوت یر کے سا میڈ ھالاء ری 
عام ہیں ء اور از اقآ میس اہک راللام ور ر اءات سل لام اوک نے , 
تا غر ای فر مائی ءاور دول تراتسا تو رسس ص ری کے مایا یل سے ہیں۔ 

اورا کے اجره مس علوم رآ نکی تصضیفات ٹیل دسح تآ کی اور پر یھو سے 
ا کی خدمت ہو ےکی اوردن بدن یلم کرت یواست رک قزر 
ا لک زا روط یکر کے کت ر کے مول ننک ادر زوا ہوا ےگنن ای 
ر کلام کے سیف داسرارروزاو کرت ژوریں 7 ۱ 
علوم رآ نک ی اصطلا ی : ہمارے اسلاف اکا رکا عو ق رآ نکی تالیفات مٹش 
طر ری کا راستیعاب واستقصا رکا ہا اکانہوں نے علو ق رآ نکی جس فو وگ ز نت لا با 


اللمعان 2 26 
وال کی ایک ایک ج کی پر ےر ع کلام ریما اکر نے خریب ارآ" 
E‏ ۱ 
ار ”یاز ارآ ن اوق رآن سکوی لف تیا زی ا نکی دورس 
گا ہوں ے اول یں ربا 
دی عال عو رآ نکی ہفوک یتصفیف یس رباءاورظاہربات ہ کان تام 
علو ما عاط اہین قمر نکی کسی انان کے کی بات ہز اک وج ےعلاء 
نے ان تام علوم کل رسای کے لے ایم عد ی کات رارع فر ایا اککہ ووا علوم کے 
لئ رست یا گا ئ زک کم د سے اورا کان م علوم لق رن ودرا - 
نی ری کے اون اور پا نچ سی دی کے ادا میں ملی بین ابراعی مکو موی 
۳۳ فی یر البرھان نی علوم القرآن کو اصطلا گی علوم رآن* کی تر 
ات ا مک یک ے: اس می عو ق رآ نکی اا سے یر 
ات مود ےکن ال ص و" 
فو ایک بی مقام پر دک رک کے است ام ملس وا )کیاکی جوم مش طور ره 
مرن" کلف انا کت هکره کر ہرآیت کت ت جس جس نو کات بسک 
تھا ا ےکآ یتک ای رش رع کے سا تھسا جح ز یر پٹ لا ا گیا ے۔ 
ی ص دک میس علامراین جو زی موف ے۹ ج دآ کا علوم رن پر ادشرم تاره 
نک راچھرے اورت علوم رآ کے وضو پردوشا ہکا رتصانیف جح ریف ا یں > ایک کانام 
٠‏ فون ؛ل فان نی علوم اران اور د وسر یکا ناما ی علق لقژن 'ے۔ ۱ 
۱ او یی ص رک میں علا مم الد بن سخا وم نیا "2ھ نے" مال القراء اور ابو 
شام تون رھ لے ارش الچ ر 8ھ ال موضورع کی مزاسبت 
۱ سے آصنی فف رما 
آ وین صری میں علامم بدداللدبن زر مت ٩۳,‏ رح نے بھی یاب 
”البرھان فی علوم الق رآ ن “کے نام سےتصفیف فر ای ۔ 
یام لے انچائی اہم رارکت ثابت موق »لام جن یمان 


اللمعان . ۱ 27 
کا من بی سا ےد نے ای کا بکااضاذفمایااعلا مہ چلال الد بن" یتو نی ےکی 
1 مواج الحاو من موا ع نوم کے نام سے اس موضو پرایک و تصنیف فر با :ٹس 
کے ات تقر بب فلوم ق رآ نکی پیا افو اع کا ت کر فر مایا ء رای ص ری یں علا یوی 
حادم کےآسمان پر ایک مق کے سور ب نکرطلوع ہو سے ا ف 
وم ی ۶ رقرمائیاورعلا مم نکی زک رکرو الو ا وی لا ۓ اورا کے اک مز یر 
ان سم نو ار ورف ری کر فا اور ول ایک سورو او ار علوم رآ نکواپتی ال 
کاب شس چ دی مین اس مب فدمت کے باوجودا نکی طیعت ال پرقاع تک نے 
کیل آمادد ت مو اور یکرو وی او رن ت تیب سک نش رس اور با[ خر لتق 
علومالقرآ نک یکراں قد رتصنیف امت کے سا نے رال دیر یداب شک کیل کی 
فا ادا پر کیک ن پھلا یا جانے والا احا کی فر ایا ندال سے یل اس موضوع 
پرا گی تیک ماح بآم را دید نے وانے اب کم اس 
هنن وشن ےدوررہ لام سم الم کے و وار ہیں تو یی یں 
کول ا کا کم نظ رآ ہے اور نی ا بت کول ا نکی مسر یکا وکو یکر سسکاء تال 
یں سب مسلمافو ںکی طرف ےک رین پر کنات ہف رما کیں ۔آ ۴ین 
عم ترآ ز ماش ھا ض میں : اس سلسلہیش جار ے علا ے سلف نے مت فلع 
کر کل بان یی »ول نے ق ری علوم ےک یکو وین ر ے دیا 
ان ٹین سے رو لکر یتک »دش سے وانےحعخرات نے ضرف نظ ر 
اقا ل یی کر نے یم باتو ںکی وضاح تک نے یا راز را ۓےکوساگئے لان ےکک ای 
عحن کو روو رکھاء اورکاٹی ۶ر ص کک ال می لکوئی خماطرخواہ اضافہ نہ ہوسکاء لیران 
روگ اور ادلی اجک لوب وانداز وت ےک ین منوتیمن 
وی رن ادن و ادا مان 2 پاد سے می اسلا مکی ےی ا 
ںی وی اعا بھی علوم رن کے 

ہو یس ص دک ترآ یات کے ?ال سے بہت متا ز اورفمایاں »رب وم عیام 
نے اص دی میں علو مق رن سے زر می گرا ں قدداضافف ایا ۶ب کے علماء میں 


اللمعان ۱ 28 
گی طا رک ارک علا مگ ودالود قت جر ملام ت کیت »ملا م طتطا دک جو رکه 
مق الراٹیء علا قر مز اشر وراز وخ کی تضنیفارتق ریات کے میدان ٹم 
مروف ہیں ء علا م رعبی را میم ز رقا رص ارڈ کی + "من الع ران فی علوم الت رہن “اس 
صد کی ت رآ علوم کے باب ٹیل ایک و ع اورشا ندارتمنیف ےجب لاجر یریک 
ڈت اد ہر اص اق رآن ادرت رآ نی علوم کے تی کی کی رای کے لئے شرو ری ورف 
دول »اور می صاہ وڈ ز یرید هی تقار روورو کا جو لان فی علوم اران ۹ 
کی مو جودوایا کا قائل ذکرض رما سے شی عطرز و ادا کی ےتک وجد ید 
11 لاک کل وش رہ اورحققا روما رع وع ہے اردو بی ال پرکانی کا میا 
گیا ےم ولا ناس اکن نا اسف تق خان ز یرد علوم القرآن ی تال وکر ہیں٠‏ 
ق صاحب زی مد ہک تکفا نطر زکلام اور اد ان اسلوب بیا نکیا با انا 
ام تک مال چ 

فلا کلام : علوم ق رآ ن می ص رک کک سید سید یلت رےاوتعلیم لی نکی مریگ 
محدددتھء دوسرکی صرق سے صدور اکا بر سے کک لک رکانغز توش ب نکر اپ رک رشروع 
ہے یلق رآ نک( کن اضانی کےانقار سے یی ہرد جس پیٹ رآن دال پراوروہ 
رآ نک خاد اورا کی طر شوب ہوخواہ رون ہو ار رون علوم رآ انا انی میس 
دلج ) تقر وی کا رال زمانھا ہعرق کے اوا اور با یوال‌صری ال 
میں علا حو کے او علو ق رآن ای کن (ال سے مراد وه مباح تق رآ می ہیں جنک 
ن رت تول وریب ولات »راء ای ا نا مضورخ اگاز 
واسپاب نزول اورونح شبات غیرہ سک انار سے ہو مدق نکی میت امآ شکارا ۱ 
وا ی اورسا ٹوس ص دک مل علامراءن جوز »علامسفاوی اورت الوخا بل لوزن ال 
دا ی ا فون ری یں ا وب ا و و ر 
یں علا کا کے اورک ینوی عنایت ےو ہا ہے دورشاب یس ول ہوا اوران نے 
: قورت ومضبوی پا ءاورنو یں ص ری کےآ اور وسو ص دک کے1 از ی ال میدرالن ست 
توب کی ولا ءا مرا چک اور ایک ناورد رخ ت کی صوررت ای رک »اوران E‏ 


اللمعان ۱ 29 
کے بح رکه را لک نشوونا 97 ازات ول صری دوباره الک تو راخ 
.اور لت یھو لے لگا ہے امیر جک اشتبارگ وتخا دوپاده ال و ای عالت 
ترس نوس کے پوراستفادہکاموںح نتفر این . 

۱ رعا ار 
(استاذ)جامع از وق / ابی 


30 TT اللمعان‎ 


لمات بغار 


۱۳۲۷ کی بات ہے شا لک یادا کا یکی سال شرو ہو کا تھا رش 
رر چ ہاب ےکا طا لبعل عبان فی علوم ارآ“ کات مارم ریت 
تارب وسشنتضضرت مولا تاو خان اظ ر زی ددم کے پا قا ق کے ےآے ` 
ہو ے ما ات ہو یتونہوں نے اتان کا رض اکر ےکم دیابم داوب کے 
میران شد برت ہو نے کے باو جود( حطر تک شفقت دمحبت او روص اغزاگی کم 
ورتم ٹا ل ےکی مت درمول اور ا کا مک وکر ےکا موی واعیرول میں پرا ہوا اور گر 
مم الک ۶م بھی ىک رلیاء اور اڈ تیا یکا نام نےکر امتا ڑگر م کے درو ںکو 
سا کے و سے ا کات جک تاشرو ر کرد یاو رای سال ارتفا سول وکرم سے 
۰ 2-2 کا ملگ وکیا اور الطار وق اردو کےا یسال کے ددشاروں ربیخ الا ول او رر 
انی س ا سکی تیر یل (ق رآ نکر تدرہگی نو متیر )کا قرط دارھل 
تر ج بھی شاع ہوا۔ رازم سیکا لو نگ کے لئے مولا بشیرصاحب کے سپرد ۱ 
فرمایاء اور اللدتھالی ا نکو جمزاۓ رد ےک انبول نے ات اتنام سے ا کی ینض 
فصو لک زگ فر کر می رے تا کرد اور تسه اسے پت پا لب کنو 
کرو یا کان از ک یکرم وازی سے وہ سار اکا م غا کب ہ گیا تو یں نے ردا یک ` 
کو زی کرم شروک بئان و کی دمک نز و اور بو ی ےٹوٹ پان اور 
میھی باهذ ید مورک مک ےلگا ءاورکپیو سے ناداقفی تک یآ ےآ ری 
اورکا م روز i,‏ تی رک طرف مرن ر کان ش 1 ہمت گیں پاری اوراہ تہ آ تہ 
گرتے پا یگ لی تس پا کا لکردیاء ای کے بعد یرو گی ہو یک 
اگ یں عبارت؟ہم ہے با ہے یا اختصا رک بنا پل پاش ہم یت ا کی وضاحت ہو 
اس او راکش کاب عث موک تو اسے دورکرد یا جائۓ ٭ ای میوش جواشی 
ورت ی تاشرو کیےء اور یکا می اتال وی رنمارے جاری رپاءاورساتھ 


اللمعان 31 
تیالو یکرت ایتا یک بر دواو ہق یکا بھی انا مکا رش لک کن کیا ۔ 

چم الفا کی رعایت کے ضا سات اسے با جاور« بنا ےک کی ابی طرف 
سے پور یکیشن کی ہے ہعبار کاو وکیل کے لے ب ریک می ترا بھی کے 
ا چھادہاں مفیدجواش کی قل کے یں اور کناب ےوش 
گت یس تفاي ہے ءا لکانا مھ یآ غر و ماک رکا ےکا اگ بوفت ضرورت ا یکی 
طرف مراع تک جا کے ہق رآ لی آ یات تیب اور تر تیب می فرق مہہ پرا تیب 
میں پچ سم تھا سکی وجہ سے استاجحتزم کے شور م سے اورمصنف ب رظ کی اجا زت کے 
` بجر تپ البشرکی نے ا سے ترحیب کے سا شاک فرمایا ےہ اود تر جم می ی ای نی 
تر یبوط کی سل ا اب نی تیب می فصو لک ت تیب یھ لوں ے: 

پیل علو ترآ 

ومریص: :رآ کم ری نزو متیر 

تی ری صل :اپاپ رولب 

یس اج کل: رات روف وت آن او رش ور قرات _ 

انیل رآ نکرب ہس تن اود کشر تی کت ۔ 

وال :رن 

یی بت راورنفسرین۔ 

۲ وتان - 

نو سل :ئاز رآن۔ 

ووی ل دق رک کے سای رات 
۱ رم کو ای سے پیل تالیف وت تی بک کول ترپ تر مکی وصلہ 

افزا اور مپپرتماو نک تی ےک وا موزاو یش کب ہونے کے اد ] تو ں م 

را ‌میران ماود ب پڑڈاے۔ ۱ 

گا گنت رمال 2 ایک اہم عائل اورسبب سء اک وصف کے 
استمال پر ددر توا اصطلا حیات ا اگ کر ےک موق لا سے اور پچ ےک رگ ر نے 


اللمعان ۱ ۱ 32 
کاداحیرادرجذ یہ یداد ہے اور ہماررےعالماء س صف خال خال نینط رآ کی ے میا 0 
۱ اتتا گت م لالم تکامشاپده می نے پدرچ ات مکی ءآ ا رازگ م کے ببت سے 
اگرد تلق نت بسوار الم تو وہ ان یکی حوصل افزا کی مرو منت »برس 
قوش پل ھی رت ب یکین ررم کا چ اکر چا ندال یکا وج سے نز 
ارب موی تی چن اورت یکی رفعتی کو ی ص کر ہہت کی الیل استتاذ نا وق ناون ٠‏ 
یج سین | 
ر کا می راقص کر لی ےناواقف ارروران بے a‏ 
گوہربے بہاکی نقا بکشا یکر فی سے جر بای دج سے ان حرا تک انکروں سے 
اوتل سے اورت رآنیات یں عحص رما ضر کے راع کے مطاان ایک و ام ہونے کے 
ادن کے لے اس سے تفرگن ے۔ 
رب کیل در یقت وتا ڑم کے افادات دورول ج یکا وع ےہ بد ەک ۱ 
حیش ت وصرف| ایک جاح اورت یکی ہے رن چوک ینلم اس س بن ہکا استمال وا 
اوراحق رک حیشیت بل تقیقت ایک ادلی طا بم ےزیادہ بیس ےا لے بیآپ 
کے ایک نا تر کا داورو واردطال ب مم ھا کی ابق راک کش ےء اس یبھی یکی 
یش نظ رہ ۓتو بند ہک کمک کی و بے دی او رکٹ یکی وکل بو »ات مکی قر 
آو نیت ال ہا کل مرا ان 
فی می رون ری کا داتع ہون ایک مرو ےہ ا تا کا ین 
۱ صفت ہک می سے پاک ہے ا قفا ے ی ںک م درل بصن نی 
ہیں اوران کول ی روو ی یکی لیا زی ےا یی اه کول 
فرنان بار تعال ے (ول وکان من عند غیر الله لوجد وافیه اخعلافا کٹیرا)( سورۃ 
النماء :۸۴ آپ رتیل ول ایک پآ منت تالف بش 
ال ےر ور لرتامول- ۱ 
م ان قا رک ول ےکرک ار ہوں فوا سد اھ 
زا می رکش جاک ری ے۔ 


اللمعان ٠‏ ۱ ہے وق 
یس ان ام ترا تک با متشون ہوں #جول نے اس تر جمہ کے ملل می بج 
سے نی اکا تحاون اورحوصل را ءال تا لی ان سبط را تابن شان کے مطا لق 
ار عطافرماگیں۔آ ین 
۱ تر جم سکن وٹ کا فیصلہا ب ہم قا رشن کے پاش دی کردا ت جرک 
مس حدرکقجو ل کر نے ہیں؟ اوراے ان کے ہا ل قدر یذ برا تی ے!اورا کور 
کوان کےا سق ر ریا کے لئ بی کر سے ہو کے انش تھی سے دع گوس کروه ال دی 
شرس تکوا پقی ارک س قبول فر اکت ولیت عامہ سےنواز سے اورتتا م مسلمانوں کے لئے 
۱ اند اورم لف وم رتم وم رتب کے ے تیر آخرت بنا ےآ من 
٠‏ ربناتقبل مناانک انت السمیع العلیم وتب علیناانک انت التواب الررحیم 
والحمدلله الذى بنعمته الصالحات وصلی الل تعالی على صفوة خير البرية 
وعلی حملة اهم الذين ینفون عنه تحريف الغالين وانتحال المبطلين وتاويل 
الجاهلین, آمين يارب العالمین ! 
سیرعطاءا ر بنا ری 
اتا امو فار قاری 


اللمعان تر اردوالتبیان ۱ ۱ 34 


ا ا حمن ار حیم 
وا 
لوم رآن 
ید رم اس بات کا اض اکرتا ےک لوم ق رن کے با سے می پچجوواقیت 
الک ی اورا یرگ دور کاب کے ہار سے میں لیم الشان اتنام وہ خکوششوں اور 
وافرمقترا رل ال جانے والی انا حا ٹکو جا فی جک ہا نی خدمت کے سلس سن ناش 
رارسا یلیل اق علاء نے رھام دی نہوں نے وو ل قرآن ےلیک رہ نک 
ادن رمق ور هک تفت کرات می انی هیال کر دیہان ۱ 
م کرو انش کے جوا مد نک طر وی کر گے نان ہمارے لے ایک ایی بڑیعی 
دوت وشروتکھوڑ کک ےک رت دنا کک ا یک( روا دول )چشرختگ »وس وال اور 
دی‌ال کے کم 27 )موی تم »وف وا یں ء ان ترم وعدت تام 2 

کوشغوں کے باوجوو رآ نکم ا بی ایک کر تینارگ ط رع بای ے اور يلم 
توت سپس ادرا نکا لاٹ کد سکیل( معالیدمفا تی کی )گرو ۱ 
وط زن مور( مصاع کے )مون ما س 

اکچ رآن بجی دیآ ریف اور اس اکن وا کم لا اورشعر ام 
7 ے یک دوسرے سے بڑھھ کر بیا نکیا ےگ رہم رسالت اب تحضر تن عبدانٹھ 
ری سے ید مغ رل ری سکیس پا سے ۔ 

آپ ےرا :کنات ون کم وخیام کم و هم 
ینگم هوالفضل لیس باعل من کین خر قصته الم ومن بتفی الهدی‌في 
غير ااه الم هو یل لاله م وهوالذ كو الحکیم, وعو الضضراطٔ المستقیی . ۔ 
وهوالذي لا تريح به الأڈھوائ ولا تلتبش به الألسنة ولایشبع منه العلماغ ولا یخلق 
على کثرةالرة, ولا تنقضي عجائبة وهوالذي لم تنه الج اذ سمعّه حتی قالوا: انا 
سوعناراناعجباً يهد يالى ال شد فامتا به من قال به صلّق, ون عمل به أجل 


اللمعان ردو التبيان ات 
وکن حکم به تل ون دعاالیه دی الی صراط مستقیم“۔ :بارعا ی وه 
اب ہےءجس هس پل لوکو ں کی نہر یں اود بعد می ںآ نے والوں هن بل 
کیال ہیں ہار ے مان کے ل یں ردو وک »زار کل ے, ورا ںوچو 
د ےک الٹرا ی کک رتو ژر کے جوا ک ومو کر یا رتا رال لا کر ےکا 
ار اوگرد دیاش سبوا ری ے توس وا[ کت »سل سی ساراس ے٠‏ 
بجی ےس کےذر یچ ےخواہشا کی تس یٹس سح ز بو می یل و۳ 
لیک ہس ر بل ہوتے ہہت لصا پہ پرا یٹس نیال کے اب 
تم موتے یں بد کاب ہے ضے جنا تکل کے مرو و کے ےم ا ایک گنت 
ر رن سنا ج بای تکی طرف بلاتا ےجو پیم ال اا rE‏ رآ نکوم نظ رکوک 
بوک اک جوا پل کرس ےگا پا ےگ جو اس کے رھ ےکر ےک 
انصاف/رےگا جس ےر ا نکی رف لا ا مر ای تی مکیطرف رشا یکی۔ 
علوم رآ سکیا مراد ہے؟ وم قرآن سے مراد وہ مباحف ہیل جوک ال ار ۱ 
کے ص لع مہ ال مرن لور مر 77 
وضور ہکم وتاب عرفت ےن کت ہیں او رال کے علا وہ وکر و تحتقیجات ہیں جو 
کقرآن پاک ے بلاواسطہ الق پل _ 
تام اٹ قات تھ رور کرم کی طرف ےکا دا 

اورتضرا تھا مروت بین رضوان ام ٹین کے یا تت رآعے سے تلق یری اتال 
کرو میں اوڈ زوئل گام دمح رفت رین سیر انراز و سوب کت 
ما سا تور شم نک مایم سم( کی نصوصیا تب یرل شرا کا اورال کن 
2 دیسا لوماتاب- 
ق رآ نک کم :"هو کلام الله المعجز المنزل على خاتمالأہیاءوالمرسلین, 

بواسطة الأمین جبریل علیہ السلام الكت ب فی الم چا حف, المنقول الينا بالتواتى 
المتعبدبتلاوتھ المبدوءبسورۃالفاتحة ۾ المختتمبسورۃالناس“ 2 

رم ۶آ ن )اک قو قکو(معارض سے )عاج کرد دالا اشتعا ی کلام 
ہے جک رورا امن حضرت یی علیہ السلام کے ذر ینور ام کر 4 


اللمعان مر اردوالتبیان .3 
7 وش NET‏ 
کیحلادت حیادت چ هر ےشر و رونا نتم و 2 ۱ 
ریف انا ارادم »اس پرا لاصو لکاانفاقی ہے ہق رآن پاک 
کاش تھا ی نے اہ ےآخریی رسول ام پارا کہ ی کول کے م2 ایک ستو رحیارت» 
تلو قکی راہنمائی کا ذ ری حضو کرم ما یال لا مت اپ فا کی بوت و 
رسالت پآ روت ا ات کت وال یف لی > ج ال پاک 
گا اگم اتک رف کے اریہ ات رتیه ری 
ول یک ایا جزہ سے جر دتا یآ نے وال لول اور مو ںکوموار ےک کر 
کے سس یس یر انس 
جاء لین بالایات فانضرمث وجفت‌نا بکتاب عير مصرم 
"تماما ہے ےت ار 
پا الیک ا یلاب لےکرآ E‏ 5 


اياله ما طالّ المَددی جُڈ رثن جمال الق والقدم 
رک ا رس کے وق تس 
تفاس تک جال ا نوز تکفا 


فال ل :قرآناودراں ک لوم کے نا کے پارے مت خمارمروی ہیں 
ان مس سے چو سے ہیں ج رآ نک يم وک مکی فضیلت سے تحاق ہیں اور جا کی 
تلاوت وت تیلقا ہیں او ررم ریش الک ہیں جن کن اس کے حفط اوردہرانے 
سے ہے ایر کناب انیل بھی اسک کہ تیآ یات ہیں جوم مو نکواس مقر سکاب 
رو E‏ سک رن ات یرت ون 
کو پڑھے جانے کے وقت فاو رہ ےکی وت درت یں وت سی تھ 
1 ہے چ ول بی در کر تے ہیں: ۱ 

کت ا- الہ تھا کا فرمان سب 9ھ 
الله وَآَنْمَقُوْا رفن يا وَعلاية ُرجون مرن تبور) الفاطر: ۳۰() 


ےت ں طرف م نکیدالش رم ال جب ا لآیت لاو کر تےتوفرماۓ :"فده آية = 


اللمعان شن اردو التبیان 37 
" جولو کناب الثم ی تلاوت ( 2 امل) کرت سے ہیںء اور نما نکی 
یرگ مک لاور جر نے ا نکوعطاکیا سےا مس سے وش « او رخ 

خر کرت ین :وی نار اردان چگ امرگ 
۳ -اشالکارشادب "«واداقری رانا 1 شکیٹوالاوائیٹؤالکڈگز 
یت کی َو نی رالأعراف: ». 2 
”اور جب چم ےق رآن پڑھا جا یکر ے تو ا کی طبر فکان لگا د یکر واور 
تامو ر ارد امیر کم ررمت ہو( جلد یاه یړ )“_ 
٣اش‏ توا ہے :قلا توت ارات کر عل فو فا 
(ٹیں: ۲۳] ` 
اکر قش و ہنا و 
اعادیث مہا رکر:۱-حضور نے فر :حبر مر لوحام“ 
متخ سےسب تنل دوہ جوق رآ ناوریا( 
۲ آحضرت ماف کا ا رشارے: ”ماج وان مغ السَفَرة لکرام ارو 0) 
حالقزاء “رامآ یت ے۔ 
)١(‏ ج بقار ی مآ ن رآ Î‏ راستہ موک تب و وا نلوگوں یی شر ہوک حوضو را ترں ا : 
”خی رکم من تعلمالقران وعلمه" ا ہے پایں ہدنرد کڈ ہرگز ال خر مان عالپی کے مم ران یس ول تن 
الوکی را کب الثر بح عجیب جک رح ائلد نے فلاف مان کےآ خر ایام سے قاروا 
کر ما ات رن کک ےر ات ےکس که )اس 
عقام پرق رآ نکر کم سک بٹھارکھا ہے ( جج با ری ال رن ) 
رط بعد یش تقر امور نیال سچ ای رهام ننک ان مصداق لول ہیں 
دا یمرن کے پڑ نے پڑھانے میں شخول ہیں اب یی ترا ناتالز 
(۴) الماهر: ارا لیے عاذ ن دکائل افیا کے کی یں سے جو کان ہو وحن وا ناکد کی وج سے الکو 
۱ نآ ن ریف کے ےس ژ- 
السفرة: ”سافر“”سفر“ گاج ہے اس سے پا مرف 2 مراد یں کیرک دہ ابش تحال کے پفامات 
Ts ۸4‏ سرو ی کین کے ٠‏ 
۳ 


اللمعان ر اردوالتبيان ۱ ۱ 38 
لئ لمران زیکفتغ یه آی: تضغب تراءثہ علیہ لعي انه وَمُوعليیه شَاق له 
اجان 
ار رن ان فرش تو نی رای میں ے ()ج وشن وا سل اور ب رگ 00 
»ار جوق رآ نکواکک اک کک پڑھتا ےن ذبا نکی عم قدر کی 
نا لاو تق رآن دادر بے )او تلاوت می دنت بو ہو ال کے لے 
رووا ټین 2 
۳ -آپ تفر آشراف اتی حعله لزان 7 
ری کر وروولوگ م یں رآن ہیں“ _ 
»-ضور ارم ماف کا ارشاد ے: ”قرأ الْقُرانَ فانە اي یوم القيامة شفیعا 
لاا رخست 5 
20 بص اکرو ؛+گونگ وہ امت ا ده 000 
ا 


)١(‏ فرشتوں کے ہمراو ہو ےکا قد ے ےک ارف تق رآ نکوآخرت می ایےے مقامات ے و از اج کہ 
وان ین مين فرشتو ں کا ری ہوک »وگ دو ال کک وطر ایق ہکار رازن ہو سے ہو سے ال جیما 
تی اھ ید اب ایکا ال ان 
(۴) اس کے ایک ںکا نکن متام قرآن تمغ 
پلک زل کے لے ےوک فرآن‌بقیای_-فضل ےکی ون و فرشتو ںکی رای میں ہوگا۔ 

علا داز یی کرک اجو رو مقا بات ها سل گے ء اور ول کرک مایق رآ کے اس ۱ے کے 
ب رز ہو گے یو اس مہہ رق رآ نے ا نے وا نے کے متا له میس ز یادومحنت ءا چا یتو ج اٹپ اک اور 
کشر ت تلاو کا ظا ہہیا ۔(شر ن کم التووی)۔ . 

اکن کر وج وکت ر ہو نے کے جز وی فا ےئل رقف ہوں »وکت مرکم ورج کے ےآوی 

شی کوک ای اش بات موی سے جو یڑ ون کے ےکی قاب ل رک موق ہے ۔( نار از فضا لاک 
۳ رگ شحب انان :تاب اس ول تی اسر جر :ےے۲۹۔ 
)^( خر یسل تن باب فضل قراءۃالقرآن ءا لق :۳ك۸-۔ 


اللمعان شرن‌ارده_التبیان 39 

۵۔ارشادگراٹی ا ے :صل عون ائ یث لزان مئل وج 
ریخهاطیب وَطعمهَاطیب "(متفق علیه) 

”دومن جوق رآ نکر رتاک گت سای سالک خوشبو 
ھی بہت اطق او را کا ی 0( 

-٦‏ یلم تفن فربایا: ن هذا لا ماه اللہ ما من مادبته 
تا کیا“ 

”یق رن( خی ولا ک) خان ١ای‏ ہے ؛لہذراااسں سے شس قرف اکر صل 

کر سح ہوک رو“ ۱ ۱ 

ما ی ق رآن کے لے چندمفید پا نمی : علو ‏ ت رآن کے طا بم کے لے مزاسب 
سک ۱ ۱ 

۸۲ وش رآن ےآ داب واخلاقی سے اہی ےآ پکوآ راس کر ے۔ 

جم کےتصول سے ا لک مق رضاے ای بو کوت کا وغاشاکف۔ 

٭-اور رآن پل ییار ےک تی مت کے دنق رن المع تحت و ول بن 
کے عد یٹ شریف تلآ ۲ ےک ہ: "ون او جنک الیک“ رآن جت وول 

نے ؛ آپ کے لن میں یا آپ کےقلاف 

۱ الاسلام این سا مت ج سجن نے ترآ نکر نہیں 
ها هگ کاس سے اسےگٹوڑ دیاءاورٹس .این اس کے مہا نی ںکیا 
وال بھی ا ےبچوڑدیاءاورٹس نپا ارو ور یکی کان اس لک کی تو 
ا ے ینو کہا لکوچوڑدیا''۔ 

لاسام رحمہ ار کے اس قول می ارت کےا ارشادکی طرف اشارہ ے: 
و قال سول یرب رق كۇم ادوا هد لان مَهُوراک(الفرقاں:.< 
)١( 7‏ ینیج س رع خوشبووا نے کے پا تن نیو ںکاد راغ معط رہوج تا ہے اک رع ارک کے پا 
یت دقن ید گر اب سے الا بال ہو کے ہیں ء اور رع نارگ یکا زو ه ہے ای طر موی یک 
اش نکی یما نکی وج ےاورالیٰ ے_(مفاتئخ الحجاز في‌فضائل الحفاظ)۔ 


اللمعان مر اردوالتبیان 40 
اور( ا ںون )رسول اب برس رگا ری (ال توم نے 
اس ق رآ نکو( ج وکوا جب امل نا پل رانا زکررکھ تو“ 

۳ آن کےذالی اورصفالی نام ذ رآ ن کرم ے تحرو مین ان میں سے رف 
ال کے رٹ الان یم ل بت اور ال لت ترامسا کتاہوں سے ال ہونے پر 
ولال تکرتا ے؟اے:(۱)'ق رآن“(۴) ”نف ران (۳) "یل (۳) “کر (۵) 
اور اب “ویر کے نام سے موس مکی گیا ےہ ای رح اد تہارک وتا نے ق کن 
کے تعر اوصاف جمیلہ بیان کے ہیں ؛ مجن بین ےش ہے ہیں: )١(‏ ”و ر'() 
هن (۱۳ نم( خنای“(۵)''موعلي“(٦)”عز‏ '(ے) ”ارک“ ۱ 
(۸) 2 (9) نز هار کسی ای بت ادساف دی 
ا پولا تک تے ہیں- 
وج زیم بت ریات اسے رآ ن )کن یاک انم ےش ی 

(الف :ا ارشاور الب لالج 4رق: ۷ 

انچ 

TT‏ نا لزان نی یه افو 
(ال؟سراء:٭ 

آنا یس تک بدا تکرتا سے جو اکل رعا ے(“ نسم" 

(ب) اور ال کا نارق" رکه ے۱ اون 2 اش تال کا فان ے: 
طبر اي تل مان ل عبر يكن لغب زیر الفرقای:۱۱ 

رچ بای عال شان ذات سل و و اه 
۱ تھی سپ جو مع 
کا نام مر کت هتفای نے ایکا بکانام اس کے برغلا ف مق ررغ مایا سوجموٹی پرا کا بک نا ق رآن 
میک یں ٣٥‏ ھ*ھ0ھ+" 4 ی نی دزت 


اتید "و تا 0202+ 5- ۶ 00 فاص دب 
2 تریح کا نام تا فد ر کے تے۔(انان)۔ 


اللمعان شناد التبیان 41 
»بت ویر »اغلاق واقراراو رن وبا می یش کے ےت ران دای 
کرو ین وا یکناب لی )اس بنده ال( درل ده 
(بند٥)‏ ام دنیاچہاں والو لک را وال" ت 

( )اورا 6 ر ی00 :وال ريل 
رت الخلینینترل‌پوا بح الیگ رالشعراء: ۰٢۸۱۰۳‏ 

اور ہآن رت الا ین کا( تد جا وا( کم چا لکوا ماخ ت دار 
رش E‏ 5 

(د)اوراسک نام کرک ےکا سبب افدتعا یکا تول ہے :راتخن ڑکا ال ر 
00000۳ 4 

م نے ذکر( ی کن جوک بل فر امول او رذ یمن میں کنو جا تحت )کو ' 

ازل یا ہے اورم ال ک انط ہیں '۔ 

(ے )اور کاے کم مم کیا بل لب 
«خوره وَالکب لته | إا رنه ق ليلو مُبرگة إ6 کا منزرنت4 
زالں‌خان: ۱۲.۳] 

ایوا کنا بک( ج وک مرب و تون اور یو نگل 
شی تلاوت »ام وا نکا وع ہے کہم نے اس کو( لو فو طط ےآ ان 
دنا پر )ایک هکت وال رات( مشپ قد )یل اتا را" 2 

صقان نا مو لک وچ ت می باق ری بات اوصا فک تو ای نے بارے می بھی تق رن 

تر ششک کت ر اور ا یں ن ےرل ور 

2( جوا کاب بب رین اور عا بی شان وصحف 0 رت العرت 

eS‏ دقن جن 

۔سے چندای کک :رک MA‏ 2 
و - مشاه اق تا ۓے: واا الگاش قل جاء گم بان شن غ ڈگ 

للم ور میا النساء: ۱۵۰ 

رھ اي تھا نے پر تھا سے ورد رل‌طرف ای 


42 


اللمعان شرن اردوالتبیان 
چاو رم تن ےکھمارے پا بی ایک صا و رگا 


- اش تحال کا فران ے: وول ین اقرا ما مُويقَاء وخ 


یی ولاترین القلیتن! اکسا رالاس اع: ۸۲ 
"رن سای تی نز لکرتے ت همان دس ان 
لآ شفاءاوررعت ہے اورناالصافو لای سے اورققصان پژعتا ی" 


۳-اشرتعال فراتے یں :قل هو لش اموا ری واه رفصلّت: 


(f 


و و OS‏ 

۴۔فرمان خداوندک ے: ایا لماش قل جاءنگم وة من زگ 
وفْفاءلماق الصُدُوْر ےت ۵4 

ا ا ا ےت تک تو وت 
(برےکاموں سے رو کے کے لے )کت ےاورولوں بی ج( بر ےکا موں 
نے ار ا اس یں )ان کے لے شفاء الوا ہاور 
رصت( زر یر اب )سے( اود یسب ب رکا ت )ایماان والوں کے لے ہیں“ 


رن تن ہے انریا ےک ران قراء ےی 


مر نے وو تاک پر الہ ان ےن ون نت زا ل کر 2 


تلد طن علیتا عتعۂ وفزاته کا رنه ایغ فواته» اق: راء کہ 
(القیامة:۱۸۰۱۶) 
"ارس مہ چ( آپ کےقلب میں )الک کرد ینا(او رآ پک ذبان 
_ے)ا ںکا اد ینا رتو جب یم الاو پڑ ین اک یں( کت مار فش رت 
)اوآ پاک کےا بوجایا وا ۱ 
تن انس را ۓ نام پر تن بو اور دوش علا ھ0 ۱ 
یں سس کے 
ا ا 


اللمعان تع /ردہ التبیان ۱ 4 
اث لقن 
توول رآ نکی ایتړا هلب ہوئی؟ رآ نکر یم کے نزو لک ابتزاء ےا /رمضان ' 
المہارک ١ا‏ کوج یکرم تام کی حیات مہا کہ کے ٭ سا لکز ر کے سے رسول 
اش مل نار اعروق عبادت ےک ج ربل اشن بلس تکتا بک آیات نےکر 
نازل ہوۓءانہوں نےآپ اف کواپنے نے سے کپ رچھوڑ دیاء اک طرں تین 
کی اادد متب ہآ پ سےف مات :”اف رآ یڑ ےجب رسو لکریم اے جواب 
تنیمل یڈ کک“ تیسری بارتحخرت جج ریگ اشن ےآ پ 
۱ ریاد 
قرا بام رك الق علق علق الانسان من علي افرا ربك ال گرم 
لق عَلَم باعل الَإذْسَانَمَالَمْ عم العلى: ٤ ٠.‏ 
تر چم (اے بر ۶ک ) آپ(پر جوق ران نازل »وا ب٤‏ )ا ہے بکانام 
پیر پڑھا تھے ( ن جب پڑ ہے کم الد الع ال تم کہ کر پڑھا کے )دہ 
جس نے ( و )ی ریاس نے انا نکوقون کے لے سے پیدراکیاءآپ 
( ران )یڈ ھا »او رآ پکارب ب اکر ے(جھ چاہتا ے عطافر ماما ے) 
جس نے ( کین والوں ار ولو ںک ینم ےم وی انسا نکوان چزو ںکی 
م ری ون جا تھا“ ۱ ۱ 
اشمارات وو لل بوت : چنا نج وی کے نزو لک ابت رای نیز ند ول رآن سے یه 
یش ارحاصات(اشارات ود انل ا یی روا بوے نی ریم ی 2 
قرب وگ اوق توت ولال یکر ے سے 0۱ 
ال ایک ال ہے خو ابو ںکاد ھن تھا آپ مال بوت سے هی جوخوا بکھی 
0( مصنف راو نے ق رآ نکر کے پا امو لکد کیا ہے ان می“ قآ یکلام ای کے اتر 
زان ہے کلام ال ہے جھی اب ا کا طلا قیصر فآ ضرت راز کرد ہکا ب پر و د ٠‏ 
ق رآ نکر مکوج ب ی مرج خلیفہ اڈ لحرت اب وبر صد رش ازع کے دور یں تم وم رج ب ورت 
یں تعیب وی گیا تو اس کا نام ( تلف اوران او رگفول میں ۳ کر ےکی وجہ سے ) مصح ف' رگم 
گیا۔(انقان)- ۱ 


اللمعان شن اردوالتبیان 4 . 
دق وه ای‌طر وو یز یر موتا جیا 7 گس تم ای‌طرر ان اشادات ما 
سے ایک ظوت وتا یکوپ دک نا بھی ت اکآ پ اراس تمائی ویکسوئی کے ساتجھ 
ا ےر بک عبادت میس فول رج _ 
ارگ کیا روات :امام بفاری رح الد نے البرک کے یاب بر 
الو ںآ م امو نین ححضرت عا تشن اڈ دکنہا سے اتی سند سے ایک رایت ذک کی ے 
جک اس ق اورت و لک یکیفی تک خرد تی سب ؛حضرت عا کن قفاب لک وچو 
جل ےآ خضرت مل برو یکی انا مک روا صاطر (چےقواب) ‏ ی ںآپ 
نیش وکت سے ہآ پ مل جوخواببھی دک ده ی کی سا ےآ ا رلوس 
گز یآ پ مال رو بکرو یکی ہآ پ مل زا رر میں غلو تگز ری فر ہے اوراے 
: ائ یک طرف اشتیاق سے بی ہک یکی راتوں کک ال نمرون عباوت رتت اوراس 
کے لئے سا مان خور دوفو بھی سا مس جات ب( جب تو شرت وبا اتی حضرت خد بی 
رن اللدعتہا کے پاش وای ںتشریف لاتے اور انی بی راتوں کے لے پر توش لے 
»یبا ںک کرت ( وی ) ٦‏ گیا ارآ پ ا ناراس تھے شت باورا کہا 
اورا کے ضور تلم ےر مایا: ماانابقا رئ ہیں ڈ یں کک _ 

آپ 4 فر نے ہیں: فرش نے کے پل کر دبایا یہا لک کہا یکا دبا میرک 
طا تک ان ا کو گی برای نے موز دیا اد کہا : اقآ ال ےکہا: 
”ماآنابقارئ“ یں ڈو کک 

برای نے کے ب کر دوس ری معدبو چا ںک کک ا کا د بو چنا میرک طاق کی 
انچ کوچ یا اور مج ےکیھوڑ دیااو ها ڑافرا) باعل نے واب و ماآنا 

بقاری*"" 24 

راس نے که ری مرجبددبو چا پات ہکا لکد بوچ میرک طات کی انا f‏ 
کی ر کے دز راد کے گے طافرأ پا رزك الق حل کی اسان من 
قلي اقرا رک الا گرم ال عَلَمْ ال عَلَم اسان ما لد یغلمر4 


اللمعان ارو التبیان بت 
العلی: :رہ بآ یا تک رسو کرم ال ایس بو اورآپ تم کاو ل کاپ ر ہاتھا 
او رمضان میں نول ت رآن او ان یں نزو لت آن کے امس می تاب اللہ 
شلوا اورص رع ت موجودہےء عالی شان ذا تکافر مان ے هر رصان ال 
زليو اعرا نُمُلًیلِلنًاس وبي شن هی والفْرقن6 رالبقرة: 0۸۵ 
او رشان دہ سے شس م رن ترا گیا ےلج کا ایک وضف ہے 
کر لکن کک ے (ور ا ۸ ارت 
ما نکتب کے جوک( زر پم ہدایت ( ھی ) ہیں اور( تن و پل )یں 
نیمک نے والی(کبھی)ہیں۔ 
اق اا ےو ن 9 ا ر کچ مل کے 
ان کے بارے می بھی تق رآن میں دا من وجرے۔ 
ال تھا ی کا ارشاد ےکڑل پو وکین كل قلبك کون ین 
فرش بلس ان عزی ی ت62 الشعراء: : ۳ ۹۵ 
واتار ےکر یا ےآ پ لب رصاف کر زبان شس ` 
LEE Se‏ 
اوراشرتعا یک اراد :ول 5 لوح انس من غ اک باق کشت 
او وی ری یی (المحل: ۱۳۳۱۰۰ 
آپ نر ماد جج گرا لکوروں الق د لآپ کےر بک طرف لت کے 
موان لا ہیں + یمان والو ںکوابت قدم ر کے اوران سل نون کے لئے 
0 اور 200 ۳ 

۱ "ریسفت اضر رک مد مدرگ 
لی رای کے ان ہیں ادرو تی یں جوقھا بو اوررسولوں وق ےر ازل ہے ۳ 
۔(١)‏ میں ےرک الاڈ ل بل جونبوتکا نا شور ہے اس سے مراد بیس تک رگ الا ذل میس ےخوا بآ نا 
شرو ہو کے تے۔(اتان )۔ ۱ 

مسر سرت ا ا سوک سال کے اتبا ر سے ہے الا 0 


اللمعان مر اردوالتبیان ۱ 46 
سپ سے یه او رآ خر بیس نازل »وه وا یآ پات :3 نکر مم ٹیل سب ے 
ی جآ ہتس اتر ی و وسو ریکل نکی ایتړا یآ یات ہیں : ۱ 
اقرا اشم رت الق عَلَق, علق الانسان من عَلّي را وت الا گرم 
الق عم لقع الانمان‌مالم غلم ایدم 
چیاکرعدست با ری یش ا یکا زک ہو چکاچ- 
سب ےآخ میں نازل ہونے 7 کیت وو اال بے اشاد رازن ۳ 
7 ,9 وغل نوی 
(البقر8: ۲۸۱) ۱ 
”اورا دن سے ڈ روٹس می تم اشرت یک گی ینا جاور بر 
لو سک کیا ہوا( برل )لور ابو را گا اوران لکد 
۱ اون ی او درا قول ہے کے علا مس اختیارکیا .ان هل سب ۔حنایاں نام 
تلا مس راڈ ہکا ے اورک ی تول تحضر کپ انم نما س وی خقول (e‏ 
دا رص ال رم کے واسٹے تخرد میا پو سی ق لکرتے ہی ںکہ 
آپ لے فرمایا:”قرآن مسب سےآخ میس نازل ہونے وال آیت: واوا 
یوما چون فیورل الله دی ول تفس ما کستث وهم لا طمن ےئ 
اکم ما سآ یت دول کے بعر ۹ /را سیر حیاتر ہے او رین ریق الاول بترگ 
را تکووفات پل - ۱ 
اور حرا تکاکہنا بی ےکآ خر یں ازل مو ےآ بیت الہ تیا یکا اشا ے: 
دیا رالہائںة: |٣‏ 
u”‏ سکول .تست تا عون اشن ےمم 
ها تما مکرد ا اورشش نے لام هراد بین نے کے لے بین درل" ۱ 


هاچ ار 
ٹمیک اک تار کو چود اق کی سالول کے جک بدرکاواق یی لآیا۔(فورانقین )2 


اللمعان ر اررو التبیان 47 
ہے J‏ پول بش :ا کیا و SEITE‏ 
ال وت نازل و ج بآ پر مک ےآ پ مال ا ںیت کےنزول کے 
بعراکیای (۸۱)دن زندہرے او رآ یت لقرہ :وو وا بویا ترَجَعُوت فيو ال اللو تک 
لوٹ کل تفس ما کسبت وه 7 دفات ےلد(۹ر کل بازل مرو 
می آیت! اخ ریف ول نے وال دی 27ھ بجی را کی اورسواب ے۔ 

ا لآ یکر بی کے نول کے بحرو یکا للم ہوگیاء یز جن ےآ ری انی 
رایڑھا »کر هن جب ابات اداگروی ام ی ییاراک دن تن 
کم مب جم یکرو یتوو لت مآ ن کےافتتام کے در ای سے سا لے۔ 
آ ےت ماده رول ٹس متا خرے: یت ارو ج لو داز موق پرنازل 
×نے بت ار لک در ل رای تخراے ولا تک رکی ے: 

”لیک بمہودی حخرت جم رن خطاب رن الد عنہ کے پاش آ یا او رگا کر ”امیر 
من ! ہار یکتاب میس ای کآیت ہے گرم ( سن قوم یبود) پبرنازل ہو تو ہم 
ال د نکی رمن لیت“ ۱ 

حر تک ری رعش فرمایا:” تہارک مراوکڑ یآیت سے؟' تو کہودیی ان ےکہا 
کر" شتا کے اراد ج لور کل کف چینگر وا عَلَيْکُم یغیین 

وَرَضِيْۓلَکُم الاشلام يئا). . ور تم رشی ارڈ ینہ نے اس سےفرمایا داشگ کم 

یں اس متنا مہات ہوں جہاں یہ نازل ول اوراس د نوی جات بو تس میں ا کا 
دول ہواء ےآ یت سول الم رهام فرش مک دصر بعر نازل ہوئیء 
یت یدن زل ہل جوا لئ ئیدوں می ہب ےی ارڈ ھکر ہے تو 
عیرورعیر مول" سس 
)١(‏ ارهاصات: "ارعاص؟ کے ”رغص“ ر TTT‏ هنوت سے پیل بک کی 
ولادت ےکی پآ تیان د ال ا ہے دا قعات اورنٹانیاں ظاہرفرماتے ہیں جوکخرق عادت ہو نے مش 
رہ مون ہیں حت نکی اصطلاں یس اہر ارا 'کہاجا اے جک تال قبیر کن تمل 
سب( قامیں)۔ 


اللمعان شراردوالتبیان ۱ 48 
تبیہ علامہسییدگی رصان ے اہ یمکتاب: ”الاتقان في علوم القران“ بلق رآن مل 
سے یه او رآ غر می ازل بوذ وا یآ یت برض اشالات اوران سس معقول٠‏ 
جوابات ذکر کے ہیں٠‏ م ا نک غلا ص فب ی یس ہیا نکر ے ہیں : 
پہلا اشکال: کین مس ضرت چایر نکبر انم سے مرک ےک :”ان سے او 
ماک رسب سے یاون یآ یات نازل »ول ؟ تو پ ےم ایا :اھا اذ 
کہاگ کل لب بت پل نازل ہوئی: :اقرا مر نك از می4 آپ 
ا ےت NR‏ ۱ 
لن رک کو شی :جب می ورب ۱ 
اتراء اور وادگی کے درمیان پیا تھا کہ ھے پکاراگیاء جس نے آ کے چیه دا یں با یں 
722 حا نکی طرف گا داوج می ل نظ ر1 سے اس سے کے پر رعشرطا ری ہوگیاء 
یس خد بیز کے ای دام دی کہ کیل او عاد )تو نہیں نے یل 
اوڑ عاد یا اس وت اشتحال نے :اڑا زیڈ کیآ یت نازل‌فرال ۱ 

دی ورڈ مر کے ق رآلن مم سب ے ی نازل ہونے پر ولال تک ری 
ہے مام ہیی حالس ال کے جواب میں لو لا ےک :اسای جوابات ده 
لے »ایک جواب ہہ ےکہ: سوال پور سورت کے ول کے تلق تی تو حضرت چا 
نے بیان کرد یاک پورگ سور و پر "سور ارا ےا سح پل ازل 7 
کوک مور اق ر1 “کا تال تصرسب سے پل ازل ہوا( کل مورت ) ا کی 
ای تن بی میں مرول حضرت جابر نیرتمک اس صد یٹ سے مون کہ 
او نے فر مایا :”نیٹ نےآپ ا وربا ہو سنا جک ہآپ انقطا) وی کے 
بارے می بقاد تھے پ مل نے فر ما اک :اس دورا نک کل ر پاتا کش نے 
آ ان سے ای کفآوانزکی مسراٹھا یتو بی یک وو فرشت رآ یا جومیرے یال فا رام لآ با 
تھا د ہآ ان اورز کن کے درمیا نکر پر یٹ ہوا تھا میس لو ٹآ یا اور شل کہ اک گے 


۱ )مروگ ےک تفت رل فلس نیک ریم خلا پر۹ ۲ ہنرار بارت ول فر مایا( اشارا 


روز انم جو ل تا بت وتاب 


اللمعان مرن ارده التبیان . ۱ 49 
بل اڑ مادو جو الل تھا لی نے یا یز لآیت ال فا“ _ 
می سآپ ال کاتول :لمل ال جاء نیع بجا“ ال کرت کہ یراس 
تھے اوروا لے ےتا ےکس میں : :قرا پام ریت 7 0 
7ا ا ا ا دیئے ہیں اشن کے کرک ےک زیاده 
ضرور تا ٠‏ 
دوس ا یال کیت هتفرن یوت اىر 
دک ود مت عَلَيْکُ مین و ریت لک الاشلام یا د تن کال اورتمام 
اه ال کے پا ےل ات کا نزول اوراس مارم نان( تنل 
کے خریآیات هن ے؟ 
الک جواب ہہ کبک رک وتعالی نے بفرائض واج م اورعلال ورام 
کے بیان کے افتبار ےد ديا رت چ رک ضرو رس اشر رک وتعالی 
۱ نے الکو با کرد یا او راودا کرد یا پا کہ امت رو اورسیرے 
رات 9 پگ اور ہے چتد اسک آیات مپارکہ کے تز ول متا کل جن میں وع و 
تاذ کے اب روصت ناک ون میں اکن کسام 
کرو ےکی لوگو ںکو پا وو ہا یکر اٹ یکی ہو هتسش میس( نات کے لے )نہ ال فا 7 
دےگااور نی او لاگ پا ( ا لک نات ہوگی )جو الل کے پا( کفروشرک سے )پاک 
ول کون گان ال با تک کا رک ایک بذک جماعت نے تھر ےکی ےی کےعلامہ 
رک راش ر ا کے ین اس کے برکوئی ال بترم( 1 ام )نا زلیس ہو ١‏ 
پاد شراب اور توبات کے پار سے یں تاز ل ہونے وای سب سے می 
آ ی ت ١:‏ - تال تا تعر وآ یات نازل بوک کن یتام آ یات مرا یں ء ا 
ل ےک مسلا نملہ میس تاتوال تھے لبذراوقمنوں کے ا نکا جا راس کے مہا ے نز بان کے 
زر ہے فھاء وتو ےتا لک اجازت ال رت کے بعر ی ی مسلران جب 
)١(‏ ایروا یت سے معلوم ہاگآ یت ماد ہاگ چنزول خر ےکن ور الصررآ یت بقر سے قم 
کوک یت بتر وج الوداع ےکا بعر ناز ل ہولی-(ازم مب عفاشعد) 


اللمعان شرا ردوالتبیان 50 
اش ا 
کی اما تکام نازل ہوا ئن یآ مت جال کے بارے میں تال لو رش 
اتھایکایارشادے: 

ان لين يلون انم ياء ور اللة كى تضرهم ییا اش 
رما من جباروه بعر عق إل آن یلوا رکا له« وولا کف الله الگا 
بَعَضْهُْ هم بِبَعْضلَهُبْمَتَ صَوَايغ عضاوت ولچ یل گر نچا اث الله گھٹڑا۔ 

rra ینضر 5< ان الله ی‎ IE A) 
TS تی‎ 5 
طرف سے )لا کیان ہے اس وج ےکان پر( بہت )کیا | گی ے اور بلا‎ 
شب اش تما ی ان ےا کر ےکی ری قدرت رکا سے٭ ( ا‎ ۱ 
مظلومی تکابیان ہے )جو اپنےگھروں سے هدجس کے ایک بات‎ 
۱ پ ہہ ده ہیں کے کم تارا رب الد سے اور اکر ہے پات تہ موی کہ ال‎ 
تال( بیش سے ) لوو لک ایک دوسرے(کے بات ے زور تسوا ر بت تو‎ 
(اپتنے ای زمانوں بیس ) تصاری کے خلوت فان اورعبادت ناس اور یبود‎ 
کےعبادت خانے اور( لمانو کیب ود سل جن می اکا نا کرت سے لیا‎ 
ےسب رمک ہو 2 اور بے ںیک اتی الک مددکر ےکا جوالثر‎ e 
دینک مر »سک الد تا توت والا (اور )فلو الا ے(و ہیں‎ ( 
ا‎ 

چا آپ الا آ کر یی وکر ے ہی کال می مرا ان پاتقا لی 
ری کی کک تکوا کرک گیا منم زک رقم ور 
ک شر یت قوقاد ہوں کے غا و کم سے برک کے ےکی ج کے 
بات ال! 1 یکر یش بالل ہو یداے۔ 

۳ “اشرات کی ی ی1 یاتکانزول وا ورزر موجوداشتھا ‏ کا 
فان سب سے پیب ازل ٭ا: ملوك عن اهر دَالْمذیر + قل یوما انم 
2 مت وان منوا ۹رالبقرة: ۹ : 

¢ 


اللمعان نادو التبيان ۱ 1 
ات سے شراب اور جو ےکی نسبت ور یاف ت کر تے ہیں٠‏ آپ 
فر یاو سک کان دونوں ( کے استعال ) س لگنا هک بای ی با س کی ہیں اور 
: لوگویںکؤ( لئے ) زا کرمگ ہیں اور(وہ) گناد بای ان فاتروں ے زیادہ 
بو یں“ _ . 
مرت اہر وس قول کنو لفیا :شراب بارے مین یکن 
تی نازل وک ؛ کی آیت :هتقو کات ي ار امیر فل ناڈ 
کر ومع یگس واننهما آکتزمن تفیوعا؟ 
۳- او رکیل توبات کے پادست میں سب سے یسور الوا م س موجود ال 
تعا یکا رمان ازل موا: . 
لل جن ما ورک رما عل طاجو یمه آن کون یتآ تما 
وهآ عم جازتر قله رش آووسفا ول یکر الویه سن اضطر نر باولا 
انرك ینش امس 
” آ کرک جویگا حبذ یوگ میرے یا لآ ے ہیں ان توس 
کوئی حرام مز ائیں ا یکھانے وا لے کے لے جوا سکوکیھاوے مگرب ےک وہ 
مردار( جاور )ہو اک یمتا + وتو ہوہ باخ ےر وشت هک روو پا کل نا اک 
ہے باج( جانو رو یرہ )شر ککاذر ر وک فی را کے ناهزوگرر کیا ہو برش 
باب ہوہاوے اشرطیلہ نہتوطالب لت ہواور نہ تپاو زک نے والا ہو( قدر 
ضرورت سے )ووا یآ پکا دب فطور ورتم +" 
۱ بش اکا شر ی صو چند وال ہیں جن زر یج رآ اکام نازل ۱ 
ہہ ۓ ال نکا پاتا رس کے لے تہا یت ضروری ہے اکدہ اسلا مکی ار لطیف اون 
سازی کےراڑےوا قف وما ےج ۓلوگویں یروآون او رن نیون رکھا ے۔ 
یزیر ان رک اصولوں یں سے ایک ہیں جے اسلام نے معا شی عالات 
کوسٹوار ے اور وور چاہلی تک ان اظاق پار ول Cle‏ کے ے اختیارکیاجولوگوں 
کے رک و ہے میں ری لک »جاک دومری بحت ٹیل الک مز ید وضاحت 
کر گے۔(ان شءالذقالٰ)۔. 


اللمعان مرا ردوالتبیان ۱ 2 


دور ال 
ےآ نکریم تیو لک یں 


ال تھا لی نے اا امت مہ راغ یآ ان وکا ب ناز ل فر اکر ا ےک زت 
جو الان ےرت ا سک سل لاسکی یار ول اوراراش 
کے شا کی م یم اوراس ام تکوم رل تین امات خداوندکی سل لے جت 
اور بک نے کے او رافق رگ علات ہو جرا اش نے سب ے فطل ناب تازل 
کر نز تک وتات میں سے سب سےمعز زی مین رو 
را ایس واب ہر کےمتاز متنا معطا 2 

1 آن تول کے ات ی مات ماد یلک ال ہوئیءنورالی نے یرک 
کا نات پرضوافغا ی کی 7 رای رون ی اوراشرگ برای لو کک م کی 
اور پت ول اشن اما رل ملا کے وا سے سے ہواء جو ا سس ےک رآپ یقاب 
میرک پا ےکآ پ ا نام غد اون دی بای اوراسی کے تان شرج جر 
کافرمان SS‏ 
عر م ی (الشعر اء: ۳۳۰ ) 

ا لکوامانت دارف رشن ےآ یاےءآپ کے تلب پرصا فف زبان ٹل 
7 وت 
تول رآ نک یکیفیت :رآ نکر کے دونزول ی 
(۱) رآ نک ریم کادو با ار نزو ہواء اڈ ل بارگاو اوت ری ےلو ر گنوت »روم اوں گنوت ےآ سان ون 
کے مقام یت مت می۱ او رسک یرتیل دل بیت رت سےتضوراکرم رل سال کے کر یٹس 
ہوا رخلاف دور یکنپ دیسکا نک تد ول ر ف ایک رل می موق رن کے ے روت ول ع 


اللمعان 2 رده التسان 53 
ا۔ اوخ کوٹ ےآ سان دتا کر ف( یا TIE‏ 
۴-سمان دنیا سے ز می نکی طرف یس سا لا“ کرش بتر نازل ہونا۔ 

لاغذ ول : موی مرج اس کانزول ز ما نہک نام راتوں یل سب سے مارک رات ٹپ _ 

رر میل #واءال رات می ورا رآ نآسانن دیاش ”بی ِ ت العز “ی طرف ازل 

امیا یا ٹس پرمندرجذ لول آی ولا تک ے ہیں: 

الف- اشرتعال کاارشاد ے: دیز الب می ! إا له ية 
ای یں منرت (لرخان: 0۳۳ 

۵ و الوا کا بک( جک مرس ت ہورتوں اورآیتو ں کی کل 
یں تلاوت +اجکام وا نک موہ ے کہم نے ا کو( لو حفو ظط ےآ مان 
دن 000۶ 
یں“ 

ب- اشتعالکافرمان :]از ره له َر و ا زىك اة 

ال (لقدر:.») 

= و ےا گت مہ س ےک ہآ خر لاب ہو هل وجہ سے ا سیکا بکی جال کال انم متقصورت ‏ 

ایک ہار ظا مکھو ی کی ورت میں ق رآ نکولو تفوظط می کنو اکا گیا جوعلومت الہ کا مرک ی محافظ فان ے٠‏ 

دوسرکی رجہ یت رت یں سماوگی تفاطل تک انا مک یا گی تی رک مرح ای کے کے کے پہریدرارفر څح چلاکر 

یا تصرف ےکفو ناک کے لی جنا ط ت کا تا مک یگیاء چوک مر تضوراق رس کلب اط نازل * 

رک انی تفت تک اقا يا گیاء پا وی مرح ہضور اتر مال کے ذر یت خی کی وز یادی سکول کف 

ارهاظ تک انا مکی کیا ی مرحبہ امت حر مہ تلو بکوق رآ نکی رف لک کے تن ۱ 

2 کر و قو ن کے وعدہ کے مطا ہنی صد ری ال تک ظا ہواء بعد ہاب وکر صر ات وم رفاروق بخان ۔ 

شی شی اٹ مآ ماد هر کے سراتویں مرت یی سورت می مات تنل تلایا یا اس طر کا 

7 رآ نیش نک جوز مو(مفاتح الحجاز ملخصابتغییر )_ 

(1 )تقر ے٣٣‏ ال ۵ ماوادد ا دن میں ازل ہوا(مفاع)۔- 

۲ یت الق" ان دنا موف نک کی مرچ رک پاک کي نی کے ادر سیرے ٹل 
جرا( 


اللمعان مر اردہالتبیان 54 
بے شحک کم نے رآ ن لغب تررس اتارا(شول بڑھانے کے لیف مایا 
دراوم ےک شب ق ری چزے؟“۔ 
. (ج )اش تی قول ے: ههر رمضان الق أثرل فیه الفران مُئی 
ا (n‏ 
۱ اوران وی میق رآن کی گیا ےکا( ایک ) وصف ہہ کر 
کون کے لے (ذر یی )پراییت ہے+اور(دوسراوصف )وال اد 2 
ا نتب کے جرک( ر لی ) پیت (کھی ) ہیںء اور ( حن وگل میس ) فصل 
کر نے وای( ی ) ہیں“ 
بر ںآیات ولال کرف ہی کف رآن ماو رمضا نکی راتوں س سے ایک ہی 
رات میں ناز ل ہوا تک فت مپارگ اور نام شب تدا ہے اورال سے یی تن 
جاک یز ول دہ پہلانزول ے جآ سان دای موجو لبیٹ الح ز3“ کی طرف ہواء 
کیو اکا سے دوس را نول مراد ورپ کےقلب اطہر رماوا ی کاایںی ٠‏ 
رات اورالیک تی اہ( ن باو رمان )شس تا زل ہونا می ککیں موک کی (آپ ا 
پر ) ق رآن !شی وی تلام کی س سالہ ایک طوتمر تکک نازان موتا رپا نیز تول 
رمان کے علاو ورتم یو بھی ہوا۔ 
پاات م وگ یلک کور آ یات می تد ول سے مراد یہلا ول ے اور اعادیث 
بھی اک ما میک کی ہیں ضز : 
(الف) حضرت این ععپاس سی ان تما را ل: ”فصل القران من ال کر 
وضع فی نیت العر من لسّماءالدنا جع جار یل به على النبی ونر“ 
"رآ نو ان ا کک هن سے ا اح نع یں 
رکھاگیا رل اشن اسے نے بکرم ا یناز لے ر ہے ۔ 
(ب) ححضرتائنپھپاس شی لو ایک رایت ے: اتر اجه ادلی 
کا ال یز کانبعواقع الۇم وکا وال علی مزا تفه ری * 
AT”‏ ر1 ان دیا کی رف ا رگا ایا اور انح بوم می تھااوز اش تیال 


اللمعان شرب اردہ التبیان 55 
ال کے نحص کوددسر ےن کے اعدا سول تلا ناز لف رما ےر 
( ر ) حضرت این عمپاس رضی ارڈ تفر تی سے مرو کات ہیں: :رل 
ال رآ فی َيلَةَالقَڈر فیع شهر مضانالی سَمَا, اجه اجه [ لو وش 
ران ماورمضا نکوشب تررس یار ان دنا کی طرف از لکیاگیاء 
پر رج ھوڑ موز ان رپس 
ان ول رواو لاوما یوی رت الد نے ات کاب تن یم رن ی 
میں ذک رکیاےءاو رپا ےکہ تام ردایات ہت یں اک ط رح ہیی رح ال نے این 
ال فا سے یویلک ےک عیب نآ سو نے ای نع با کڈ سے سوا لکیا اور 
کہ اک با تخل کے ان اشادات 2 رصان الق رل یه لزان اور 
لا له لیلذ نے میرے دل س تک سا ڈال دیا ہے ال ل کہ 
ق رآن‌توشوال»زیاقعرهءزی حرم عفر رق الا ول کے ول بھی نا زل ہوا را 
ہے ل تو ایک می رات او راک بی ماہ یل نر ول ہکن چ رک دارد؟)۔ این عباس ٹا نے 
رای ت رل نی زنضانني ع ی اجه اجه نع رل على مواقم جوم 
شا فىالشھۇز وا" 
"تفا المبارک ‏ شب قدد یش ار اتاد گیا رنب 
موئ نرم روک اتف دٹوں اوریتون مس ناز لکیاگیا“'۔ ۱ 
علا م یوی رال ریاس ےک علا ری رجراش رن لور کقویر 
سےآسمان دنا یت ارو" کف ی مت برعلا رکا اع قل 
کا 
2 ی ی رآ نکر 7 قرر اور شر لعل( رسو 
اش )کت شا نک نبا صو و ہے نک ساتو ںآ ون کےکیٹوں پا 
(r)‏ سوت نو او رسلا سے مراد یے ےکا نتفر طور روز زا کر کے اجار گیا بعد گے 
بح حرش کے بور کی رزی کے ساتھ ازل متا ہا “(ازمصتف)_ 


۰ اللمعان شر اردوالتبيان 56 
کرد یاس ےک یتین اممت کے و اسآ خرکی نی ناز ل ہہونے وا یآ غر یاف یکا 
کونھم نے توول کے لے ان تر بکردیاے۔ ۱ 
علا مس رح الف مات ہیں :ا رحاس الہیے تقاض کر کا لکنا بکولوگوں | 
کیک فد رفنزحوادث ووا تعات کے مطالق اتا راجا ےتا ےکی یط نا ز ل کی وی 
ر ای نی مرت ر یاجا تا لگن ارف ال کے اورک ی ای اکمایوں کے ول کے 
وریا ن فر ق کرد ی اورا ی کے ٹزو لکوت لعل( مر مہ کےا ع زان واکرا مکی بناء پردو 
حول تلم کرو یا: لب نزول او رھ تفر ق طور پر بت ری تول _ 
دم ترول: دوس رک مر ہا کا ولآ ان دنا سے ب یک رکم فک قلب مارگ پر 
یسال کے ترص رل بت در کھوڑ او ڑ اکر کے »وا اور یہ رت !شی نوہ تام سے 
ےآ پ مال کے دص لکک کےز مانے پتل ہے +اوداس تزول اور ای سےقسطوار 
تو نے پل سور اسراءیس موچ واش تی ی کارا رشا د ہے :مو قاقر فدۂ غر آل 
الگا عل مک رنه یلا6 ہی اسرائیل:٠٠٠)‏ 
اور رآ ن رکم میں چم نے چام رکھاء اکآ پ ا کول وگول کے سا سے 
ھکر یعس او جم نے الوا ا ر نے می کی تر ریا جا را 
ہت ای طرں سور فرقان اش تھا کان ے:٭وَقَال الین تَفَرُوا لو 
ڙل عَلَيه ان له واه گزیت. نیت به فاكك ورتلنه تزییلا» 
(الفرقأن: ۲۷) 1 ۱ 
"او رکا زلرگ لو ں کے رن( ترپ سیق رن ار یکیوں نیس نازل 
کیا گیا( جاب ہے س کر) ال‌طرت( تدرسا) اس لیے( جم نے از لکیا) 
ےتک ہہم اس کے ذ ریت سےآپ کے لق کی ری او( سی ےب ہم نے 
اک ہت را راک ڑ سای ا ہے“ 
زوایت 8ے مدرکن ے جب رآن کے ضرق طور پر نازل 
ہون ےکی وات و رتمک » ری بارگی نزو لکا مطالبہگیاء یہا لت کہ 
مود ےکہا: اے الو ا لفاحم !اق رآ نکوایک ہی مرح ہکیوں نالک کی کیا جی اک موی 


4 


اللمعان ارد التبيان 7 
( )رتو را تکوناز لک گیا تیا ؟ تو الد تحاف نے ان کے جواب اوررد می زلور الصرر 


ید همقل از ل لیںء اورےردامام زرقالٰ رماش یل کے مطا ن دوامور پرولالت 
7ے 
اسف رآن پا کپ پر بترت ھوڑ او ڑ اکر کے ناز لک گیا ے۔ 
۲ نع یب ن تاش بپر یک ری باکر 
E‏ دیمیان ماع لص ہقاف 
ان دوامور پزدلالت با ل ور ے کہا دتھاٹی نے ان کے ال دو ے میں ا نکی 
کیبل ماک یک کنب او مہ یکبادگی ود ناز لگ کل ہیں کنر نینم 
نازلی ہو ےک مت بیان فر اک جواب دی »راکنا بو لک نز ولق رآ 318 
فرق طور پر ہوتاتو شتا جواب ٹس ا کی کم غر کے اود وا دنک 
تریح نزول اشتعالیٰ کپ ایا کک کتابوں یی بھی عادت رای سے :جیا 2 
الف تھالی ےا نک تر دیرف ایک جب نہوں نے کیک ررسول اش یکین 
ماهلا لول ال الکلعام ماسراق (الفرقآن:) 
ان تو یک کیا وا اکہ وہ( جمارگی رع )کھا اگما تا ہے اور از ارول ٹل 
77 ےک نے 
تور تال 7 جواب دس ان "2ئ :3 وما اسلا َبَْكَ ین 
ینتم لیا کون الکلعام تشون الاشو ات4 (الفرقان:۲۰) 
درم نے آپ سے چیہ جت برچ م کم یکھاتے تھے او 
إازاروں می بھی پر 
شر نکرم کے قز وار ناز گر بل جات رآ کر ران 
ےکی بک یڈ کت رتور بہت راز تن اب لیم جا تن ہیں اورا مل ان 
ی دا ہیں ما نک غلا صہ اور چ وڈ درل الفاظ مج بیا نکر کے ہیں »اد رده یس : 
اسم رکی نکی لیف کے ما اپ مال کے تلب مرار کفکومضب و اکرنا۔ 
۴-وتی کے ند ول کے ونت ب کک ملاظم کے تج طف وک رم کا معا ملیف ناب 


اللمعان غر اردوالتبیان لے 58 
۳۔ اجکام یہی قاو ن از یل یتر کے هناد 
سول لق رآ رفظ ارم سآ سال ی باکر - 
۵ اومات وواقعات کے سا تجھھ سا تھ چلناء اوران کے وو کے ونکت بی ان پر 
مت راور گا وکرنا- 
رآ کے رش کی طرف رما نردم در ترف ذات 
در 
۳ بس 2 
مر 
۱ بلط ت: :لت( آپ ڑم کے قلب مپار ککومض وی کودر نج زیل1 بت 
کر بی ش رین کے روش با کی یاس ےک جب انہوں هگ شیر ایبول کے 
تو لک طرح تن سک مب و لاملا آواشتعال نے اُ نکی تد یران الفاظ 
مال :زیت ینز هفوک ور له کرییلا4«لفرقان: ۰ 
”اس طط رع( راس لے( ہم نے از لکیا ےت اکم اس کے ذر یچ 
سےآپ کے د لوک ری ا ورای )ہم نے ا کو ہہ تیرشب کر پڑھ 
ایا 
نو ںکیطرف کلذ یب اد رپ مال اورآپ مخ وشریا یس 
بے کے وقت کرک پل کلب مار ککیضبوٹی الہ تو یک طرف ا 
نلیتا رما لیف می ل1 
وآپ آپ مق :وت ےرات ین 2 کے کے کے کاپ ا کی مت 
بڑھانے اورآپ نلم کےقلب ما میدن کے لئ سول خد ا تا پرا ات 
کر یناز لکی ہا ارت نے اس یز کے زیرپ مال رای اور لت 
را آپ لا کے ماب وآلا مکو کرد چنا مجر ج بی آپ ی 
ریاس اضافہ ہو جات آ و آپ سے سے 
جال 


59 


اللمعان 2 ارو التبیان 
اول" ھی رسووں ویو RYE‏ رد 7 E‏ 


کے عصب ز اود یاپد سے ںان کی برد یکر یں جیا ےس سو «ولقَنْ 
کرت شل فن فلك قسبزوا عل ما لو واوا کی ىه كەز 


(الأنعآم:") 
”اور یہت سے کب رجوآپ سے پیل ہو سے ہیں ا نک کی کک بکی ہا کی 
ہے سو اہول نے ال هرن یکی کہ ا کی کی بک یکی اورا نگوایز ا یں 
انلس باتک ردان ۱ 
اوران تا کفران ے: قاضو كما مر آولوا ره من الرْسل4 
(الأحقاف:ہ) ۱ 
۶ تو آپعب رک جیے اور مت دا مرول کیا 


اورالشرتعا یکاارشادے :وات ضیز یکی رز يك مات ینت6 (الطور :^( ۱ 
"اپ انار بک یرس نش سکپ مارک طاقت س ۔ 
ٿا د 
ردق این رک تخا نے بطم داتعا تایا نکرنے 
کی کت کی وضاح تکرتے »و ارشادفرمایا: ئل 5 نشی یت من نبا 
الژسُلِ مَا فك په اک وَجَاءك ف هني الق وَمَوْعِكَةُ وّذگزی 
4 (هود:۲۰) 
"اورتیرول -صول میس ےم می سار ےق ےپ سے بیا نکر تے ہیی 
جن کے ذا سے سے مآپ کے د لکوت یت دیے ہیںء اورا نآصوں م لپ 
کے اس ایا تون نا جو دی رات سے اور لاان کے کت 
ےاوریادد ای ے“ 


تا ی ۳ 


کا شاد ج ویرک اله َه اعرا (الفعح: ۳) 
اراشا پکوالیماخابہ ےس شی ل مز ت ایز ت و" َ‫ 


ورای ضر :ون سکف کیت وجاجتا ال لین هر 


اللمعان شن اردوالتبيان م6 
نوناق جرَلَهم اعيوت «لضاقات: ء.*» 
”او مار ے فا بترول دق مرول کے ے مارا تول یی رز 
ہو کا ہک بے کل وی غالب کے جا یں گےء اور( ار تو قاع ہ عام ہے 
کہ )مما رای کر نالب رت ہے 
سل کر توم کے ومنو ں کی لست اورناکای مراد یک خرو سے 
کول یکاش تھاٹی کے اس امشاد س :هزوم المع وولو الب 
(القمر:۵») 
تریب( ا نکی بے جماعت کس تکھا ےکی اور پر بیش گے 
مفرايي غداوندک ے: قل لرن روا سَثْغْلَبَون وَئكَکَرُوْت إلى 
جه € (ال عمران:٣)‏ ۱ 
” آپ ا نکفرکرنے والوں ےر ماد ع ےک نیتم (مسلرافوں کے پاتھ 
سے )غلوب بے جا کے اور( آخرت میں )جن مکی طرف شع کر کے نے 
جا جا کےاوروہ( )سپ بر ا کات 
ال کے عاو کی رسو کرک سک لب مبارک کے نمو ںکو یر اوردل 
جن کلف انداز اورطر قافتا کے گے ء او راس سکوی یک سک نول وق 
کر را راو ج یل این ملا کا آپ ا کے یه »ردنت اورتا میک وا 
آ بات لک ےک بار باد ات ا آپ خلا کے قلب میار پر انر ی کی وکوت وخ 
کوجاری کے کے لیے مو اکر نے می بہت بی موی کوک اڈ جح جلا کی زات 
آپ کے س اتی ريد کا کی اورک راو کات رکرسکنا ےج کار کے طف 
وکرم نے اعا کر لی واو را کی تما کر ما یکاش یکر ری بو ؟! 
۳ - دوس ری کلت : ووسر یکت نزول وی کے ونت نکر ما کے سراف وکرم 
کا محالف مان ہے اور الف وکرم ق رآ کے لا ار نام پرتھاء یہ اک متا 
کااشادے:طاتا سملن ليك ولا ةيلا «لبزتل:» , 
ایک بار یکلام( مراد رآ نید ے ڈا موب 


اللمعان2 ازو التیان 61 
ہیں ٹرآن یقیناال کا ایک رام ہے ا ںکاجلال ووقار اوررگپ ودب ےء 


اوریرو هلاب ارات 2۳ پرناز کیا جات آووه ا لک یہت اورجلا لک وچ سے 
کر یدز اجه فان یس لو ار لا تا القران عل جيل 
رکه مها نهد نحشي اللو (ا حشر :۲۱) 
7220۷ 22 با پر ناز لکرت تو( الب )توا کو وکت 
قوف داح دب جات اور یٹ ہا 
تو امال ہوگا آپ ما کے نم د لکا؟ کین کے یتام رآ نالیم خر 
کک جا ءاضطراب اورق ر رآ نکی یت وال کےاصساس کن ت۱ا 
سره عا کش تا رسو لکرم تلام کی نزو لق رآن کے ونت وق ے یداو نے وال 
وف رانک عا کی وضاحت ہو سےا تس "ود رنه حون یترل 
علیہ لوحي في الوم شید برد فص عتا أي: یفص وان یت ید © 
عرق“ 
نی کت ما کے موم میں تزول دی کےآپ اام کی عالتکا 
شاد هی ہےء یی سرد می بھی جب و یکا ملسا ہوجا ات ھآپ تک 
یشان ضبارک یدش ای ہو یی“ 2 
۳ ۔تسری کت :ری حمست اجکاح حادم کی قافون سازی میں بت 2 
بڑھناے اور ایک ظاہراور بد یی ت ہے انس کے رمان نیت اور تصوص 
۱ ۶ بو ںوت کے سا ےک چا ےہ یل ا یں شرک سے دورکیاء ان راو کوابمان 
کرو کے لیے زند کیا اوران سیون میس رورا کے رسول نف عحبت٠‏ 
بعرت بعد اموت اور لیم تزا ء یمان کے کو بویاء رین اس مرح (زشتق ابمان ` 
نا وو ںکوان کےولوں ٹل راخ کر کے مر عل کے بحدعبادا کی ط رل کی ۱ 
یکرت ان کے زکزوایاء کک زی ریش روز« اور زک کی ما پا 
(۱) "یتشد رفا“ 6 پیک وت جاناء اور یرو ی شرت اورفت دبا کی وج ہو تھا (از 


شھی)۔ 


اللمعان ٹر اردوالتبیان 62 
پچ چٹ اہج ری میں ری اعد ےکر ہم رع لی کرلیاءاوراسی رع موروٹی رم رواخ 
بھی بی رپیاه اک کہا کے اتب سے دوک کر صتا سے پھر زی کے 
ا کیا» اوران رت ور یت میں بوست ہوجانۓ وال شراب وی سووتوری 
اور جوز یرت عادا تکوق رآن نے انا ان انداز ٹیش بترم را مکیاءاور 
ہیں ت رآن لی شردضساوگ یگل یکن بو _ 

اور ایک ما اس سا نرق وان ہا زک پر ذکرکرتے ہیں نس کے اختیا ر کے 
۱ سے موا شر ام اض کے ام رآ نما ما بو ملا عم ری خر ہے شراب 
شبن ایک لاعلاعاوریگین پیا تی ا سک پا کی رخا اسلام کے 
ےکن ہوا؟! 

رآ نکر نے ا سک یریم کےسٹرکو پمال یس ٹ ےکیاءجی انی طروت ا 
نے سود کے تا مر نے بی ںبھی اذا یا رق رن نے ش را ہکایک ی رحل ہم امک سکیا 
وان کے پا شراب نو یکا موا لہ ایی تھا جاک ہم یل کو یف صاف 0 
اه وت اک + لن یکر اسے ایک مرت تام ہکیاجائے ؛اہناقرآن نے 
اسے بر ھا کیاء پیل ق رآ نے اس سے خی رکو انداز میس پالواسینفرت ولا 
اورایت تیا ایز ان2(ومن نز کل والاغتاب تقون ونه گرا 

وَررقًا عستا4(لحل (e:‏ 
اوور ور رال ےم تم لوگ نشرک چزاورعد هگا ےکی چزي 


با »9 - 
چنا اتا ی ے ابا رال 05 کے ان روخن ںو را ارس 
لوگوں پرانعا میا ےکہوہ ان رولول سے "سگرن نشہآورشراب اور رزیت" 
می لوگوں کے 2 مفیر باکولات وشرویات حاص لک تے ہیں٠‏ یہاں اش تا نے 
دور ی یکی ییا نک نے مو ےر می لکوم رز کن ہے اود یل کے بارے س 
رما کو کر ےی اک چ ے جونشہآوراورانسا نکی نل وشعو رک م کرو یغ وال 
: ۰ ۱ ۰ 


اللمعان شر اردہ التبیان گت 
»او رای دی ضا د سک بیان ے مر کےا سے لن دونون چو وں کے درمیان 
۱ ایک بہت بڑافرق دار ہوجاتا ے۔ 
دوسرامرعلہ: بر بلاداسط دہ چیزو کا EE‏ 
ایک یٹس مم تقیرسا بای فع ے اورای کی ینس میں منت اور لکا بہت ہڈا 
تتصالن ہے اور اک می الم نتصانات راوید انا اکنا :یرہ پر بذگر 
لاک ہونا ہے الد کے ال ارشا کور سے نے :ملوك عن الئٹر ویر 
یبا ثم کیت کی ومع یاس (البقرۃ: ۳( 
او اپ سے راب اور جو ےکی بت در یاف تک نے ہیں٠‏ آپ 
فرماد کچ کہ ان دونوں (کے استعال ) ب سکن کی بی بای ہایس ہیںء 
: اورلوگوں کے( ن ) فا کد ےکی ہیں ء اور( وہ )گنا ہک با گل ال فا تدولت 
ای وبڈ بو ہیں“ ی 
آیت میں مناخ سے راد ذو مادک ملع ہیں جو لوک شراب ف روش اورا یک خیارت 
0 0 ارت 2 ینس رہق جب )کہ دہ چوے کے زر ےک : 
کاس رآن نے ا لآ یت میں شراب ادر ےلو کی ا اورا لول شیک یں 
کرو شش صرف اد اور وی تھا ارف جوارک لسن پاتے اور می بات ۱ 
شراب نی - 
علا ری راش نے اقفر 029 :تاغل رگاس چک | 
۱ تق ر ےیل میں ذککیابےک: 
م شراب م تیت کا تا اں هک د لوگ شرا ہکرام سے سے 
وت تے اور ریز یش ا ےک کے مات یت 3 
اور یق ل شراب کے یک ان میت 9 ے ان دوچرول 
کے درمیان مواز نہ سے ظاہ رها کرام نے شراب سے اس سای قصانات بیان 
کر یقرت ولا گی ان ا ےرامہ سکیا۔ 
ا آیت و س شض رر ماس م 


اللمعان مر اردوالتییان 64 


نطاب پٹ بھی ال تھے رسول اللہ خلا کے پا ںآ کی ار کی کے اسول 
شاک شراب نیعم کے باس میں E‏ 1 »ال 
کن ےمان شی مک کور ولا کر نے وال ہے؟ تو رتخا نے یهت نازل 
ا مت عن مر وال کل زدرما نم کرو ومتانعینگاس» 
حمیسرامرعلہ: تیس رام عل یش را کیچ ین کم واگ »باب طو رک اتیل 
کا یران نازل »عازن امئوا لا ربوا الطَّلوة ونم شکزی ڪش 
تَعْلَبُوْامَا تَفُولوْنَز(النساء:+) 
"یمان دالوا ماز کے پا بھی اک عالت می مت ام نشم 
کد بتکم ديا کیچ مز ۳ 

اشن اون 2 شرا ب فص ر فنا ز کے وت ترا مر دیا ا )کو ونش یں مش 
نول اورا ز کے اوقات یں میراد ہیں ءا کے ر سان را تکواورنمازول کے اوقات 
کے لاود ل شراب ہے ےا لآیت کے بپ نزول کے ملق روایت سک بدا رن 
فقس و لیمک دکو ت کی اوراس میں چٹ رمیا ہکرام کو رگ وکیا بجی ین الی طالب ‏ 
را ای لک حضرت بدا ے ری زم نکی اورال سی رن نگ 
ال سل بمو لکردیا ما کاو ہواتوانہوں نے کے امامت کے ےآ کے 
کرد یاو ی نے سور کافرو نکی بل تلاو تک :قل راچا اروت 9 ابا 
تخبون ولا اٹم غِلُوْت ما آغبل و کا ادما عدم ول اکم عيدوت 
ما بل (الکافرون: ۱ "0000+ ےئ کی ری رز 
تلکواات نش مل اقزارہ لصورآ یت تازل لن 
ا عل ہم حلت ربیخ رکا آ ری مع لقاال شراب کی عود پ رام قر رد 
ال نے شراب سے رم کت وکا تک رود یا اور اس کے ہراستعا لور فر بادا 
چنا انتا یکا ار شادنازل ہوا: 

رو می E E‏ 
٤‏ تر گنگ با یک سان سل روح 


اللمعان ۸ ن‌اردد_التبیان 65 
ال مو رطان و ول پاک زاب اور سم کے زره تہاردے 


درمیان عراوت ا باه سے اوراز ےت مکوباز 
ر کے سوا بھی با زآ و !۹ (الا ٩۱-۹۰:‏ ) 

انآ یات مہا ر ککاسبپ نزول مفس رین نے ىہ با نکیا ےک کا پرضوا ال 
تم مین نے نمازعشاء یڈ ھن کے بح ایک مرج شراب فی دربب ےک رق کو یکر نے 
گے ایھ شراب نے ان مرول میں اپنااڑ دکعانا شرو کرد یاو نشان کے اغوں 
کو پچ کیا اس ملس سآپ ام کے با رت زه ین بامطلب ڈٹ بھی موچور 
کے اورایک ول بھی انیس اشعار اور“ ۔لیں »اسف اپ ترانے کے 
درمیان ایک راد ۲0 


)0( گانے وا لی ے جواشعار بسن جم سو 7 وہ 


مھ ہں: 


ا تا یز ٹر اي فسات باي ٠‏ 
هنم موی تیک طرف ان جرک کےا سے می ان ممن نی مول یں 
شم الیگین في الات یلها ٠‏ . وعجل بن اطا بها یگرب 
ان کے گے رک رکھودے ادرا کا اھا چا گوشت شراب ی دا سفق مک لے جلد کے لےآ 
وضَرَِجْهَن حفزة بالیمًه بیدا ین طبخ " أو شوه 


اوراے از ای تون لت چ کڈ ال با ال ہوں یا ون ہواہو 

ی شوم ےگا نے و ای یکود یئ ا کا مططلب ‏ تی اک حر مزر ارڈ عنہ کے اندر 
اوتتول کے اک ےک ج اہو اک سب عاض رب ا نکا اگوشت نو فرا ورگ دج یگ ار _ 
هر اناوت ی ےہ علوم ومحر وی :ا نکوان اشعا رل خا بک کےا یک طرف مت جرکیاگیا 
کردواہنظیاںکاٹڑڈاال- ` ۱ 
فا ره؛یاحمز: منادیم ےءالشر ف:شارف ایی سے ای سا اٹ یک کے ہیںءالنواء: ناوية کب 
سکول ہوناء یش فک غت »اتلد کوک ہیں آطالب:طیب کب 
که هگرشت سک یس ہے اي رب کے پل اوت می لکوہا نک اج رکاگوشت موب ادر گرد تچ 
الشرب: شرا باو یکر وال جماعتءقد ید هگوشت کے و ںکو کے ہیں۔ 


اللمعان شر اردوالتبیان 66 
ا یا عفر" لِلقُوفِ الیواه وهن معفلاث ‏ بالیناٴ 
ت7 نارازه ان موی موی ارو ںکی طرف امه ج کھ کے سا نے 
میدان ین بن رک مون ہیں“ _ 

عرس مره چان اشعار ے ما ڑ ہوک رگم کے ما هت بنڑی ہوئی اون ا 
اذروضتد ہوک راشے اورن شک عالت سرع وا کی وو اوو لک یکو بانو وکا ت ڈالا اوران 
کورچ دی کل کواس با تک رد یک یو ایل ال سے بت دک موا وہ ی اکم 
اٹل کی ضرمت میں کے اد رآ پ مال کے چیا تمه سک ا ںا لکی شکایت 
کیب نکرآپ ام حطر تمزه 9 با تشریف لے گے ء اوراس کل پرا 
لام تکی اورخضضہ ہو سے جب تمزہ ٹل آ پکی طرف نا موس مگاہوں سے ده بھی 
ناد پرکرتے او رگ ین کرت ء پل نی اکم ظا اورآپ کے رفاء_سفاطب ہے 
اورآیا: وه أنسمالاعبیدي یام سب میرے باپ کے فلا مکی ہو؟ آپ ما که 
کچ نش یں رمو ہیں٠‏ اس لے ا نکی اس بات پ ررضت کی فر ارا ے 
ال دتتکہا:”للَهمَین تانيالخفر بیاناشافیا“ اش داہمارے یشراب کے بارے 
یش وا عم یا نر ماد یں ؟ تو ای تھی نے بی یت ازل فر ماد :لقن از ود 
(۱) وم ریس ال تھی نے مسلمانو ںکوفی موی رع عطاغرمائی ءاورکغار کے بڑے بڑے سنزصردارمسلراتوں 
ےگ رفا رک لے تیر ہیں کےتعلق بظاہ سلماو ںکودہ چیروں مم اختیارد یاک میک کک کے شی نکی 
شوک کو پھیشہ کے کے کن و کن ست فد نےکر اف ان ا نت کین : 
7 ساسا ول ےت رآ وی شہید ہو کے سر لدا نوی شہاد تک رل ایک نفیف سااشاردریموجورتھا 
کہ بیصورت اللہ کے پال لتد بر هل - 

اک میب ض× عم نے سلمان مو ےکی امیر پر دوس رک صور تکوپ دک کہا نکوفد ید ےک رآز ارک 
ارف تعر تکگمراورسعدرشی انلا وغیبرہچندتظرات نے ان سب کےا لک رائے دگی :تاککفارکی 
وت وشوکت و کم ہوجاے ءآپ م نے انتلاف راۓے کے وت رمت وشفق تک لک ہناء پر 
قیریوں کے مام می نآ سال یکو اختیارکرتے ہے فدہ سکپ ےکی رام ۓےکوقجو لکرلیا نس پر ہاب 
ازل ہوا۔(موارک القرآن) ۱ ۱ 


اللمعان ٦اردو‏ التسيان  ٠‏ 67 
وَالْأَنْضَاب والاڑلانھ رش ہے سی مس ( 
اورا ی طم 2 رح را کل طوز رام و »اسطرج مرط رو ار شرا بپکوام 
کے می ای قم اتشان کت یکرت یری لک اسلام نے ان مور بیار یو ںکا 
علا کا 
علام ز رقا فی رح اللہ نے اب کاب "ال الح فائن' یں صراحت کے اتر ذکر 
ا ملام نے راہ چنال خر ب کنر م رمق جانے وا ریگ 
مش بر اد اسلوب افتارکیاء اور رکا رشا ب نوی کے وت ہن ا 
جات دلا تی دگیء اعلام اس شاندار پا ی اا ٹس ال وار ر کے 
را ۓ گاهزن» اورقانون ہازی ارت کل میں کامیاب را ضبان مترن 
اور بتو موں کے یوم پر شرا بک پابندگی ٹم ب رک رع ناراد بل * 
بر تا کا یکا مش دیا ڑا ےء اورقلست کےکڑ و ےگھونٹ پا پڑے »ار 
کاشراب پر کایرت ده درگب لس کیا شرا بکترم تک 
فیس وی سیاست اورم شرل تی تی یب تبت ن میں اسلا که ل؟!۱!! کول کل » 
ارتا ں لکوایدسری سے_ 
ا -چو لت کت سفن کے لے قرآ نکر سفن گر 
سای یناج اک رپ جات ہی لک عرب ای حے مین یکن پڑھنانکیں جات 
ارم تقر یکمن طقس تکواللدتوالی کےا فر مان سکف و کر ر یاس : 
3 ”وی سے شس نے (عرب کے ) نا خواندولوگوں س ان تی( یتوم ) 
می سے لاف رب می سے )انش متس اھ گر 
سا ہیں م۲ 
ایر آپ :فلا ای تے ارشاد یاک ے: 
ترچ جولوک ال سول کااتبا کر نے ہیں 7 (وخوانده) ی 
یں '-(اا۶راف:۵٥٥)‏ ۱ 
یل یل اشک کے متش لک ان ابا ارگ بابک ازل . 


اللمعان عر ارروالتبيان 68 
کیا جا ےک سلا نوں کے لے ا کا ا دکرنا ROE‏ 
عافظہ پاتتا کہ سے ےہ ان کے سے ان کے سے ( من جو بات سن ومول مس 
ہش وہای تر یرک صورت میس ضہ رک ضرورت بی رآ ی ) جج اک ام ق ہے 
کی ر ملگ روارد ہوا اورکاتجوں کےکیاب ہے کے اتر سا تات 
آلا تی اک لس رنہ ےہاگ رق رآ ن ار ا رد پا اج ولگ اس کے یا وکر نے 
ہے عاج ما تے او ری نس می ںوروا رکر نے ورین کی کک موکررہ چا کے 

۵- پا وی حکست : پانچو یں کت عاہغات ووا قعات کے ساتھ ساتم چلناء اوران ۱ 
۱ کے وق پذ یھ ہونے کے زہانے مین ا نکی غلطیوں پوت سب کر 
بر وت جیٹس انسانی کے لے زیاد+م وش اوراس کرت اورت حاص٥‏ لکر نے می 
ور درک یز یاود دای هبل ج بک کول نا موا ییآ جا تو اس موان ت رآ نکی 
آ یات ات جاقلء اورج کی ان ا ادل تو رآن نازل »وماج 
جوائیں انا ور؟ وک رتا کس یز سے نا مناسب اور کا مکوطل بکرن ضر وری سب 
اوراس وقت اورز مان ےکی قاطیوں کی نش تر یک رتاو ران پرتت ہرتا_ ۱ 

آ پغ روہ ن نکی مال لے ع ا(اس نزوہ س مسلمانو ں کک کی وجرے ) 
ملمائوں کے رلوں میں ریم گی تھا اورجب انہوں نے دیکھاکہا نکی تحدادش کین 
ے »بت ز باده ےت وخروداو رکھب روالی پا ںکر نے گے اورجود شدرگ کے رای کر نے 
کی وجہ سے من تغلب الو سن قل رج م تعداد یگ یکی وجہ سے گر 
غلوب نہ ہوں کے بی خی ہے کاک را ہوں نے میدرالن جنگ سے یرل اورتلست 
ہجوت و ری ہت 

تر( کو بہت موقعوں میں غلبہ دیا) اون کے دن بھی یتم 
کواپنے من کیکشزت جرس غر اتا رات تا ساره 
دول رز من بادجوداپتی فراقی 29 رن گی پر( خ) 9 م پھر ےکر 
با کے ہو ے“۔(الظ رد۵ ۳) 
اوررق رآ ن یا انز ہوجا حا نع پراس کے وقت مت کن د مق ء 


4 


اللمعان رادو التبیان ۱ 0 
ال ل ےکم نیشن اورا نکی ارام ےکن نآیات کے ترو لکاتضور کب : مرکا 
ہے ھدوا قح یاوه تک روما ہواہو؟! 

بی صورت نیل بدر کے قد وں سے نر لے 2 1 شآ یک ان 
با میں یہت ری یآ تست اتی : ۱ ۱ 

تم : نیا شان کے لا ینمی نکر ان کےقیری باق رہیں ( بش لکرد ہے 

ال ) ج بک کر وہ زین مل بیط( کنا رک ) خو یزی تک لی“ 
(الاثتال:ے۷٦)(ءے)‏ ۱ 

۱۷ لت : لتق رآ نک رم کے رچچش کی طرف شا کرناء اور انا رده 
کم اور یل تاک “کی طرف سے ریا گیا ےہ الیل الت ر کک کے تلق 
0ے ز رتاف رم الہ نے ج وہ اشنا کلام اہی مکتاب''منابل الحرفان“ 
۲ کی ےا لک لکنا ہمارے نان مناسب ہے ور ہے ہی ںکہ: 

ق رآ نکی ترا نازل ہو ےکی حم تق رآ نک رش کی مضا لکرناسب»اور ہے 
ان ےکی الدوعدہ اش مر ری کا کلاے دا کا ر ما کا کم جوا ان ےاوردی - 
ان کے علاو وون بل ےکی اورفردکاء ا سکیفصیل یه ےک رآ نکر مکواز اول 
جا آخ پڑت ہیں تووم ت ندز بیان »گرا او ری کلم پخ طررز اء 2 
لوط اورا رق سورتوں ٣)‏ وں اورتھلوں ٹس ایک دوسرے کے سا تھا ر لوانظر 
آ تالف سے یا کم لق رن ا عیازکاخون رواں ہے هروه ایک تسا ۱ 
یں ڑھلا واست اور ال 2 کے درمیان لورت اوررخ ن 9 اج »وکر وہ 
موتو ںکی ری اور رو پار سے ج انو ونر هکره ہے ای بے وف رات 
م اور کے اورآمتیں بام مرلوط ہیںہ یہاں تم لوچ ہی ںکہق رآ نکی ےجو الف 
کی تب موی ؟ اور رجرت ای اتی کیک کن بو ؟ حا لا کہا کول بر 
یں ہواء جس ال سے زات دحرصہ می ری واثعات اورحوارث کے مطالق یرہ 
یداو تفہ قطور پرنازل ہوا؟! ۱ ۱ 

اب ی ےک رم یبال اگیاز کے رازوں یس سے نل ےکر ایک میا راز یت ہیں 


اللمعان شرن اردالتبيان 70 
اود بو بی تک نش ول یش سے ایک ناددنقا یکا مشاہدہکرتے ہیں٠‏ اور ران کےسرچش 
اور اوسزا کے با کک اور الد وعدہ اش ریک کلام ہے درد دمل پڑھے ہیں: 
ولو کان من جنر عبر اللو وجا ویو اخیلافا گیا (النساء: ۲») 

رض“ اور ار بے الہ ی اورک طرف سے بوتا تو ال ہیں کرت 

ناوت پا ہے ی ۱ 

ار باتش و را بتا ی ےک ہآپ میس ان کت ہے؟ با تام لوق میں 
ات ہک ددہ یک ا یکناب سرا جوا کی رود ی کم تزتیب و 
رانگی میں بویا ابراءوانچا شش تنا سب ہو ماگ وب ملیف مقدوریشری ے 3 
ماوراء نار ک یکا ال واسپاب سا حت و یا ہن ہو( خار کی گوا ال ےمراوز ماش کے وووا قعات و 
توادثات ہیں بن ےہ طا !ن ا سکتابکا ہر ہرجز نازل ہوتا ہے اورا نک ترد تا ے اوروه 
کے دی سے اورا کے هو تور ںآ سے ہے )باوج دیک ان :گول وساب کے درمیان 
احلا ف وتقاء با جات ہے ایس تال فک کی لک زماتہاور ان بنکر رن نازل ہہونے وال 
اجا کا ری سالک زان و کی کی اورط وبل رت پل ے11۴ 

بش یا نتصال یز ان اوران دوا کی کے درمیائن موجوداختلاف عاو رخت اور لو ۱ 
کو عم ہوتے ہیںءس سے ام کے اج را کے درمیا ناو ربط واتصا ل گل رت (اور 
تیب لوت اج رن ۱ 

ین رآ نکریم ے یہا ی شرت عادت کا مکی کہ چا چراقطول میں ازل 
تار الین ا یک کیل ایک موی وم او ظا مکی صو ر ت میس مون مکیا بی رشن دمل ہیں 

` که یی رآ ن قوتوں اورقدرتو لکنا »ساب اورصسبیات ‏ ما کیک غق وکا ات 

کے مز من و سما نکوتھا نے وا نے اضی و تل کے ما موز مانے اوراس یش رون 


مز ید برآ ںورک ی نکر رسول ان ج بو ایک یاز یاد ہآ تس نازل موس 
توآ پ ام ثرا ےک :” ضموهَافی مکانِ کَذَامِن شور کَذَاٴ“”'اےفلاں سورت 
دل فلاں متام پر دک دو“ حا لا ہآپ وام شی طور پر بش ر سے ال بات ے واقف 


اللمعان 2 ا التبیان 71 

کزان نرہ لکرکیا ےک رآ جا ے؟ اورک جات ےک زا می و 
کیا ہو نے دالا ہے؟ اورکیاحوادث ووا قعات روما ہوں گے؟ چہ مایپ ام کول 
با تکام م وکران وا عات کے بارے بی الل کیا ناز ل فرب گے؟ اىی رع ایک لس ۱ 
عرص رگیااوررسول اٹہ ی روش پرکار بندر »بت رن موز ی وی وی رآ نی ۱ 

آپ نز + ری با کک اس طوی ل ۶ر سے کے بعد اقآ نعل وم 
les‏ لو وه شوم وم بوط» نا سب اور ا ہوا ہوتا ہے ال میس تھوڑا بھی رخن 


اورتفاو نظ ری ںآ جء بل سار کی سار یکلوق ای مآ گی انیت اور تال می لکی 


وچ ےا گردتاے۔ 
جاک شاد ارک توا :کدی کیت یه ی فلت من لن 
کیو حبر (هود: :1( 


ان ی کاب چک کیت دال سے کیک 
ہیں ای کات )ماف صاف ان( کی )کیک ناکم نرک 
فش" ی 
۰ .۰ چ بآ پ جان یی کے کا طر 2 تیب وکام تک کو کیلش رآن ے 
۱ از لکردواسلوب انا کے مطا سی کم مک نیس سس سیق جب با 
نی ہخواووورسول قيرط کا کلام ہی سک 
11 آئن کے اسلو بتک سالک نک تو اس انا زکارازآپ کف ہوجا ے۴ - 
۱ ال لو رآپ رمع ول جک دسلا سے 
اقب موان لش پا کی وچ سول تصش صادر 2-97 لین ا کا ان 
من وبلاخت اور کی گی و بلئ ری سکیا مقام ی نکیا لت رو وت 
مان گرا استطاعت رکتے ہی ںککڑوں مس بے ہو نونکات 
شس نتصان وزیادثی اورتصر ف کے اتر ایک ای یکنا بک صورت یں م بک رکنار 
سلا ست وعدت اوہ مآ گی ےآ راست ہو؟! 


کن رگا یگ اد ےتا اد 


اللمعان مر اردوالتبیان 72 
مشخ جا کہا ےک ارو 2 لیے بوندزدہ لیا 9 اط ٹوا لوا اور الات 
مرت کلام لاس ےک ج امم ربط وی اگ aT,‏ اہی راو رکا نوں اورذہتوں 
پردہ گرگ ر نرق رن پاک کایرت تال موتا ای با تک مرد ےہا ےک و وشیا 
اکا کلام اورا یکی یل ارت و کل ی ا 
مز مت طف رز ری 
"کر نی Ê‏ ےج سکو ہیی 
اقونیکاو وم تون ہوں بان نمر چ وی اتال ورتم 
ہے -(الفرقان:۷) 
کر ےآ نک وک اص لکیا؟ ی ارم نے ق رآ نکن لو 
چ رل کرو سط سے سا لکیا اور تی تل علی السلا نے ا ےرب ازع بل چلال ے 
سل کیا بج نل اسمن ا کا کا صر کر م ال کو رمو یک کم شا تک بین اورا نکی ۱ 
طرفو یکر ناتھا۔ ۱ 
ٹس اشتپارک وتال نے ابق مقر ںکتا بکو اہی ےآخری نگ پاس الوی 
رل تک زر نز لکیا رال تن رسو کر ی کوا سک ليم وی 
اوررسول شرس اس بقی اس ت کک نتسه رال نی ریف 
کرت مو ےرا )کہ ووی دادن یں سر مک راقرتالی سے سے ہیں اکر 
سول اند تک با ین یں : 
نیٹ ہآن(ا کا )کلام ےر زرغ( ی جر یت 
قوت والاے» ۰ور )ا کک تر کے نے دیک زک رت ے؛ (اور)و آ3 
آ لول )الک کب انا جاتا ےء(اور) ےت 
اد ہیں )“'۔( او :۳۱-۱۹) 
اوران کے پار ے میں یفاب 
ساط کر ی هآ پ لب پرصا فک از بان ٹل 
کپ( کی ) مد ژر والوں کے مول -( شترا م: ۱۹۵-۱۹۳) 


73 


امن فا لیان ۱ 
ات ےو که 


اسب امان کن زل کرد چ یا اران باری تا ی ے: 
”اور پک تین ایک با سے شت وال ےلم وا ل ےکی ہاب ےت رن دیا 
جا ہاہجے'۔(ائل:۷) 
آپ ا نول ق رآن کے وت کین اٹھاۓء اور ابی چا نکوث رآ نک د 
کر نے کے لیے مققت میں ڈال لع ےج رل تطلاج بق رآن سنا ےت وجول جانے 
ال شی سے برضا ہوجانے کے نوف سے ان کے ساتحدساتحددہراتے رج جو الد 
ےآپ مال کوعمفرمایاکہ بل کے پڑ ھن کے وت تامو رہیں اورتور سے سے 
رین ء اور ینان دلا 1 مایق آ نکوآپ کے سے می لتفوظفرمادےگاءاپزا 
آ پ دی کے معا لی جلدی ضف ما میں اوراس کے صول مم اب جا ن گی میس ن ڈ لی : 
ماوق رن( یڑ نی ٹل اس کا پ هالک وق ری نازل ہو لت 
د »او رپ بیدعا مک( تم هرت ار لم ما( تنھبر حفط 
میں ےر لیر ی اورمیر و الواغتا ارک کت( سط (iir:‏ 
اورحفز کتک ول ال تال کےا ارشا وران ئ ے: 
”(اوراے میٹ رآپ اغتا م ویر لی تل )اتی زان دبای ےک 
آپ ا لکوجلدی »اد فش ہے( پ کےقلب میس ) ا لک کرد بنا 
اور رواد یناه جب نم اے بھی (لڑنی بجر فرش پڑت )تو آپ ال ۱ 
رو یکر پر( سے وقت) ا ں کا مان ماد اد ذمّہ ھا 2 
( الم :۱۹-۱۷) .. 
رل مرن شب ےت رآ رف ے هکل 
الا آپ ۶م کے با ستشریف لا سے ادرو ر ےآ پ ام کا ق رآن عن جک راب ا 
ان کےا تاوت فرماتے اور وہ »پر رل لیے او رآ پ ملا اعت 
فرماتے ء اک طرں ہررعضان س ٣ں‏ تر رآن ناز ل ہو کا ہوتا ایک رج ہآ پ فلا کے 
سا دور تے آپ م کے وصال سے بل یل اد پار ریف لا ۓ اور دور 


اللمعان مر اردوالتبیان 4 
فرمایاء ان کے ال دوم رتچ کے نزول ےآپ له واندازه ہوک اک مره وصا لک 
ونت ر بآ چک ےآ پ ٹڈ نے ماش تفر اک : ج رات رمضان می بھیشہ 
ایک پاد دود کے لے مرس پا کتشریف لایر سے ےہ اوراس سال دو مرح ہآ کے 
ہیں ء کے لو ں کنا ےکمیرے وصا ل کاو رب ے'۔ 
اور مو ای لات عو اه رب کے جوا رت گی طر فوخ 
کر کے ءاودو یکا سل لیج یآ ب ام کی تس فطع بر 
لان رآ ں کے م لکیا؟ را ےک جرک ل بے ال تعالی ےت رآن 
کوک ما ل کی ؟ تو ال می مما ےا ی ہآ چا کہ اما تک رل ا نے 
انشتبارگ ولا کی ےا نآ یا تکوسنا رات کر رسول الد تا اذل ن 
علا م ی رح الد الثم کے ارشاد :ان 0-720 
ا ۱ ۱ 
مامتا یی و 
اور رما یتک رده بات کے سا تھا سے اجار“ 
نی اس کا مطلب یہ کرت ربیل عفان ےق رآ نکیا صول اد ےگ نک کیا ورای 
گی تا ترا یروا بیت صد بیث ےی ہولی ے: ۱ اذاتکلم له بالوحي “الخ 
”جب الشقعا ی وی ات تخر ای تن رازه طاری 
بوجاتا سس ا ا 09م" 2 
ہیں رسب سے پیل بجر ابا سراٹھاتے ہیں تو ال تالی تی مس سے جو 
سل اس سے مرف ماتے ہیں رها یکلام او نل ےکرفرشتو کی طرف له 
با 2 یہ جب ا نکا کآ ان س گر ہوتا تو وبا کین سوا لک ہے 
ٹڈ کار ےرب کیا فر ایا ے؟ جر کے تفایرد یکو جا 
مون مہ باس یں“ 
علام رتاف ر الاپ کناب "متا العرفا یس رم طراز ہیں ۱ 
نم لوگوں نے ہم ود ان ہا ت کی ےک سل ی اکرم ۱ 
رفن نمو و نےکر اتر کے تھے اوررسول القم مک ا ےکر فی ز بان 


اللمعان شاو التبيان_ _ 75 
ین کر سک ان ےا E‏ ون حال می الفاظاتو رل 
ملا سے وق اورانشہ تیال صرف معاٹی کی وق فا ۰2 ہے دونولتول ا 
راس گناہ ہیں اور رآن وسنت اورا ان امت صو ے مصادم یں اورا 
سا سام یی وتر یکی نہیں رھت ہوککینے ےک مل ے٤‏ اورمیراعقبد ہبی ے 
کیہ بات ملمانو ںک یکتابوں یل ایک سا کے تخت داق لک کی _چ» ورنہ 
قرآن اس وق ت کی وکا سے جب اس کے ا فاگ یج سل علیہ 
اسلا کے الا رده ہوں پرا نک نبت ار ما کے یی وکن ےجب اف 

اشکا ہیا کرد هن بو؟!حاااشکاثرانن ہے:لاحتی یسیع کلام له 
(العوبة: ٠٣‏ كركلا م ا خی ال کےا یی بہال با تک بہت 
اش جوم سےا کی سی ل کا تنا اک رک ہے۔ 

کیاسنت نوی وق لی ؟ انل یل مار تسا سب باتوضاحت ےآ ای 

یق رآ نکر انشا کلام ہے اورا لک کرالفاظ اور معا ی دوفول اش جاب 

ے ہیں ءاس میس جت رل مایا مجر تا کا موا سے اسکلا مکی کے او راو ین 

اوراحعاد یٹ یگ ای رح وق ال یس سے ہہیں بین اس مس فاد رسول یڈہ ام 

کے اور ماف اشگ‌طرف سے ہیں »یالتعا یکا ارشمادے : 

تر جم اور دآب اب خا مشا نشا ے با ٹیس بنات ہیں ء ا نکاارشاد 

ی و ے جوان شی با ے( ناه فان یکی وک ہو ج ہکن یا مرف 
معا ی کی وی ہو تفت اورخاہوگی و20 ایا تاع :کیک وی ہوس 
سے اجتماوفرماتے ول( :۳ ۳) 

علامہسیوڑگی رح اللہ نے جو فیا رما ےت لکیا کرو وف رس ہیں : 

* الل کے تاز ل کرد ولا مکی د یں ہیں کی کم ہے ےک انتا لی رل باس 
فرماتے :اس اس ےکوی کرت لک جا ب یں یا جار پا ےک انش فر مات ہیں : 
نی یکا مکردادرفلاں فلا گر و توج رل شک 1002-9700 
تال ور شتا کی مودات یا نکر ے مین الفاظ ودنہ ہو ے _ 

اک طرر ہے جب اک ایک پادضاها “تق خائ باس :فلا س ےکہردو 


اللمغان غ ارددالتبیان 76 
کہ پادشا هک کٹا ےک :”قر مت میں توبن کرو اورا یت روجک سے ے 
اکٹ اکر پچ راگ رقاصداس سے سک کر" دض هپس ےکنا ےک میرک خدمت س 
تی رواو رشت نہ ہونے دواو رای تا ل پر شک تے رمو توا کی ال 
با توت اور پیا م لکوتا ی تی لکہاجاۓگا۔ ۔ 

درک ہے س کاشتعال چرس تایا ےرا ے: ی یوب ڑل تو 
ل لالا ے اغ کی عد کی کے ال ہک طرف ےکن ون ناز ل کرد ےجب اکہ بادشاہ 
ایک اتا ے اورا سے با اعماد اشن کے وا لتا سے او کت س ےک :”ا سے فلا کو کر 
تاو ٠‏ ۱ 

ملام یوی رح الل فر ماتے ہیں ق رن دوریم سے سے جب چیک یم سن تب 
یی 000 


اللمعان ۸ رده التبیان 7 


۱ آی تک یسک یکن میس اسباب نزو لگ مرف کا بت »اک نریم 
گی ایک بڑکی تعدا نے اسیاب نزو لکی مرف تک بڑا ا تما میا اور ال کے لیے بہت 
اد ارم نے نل تا فی کین شن می سب .نیال ارس فرست ام 
ای رح اللر کے اتا خضرت لی بین الم یی رص اللہ یں+ ا خن می کی جانے وال 
کیال میں سب سے شجورعلامرواهد کناب ساب الت زول“ ہے ای ط رح تا 
الاسلام علا ماک چک رر الک کی اا می لگ را ں قد تصفیف ہے عراز اعلام سیو 
راذگ اکس پر ایک یز ای ما ب تصني کیج سکانامانہوں نے لباب النقول 
فی آسباب الجزول رما ح5 

آ لی علو مکی انو( سب تر ول ( کی ابی تکو جا او رآ یا مار کے ما 
٠‏ کرت می ا کی ضرور تک نکی کے کی نظ رپ کے کے ہی ںآ یات موی 
متا ای کے اکا کا جانا اسیا ترو لگ روق میس یلکن ہے۔ 
شلا الد تیا کا ارشاد ې : ورلو برق َالْمَكرِبِہ اتبا ۳ 0ۃ 
وهالو (البقرة:۰) 
۱ تر جمہ:”اورا شک لوگ ہیں (سب جتییں ) شرق کی او رر ب کی بل تم 
لی ک جس رف کرو( اورک )اتا یادن ‫ 
ا سآ یت سے بظاہرماز س قرت دک طرف م نہک رن ےکا جوا ھا تج 
اکل خلط ے »یوک استقبالی قب ہت ما زی کت کے نے شر ہے جا ہم سبب نول 
کات ےآ تک اسان اوروا ن وا جا کر ریم مرک سل 


اللمعان مر اردوالتبیان ۱ 78 
کے با رے میں تال ہوک جک مسا واورقب ہل )کرد ے ءا کی جبت وس تکاس مد 
وولو ل ویر کے نزب لگا »لا ج ں سم کی اس نے رر کر کے از 
کاک TT a.‏ ای معلوم یتوس پرا 
زکااعادبضرور ینیل »تلم واک یرآ یت ال بل یصرف اس کے ار ےس 
ےک ج قبل ے ناوا قف ہواورا ےا کم کا اد رال زو 
آیت کے کے میس اسیا ن و ل کی ابی تک دوس ری مثا ل الثرتحا کاب راد ے: 
«لیْس كَل ان امَثوا وعیلوا الطلخت یی لا ما انوا 
منوا وعیلوا اطخ دى اموا وَامَوا ثم الوا وَاَحَسَنُوا وَالله میب 
خيرت (المائدة:») 
تر جمہ:” او کون پر وک امان ر کے #ول او ری کا مکرتے ہوں ال چیز 
شی اوی کا ن شود هکما کے ك- ولء وٹ پیز رک »ول 
اورایبان رت ہیں ویک کا مکرتے ول بر دی کر کلت ول 
اورایمان ر کے مول پھر پر یز ہی رک نے کے ہوں اورقوب نی کک لکرتے ہوں 
اوران تی ا یسیو ںکاروں ےہ رت ہیں“ 
یت شراب کے تلق نازل مون اورا لآ بی مبارکہ سے بظاہرشراب ہے 
کا جوا زوم ہوتا ے یاکرش ناواقف وگول نے با نکیا او ر کے ات 
گناج سب اوروعل میں ےآ یت ی کے کے اکر وہ ا کے سیپ ٹول سے 
واف ہو ت تیور کی کے 
مروگ ےکی جب شرا بک رمت کے بار ے بی اٹہ تیا یکا ہے ارشا دتا زل ہوا: 
9 ابر ویر وتاب والاڑلاۂ رجش قن عم این 
فَاجْتَنبوْهُلَْلکُم تُفْلِعُوْن4(المائرة:٭) 
رر ”بات کی ےکم شراب اور جوااودیت ویره ادر ع کے رسب 
رکب شیطا نی کام ہیں موان سے پالگل ا نک ہو کم فلا ہ۶“ ۱ 
ال پاپ رضوان انم ا“ ن کب کال نکی ہوک نے 


اللمعان تر اردہ التبيان 79 
میں شی رک در ے گے او ئل کو پیارے ہو گے او روش بک ۳ ال 2 ج ری 
اور ے؟ 

وا کر تازلف نے کن پک ول نے را پک 
رمت سے یط اسے پیا تھا الد نے اکس معا کرد یا ے اوران رکو ٹاہ مکل ٠‏ 
کہا تعالی ند کیل از اسلام ال ارت صادر وف وال ال پرگرفت 
یں فر مات ء اوراسی (سیپ ترو )ےآ ی کا ی ومر و می آ جا ہے اوھ رط 
ایر شر بت رک مت یر بان رتاے- 
اسیا پ نزو لکامحرفت کے وا حف را تکاخیالی س ےکرتا رووا قوات کے 
رہل ہونے 1 وج ےالٴ ن(سبب نول 7 مت )کا 9-7 لاہ ےاورنہ 
تی ا کی وی یال تا خرچ هو سپ نزو لک حرفت ان کے غل می ل کناب ارگ 
آفی ر کے طال بکیل اوی ضروری ین کان بیان فا داور بات نا قائل اعتپاراورغلط 
چا رآ اوضر نکرام کال سے پار سے ایی با تکاصدو رن ك 

آ ےش تلا کی جآ راپ کرت ہیں کیل راس کے بحداسساب نزو و اکر 
کی( انشا اٹہ )کک بیس ۱ 

اموا رگ رح اڈ ر ا ے ہیں : 

یآ ی کی کا جانوااس ےا قعاورتدول کیان پرواقف ہو ے ار 

میں“ 

اند مق اید رح ال کاقول ے: ۱ 

”سیپ ٹزو لکو با نکرناق ران کے موا یکرت کے ہے ایک 7 0+2 

املع تی راشم ا 

"سیب تزو لکا مان ییامغی 

مس اطرت“ 

۱ ادرا شرح علو م رآ نکی اس فو کی ابعی تآشکاراہوجاٹی سح البتراش کے اتر 
۱ کی درا یی سورش هار لے اکر ا چ 


اللمعان غر اردوالتبیان ۱ 80 

اک رولیت پات کم تکا نا 

۲ کا مبب ات فا کرد لن جعقرات کے ا يب در 
اقا( - 

٣۳۔‏ - ام عر رورت می تص رکے وود 09802 

۳ زس تین نامک مت ی ےر یت تازل بو انت 
ملک متین۔ 

پ وھ و SE‏ 
اسیا ب نزو لک حرفت کے فا ره چنرشس: ا مان نگ تا 
کے ال ارشاد کے مطل بک ا من مکل ہہ وگیا: :اسب اش يرون ما آتوا 
ون آن منوا ا لم ياوا قلا ساب یََفَارَة فن داب رال ٰ 
خمران:۸۸) 

جاگ اہی تارج کال 

پھ جات ہی ںکہا کت ریف ہو سوا ہہ ے نصو ںکو پرگز رز مرت خیا لکروکردہ 
اور سکع زاب سے اڈ د ہیں گے 

مردانع نے ایے فاد س ےکہاکہ این عپا ی( ری الل کہا( کے پال چے چاو 
ارت ار رات کاب دیا جا گا جوا کی وش وان رده پاب 
ری فک پت رک ےو بیو مسب مزاب می ںگرفیار ہو گے ؟ 

ال تخرت اغبا ی بسن مردان سے ا لآ تکا ایب ن یا نکیا نے _ 
اس کے اکا لکورش کرد یا ءآپ نے ال سےفرما ر کہ بیآیت اب کاب مت مد کے 
تلق ازل ہوئیء جب یکریم لے ان سک چز کے بارس مجن ورات 
یه ابو اس با تک یاد یا ادراس کے کا سے دوس ری باتک اخمردگیاء اورتا شس 
٠‏ دیاکہانہوں ن ےآپ تلم کو ای با تک ردک ہے شس کے بارے میس لوا تھا ء هرا 
لپ ےآ ریف کے ی خواہاں ہو ےب بی یت نازل مو _ 

۲-ای‌طررح حر ت کر وہ بن ز ہیر قارتحا کے اس ارش وکا من مشکل 


اللمعان ۸ رّارده التبیان 81 


نرق الما ولو تال ندال تاع 
نیلف وتا (البقرة: 0 ) 

چ تا صفا ارو مزر پا گار( وسن ) غراوندی ہیں سو ج 2 . 
یت ال ہکا یا ا کا ) رسای پر ذ راد یگنا او نان دولول کے 
درمیا نآب رورض تک نے س( سکانا می ہت 
۱ کول یت مارک کے طا ےکی بین الصفا وا مروہ کے مم وجب کالم 

ہوتا ہے ای لے خضرت روہ بن ز ہیر نے ای لام امن حضرت عا کے ارت 
کاک خالہ !ال تی فراتے ہیں :فلا جتاع علو آن یلق ہا ال لے - 
رال س ےک یکوکی ٹن اگ می تنامض تین 

ال پرحخرت عا کہ افیا سح !تی کین کیا ہی برا ے!! اکر معا اس 

نی ہوتا ی اک یتو نے زک رک یا تو اہ ول فر ماتے :قلا جتاح علیه آن برف تا : 
رزیت عا کہ سا تاکز منهج یت میس لو کسی ین ااصفا ول مرو ءکر کے ۱ 
7 اک کےہرمیان دوتونکایتھندداراووکرتے ہشن س سے ایک اساف :ا“ 

بت تاج کو وصفا نحص ب تاا ورو ورا نا کل تا ی ج کو روو برنصتھا۔ 

رج ب لوک اسلام میں ال ہو ےت ومن سوا بر نے ز مان جا یت می تک بش سے 

اقا محال کے شاه خرف ےی ان الصفا دالرد وش حرخ اک 

ال ریک ییہ نازل »ول نے صحا ہکرام سےگمناہ وترح کے تو رآورو ردب 
اوریتوں سے ہہ کر ما لص اٹ رتیل کے ل ےک یوضر ورک خر ارد ہا 

چنا رترت ماش سے خر تع روہ تن بر مراد( جھانہوں نے ا ںآ ت 

ی رم رو اور چ ول ی ی اما 
۳ض ائ کرام پر شاه ال فر مان میں شرا ےکن کا یھنا ی وشوار 
م وال يبسن ین وی من زاگ اپ ارم لن تَلقَةُ 
شهر4(الطلاق: :۳( ۱ 
7 فو سم یسوی سے (مم رات رکے )نیل 


اللمعان شن اردوالتبیان 4 
ہیں ء اکر مکو(ا نکی عر تکی مین میس ) شب موتو ا نکی 


دق کاپ خواہر ن کہ د اکآ رورت (جس کیش سبسرن 
ارد رک وج سے بن ہو چا ہو کو اکر( ایآ ہو نے میس )کول کک نہ موتو ای پر 
کول عرت لازم »اوران مکی بی سبب ندول نی ےآ ششکارانجوئی هکل ۱ 
آیت میس ان لوگوں سے نطاب ہے جوا ن عورتو ںکی مرت ےم ے ناوائف ہیں 
اورک یبنلا بی کیان پرعدت لازم سپ ؟ 
تبطان از تفم 4 ن ٢وک‏ : نش ور وا او ہیں 
منم کہا نکی عت یک بل بت یلع که تفه 
لین گی ور تتن سے سے 
رضم رز + کہا ان کوک عدت کے بارے میم 
شرع نت ٹیس وگل جک بیان او نا می رکو رت ہیں؟ ۱ 
یں ےآ یت ہک یہ ازل ول ٹس نے ان مس سے برای ک ام صراحت کے 
ساتھبیان مدا انم 
۲ -اسباب نزو لک حرفت کےفو اح رگ مشالوں یں سے ایک مشثال اا مشا رص : 
اٹہ ے مرو تول ی ہے جوائ رتحاٹی کےا فر مان یل حصر کے و مکودورکر نے کے لے 
کرک ایا ہے :ےل اج ہس تلاو رنج 
َو ما َسفوعا و جنزیر فافش او ذشفا اَل لِفٹر کر الوبه س 
سس رباغلا عادفان رَبك عه (wa: e‏ 
مہ آ کتک رگ هام بذ رهق میرے ایآ ہیں ان 
۱ ار ےت وت تن سے 
کہ وہ مردار( جاور )ہو یاک ربا مواخو موی اخ کشت + هبو وه ب کل 
ا کک ے باج( جا ورویرہ )شر ک کا ذدیعہ ہوک خی الک نا کرد یا گیا ہو 
رت تاب وبا رقاب نت »امس 


6 


اللمعان تیاه التیان 7 ۱ 83 
( قد بضرورت سے )ووا یآ پکار بگفورورت سے نت 
ام شاف رج راف اس ہیں کا نم مہ ےکنا نے ات اسلام سے بر بات 
جس می او تال تک رن کی وچ سے جب ارتا کی حا کردم رچز شون ام 
اور مک دہ رچ لدعلا ل تر ارد یاوآ یت ا نکی فش کلف ناز لی ی۔_ ۱ 
۲و کہا تھی ےر ا اک علا ل ددی سے ےم ام کے ہواد رتا چھی دی سے 
ےم علا لکد ہوء چنا نچ الل تال یک مراد یال سک ان ور شیم کے علا وتام 
علال ہیںء بل لینفصود ان اغا دارم کات ہے ہک اموا کے هط امه 
کر 0( 
امام ال ین رم ار اتے ہیں: ۱ 
تال تر ن بات ہے اود ارام شاق رم اد ال مہو مکی طرف سوقت زر 
کر ہو تےےتو جم رما تکوآیت میں کرد اشیاء می تحص کر نے ٹیل امام با تک رمہ 
انش کول کنا لفت کر کے 0 ` 
آیت مبارکہ ن ومقصوری وضاحت: ال را ےکی وضاحت کے لے میں 
کہتا ہو ںکہ بے مل کآ یت مہا رک ہکا ظاہرآیت میں ذذکورہ اشیاء س زمات ک تحص ہو نے 
پرواال کر ےجب یقت الط رح کل کول رو ره اشیا کے علاو یتح رمات ہیں اور 
آ ی کا حص کی صورت مل ازل ہونا جب رای ے 0922 مرف شرن 7 
تھا هبو ا وں نے ال دکی صلا کر وہ اخیا ورام ارترا مک یکی اب اطا لق راردی اتا 
۵ -اورسیپ نزول ونر الول بش سے ایک یی ےک ہم اٹ کا نام 
جان شت ں ےت قآ یت ناز ل »وتا التیا ی اورابہام دموا 
جیا کہ مروا کا خیال تاک اش تا کاب ارشاد لزق قال یرالیه نی 
گا 1 که س سنہ رت 
7 4 ےت 
( 6۳ ما نک رم لش کے ایک تول کے مطاب را تآ یت شی ذک کرو و اشیاء س ہیں 


اللمعان غر ارددالتبیان 84 
۳ کش ڑا نے اس با کل خی لکوردکردبااوراس کےسبب نزو لک وضاح تفر ماد 
۱ ٹوٹ شس جچش پٹ ۱ 
”روان می ہکاعاکم تماء چنا خی هرت معاد ہے نے چا کہ دہ بای مزر 
بنا وء ال لے انہوں 0)0 رپ 09٦‏ نے لوگو لوق 
کیا او رق ری نس میں بیز یکا کی اورا یکی بیجم تک طرف بلا یا اورک کاڈ تالف 
ام روش نآ یزیر کے اس یں اب را ے٤‏ و لزغ نعل 
یس ) خلیفہ بناتے وروی (ا تی زنل )ملک نذا بکیا تھا 
یہک حر ت کیا ن لس کہا رتو زک ہرقلیت ہے( مق یشابن رو مکی 
طر الا نکم تک قیام سب )۔ 
مروا نے 2777 ۱ 
بدا اشن رف اعد نے جاب دا کش کر لیت ہی سے 7 نے 
خلاف تگوایق اولا دنل رکھا اورت ۲ رو »مجاویم پا کے وخلافت نے 
نوازنا صرف ا کی دلدارگی اورا مز ار ہی 
اس پر روا ےم دی ا کاس چاه ہار حطر ماش 4 ےکر 
میں واقل ہو کے اورو ولوگ ات پک دہ کے _ 
تو ردان کہ اک ہیی ووی ہٹس کے بارس میس تال نے بیآ یت ازل 
رال ے: وای قال وليه آي لَکُتَا اتملنیق آن آغرج ول لب 
رز من .وما تس کویای لتاق وغل الو قول ما 
هلا سا ویر و4 ار حقأف:») 
2 چم اور هکس اپنے ماں پاپ تارف چم هیام مه و ره 
( )دس مرک شس (قیامت می دوپاده زندہ ہوکر )تبر ے کالا جاگ 
یالاک هه بل ی کرک ارو وان اش ند 
ار ے تج رانا ی »وا یمان لاء بے یک اشکاوع ره یا ے بت کہہے سے سند 
تس تقو را 2 


8 


اللمعان ارو التبيان 85 ۱ 


ال پرحضرت عا کش بے ESS‏ بے ےر ما کالہ تیال ۳1 
با تک تر آن میں ماخ یبالگ رک اش تال نے میرے زر( من 
راء ت ) وناز غرم اور اکرش ان انام بنانا چا مول یس کے بارے میں بر مت 
ازل ہو تو بتاکتی ہوں۔ 

. سب نزو لکیا ے؟ مھ یکو وات ما و زر 
۱ و ض7ت ا فرع رال سا اک ام ی 
کہاجاتااے۔ 

اوی ایا وا ےپ و سک الکو اف کے 
لے سوا کیا ای کول دی نکی بات اورمستلہ لو چھا جا وخ آ بات مارگ را کے 
جواب میس ناز ل + وق توش اتا رای سیب نزول کے ہیں- 

عاد کی شال وه روایت سے اا بخاری رہ ارس صز حاب مین 
ارت سل دہف رماتے ہیں : 

نمی س کک می لو کاکا میا کرت تھا( تتن لو پارتھا) اور عا من ولپ مرا چم 
ترش تا یس اس کے پا سآ یا اوراپتا تر ضہطل بکیاقواش نے هس ےکہاکہ یل ہیں 
تما را فرش ادا کرو لگا ج ب کلم( ما )کا انار نہ و سک اور لا ت اور زی کی 
سل کرو گے بتو یں کہ دا می کف راختی رک سکرو ڈگ یہا ںم کک اٹ یں مارکر 
یھر ند ہک نے( یش جا قیامت ایمان پ رتام رمو لک )تو اس ن کہا بتو میس مرو ںکا 
رای ہاو ںگا نام براال ون کک اقا رگرو» پچ رجب مج ےکو مال اور اول و عطا کی 
ام توص ایی یو پراش نے اپنایہ ارشادنازل ر ا : طافرءیت 
لزق قرب اسنا وال ما ون الع الب و جنک ال 91 
ھا اء ستکذب ما یل وت له من الاب مدا نره ما ول 
و 64 (مریم: 4“ 

زی ی( ات اج رین سر 

مات رکف رکا سے او رکہتا ےک ھاو( آخرت میس )مال اور ولا ویش گے ا کیا ہے 


اللمعان شر ارروالتبیان 86 
TET DINETTE 7‏ 
لات ری( فل تا ے اور ٠)‏ مالک کہا ہوا گی کت لے ی 
9۳" ء7 گل ما این کے ادا لک یتر شون ےم 
وارث ره ها IU‏ ا ا رت E‏ ےک 
سوا ل کی مثال وور ے جوحضرت موا ین تیل ٹل ے قول کولس 
عرش کیایارسول الم ! رل 7 ا 2 ہیں اور چاندو ںکی عالتوں کے بارے میں 
بہت یادها یم ب لکیاوجہ س ےک شرع س ) پاکل با ریک نظ رآ ۳ 
پھربڑ ہے ےکا سے ال تک دہ ہراب رگول ہوجاتا سے اوردوپار هگن رو متا 
ہا کک اتی یی حالت باوت ے؟ 
اس پر اش تدای نے ےآیت نازل فرمائی: يموك ڪن ملد 7 
اقب" َيْخلِلقاس4(البقرة: ۸( 
تو وه آپ نے چاندوں )0۷ یںء 1 
ریاد سے هروه چان آل شاننت اقات ہیں لوگوں سک(افتیاری موا ا ت تل 
سرت الق )کے لے اور( خیراختیا ری داي روز دک کج 
یرہ ) کل" 5 
سبب نزو لکی با نک طر بت سس ات سرت 
۱ سل زر یارس ن ر رارف 09 
کا ہونا ضروری ےج ہوں تول آ نک مشا پر ٥کیا‏ ہو پاپاپ نول پر ہو 
لاوا گی ہو یا رضوان انم تن یا ا نیشن اوران کے علا وووه 
حرا رت جنہوں نے مت راو رست لا ء کے ب تھوں م اض لکیا۔ 
علا مرا رن راڈ فر اس ہیں : دل ححضرت تبیہ ےت رآ نکی ای ےآ ت 
کے تعلق ور یاف تک یاتوانہوں نے فرمایا:” لش سے ڈ رواوردرست با تآبو ولگ چ گے 
جوا بو لقن کے بارے یس انش تی لے رآ یآ یا تکوناز لکیا۔ 
ادد یاد د کسی نزو ل کی حرفت می صر قل ی مجر سے یں اکر راوی 


اللمعان اردہ التبیان 87 
اف سب بک تصر کرو ےتویہسبپ نول میں نع صرح بو »کر راو کالو ںکہنا: 
"سیب نرول‌هذه‌الاية کذا وکا“ نا یآ یت کے و لک سب ہے ے۔ 

اک طرع اک راو فا قی ولا ےکر وہ با۶ تول ر دال ہو تی ےک راو کاب 
کنات کنا“ (فلاں وات ہوا )یا سک "یل ای صلی الله عليه وسلم عن 
گذافترث ۳( آپ م ےفلاں بات ان چا یویر ت نازل و )تھے 
ھی سیپ ول مسرب 

3 توول کے مید میں سب بکا صراحی وک رل موتا بے علا کا قول : 
لت هذه الاية فيع کذا “( نیا بت لاس ال بو توا جر 
سے مرادسبب تزول ہوتا هن وہ اام مراد ہو ے ین ۳ ات تن و 
ہے دوس رک صصورت میں راو سول : نت عى بهذه‌الاية کذا ولتت 
راد ہے )کی رع ہوگا۔ ۱ 

ملام زر رانا کاب رها رکم طراز ہیں :”سیا بوتا رضوان 
ام نک مارت سے یتلوم وا ےا چب ان مل و "نرلت هذه 
الآیةفی کذا“ کنا ےتوا سک مراد ےہول ےکی رآ یت ال لع ملویھی شائل 0 
بی اس ےو لکا سب ے۔ 

علامہ ا٠‏ میم رم ال فر کے ہیں: ان کے اس قول: "نزلت هذه الاية فی 
کذا کک کول نے رون ےک بان یت ےم 
س لے اروا الک سیب نہ و- 
کیسیب کول میں لح روما ے؟ با اوقا ت مفس من رات ای۲ یت کے 
ے ے ‏ و تہ ه 
سے ہے نکرمقامات کے اختبار سے م میگ یآیت اورسور تک مطلب یہ ہوتا ےک سیآ یت یا مورت (لورک یا 
اک آپ کم یرت تال نازل ہو سب اور لی کا مطلب ہوتا ےک یت یا مورت مد ین 
رت کے بعد نازل موی ہے خواہآسمان پپرنازل »ول مو یا زین وفضاء پر ہخواود دش نازل موی ہو با کہ 
ءاو راومہ یا ینہک را سن مس نال ول ہو اور کی مقا م پھ۔ل(اتقان )۔ 


اللمعان شر اردوالتبیان 88 
نزول کے لیے متحدداساب میا نکر تے ہیں تو ا لکد صوررت یں ست راو رحد پات بے 
س کہ یں ا نکی وگ رکرده عپارات یی لی سیت 
E‏ 

ما لک خلاصذیل می ان انا اتی کر کے ہیں : 

-دونوں مفسرین میں ے ہرایگ "نزلت هذه الاية في کذا “کین رلا ے ۱ 
اور یل سل جو بات زری و ال ے بک سکچناے ؛تواسے اس بات مول 
کیاجا تاس کرو وع مکاح راع اورآیت ےک تیر ہے چنا دونوں کے درمیا ناو 
منافا یں جیا میں سس 


الآية کن“ ان 1۱ 
ووروایت ہے ام قاری رھ اش سرت این را ےت کی ہے وور ہے 
ہیں : آ ت زاو کم عزث لک انح ہیس مراشرت کر نے کے 
ال 
ورام سلم رج ال نے اپ تا ب کم میں حضرت ادلی 
ےکر وور مات ہیں : 
و دک اک سے س هک جس اب وی کے مات اس( ےکی 
اب سے ا گے رل مہا ر تک ورگ پیڑاوتاےء ال پر الم 
ال ی :زاھ عرش گر 6 
تو یبال ریت جارشی شی مار فان ا رول 
مرج( کول اي کو ہا ما٤‏ نول پر وق لک يس جوک سیپ نزول 
منص صرح ے ) لپ زا حضرت جابر ٹل کی روا ےت سیب نزول کے پارے میں قول, ۱ 
(۱) اس کا مطلب کی لک جورتوں کے پیل ضے می ںعحب تک ناا ںآ ی تکی رو سے چان ہےء بل مطلب یہ سے 
کہا یت سےگورتول کے سا تح اواط کر ےکی مت ثابت موی ے ,کول ا سآ یت می ںعور یمق مت ۱ 
داش اولا دک ذ ر یور ارد ا سے اوروواواطت کے ذر ین( من عل ال فان )۔ 


اللمعان ارذ الشیان. و99 
روات شار موک :جب حص رت اب ن کر تقو تس صر کی ںو استه ال بات ول 
کیاجا ےک اک وھک اتنا اورا شیر د 
رت تست پر ور ر سیب رل کرت 
توا میں ی روات مخت موی ہک ضوف ا کی مثال دہ روایت ے بت تین 
ر مان صرت جناب فا ےر وای تکیاےء دوفرماتے ہی ںک ہآ ضرت لیف 
ہت یار پڑ کے سک وجہ سے ایک پادو داد کے لے دار جو ایک عورت 
آپ ام کے اسآ اور اہی ی" لاعفا ے٠‏ هس موز دبا 
ے( وڈ پا شع ) ای یراش تال نے یآ بات نازل فر ں: :الى ولیک 
ماع روما فإ 4( ۳۰( 
E‏ 
کی تست کال ہوجائےء یا سارت ماندارسوجا یں اورا م آوا زی اکت 
es‏ ین اب کے پردردگار نے دآ اور او رت( آپ )وی 
)0 رل اکا با 3 ن دول »آ ب برا ممت وی ہے 
مرف رن گن ۱ 
اورطرا و ور ری هلر ین 00 شرت تلف ےکم 
م دا یر چپ هیور مرگیاءاس داق کے بعد پ ادن ۱ 
کک اس عال تلد کپ پروی ناز ل کل مون اس پرآپ ٹاڈ نے ور یافت 
رر ہہ ےھر ییک ہے ی سیک رک سے پال 
۱ ۳ 
تقو یں نے ( ن هرت خولہ نے )سے دل یں سو چا اگ ری گر اڈ 
و کرو تو اتر ےگا نار نے او جار پلک یکا ال یوک کا یا 
۱ گال ڈالا۔ ۱ 
ال کے بعرآپ م تھریف لا کرد ای مبارک پر رعش طا رک تھاء او 
00-90 »بل اولد تعالی نے جو لس 


رات 


اللمعان تر اردوالتبيان 90 
وَالَنْلِ رادا دی سے لے طفتردیٰ)کآ باتک نول فرمایا۔ 

تو یہاں کی روات پراعتادکیاجا کول وہ کی نکی روات ے۔ 

لام ام ب رر اللہ با رک ش ری ف کی شر یل فرماتے بی کہ یکا دج سے 
رت برل ئا کاو یکر ہآ ےکا قضہ اکر شور ےکک ا کا آیت کے لے 
سیب دول رذگ پات اراک سکول روک ال باه 
س بغار یکی اگیاردابی تک یکااعتیار ہوگا۔ ٠‏ 

ا ا سے EO DERE‏ 
ان ل ےکی ای اوددر سے وور چات ٹش ےی وج گی بناء پان رار 
وی ےجیک راو کال کمن ک دو قص ہیس موجودتھاوفی رہ ویره ۔ 

ال ی طال دوروایت جوا ری اس ریت این سحود پل سے 
لک ےد وف مات ہیں: 

نی یک کے ات مہ ید یکیو میں بل پات جیپ ادطعلی یلم 
کر 000 2 ہے اسم می ںآپ ماف گر چنر 
دیون کے پات ہواقوان ٹس سے ایک سا رتست چو تر ہے 
گاء چنا چا نہوں ن کہ اکآ پ؟میں رو ںی یقت جتاہے؟ اس پرآپ ما ند یر 
کے رک اورا پناس مارک انلیا لک گیا ہآپ رد ناز ل مور ی سے 
رر رت لن 

یکم ن الم ال یلا 4(نی اسر ائیل:ہہ) 

و نار کرد ہر ےا کے ی ت 

و امد گے“ ج 

تہ امام زی رح اد نے ١ضرت‏ ائین بای ات ایب روایس نک 3 
اورا ک کی را ےک این پاش برس ہکایک مرح ترش نے ید نے 
کیاکی کوک ایک بات اشن کے اس اش سے ود اتکی ؟ 

و یور سل" اکران ے رو کے تاق ور یاف کرو_ ۲۱ ال یہ اش تال نے ہے 


اللمعان ثم ارده التبیان 91 
آیات نانل را یں : «وسوتت عي وتف لوح من آفر رج وما 
تیم شن الْعِلْ ال َيل قيا نی اسرائیل: ۵م( 
ا رر بوذ اض اکر e E‏ 
زل چ ھی ہے و ہم مکی ردای تکیت ج دی کیہ اس 
۱ راوی حضرت امن د ٹلا قم ٹیل مو جوو تہ نیز بقار یکی ردای توفیری روات 
پر اور یرت یکی اکل ے۔ 
۵-رولول رواو لک مول ہے اوران کے واقعات کے درمیان تذول 
تیب تیب اس ا نو تین کے 
ایک سار رونا ہو نے کے سب نر ول بو .ال میس مم دونوں روایّول کے ورمیان 
صلی یکا راست ات رک ں سک 
ان ال رای سی سی کے نس 
یت 
”ای بن امی شی اعد کر کےا ےش یک ب نب 
وی کےا تھ ناک نکی تست کا وآپ ال نے فر مایا البینة و حذفی 
ظه رک “س واہلا 5ی تہارک یٹ عجار موک _ 
ال پر ہلال 98 ےکہا: یا سول انشا جب چم میں سول اتی وی کے س تیر کی 
رم وکوک توو ماه ونژ بر ےک !! 
یآپ سوه تچ ہرگ میگ“ ۔اں 
پر ہلال تل سا ذا تک م جن ن ےآ پان در ےک ریا ے میں پل 
سیا ہوں اور اتا لی دہ بات ضر ورتا لک سی گے جو می ری یھ پر عد کا کے سے کے مکی 
۱ ون ۱ 
ہت ای دوران جر“ TE‏ تال وت موز واجهم > 
سے کے ان ان من الض دقن 4آ پات نازل فر ماد یی« 26 ہے ے: 
"اور جولوک ای ( مکوح ) ویو یو کو( زنل ہت لگ کل اوران کے بج ز 


اللمعان شرع/ردوالتبیأن 92 
اپ نے( ھی ول کے )اورکوٹ یٰ۳ E‏ لوعر و جار »دنا پاے )توان 
کی شہادت( کردا لئاس یا عقف وب بی ےکہ چا ار 
برد بقل ںا ہو اور پا چ ریس بال ےکپ هکره برغد اک لحنت وار 
کر +ول» اور (ال کے اعد )ال کورت کے نین با عرزا کی )سزااس 
طرش کت ےکردہ اد رها کی کہ بتک یرم دون چ ار اب 


دک ےک کے پ رد اکا خضب جوا و بو ۳ 
اوردوسری روایت دوگ ے ج وین ره بن سعد ( لک 
مہف مات ہی ںکہ: 


کرب ر اسم بن عدری فا کے پا ں1 ئے اودکہ اکآ پ الہ سے اس 
کے ےی ورافک ی چ ایی ی سا ی رر و پا ےتوکیاوہاے 
کرو ےس کے بے میس ا ےکی( تماما کیا ہا یمزر ے؟ 

حزن عم تس ہے بات رسول الم سے در یاف تک توآ پ مہا نے 
ان سوا ل کوا چات اء ہے بات تکوم وٹ کو بتا دک نس رو یمر کے 
کہا: مرا !مشود رسول اللہ کے پا ی جاو لگا اوران سے رور ال کے بارس س 
هو ںکء و و ہآ پ ان کے با ںآ ےت ھآپ لو نے فر ما اک تھمہارے اورتهارک 
۱ لی کے پارے میں ق رآ ات کا ہے اود ےآ یا کر ی تلاوت فر بای : وال 
` موق ازَوَاعَهُم وَل يكن لهم سُهَداء إل اسه فعَهَاَة حه ارم 
شهلبت‌پانله. تن الضیفِیی4(النور: ( 

رولوں روایّول ربق ےک مم ین کرسب سے یط بی وا قعہ بلال 
لٹ کوٹی ںآ یا اورک یر ٹا بھی اپا کک آ و وونوں خن آ بات میا رک و 
علا ای نت رع الشف ر مات ہیں :یآ یہت کے متعدداسباب ند ول ون میں 
کا“ ۱ 

7 درمیان ریق من ا کے ما ین مدت 222 


اللمعان شر اردہ التببان کھت 
بت پراےنزول کے جر ت داورگرار ہو لیا جا ےکا ِ 


9س0" 

را ہی ںکہ: 
”جب ابوطال ب تقال وتو رت مل اس کے با کش ریف لائۓ » 

ال ونت دبال ان کے پا ال او ردان امیینجی ہے ہے ےو آپ ا 
نف مایا ے مہ رے چیا ا لا ال ال اللہ برد ھکس کے ذ ریت بیس ال کے روبرو ‏ 
ین نات لئے ات ونان پر ال وکل او رکپدالشہ کہا :ہک یتو عبرا مطلب 8 
سس اعرا کر ےک لیس دوووٹوں الاب ست سل تور ے ر ے ها کک 
کاک س کید یکو کہا مطلب کے دن پر ے۔ 

بس نک رتضور و ر را !تیاس وقت کک آپ کے لے استففار 
کرتارہو ںگاج بک یک مھ ال سے کیا اه چنا یآ یت نازل موی :ھا 
اك لگن وش اموا ان لّتَعفِز ِمغ ر کين َو لا آول قزی نب 
ما تبنم شب ویو (التوبة: ۱۳) 

یو 3م کا ےس اول مامش رین کے لے 

مففر یک دیاس .ار چ روہ رشت دار ی ( کول نہ ) ہو ءا ام رکے ظاہر 
داسف سک بح هک زگ دوز )> ی 

ای وت ده جک .عفر و لت کی ےلوہ 
راو 

بی 7۵۲ | 
تو بیس نے ال س ےکہاکککیاتو اپنےمشٹرک واله بین کے لے مغفرت اکتا ہے؟ اس رال 
ھی کت را شک وان کے یتفر کی دا 
اک کی ہے بات میں نے آتحضرت مال سے بیا نک یتو بیآیت نازل ہین :لا کان 
۱ یوش امزا آن کرو یمق کی ولو ات وی قر من بَحی ما 
تلهم الخ أب ججیو 4 (لتوبة: ۳ 


اللمعان رن اردوالتبیان 94 
اور یگ روایت تلآ ےک ہآتحضرت تلم ایی دون تمتا نک ط ر فر 
ET E‏ کر ا ھال ہے صاحب قر سک لے بت ی جوزی 
۶ی ۶۰۷۷ .و پا میں میا تھا میرک دالدہ یتیرے 
EE‏ ان ت چا یتو کے الد نے اجاز تال 


دی( اد رھ پر ریت نازل مون: :ما ان کي الزن اموا اق تنيروا 
یف رين ولو گالڑا أو قر مِن بغِ ما من له اھ أب اجب 4 
(التوبة:۴٠)‏ 

ملام یوی رح الڈف مات ہیں:” ان اعد یی و لاس 
تعددنرول پیو لکیاجاۓگا۔ 


وم لو کا اعتیا روگ یا باتصول سب بکا؟ جوم لف کا اتبا روک پا تی سب کا؟ اس 
دق مہ کے ارے می عا ے اسول لاف ےک جب کول ا تر روما موتا چلوال 
کی شان می کو یآیت نازل مون ےآ ا آی تکام اک حادظے یاداقعہ یا ہش پر 
محص موگاجس کت یآ تا تک ہے یا رامک طرف ا کاتوری ۶6 

بل #جورع ,کا ماک کی ےک جوم لک متا وروی سب بکاء اور 
)١(‏ اس روا تکو تو م وضو کہ کے ہیں اور تہ عقیر کے ناک مکل باد با انا ےہ چنا خی 
اا کی این ی اعت ہت خلا لگ نهد رال با تک ال ےا حضرت ول 
کت ابرا گی پرفوت ہون ےکی بتاع پر من تھے :نو دعلا م سول رح اللہ ےکی اس موضوع پر یک سل رسالہ 
کیا ہے( اش علوم القرآن) 
(۲)یاتتلا ف ال‌صودت ٹل یتک فاص دا قح یقت ناز ل مول ہو لیکن فان عام ال کے 
»او ریت پاک ال سے رر نو کی تون ضرف ای دق کے 
مرول ہے یا وت کے ردا تھ کے لے عام ہے۔ 

فیرظ ریا وی تک .مالس کول افر لپت هب یج رای 
جم یی تکام ا وعیت کے دور ےا قعات یل چا یکرو ے ہیں فرت صرف اتا ےک رعا وا 
کاخ زآی تکوقرارد تج یں ء جب حط رات ا لماک دوس ری ری شر خلا : عد یث »ماع تیا کو 
.ترارر تن ہیں( علوم النقرآن) 


اللمعانش رب اردہ التبیان ۱ ۱ ۱ 29 
7 ول »اور درک راۓ یہاں ہے ےک تصوطي سب بک انار ہوگا۔ علا میوگ رم 
5 الا[ کناب ”الاتقان فی علوم القر آن“ بل رم طراز ہیں: 
۱ "نموم لک اتپا رکہ نے پاک وکل سکاب کرام رضوان ارم اچمعینا ور دن 
ب رگا دی کلف وا قعات ٹیل اا نآ یات کےعموم سے اترا لگ نگ ہے ٢اک‏ چان 
یا تکانزو لصو اسبا بک بنا پر ناجیہ اک ہآ یت با کات ول حطر کے ن تر 
ےعلق اا متا ھت بل من اهيم کا ےار ین اور یط 
زرف رت ما کہ لٹا رتست کا نے والو ںکییا ر ے یں نازل ول پگ رموم اف 
کا انارک سے ہو ےج رکون کے لادد دوکر سے حرا تک طرف ترو یکرو گیا 

ححضرت یال سے مر وی ات یوم لک اتب کر نے رد سک 
ول نے آ بآ مق سل سی بات | ساگ جرد ہآ یت ایک چورگورت کے تلت نازل 
ہوئی ے نی زنج نی رح الد ےر وک ےہ ود فر ہے ہیی نہیں نے ححرت ام ع اں 
ین سے اشمتحال کے ارشاد:ط و السا ری والسار که فاقوا یما (الہائة: 
7 تلق در یاف تک اک ناش سے یاعام؟ وفرای کم سس ۱ 

مان تیر مارا ہیں :علاکاقول :”طذہالآ ية لت فی کذا“ الصو 
ج بآ و ی کانام کور ہو کنیل سے وتا ہے تی ےک وور ماتے ہیں :آ یت مار رت 
امت بن تی وک موی کے پارے میں تال بہوگی ء اور یکلا لد نحضرت ابر کن 
عیرالثر لے کے تلق اتریء اور الد تا یکابیفر مان :وآ اخگۂ یلم مم تا انل 
الہک (الہائںۃ: روز کات یا جوا ور کرت 

بل جنوں نے یہ با کی ہے ا نکی مراد یو سک رآ تکام بل اعیالن کے 
اھ خاش سے وف رای واش یل ہیں کیہ ایی با کا یرم ونر 
کین وا لےےسلران سے ک کاس ۔ 

عم رک رم ار سور کی ین کر سے ہیں :”نین ہے یبال حبب 
فاص اوروي عام تجگ ا لنٹ ل کا ارت بکرے اسے یم ال موجاے 
اور یآ یت ی کے قائم مقا م #وجا سس 


اللمعان غر اردوالتبیان 90 


یل 
سا تتطروف پرفز و لق رآ اورشهورقر ال 


ہیی : جب ابش تیال نے تلو قکو پیدا فر میاو ریک کے لے ناش شر عت اور ناش 
ربق نج دفر مایا راو سک چ تے جن میس ےگ شک انبول نے اہی فطرت 
کے بات پا تھا رن شکچ ہمسابوں سے ایا اورت کی ان بابک بنا 
0 کک ا رین میں سل مہ ہیں: 

اک جات مرول ہونا_ 

یت ارام کے با مو جودہونا۔ 

قا کح ری ضرمت اورظ ر یب تا کیا ضاف تک ذ مروا ری اانا ویره 

اور دوسریی اقوام سکن ول اورکما تکو نے لیے سے جوا بعل 
کے ےلپ اہ یک فط رن ارت اک انم الا کن ت رآ نکواس زہان میس ناز لک ے 
سے تام رب مت ہوں :کو ںکہ ای زہا نکا ما ان کے لیےآسمان #وتاء نیز کے 
اج رآن اج مواورفضی ے عر بکو ایک سورت بات لا نے i‏ دیا جاکےء مر 
ول کی ابق پان مم تاز ل ہو ےکی وج ےق رآ نک پذعناک اور وکن ان 
ہو جا ےک جی کراشتحال نے ہیں :اتا جعلنه قر دک ریا لک تعقو ن4 
م ےا اوا تارا رآ نکر ذبا نکا اکم و 


32 آم سا تم وف پنانزل ہونے کے واک 


نکیل ام ارگ طسق لک را ماس 
ات روا بت لیا »دا لک 


اللمعان شر ‌اردہ التیان 9 
” آپ مل اش علیہ وم نے فرمابا: کے جب رل نے رآ نک ایک رف 
پر پڑھا یتو نے ان سے مجع یک اور لوف میں ز ادلی طل بکرتار پا 
اورو وتر وف ٹل اضافرگر ے ر »یبا ںک کرو وا ترو فک کے 
اا مرح هثل کے ہیں : یت 
”این شہا ب کے ہی نک جج دنک ہے بات یی سب کہ سارت تروف ایک ی 
07 9ڈ 
٢-روسری‏ وکل :امام بغار وم راشرس رای لک (الفاظ عهال 
حر تک رہن خطاب ڈنف ماتے ہی کر ایک دن ہشام ھی مکورسول 
انڈ٥٦لی‏ اش علیہ لم کی حا تد میا رکشل سورة فرقا نکی تلاو کر تے ہو ئے 
سناء ٹیش نے ال کی تلاو تک طرف دعا نکیاتودہ می کیاد تا ہو کے وہ اے 
بہت سارت ای تروف پر اه دس کے جو یج رسول اللہ تام ےکس 
دا »قرب تھاکہ یں نمازہی یش اس سے اھ تیان میں نے 
ریات کرای نے لام کیرد یا چرس نے اا لک ادرا ی یکر ون 
میں ڈا لکرمے کرک اک یک کے تھے یسورت پڑحائی ے؟ توا کہا اک گے 
پمورت سول الد ا نے پاچ - یی نے لس کہ اکآو _ ےجچھوٹ 
ول بای حور ت تک یں نے کل تلاو یکر کے ہو ۓ سنا سے جک بھی 
سول الث اڈ نے پمال ہےء چنا نجرش ا ےنتا موا رسول اٹہ کر کے 
پاک لگیااورش ن ےکہا: یارسول اٹہ ال نے ا وسور فرقا نکی اس 
` روف تلاوت کر ے لے سناسب جوآپ نے من اس + ہآپ 
نے کے خووسورۃ فرقان پا ہے !رسول اللہ ای نے فر بای کہا ےکر ا سے 
وڈ وو پل ہشام سکب کپ چنا اس نے اک ط رڈ ھا یط ر میٹ 
نے ات تلاوت کے ہو سنانتھاءاس کے بح رآپ ۶ل نے فر ما کہ ہے 
سورت ایطرب AO‏ سکب رماب کہ ی رآن ات 7 وف اذل 
کی گیا »بل ج ہار ے ےآ سان ہو ای ط ر تہ پر زعو _ 
او رتش زوایات مس ےک رسول انش ل نے حر ت کر فو کی ق راء تک یی 


اللمعان تر ارردالتبيان 98 
اورفر ہا )کہ ہرایط رس تاز ل کی ے۔ 
ستسرییاویل امسر اس سارت یاب لے 
قل کی »وا ہیں کر: 
ایک دن سمش تاک کی آیااوناز ھن ری اب ۱ 
شر اتکی صے میں نے ورس تلم ایک دوس لآ یا وداس نے بل 
کےعلادہ دور ےط ریہ عفر اوت کی ں جب جم نے تمااداکرکی 
تو ہم سب رسول اللہ ا کی خدمت می ںآ ء یس نے عون کہا نش 
دا کارا تکی سے میس نے درست کر انا پچ ری دوس وش وال ہواتو اس 
6,0,9 
کن نے دوفو لوا سا عن بعکم دیاتودووں نے پڑھااوردوو نک 
ژاتلو پ ۶ا نے چا دج هرس دل میں کل یپ کا وتوہ 
پا »موسر اور ہکا یام جابمیت ن یدای ہواتھا بل جب 
سول اللہ ام نے چم پرطاری ہونے وا ا يکیفی تاو میہرے سی 
ات ضا اراک وک ڈرال رورت لت 
سے میرک ای عالت ہو یداش ده ول ھر پ کا نے کے 
سے ا شاف ما اکہ: ال ام بی طرف وک رآ ناویک رف 
پر ول توش ارگوا یں رداست کیک می ری امت پآ سال یک 
ہے چنا درک مرک ےکم یی دون پفرآن پڑگوںلںء 7و 
پچھردرخواس تک کر میرک امم تکوم یرآ سای عطاغر مکی جا ئۓے ۔ چنا ری 
مرب کے مد اکاک سات ول پیٹ رآن 0ھ 
مرج هآ پا تپ ( )ہم سے دا ہم اسے ۱ 
و ل کر ی 1 چاچ س نے دوصرحہ بے دعا یک "اس الٹر! می ری ا مت 
کوکش دےء اے اللر! میرک امم کول دس ری دعایش نے انا 
د نکیل وی ےجس دلوت مھ سے اک خو کر س ےکی یہاں 
کی کک صرت ابرم بھی مھ سے شنا ع تک توا کر ہیں گے 
علا ھی رح افر ماتے ہی ۲ 


اللمعان تر اردہ التسان 99 
وس( علا مکی مراد وو وموس ہے جوا کے رل )2 اے ے 
میس کے بارے بی جب کا ہہ ےآ پ ام سے در یاف تک اک یم ا سے دلوں بل وہ 
یں م وج د یا ہیں جس سکابیا نکم مل سے برای ککوگر ا لول موتا ے؟ توآ پ 
لال ا کک نیس پا کے ہو؟ جع کیا : گی ہاں ! آپ نف فرمایا: 
راهان 
r‏ -چوی ویل: :اہول جم ال نے اپ صن 1 
نے ایک دن جی ہآ پر ریف فر ماب ےکہاکہ: 
ات اش کےا مکاواسطدد تا ہوںشس نے نی تا زا 
وس اموک رآ ن‌سات فوں پا 2 ہے جن میں سے رال شال ال 
ے "- آوو مکھٹرا ہو جا 7 لواۓے کے BE‏ بار کے . 
درون گاید یک سول ار نے ف ایا ےک :* نف ران ساتموں 
پرا ا جن مل سے ایک شان دکانی ہے“ چنا حضرت عثان ٹل وی 
فا رٹ بھی ان کے رات ذاس با تک وای تا ہوں ا 
۵ ایب ریل: : اما کم رصم اش ئے اب سر کے اتی مقر تال ی می عب 
ات رواب تکیا ے ومر ماتے ہی کی کی ایک مرت قفا کے تالاب کے پا 
تشر فرب ے: 
"تبرت رکب پ مک خدمت می اضرو سے وف 
اش تما ی آ پم درد ب کہ آپ اب ام تکوایک 2ف پفرآن 
بڑھائیںء اس راب فد راگن اللہ سے معا اورمشفرت 
کا واتار موں وع امت ا کی طاق س کی رل عادو بر آپ 
اف کے پا ںآ ے ادرف رما کہا تیال پم دتے ہی ںکہدورفوں پراپق 
ام تک رن پڈ ھا یں ہآپ ون فر ایک یں الڈ سے مان اورمخفرت 
۱ کاشامًارہوں انی اتی کم ات ین می » پیر یری با رب 
خلا کے پا سک ے اورفر ما )کاش تی۲ کت کاب ام ونان 
.حول پفرآن بڑھائیں٠‏ اس پرآپ تام نے فرمایاکہ یی اللہ سے معا 


اللمعان شر اردوالتبیان 100 
اورمخظر کا خواستگارہوں »ری امت ال کی کک طاف ت کیل ر روہ جوک 
مرج آپ خلا کے پا ںآ ے اورف ایک ات7 پم دی کہ آپ 
ای ام تکوسات تون مرها میں ء بل وہ رف هدن کےا نکی 
ا ا 

ی دیل: ر کی رح الہ ےکی حطر ت ای ناب او ٹاو سے رواب تکیاے٭ 

وربا ہی ںکہ: 

"رل اي روعش اس بل هه 
لاقا تک »ی لک ںکہآپ ام نےےف رما رک :”کے ایک ناخوانروقوم 
کی طرف یکا :ٹس میں ا بگور ہو ڑ ےکی ہیں مین رسیدہ بوڑعیا ی 
اور یی خضرت رل ےرا را مدع ہکوہ رآ نکوسا ت حرفوں 
روف کا اما مت زک را شر باس یک بعد ٹف سن او رت ہے۔ 
اورایک روایت ل گر بل *ل نے ال بی ے رف پر یرما آوده 
یقت بی ا یط رب ےجیی اکرال ها 
اورتظرت وز یہ ٹپ کی روات کے الفاط ہے ہیں : نیل 9 و ۱ 
کے ایک ناخواند وقو مکی طرف وت فا یاگیاہے ٹس می مرددورت بل هیال 
اوروول بگور پوڑ ے ہیں جنہوں ے٠‏ بھی کل تتاب لک ی پت کن 
را کے تک رآ نکوسا توفول نالا گے 

E SS E ے۔- ان سو‎ 

سر سای کیا ہے انہوں نے خر تع لے دای تکیا ےکہ: 

ل ای کیت ورب ر ان تکا دک 

اچاب ےٹیل ران ہوں نے بھی الا کے سا سے ال با کو فک کیا 

ب ظفل نے ارادخ رما اکہ: نے تک رآ نکوسات ول پر تاذل 

ہیں رف 207 وس وتارک راء ت درست و 
تم ایک 

۸ موی دیل: :ری اوران لی تحہاالل نے حظررت زید دارم فلت 7 


3 


اللمعانشرب اردو التبیان 7 
٭ کک تے ہت 
رسول اثر ‏ 7 نی غدست ت یش حاضرہوااورال نے عر کیا اہ 
۱ رت ایل سورت بدا ے زیدن ات نے کی ۳3 
ای تاور سی نورت آل نع نے بھی کے ال مین انس بکی 
۱ شلف ول بیش ان ل س ےگ نی قرارتکواوں؟آپ اا 
ال ده مت یآ پ هبدن یٹ »و »ول ےکہا 
۳ رل ای طرر ھھے جیہاہال نے جانا ے :کیو ںک کی (. 
ہمت کر 
4-نوي ولیل: ذاین جر ہرک رح الثم نے آلو ہریرہ ٹاچ ر کاب ووفرماتے 
,۳/0 اپ لیا شعلی لم نےفری: 
بے شک یف رآن سات لول پراتاراکیاے سوا ے ( کے امو ) زو 
اورالی کر مرج یں مان رقت زاب نات ارعزاب کے 
کرت کے ات م کرو . 
ساروف دول 1 ا نکی لمت :1 - ای کحکمت امت اسلا می اور تصوص امت 
یک پر آنا زل ہوا ے لآ ان پیداکرہاشیء ان کیلب دچ ت ران 
سبلو ونال مر کل صفات ام وش تس یں ہیل دا بات مآپ ام کے 
ارشاد: "ون علی مه" اور" اَی لاتطیی ڈلگ “ونر ہے اخ دار تے ہیں- 
قن ابین ب ری رص الف رماتے ہیں: ۱ 
اورد بای ش رآن کاسات مثول پرنازل 0٠‏ اں 
امت فیف»ال کے سات ھآسالی کااراده اورا سکیل ہولت پی اک رنا 
ہے اود یسب ال امم تکاشرافت )ال پروسضت ورت .الک فضیلت 
کی تصوصیت.اورال کے ہپ کی ارزو لوراک ےکی 7 پرا( ول ارف 
اخلوقات اوراش تی کوب کن ہیں )ہیں طور ہک حضزت رل 
یلا آپ پا ںآ اودفرما اک اتا یآ کوک دی ہی ںکہ 


اللمعان شر,ددالتبیان 102 
آپ اب ام تک ایک رف پر رن ها کل »ال پرآپ مان نے فر ای 

کہ بیں الشر س ےکفو ومففرت اور بر وکا خواستگار ہوں ء میرک امت ا لی 

ال رپ بابر بی سوال دزاس رہہ یہا لت کک دہ ۱ 

7 کے 

پر موصو فآ کے جاکرفر مات ہیں : 

او رع ار بیثایت ےک رآن سات دروازول زان 

پرنازگل ہواء جب ال سے ی ہراب ایک ددداڑدے سے ایک ہیا ف 

پرا ایا سک پیل انیا م اطلام ایک صو تومو ں کی طر 

وت ہو کے سے جب نی کرم تام انیا نو ںکی طرف "تورث 
فرماۓ کے خواہ ا نکی کت سر »و یاد ہکا لے رنگ کے ہوں ع لی ہوں 

ای اور ای ی عر بک ج یکی زہان میں ٹ رآن نازل ہوا لف زانوں . 

وا »او رانک بویا تن :اوران شل سے ریک کے لیے 

ایک زبان سے دوسری زبان الیک لہ سے دوس رہے لہ کی طرف اتقال 

مش تابتع حرا ت توم وعلارح کے ذ ر ےکی اس بات بر ورتم 

ےا طور هن سید ۱۰ 0ى و نے بھی کول یکا کے ۱ 

ای حعی اکآ پ مال ےکی ال با تک طرف شاه فر ایاچب 

A TA‏ ما 

با جا تاتو کلف الا یلاق کیل ے ہو“ _ 

۴ دوس کی کلمت امت اسلا می کا ایک اسک ز بان کن تھاجوان کے درمیان 
اتادلاپی راک ےءاور قرش یک وه زان کج یمن یر سمل مم سآ نے 
جانے وا سل عر بک بہت سارک چیدہچیدہز بو وش لگ اک وج نے رآن 
سات لول پرازل ہوا کہ کم تال عرب کی آن لغات میں سے جس 
کو چاہیں اۓ(پڑ ھن ) کے کے بکرم ج نک نودت رشک ز بان س بای جات ےہ 
بی ایک عا ی شان کت الہبیہ ہے :کیو ںک ایک جزل ز با نکی دحدت ام ت کی دصرت 


اللمعان 2 ن‌اردد التبیان 103 


وال میں سے ایک عال ہے٤‏ خاک طور پراممت رل EA‏ ۱ 
دول با مسب ے۔ 
عبات 7 وف برنزو لت رآ نکاس ؟ خر رف “جع سے ”حرف یال ےی 
موان ہیں ء صا ہس ہوا مور ہے ہی ںکہ: 

ہر زک رف ا سک اکنادہءدھاراورگوشہہوتا سب اور پا ڑکا رف ال کنو کے 
رتاک ی نی زوا یل ایک تر کوک یکہاجا اسب : 

مہ ”اوحض آرل اش کی عبادت(السے طور) 7 2 

کے )کنارے پر (کھٹرا) مو“ 5 

فی ایک ط ریق پرعباد تکرتا ہے بای یکک خو کی عالت می عباد تکرتا > 
مصییت می کا ںکرتاء یا کک یکیفیت یل عباد تکرتاہے باه سم برغ کن 
ور عاد تکرتا ہے من ین می کال ریت سے دا لکیس ہوتا۔ اور ”و تل الزان 
لی سبع وف" مس سا ت روف سے مرادائل عر بک سات ز ہا یں ہیں۱ اورال 
ج ےکا کی پیت کہاگ رق رآن سات یادل با ال ۓ ز یادوط ربیقوں پ رآ يا ود ایک رف 
ساتط رق ہوں کے بلک جکسات ذبا ں ق رآن س کل مو ہیں“ 
فش اف ان معا یس سے ایک مراولیا جا تا ےک ہچ نہیں ترا نے 
یں اوردہمقام کے متا سب ہوتے ہیں ہی قرف سے مرا وط ریقہ جاورا یکی دل 
آپ لا کا رارحشادے :رل لزان على سبع خرف ”على“ کالفظ ال بات 
کی طرف اشارکرنا ےک بسا لت ی داسف لس ےہ پا کہ 
رآ نکواس طور پرناز لکا گیا ےک ای س ارک پر سا یکر یکی س کہ دہ لے 
ہا تروف پر یڈ سے اوران ل سے اس ای کر ف کے کک دوسرےطرف پر چاے 
پاس کو )کا پ تذل ایا ہک رآن ا شاو ریا پر بڑاے۔ 
عد یٹ یل دار" احرف“ کی مرا یس لا مک لاف :اس مقام پر .2 
کرام کے دینکن اوراختلا فکھو ےکنا ے او رٹیل ول بڑھ جا تا ہے :ہم اب 


اللمعان غ اردوالتبيان ف 
ال کے تلق شض اقوال ذکرکر ے ہیں نیز مارک نت ر میں جوقول در کے تریب تین 
ہوا ا ور ن 

ا- علاء ال با تک طرف کے ای روف سبعہ سے ایک ی ن کے انز 
ال عر بک سات بای مرا »بای طودکہ جہاں معانی ٹس ےکی ای تنل 
تی ری ع ریو ںکی لفا تلف ہولی ہیں و پال ش رآ ان لقات کے بز رالفاظ لات ےء 
اور جب ان بل اختا فک یی ہوتا توق رآئن ایک ہی لفظ لاا سب -او رک ایا ےک وہ سات 
. اغات قر ل ہز یل »از ن »کنا نمیم اورک یکی لغات ہیں - 

٢ں‏ علا مک ناس ےک ۶و ق سبعہ سے مرا ربو کی وہ ات لخات ہیں ٹین 
پآ نکانزول ماپا ی یک رآ ن ویو پرا کات بولگ تن سات 
لات دام سے یں للا یں رآ کاب شت راخت ریش بیل ےب اورا لک بوصم 
پیل تیف داز )کنات باجم یا کی لخت سے _چه_ تلا ناک ریقول 
3 تین اورراق کے یاده ریب کے یی ووقول ے ضے تی ا ہے 
ارک انش اخقتیارکیاے اورصاحبق مو نے اک راما رکیاے۔ 

۳-*ن‌سات لول پر رن نا زل ہواسے ان ےرادا آن مس ال جوا 

مات اصناف ہیں لین رن کان اما ی یں اوزان ترس 
با مخت اختلاف _چ»ا ان ملس تو کے ہی ںکہ برسات اعناف :امر وی » 
علا ل ورام کم وقتا او رال او رہل دوسر کے ہی کہ بر اصناف :"وتو 
ویر علال وت رام نار وال » ارات" یل - اور شک کبس ےکک اناف :۱ 
گام ونتشا رہ زا وو خصو وگوم ور ہیں 

6-سارت ترولول سے عرادای کے اورایک یمق میں لف الفا کی سات 
صوریں تس .للع قبل تخال, عجل, اشر قصدي اور نحوي* چا چان 
مات الغا کیک نی سے یڑ یآ مکی درخواسستکرنا۔ ول جمہورفقباء اور نکی 
رف ضوب ےن بی علا مین ری اور اما مھا وک رما اشوفی رون شا ل ہیں۔ 

۵ا ت7 وف سے مرادسات ول میں اختلاف ے : 


اللمعان ۸ ن‌ارده_التبیان گے ل 105 
الف۔اساء کاافرادو تدگیراوران وونوں کی رو( شی و تانیٹ) کے 
اعتبارے اختلاف۔ا سک شال 0 :از مم میم 
.<< وعَه روم زو (والموم: 
رھ اور ایق( کر مه اپ دو 9 
رکنےدانے ہیں 
071 بڑھاگیا ےد 
ب-مضاررغ» ای اور رکے فا یداو اشتلاف۔ ا لک مال ے 
رال :رابب آشقا رک 
9 ےت E‏ ۳ 
یہاں اف ر ہی کومنادگی ہو ےکی بنا تصوب ادرف ی کول آم سک 
ساتھ ڈص اگیاے» اورایک قراء ت پر و و ال س :ربا بت 
000 بک ما یقت ات ‌نرے۔ 
رخ پر تکااختلاف EVE BSE:‏ ا کان 
انب وَانْظْ ز ال العظام کی یه ما € (لبقرة:۰۰ 
رچ اور( ا سگمد هک )ول طرف نظ کک ہم ا ن کوک طررح 
E E E‏ - 
ا ںآ یی تک زا کے اتکی ڑا گیا »اور ون کہ اور را کے ات بھی۔ 
نیزا شتعا یکافر مان عم ولج نز و (لواقعة:۲۰) 
رھ او ےت ۱ 
دوس زاسن) تایه اس اختلاف میں اسم اویل کے 
ی 01 749 
او ا وتلاف کر سا بزل کچوک جیا اراو ا : ین 
المد القارعة: ه 
e‏ ین دنک مرا مسا 


اللمعان ت ارروالتبيان 106 

حفرت امن سل کرات :لصوف انفش( ے۔ 

ریم ور خلاف: بے اختلاف یاف میں ».فان ہار تال 
یش 
جک ایی نک )بی دنل بو 

اورآکگر اعت :اقلم یش ے۔ 

۱ راکش باراد ے ایکون ود ۳ تن 4 
رم ناور نت و ِ 
یہاں پچ ےو نی ہرفاخل اور دفر وی برمفعول رت 

۱ سس گس 

ایر اراد رک ےو جاءٹ كالمو پاق (ق:٥)‏ 

رو "روک ن( ترب )۲ کی“ ِ 

اور ای راء ت :لو چاء سکره الوب اق >- 

«-وووا را بکاختلاف»شا: رای ےہ :ماهلا 5+ ٤‏ 

رو و 

این سور کت راء ت رح ساتم(سن جیوه €( - 

ایر ارشاد ارک تال :هوکش امین البروج:) 

رک کب( اور تست وال سس 

(الیجیر فالخ )کم فت ہد نےکر پرمرفو جز لالع رشک 
صن ے مو ےکی ارو رن پڑھ ایا ے۔ 

والغا رک کی یش کااتلاف مض الد تال کاقول ے: وما کی ال که 

الو ۱ ۳ 

ہہ کو تہ ہہ 2 

الیک تلم اخلی 4 انی :از کروالأنی) ے۔ 

ز نو ںکاا لاف من امت کی الہ هرادا یرہ لاف 


اللمعان شيارد التبيان _ ے_ ۱ 107 
تلا قرآن شل بہت ز یادہ۔ ے۔ادراسل یل ہے ایک امالروعرم اما کااختلاف ے ج 
کہ اش زوگ کے ال قران می “جمدے: قل الك عَيِيْثك مؤوئی4 
(النازعأات: ۱۵) 

تج :کیا آ پکو لو یکا قص نع 

الآخری( ) یلام رای اش تراچ اقا 
رک را طیب رکم اکا مک کبھی پا کل اس کے تریب ہے رش زرقال رالد 
نے بھی ابق کاب م عل الحرفاںن یس ا تو لکولیاے اور دنل سے ا ںوتقو یت 
۱ وی 
۱ ژ :کت یاد ہر جب مسلک و یآ غ ری لک ہے ےے امام رازکی رح اش نے 
تیا کیا ےءاورز رقا رح الشنے اہ کا ب "ما لاعفا اس پرا وک کے ۱ 
چندد لال سے ال کےا و کے پرات دلا لیا جن میس تفیل : 

ا-ال نھ پک ابت اماد ییا ےکن ہیں- 

٣ے‏ رهب اختاف راء رت اورا لگ طرف را ہونے وال سات وجوہ کے 
تر ےمم پچ ۱ 

۳-ال را دومع بات لت لول _ ۱ 
سا تحوف کے تلق علا ےکرام کےقمام اقا لآپ زرقا می رصان یکتاب ٠‏ 
من الت فان کی پا ےہ یزاس تفر ۱٦۵‏ ےلیک ےا تک دوسرے نر اہب 


ضیف وز دیرگ ۱ 
.9ت _چمیہاں اذہ بکاخلاصہ 7 
نف کرت ہیں دوفر مات ہی ںک: ۱ 


قرو کا یا لاف ان مات روف کان ےق ' 

١‏ - اا اهروت بذک راو رمث ہونے مل اختلاف- 

۳ای ضار ءا م کےافعا لک یگردانو ںکااختلاف-_ 
۳۔-وتواگرابکااخلاف۔ 


اللمعان شرراردوالتبیان ۱ 5 108 ` 

م- فاد یکی ئیش یکااختلاف۔ 

۵- زک وتا رک نختلاف۔ ۱ 

-فالتخااکتیلرب-۔٦‎ 

4 ات یاف واا ی تم اقا وی کا 
۱ اخلاف۔ 
کیا ب مات قرو فصا حف شی مو جور یں ۱۹ ارام نی 
۳ ق تکاطرجب پر ے کہییتا مروف صا حف ا ینیل و و دیں۔ ۱ 
رزئل: آلف تک رف نت 
و نے : 

ب: ترا میا امش ام نابات پا ان 
حر ت اب وبکر اف لا سیر کرد پھیفوں ے ول کے سے ے_ 

:وره بک کا مطلب ہے س ےک حط رت الوک سل ال مو جو وک سات 
موف بقل تھے اوران سے مما حف عا ےک اقل کی ی ظ رع سا تروف کے 
سات یکی 

و : آب فا کارشاد: ”ان آمتي لاطیق ڈلک“ (میری امت ال یات 
یں کت ) مرف ع می ےنات فان کین بل اازقرآن با وو نے نک 
سات سات تیل ترآ نک ره در تگبال ے۔ 

۴- ابروا سلاف اورائمیت تن یں تور رکا کک ہے س ےک صا حف 
عنایسمات تروفوں مٹش تصرف ان وف پر تل ہیں ج نکااشقال ا نکر ال کت 
سے نیزدو نی اکرم مال کے صرت جرب کے ات هآ خرکی دور ہآ نکی قر اء کوک 
شالمول- ۱ 

۳-علام ان جر رک رایت اوران کے پنواعلما کاب می ےک ہمصا حف 
عنام ات تروفول ٹل ے صرف ای یرف تل ہیں٠‏ ا ن ہنا بسانت وف 
پر بوک تپ صد ب اورک دفاروث میس ودر سے ایم جب ان بط کا دو رآ یا آو 


اللمعان اندر التمیان ۱ ۲09 
امت نے مسلمانوں کے معا لوی کر ےکی ےآ پک قادت میں سو ںکیاکردہ ایک 
رف پر اکن اکر ےا رترت عثان تماما عا اوصرف ال ایک 
مرف کا ام جم سکی رف ات نے پا لک کےا ےقو لک تا 
2 زرقای رح ای ”من عل العرقان “ےکی م٢٦٦‏ پران الفاظ سار 
طرازوں: : 
”جب تم ا سا ت تو فکومصا ENT‏ تی 
صا حف میں ت ریرش د هکت بکی طرف را ےکر سے ہی تو ہم ایک نا قائل 
ترش قيق یکو کال لا ے ہیں٠‏ اورال باب دان کلام مک 
جا ہیں »ارو سکاف عثا ے لور ےہا تروف رتل یں 
کن رن ادف میس سے ریک نموف یانش سے 
اناج مروف پتل ے جوال کے رم ال سوفن اوہ رہ 
مسا فا یئوگ طور ان شش ےکی رف ے بل نایش یں 
۱ ارت زرقال رم الثه نے اپے ذب تار کے مطائ نی ۵ت0 
وجوداورهصا حف عتا بل سات روف ابی با با لوب وضاحت 
تفیل سا یا نک رف اپ من کی 2 مثالوں مل سےایک شال 
کے ڈگ رکرنے اکن اکروںگا, مامت رح الثر ن ےکس وچو سبو کے بارے مل 
یت ون ۔ا لک ثال اش تا یکا ران 
وشن هم لا منیبیم وَعَهَرِحۂ ز عون 
“وو ا رش ی )ول او اپے پر ںکا ال 
E‏ 
ا ںآ یت س لفظ آم انة کک نفد دونو ں طز سے ما 0 
تر ارتو لوف رشان شال سے :کیو ںک ای یس رک عنالی ال رح ہے :الع 
نی مروف مفردہ کے رم از 00 مق 7۸07 ال 
کیلع یکیتسال بھی موجودےء اور قطول اوراعراب سے غا ی ے۔ 


- اللمعان م ارروالتبيان 110 

‌ کی رح ال کے وی ب پر نز وار : علا میرک الشف ماتے تاد 
خر ت تمان سک دورمی۲ امت اسلا می کے اتا وولو سے سے ما کے لے با 
مت سارت رو .ور :کو ںک جب ۱ 
اختلاف قراء تک وج ےلوگوں نے ایک دوسر رکف رکہناش رو )کرد یا او رف می کا 
ان یش ہونے اتو امت نے لش کاک یکل پا لک تا او ںکو ایک تر فک خر اوت 
پت کردیاجاۓ۔ 

علا ترک رم اللہ پر ۸د:ا۔] آپ “ا کے ور بھی می کرام اقرا ت 
میں پام اختلاف قرب اگ تن اما جیب اگ ہآپ کہا تو پچ رآ پ 
الا نے اس شک لک و کی ےک ل نر ایا؟ 

چنا ہا کا مرف یل گی اکت راء ت یل اختلا فکرنے والوں ل ے 
روا راء ت ررق رار رک یا گیا شے وہ پڑہتاتھاءاورآپ و ا ا 
وجو راء ر کا تعر رمو أن پال کی طرف ےرمت اورا ساف پیر اکا ہے عی کہ 
زاود ہا عاد یٹ اک پردال ہیں - 

۳-صدیث می لآ پ اام کا ارشادے : "نام رنطن 7 ( می ری امت 
اک ات یل یمق )اور پا است تس کف باق ا 3 
کل تم ایض اسلائیقوی رف رو تک اوا کی سان نہیں 
کرش اور ی جو ناور ےا اکن ہیں۔ 

۳- تلم وان هس اح دت م کے ہی ںک مھا ہکرام ثول جن سل 
حعفررت ان بن عفان ا ت کو رمت وخ ف کوہ دروازہ -ے اٹ تال نے امت 
اسلا م للع واگردیاہو مرا کی ےگوارہ ہوککتے؟ اورا ہہ کے درمیان پا جانے 
وا ےاختلا فکودورکر نے می ںتضور افم کے اس علا ج کی و مالف تک ب پک ہآپ ا 
ےے ا تح ردو رش رار رک ت۱۹١‏ 

۴ ہ مآ حاب رسول ولبات بے دا کے ہی کرانبون ےق ران 
رم کے رونو ںکوضائ کر نے اتکی میا کنر ہو لہ وو روف نہ 


اللمعان ارو التیان _ 11 
تلاوت اتتا رور ہیں اور یحم کے اتپا ر ہے ھا لالہ و را تآ پ اام 


کیآ پ کقول ڈنل می فالش تک نے وا لن ےبھی نہ ے۔ ۱ 

۵۔اگ یروف مر کان باق دورس وخ ہو گے ہو ت آوعلا 7 ۳ 
کین اس میس انا فک کو گنیک پا مرت مین ہم دی ہی ںک اس کے تاق عم 
کے چا لیس ےر ب لف اقوال ہیں ۱ 

٦۔اگ‏ رہم لوش لی مک ی کرد سک سات رو فپ رل مضسوغ ہو گے ے 
آووو ام ترین هر کاب صرف ار کے طور پر ی باق کول وت 
باوجود یمیا تی اشنم نے تلاوت 2 کے انقبار سے ضور آیا یکوک بیان 
کے اورا کی ط ررح ور آ یات ہم وضو احادیث اوران ل سے ب ایک هط لد 
کی ذک رکیا ے؟! 

ے ریات ىہ کرابم ڈو رسول اللہ تام کی تول بحل میں لفت 

کن پپند نکر سے اور دی ات سکاب اٹہ یں مسر نہ ہو نے وا کل مورب 

امو خرن کاکوئی تاو گنلک وہ رات ال تکام پر ادہ ہوں-۔ 
ری در ضاعم۔ 
زی هش وضو پرواردہونے وا ےت اعتراضات اورا نک جواب 
یل اھ اش : ینف حرا تک اکنا سک سامت تقو سے مرا دوہ سات قرا شس ہیں 
وق رات کے پل ساره روف ام ے قول ہیں؟ 
باب :اس ترا شک جواب یسک پکاقو ل کی وجو هگ ناه ال ے : 

اٹ ہار ےتول -کمطا و پ تام کاارشاد:”ان هذاالقرآنآنزل على سبعة 
حرف“ اسب وگ یاک فا تہ تفا رہ ےگا مگ رآ پک ولا ب 
کیو لک آپ ما آپ ام کےسا ہہ ٹیل وتان رم ان نے ان 027 
حضرات کے پدا ہونے ےک لق رآ ادان اتح وف پر یڑ ھاتھا۔ 

تق ان جرک راش فر مات و ںک کر نپ رن سامت ور اق 


۲ 


اللمعان شر اردالتبیان 112 
کےعلادودوسرے ال نر ارک را مکی ق رابو ںکی طرف راک ہوجو ن کے بعد ہیرام ے 
تن ا تکاسیب نب لدی ان سات لن کے چاو ادان راء ت 
لک کک فا دہ سے خالی رے>اورال با تک کی سیب بتک ھا یکیل مرف 
۱ اک قرات پر هنال کے بار ے ٹیل اسم کہ بی مامت ات راء جب پیراہوں ۱ 
کے ارم راء نت ماک کر ہیں توا قراء ‏ تکواضتیا رک یں هچب پل ہے 
کیو ںکیقرادت کے صو لکا ط ریت یی کراس ےکی ابی ےت امام سے ماص٥‏ لکیس 
04+4081 سے امام سے ا مل مکولیا ہو یہا لک کت پام کے جائے۔ 

1 روف ‌سبوقر اوت سبو 2 نې ررچ رر کے یں ؛ £ الہہا ت7 وف 
ان تر اء تک ال ہیں جن ہیی ں۲ خضرت ا 3 ھا ءا کی جوق را رسب تک 
یں یا ا نک ک کے سے پیل ی شورخ ون بک تا مقر اء ا کوشا ی ہیں خاک 
ہوں پامگرہوں شاف ہوںء چا نچرج بتک یسات7؛فتر اء ات بعر ے عام مول 
کین بک ک یں بسا تالا 

۳۔ازروۓے شف لکبھی ہے بات حال س ےکآ پ اپنے کاب بلاق رآن 
اا رادت TE‏ جاک کک پیا کے 
ال ال ہے۔ ۱ 
دوس اعت رئش :تفرگ کت ہی ںکہسمات تروفوں پر رآ نکر کے نازل ہو نے 
0206 ات فکغاب تک لی ین جب خود رآ ن ال ارشادضراوتدی کے زر_لج 
اختلا ف کیا :ئل 4> ۱ 

۰ ترجہ کی ران شک نکر اوراکر راد سوک اورک طرق ٠‏ 
سے ہوتاتواس می کم ت نفاوت با 2 - 

اور آو ناتنس سے اور یں ہیں معلو مک صد یٹ وران میں ےکنا کلام 
س ے؟! 
جوا : اعادیث شس اختلا فکوخا ب یکر فی ہیں وہ ای اختلاف کے علاوہ ےج سک 
کرت ےا بنا پردوفوں جے ر ہے :کیو ںک وہ لاف سے امار یش ابت 


مان ۶ ر‌ارده التبیان : 113 
کر ہیں ایک ا لے دودار ے میں الفافاق رآ نکرمم 271 اوق سےطریتوں 
بسا جوا ت توف سے جاوز ہو اوران تام ور پ مال سے ماع ۱ 
کرناشرطے۔ 
انز اس صورت بی احادیث می اختا ف وی کے ین میں ہوگاءر ہا رآ نتووہ 
ا سے اجام مھا وتات میں انف کاٹ یکرتا ہے با جو دج تارادا شی می تو 
موجودرای سب ١‏ 
غلا ص کلام : تم شہاب الد نا دشا مرحم الف ماتے ہی ںکیصحف عثالی مس جح شره 
کلام کیاوهان تا مروف بعر رتل جن EE‏ 
ایک ر ف کا وجو ے؟ توقای ابوب کیچ ہی ںکہ کف تما م حرفو ںکوشائل ےجب 
ای ان کے ےا نے اتکی کی سای 
صرف ایی رف شتسه ا شی حر ت ابوک ٹچ کے کرد وق ران میں 
تی ول ؛ورضحخرتعثان تک کرد ہق رآ ظط ری رح الد سکول یط رف 
میلان ر کے وی 
و ناب 
کہا تنام سات قر اتو ںکارسول انش م 0ب تن و 
پڑھاےءاوراسی ریت عفن 9 فت رآن کج مایا تھا ءاور سا ت ترامس 
ان ترا مکی اختیارکردہ ہیں کیو کان س سے ہرایگ نے ایی روات وم کے 
مطاٰی اپے دک ان ط ره قراء ‏ تکواخقتیارکیا راء ت کے ایک ط ر یکلا تم 
ڑا ءا سے روا کاود پڑ ھا توووقرا ت ال کے نام سے شہورہوگئی اورا یکی ماب 
مضو کرد یی "چات لو ںکہاجانے کاک نان کقرااوت٠‏ ای نرق رات ویر 
ان رامش یں ےکی ایک کی دوسر ےکی قراء ات سح کیاارد ی ات 
اپ دکیاء ہے جا کہ اورا چا تر اردیا......- 
۷۳۹ اک لام را کے کن ال E E‏ راء سے جم 
طور پرغابت ہوجانے دای قراء ت پراعتادگس پراجماغ ہو گا ب ادر رآ نکمم 


اللمعان شرن اردوالتبیان 7 14 
کاسات موف پرناز لک ناش دی طرف سے امت پر دسحت درم تک بنا بے 
:یو ںکہ اکم ہرقو مکوا پتی لض تکوچھوڑ نے اورایالے کرو مر اوریروقیر هکره 

عادت سے پھر ےکا کلف ہناد اما ٣ں‏ پاک پورل ا ان پر ہے معاطہ 
وشوا ر موي( _ 

بورق راء کل :اس کٹ کے اضتآم پم سیخ یی ضروری کے ب لک فراعت کے 
SY‏ اور پور راء 
ادن تب؟ ۱ 

راء ات ریف : ”قرات“ ہے" قرا کی جرک ”فرأیق راف را گے 
مصدرہےءاسطلاح ترآ نک دائشگی کے را جب میس سے ایی ا ہے م ب کا نام ہے 
ا ا فش کول اف ایا تا ےک و رآ نکرمم اک 
طرلقول بی دوس رہ ےا ری سک قاف وتا ےہ زگ ما سول 
اللہ ظا سے شات مون بل _ 

کیا هرایم تلاح رات مموجودھے؟ بی ہاں !ان ترا مکاز با جنہوں نے 
لوگو نو ورت کلام پاک ٹس اه اپ طریقوں پاک اکا سا بولق تین 9 
دور طرف لوف ہے صا ہکرام لقاع ت میں ہے حرا ھور ہو ے: حطر 
صلی حط رت ز ید مت :< رت امن تو واو رح رم الوم شعری اوران 
رات ہے للف علاقوں شی صا رورت نان ڈول نے استفاد هي »ارام کے تام 
(۱)وا رد کہ سار ااتتلاف صر ضف نظ ریا وی تا ہے کی اختبار ےق رآ نکر مکی تات وص دات ٹل 
ال اختلا یک اوی ا بھی مرج بیس ہوتا :کیال جات پرس بکاانقاقی ےک یق رآ نکر جج کل سآ 
ماد پاش موجود سے و وتوات کے ساتھ چلا آ ہا ہے اور تی قرا مات کے سات بح مج ک کی ہیں وہ سب 
رآ نک حص یں اور »الا مر ف تروف سب رک مرا وک ہیں س ہے انس کے افقبار تسار 
حرو فک ترآن می موجودگی میس بھی اختلاف ہوگاء خلا اک ری کے دیف وف سید یش چو ضوع ہو کے 
رآ کہ تر اتی موجود ول می تو تقر بتوں سے اکل درست ہے اس می شک وش کی 
اش .انا تلا فا تک نا ما اڈ رآ کلف زر بنا۔ ٠‏ 


2 


اللمعان 7 اردە التبیان یھگ 
۱ اتی تک سندکورسول اللہ تا تک بات تہ اتکی ص ری ری میں 
جات نکارورشرور] ہواءاورقراحور لوفو اکر ن ےکی ضرور سول ہوئیتوایک بقاعت 
نے اپ ےآ پکوا لک لیے فار ےک دیا اورت راء ت کفو وکر ےکی طرف اب 
پورآوچصر فگکردی اوردوم الط راتس بھی نل کلم بنادیا بات 
اب ہم ایک پاک ںک ترا یں کیے وجودیشآ میں ؟ ھی ھی ہم نے ۱ 
بان لی اک کہ راہ سے ےک ربدت تن مک ترا مکاز مان راء اور رآ نک ریم بیس ق بل 
اد بات ایک ت کار سے سے اورایک امام کادوسرےاام ےتوس سے می 
اڈ سے لین اور ی کل کے یه مصاحف خلقطوناوراعراب کے تے اوران 
ا و و 
تی اوراکرصور کلف وج مک اجال رم توا اك کی مین اک ایک مورت 
پرادرد دک رسے E‏ کیا دوس ریصورت دا اج اور یسلا ای‌طرن بہار 
یں اس می کوٹ یت بک بات کہا رات اور رآن ۳ 
تدای سہاراور نیا د ے۔ ب راہ ول ک6 آفحضرت ل ے ےکر نے میں 
اختلاف بیع ن توق رآ نکوایک مرف پر یڈ ماو رت ن ےآپ ا سے 
دورفوں ها کی اول نے اس سے وزیا دروف پر مها روہ اک جالت میں 
مف ما کل میں کیل گے ۔حفرت عثان بے جب مصاج کلف علاتو ں کی 
طرف گیا و شحف کے ساتھ ال شسکوھی کشک قرام ت اس مححف 2ت 
اکر وشت رح کے موا نت بسا کرام ٹول کا اختلاف راء ت کے ات نل ف شبروں 
می گیل جانے پا ین اور تن نے ُن ےم اک کی او رساب ہے اتا فک 
وجہ سے نا نیشن کے لیے مکی اختلاف رہاء پا کہ ىہ معالمہ اک طز یقہ پران 
ہو راک کہ میا جنہوں تر ابو ںکوحاص لکن هسطع ےآ پکوخاگ اورفاس 
۱ کرد یا یاو سے ءا نک طرف پور یتو رورس پھیلا نے گے 
مامت اور اختلاف یق او تک شا ار جرد تقیقتیہ تاج معلوم 

ہے بہت سار سے موا میں اھات را هک بضبت مہ تک موا میس ایام ہے نز 


اللمعان شس اردوالتبيان 116 
اختلاف ان سات فول کے دائڑے سے ال کت جن رآ نکرم ازل 
واه رومام کے قمام ال کی طرف سے ہیں۔ 
ابس مقام یس مزاسبمعلوم بوتکم رقا ردان کےا کاب مال 
العرفان می تح یر رهام کر +انہوں نے اسے لمآ ری مہ ری ات 
فرطو ناب ےق لیا( وط دا التب اضر هل مو جود سے اورعلامہ نے 
اس ”الطيبةفي القراءات“ شکور ها 6 ددفر ماتے ہی لکر: 
ال رن می فا کرام پراعمادکیاگمیاےء اک وجہ سے رت عتان 
نب کو اننس سا تیمک ات سک تر اء ت ال کے اک ڑ حص کے 
موا فی ار یر دری تاه شرس ال نے اف میں موف 
کے ماب پڑھا اور جوقراء ت اس هآپ تحص لکی ول لوگوں 
ےا سے ےا اس 7 و 
کرنے کے گے اپ ذف کیاں وش کرو ابق راقو نکوان کےا کے ین 
جال کک رکز ارد یا اورا سے ونولوان راق کر نے تیار »با لت کک وہ 
لوگ امھ اق اء ررض کے ستارے جن گے وان رکےلوگویں نے 
ا نکی ق راء ت کے تو لکرنے را تفا کرلیاءاوزا نکی رواییت ودرایت کی کت 
٢‏ لک دول ےی اف او اوت کے لا 
سرام تا نک طرف شوب و ورف اعت می ان اا دابا 
ران کے بعدقر ارک یکرت بل اڑا لک می یس ال ول 
ا نکی یابت ٹل ر ک» اوران کے طبقات مروف وی اورصفا تکابا ہم 
ا کات ن ان خی ت رولیت ودرایت دول مس هورق رام رت 
کے بار کے اوروئی صرف ایک وصف کاحائل تھاء اوردو !ایک ے زیادہ 
اوصاف کت ھاءاسل وج ان کے درمیان EEE‏ 
کلب ایس مو پربڑے بڑے مارات اوراکا بر بن ام کے ہو ئے 
اور ترا اجتہا رک نے میں مال کی ص ریک کا مکیاء اورا بے قا مکردہ 
اصولوں اور بیا نکرددارکان کے طا نکم ر ےکھو ٹے بی ںی کی ہترفوں اورقراء 


اللمعان 2 اروو التبیان ۱ 117 
تو ںو کی برا بتوں کے طرق وروایات سند بیان ل)»اودز داز »ودر 
وزرا -- 

ترا تو ںکی تخراداورا نکی اقسا م :الا نان“ کے مصنف نے ذکرکیا ترا 

میں ہیں :مو ات شہو رآ1 ماد شا وضو ءاوربررح' ۲ 

)اء ت نام ہے توف یں سے فا فا تو کبک کے نک ایک فا تر جب قا کے 

کا نکر ک ےڈ لفات واش تھا نے طرح ےن زل رای :جرال خجزیائل, یل 

حول رجف ارجم ازج آز جو فآ نها جات“ وغیر ذالک۔ او رل سے 
رات نے ہہ دی توافت رکم وع بیت کنر پارا یں اختیارک ری یں اصطلا رع 

قرام س ان کلف 2و نک نام قراآت دددایات ہے۔ للا : ایک امام نے تیب افقیاری: اون - 

اللہ رفک ججی اک امام اص مکی قراءدت سے اوردوسرے امام نے لول تیب تا مکی : نون 

لوہ ره کچ اکم امام ای نکش رکی ق رامت ہے ای طرح دنر ییا کو ا لکلا اور ی ییات 
ارات تک ہیکت ہیں ؛ بجی دجس کر دور ال مٹس بے شارقراآت پل اور پا یج کی 
ندادابوزبیراورقاشی اسا بل رما ار ے ۲۵ بھی ے۔بعد یں جوں جوں سس پیدا مون کی شون اور ہمت 
کی کن چ کی او رتوت ضط و حافت لک یبھی وال موی کی شس سے ا نکی تخرارگ یکم ہوتے ہے ول 
ترا ت بالفاظو دنر ۰ رو ایا ت" کآرجی را عل مکی نسبت ان ترآ ت دردایات کے ائ مکی طرف ہونے 
گی کیوککہانہوں نے اپ ےآ پکوا لعل مکی رمت واشاعت کے لے فار اوردق کرد اقا ای سے وہ ای 
بل شور ہو گج بل نبت بوجرلا زت عددام واختیار کے ہےء نہک بوچ راز ا وب اراد کے۔ ان 
ترآ تک ال لول س ےکی سا ت حم کے لول کے درخت اورییں ہوں اور رک اشفا اپنے اپنے 

۱ ڈو اور ایق ای ند کے مطابقی ان سات درخ ل اوریلول ہے لاف کم کے رگا رگ او راکو گر تے اور 

کو ےت راد ریک ان ساتوں دقن سے ایک ول لیے کے بعد رل ول نس رو 

دوسرے درشت ے دواو رتس رے تن اور اوردوسم | ٹیس چو تھے ےن اور پاچ بی سے چا کے ادرا 
رع حتف نم ےکلہ ے ترتیب دیں۔ ای قیاس پرقراآ ص0 
مس ترو سب دک ور یرنه اخ وی کی ورن ضورغ ہوک ج مت روف سب راب 

ھی مصاحف میس( تور کےقول کے مطابق ) موجودہیں۔ 

(۳) جات فا تآخری دور س سورع ہو گے اور وه رمع کےخلاف نہ تے انیس بوج عدم شیرت وت 

لنقیدل ذعد کت واتسال سند کے باصطلاح ق را قر ات شاذ ميا ے:اورجوو جو وتا 


اللمعان شراردوالتبیان 118 

تی ملا الد ی یی رح تفاس کر اعت ن کم پر ہے :متو اتآ عاد 
اورشاذ ہنا ہم متواتر سا تہمشمپورقرا تی ہیں + او رآ عادنلن تار یو لک دوق را یں ہیں جو 
خر بی شی کت دار ہیں ء ارس ۔. ا کر تیال کے سات کن 
چ اورشاج نکی قرا تگربا با کش تب اي ال 
وروی ث رامیت - 

علامسیدڈھی رم الڈدفرماتے ہی ںکہقاشی صاحب کے ا ںکلام شنظرر» ال 
اش سب دہ بات اپے ماما یراب زی رم اللہ 
ےک ہے دوابق زاب تشر" کےش رو می رم طراز ہی کب رووقر اءت جورف بان 
کے موان بواگر کیااک ذذ سے اخ عفان ین یز بل رون 
چاه اراک ترچ ووی ترات ےش کاروکرنا چان انار 
رن 07 0 IIE‏ آن ازل موا لول 9 ۱ 
و ل کر واجب ہے خواہ وہ ات سبعہ ے تقول ہو یا ارہ سے با ان A‏ 
متبول سے مروکی وء اور جب ال ن تن اکان یل کول ایک رگن مخ بھی فقو رہ وگو 
ال اذ یا اف ل قر ارت کااطلاقی ہوگا جا و وق را وت ان اھ سبع سے نقول ہو یاان ے 
بھی بلند ارات سے می بات اکابروا سلاف یل تردق یلع ے۔ 

الطیبة“ کے صن قو لق راء ات کے ضار کے بار ے میں کیت ہیں : 

ردق رات چ قاع جو کے مطا اق ہاور عثاٰی کی ای صورت ا ےش ال ہواور 
ER:‏ و رورت آن ےی یکین ال بنا دک ارکان ہیں اور جہاں ی . 
کول کنا توو مو وآ پ فص کرو 7 رکاذ اکر ور اء ات سبو رل ے ہو_ 
فرش ان ال راک بت اک رت رخ 
کرو مراد شرت اورم شان دل سب سے ز یاوه حص راء ات سبعہ نے پایاءان 
تراما ت لوا تش ووراک ط رف ملسو بکیاجا تا ےہ وو حط رت ناف :7رت عم 
= سے قول ہیں اور اپ و ومول یبال ور رآ ت رج“ 0277017 کچ 
ںا نکی تلاوت رسای _( مفائج ی ) 


اللمعان ارو التبیان 119 
O TET‏ 
هلال رج مال ہیں وزرا ا کشر ہک سا تتو ی ہیں »اورح طت اوش 
رت ود ھجت روم ال دک رای ان ست زا یں () ۔اویثراءا تار 
کرهش ان د لکیقراوون هچرگ اد سے اور وو خرن بص ری :خضرت این 
ھی بحر کسی یز یی اور رت شیو زک م اش رک قراس ہیں۔ 

رقراوات کے پیل یں :راء ات پر مانے شل ایک ایباوفق تیآ رکوہ 
کون قال ت هکره یز تتام راء ات یس سب سے پیل ہار وعدی رتام بین سلام یوما تم 
معان اب تعفر ریا مل قات ی رک مال ہیر کتبآهن لش 

رام انت ےلیرہز رمومبی میس ل۶٣‏ کون شش 
الاک کک میں شہرت یز کب رہ میں وگول ےھ رداو یو بک کوفمی تزه 
وروی ہشام یس این عامرکی یش ای نکر رک اورم ہشن نا کی فراع تکواختارکیا۔ 
را وا کین وی نکب مون ؟ قراء ا تک تزور تیسرکی صری کے اخ رم بخراد 
میس امام ان ہہ ہن موک نپا رح اٹہ کے پا لول تلآ اہول نے سارت 
ممپور اع کی ت راا تک فر ایا کان نوس ےکسائ یکا نام ر سے دیا چیہ عقو بکانام 
1 عذف/دیا۔ 

امن کاپ ر رح الت ہکا رلت 0 و ی 
قاری سے یکر بی کے جوضہیا داپات میں قرا کی لازمت مل ایک طول عرصہ 
گزارنے می اورا سے ا ٹیش راولوں کی آراءکی ایت پور ہو ان 
اپ در حالش ہکا اك سا ت تر اء یراتا رک نا ترا ہکان سات س مرک سکرجاء اور ہک پر 
00 
تی طرفدبڑے۔ 

مات و رق رات ۓےکرام : قراء تن قاط قراء سے تم کک قول و 
7 (ا) ان ول ححفرا تک یبھی دو وورواستیں ہیں »ابا تفر بر دیس ان وردان واب جمازہ امام قوب 
)متیر ول ور وء انام خلف بزار بردایت ایا وادرسی-(مفای ) 


اللمعان مرا ردوالتبیان 120 
۱ بط | له رات ق راء ات رہ کے امام موز 
نے صحابرکرام ال سےتوسط سے ان قراء ا تکورسول اس لکیا ےہ یل 
مخت کبک یم ا مکی فضیل بھی ما ی جا اکرآپ ھم اراد :”م 
فلت وه سب ر آن رت او سیر وکام آبوالسرعابد بیع رح الد 
نے انف راو وش عم کے دول اند کرد یا جنس 
میں dt‏ امن ره عم مہ پھر ایو مرو اور سے سب 
ان ا رک اا ےو ےکنا لاش فراع انت سبعہ کے امام ہیں 


اسیک تقارف 

| -اءلن عا ررحم الد :ا نکانا مکہدالڈر ھی »ولد مک کہ دا ملک کے ز باه ظرافت 
س شن کے قاضی ر ہے مکنی تا لوان ے متا بھی ہیں »اپ نے مقر اوت نرہ ال 
شمہا ب ر وی رح اش سے اہوں نے رت نان من عفان توت اور انہوں نے 
آ خضرت اام ے ماک لکیا۔ ۱۱۸ یس شن یش وفات پا غا م اور وکوا رما 
اش ےآ پک تر اء تلور وای تک نے می شور بو ۔ صا حب شا طب راشان کے 
اق فر مات ہیں: الب شا مک شر ہشن جک این عا رک سکن عبدانشم کے با غت 
(طام نس ات لیے ) کد کان م آیاھشا م و رفس جک سوب ہیں وا 
کی رف سن کے اتان ےترام تاوق لکیاے 
۳ ا را ۶ 09 شین دا ۱ 
ت ےنا بھی ہیں :صحا کرام فا یٹس تحت بر ان ز ہیں نحخرت ال ولوب 
انصاری او رح تآس بن ا کک اڈ سے اقا کی ے١۰‏ ۱“ ٹا س وفات اء ان 
رات کے راوگ یب بزی سول ۰ اور یل موی ۹ع ہیں ۔الئع کے پارے 
ون صاع شا راتفر اس نان 

اور کہ ج راش 4 70 

و9 چ وک راء کی جماعت میں غاب نام آور بلند ر 


اللمعان مر ارده التبیان 12 
اھ بزی نے ان سے قراء تثل کی سے اور کی 
کر تن ک لقب تن س پر اعا کے بو 
2 
ےتید ور ہے تا ی ہیں ے ۱۳۸,۱۳ شی سکوفہ ٹس ا کا اتقال بہواء ان سے قراء ۱ 
بت کے راو شع تون 1۹۳ مھ اورک متو ١۱۸م‏ ہیں۔ ان کے بار ے مل صاحب 
شا طب ی رح ائڈفر ماتے ہیں : 
ترابوسبعرییش ے نام( انم مز او رکمائی ) کت درک دوز بیس ہیں ء 
۱ جھوں نع مکی خوب اشا ع تک سکی وجہ ےو کوواورل وی کی خوشبو .سم اء 
ایک اروگ ہی کر کا نام عم ہےہ عم کے ایک راوی شعبہ ہیں ج وکر درسب پر 
فضیلت مم سبقت لے جانے دالے ہیں شعبہ سے مراد ان اش گرا 
دوس ےئ ہیں جک( ماع مکی ردایت کے بط سب سے ال ہیں۔ 
اج - اب وکرو رم الہ : ا نک نا م رده زان جن علاء نا ربهری ہے :سب راد یان 
فراعت کے یں ہا جا تا ےکا نکا نام کیا »درا کا ہنا کر انیت ی 
ان کا نام ہے ۱۵۳ھ می لکوفہ یں ا نکیا وفات :ول ہے اا نک شرابت کے دوراوی 
الور ووو رک اور شیب سول ہیں ۔صاح ب شا طب یرال فر ا ے ہیل : 
۱ امام از ان میں نا اسب یمرک جن کے والرعلاء یں »آلو 
روف اپ ےی مکی با کی ر تیک برسائ یتوہ شی ربب اور پیا دو رکرنے وا گ ےم 
ناج سرا ب ہو کر ودورگیٰاورصا ا ۱ وشعیب ہوک نے ان ےر تباب 
۵ جم زءکوئی رص اللہ: زه میب بک ارہ ات تھی یں بکرم بن ری تی 
کےآززادکردہ لام ہیں »کیت ابوا ره ہے ابوت رتور کے عو رخلات میں علوان شر 
شُل ٦۱۵ووذات‏ ءا نکی بط راء ت کے دو راوگ غل ف تون ۲۲۹م او رعلاد 
بتو ١‏ ۲۲ د ہیں ۔صاح بش طبر اشر کے ہیں : كت 
اورھز کی قد پاک زد یمام نیت صابر اق رآ نکر مکوترتیل سے پڑ لے 
والے ہیں !ان سے کف اورخلاد ےق راء تک روای تک ہے وس میم جک ہمز سے 


اللمعان شس ارروالتبيان  ٠‏ 122 
وی وتفو ظط روا یی شلک ے ہیں 
بوخ رح٠‏ ال : ا کا نام وروی با ین ارتیم .ام اصفهای 
یں ءعد بیدمنورہ ٹل ترا مک رما ست ان پر پاک وجا سب »۱۷۹ص یش مد یمور ویش 
ا ن کا تقال ہواء ان کے دوراوی تقالون تون ۰ ۲٢‏ اورور مت لی ۱۹2ھ ہیں۔صاحب 
شما بی رھ الف مات ہیں : ۱ 

تا مش کے ہار ے میں شریف راز وانے تال ہیں سو ہہ وی اسر 
۱ یتیاور ون رن مت رل سے وش دونوں نے ۱ 
ام یاصعبت سے بلند بز رک یک کل 
.2 کیال رح ال : کول علا ے ۶و کے امام می بن ہزرہ ہیں ہیں ءا نک یکنیت آو کی 
ہے( یل اتا مکی عالت میس لاس پیل کی وج ے اگل "کال با مان گا 
فو تس ارشیر کے سا تح خر اسان جاتے بھوئے ری کے ایک گا وں 

نر وت بد یئ اک قر ارت کے دو راوگ ایا ثمتوٹی ۳۴× او تفش 

دوری ہیں۔صاحب شا بی رص اش رماۓ ہے 

ھت کرت کات ا لبون 040 
۱ ال بن لیا تیا قر اء س ےلیٹ الو ریت الرضانے ا سے ددای تکی سے او رنف 
دور کینکت روز رچکا سب 


123 


اللمعان 2 ناد التبیان . 


یال 


ترآ نکر میس ندرا یک شرب کت 


تیا اک اسلای شرا اعت ا طور پروجد شآ )کر وو وگول کے مت ادا تکو برقراز 
کت وال» زمانہ کے بر لے عالت کے سا تم سامت وال اور ہرز مان ومکان کے 
ماس تی اشر اک وتخا یچ بندوں پرکزہ ۳ تاکان ے لے ا ام یں تررج 1۹ 
س کوچار یکی اک انیت شل الع شری احم ورضا :شی اور ینان کے ابول 
کر هکل صلاحیت داستعدادباقی ر سچ» اوروه ای م کی مکی پور یت واک جنگ 
او رتلیف ومشق کول کر ے اور کہ مر وشن شر لحت جاک میت بل ےنرم 
آسمان او رب ل شر بت جوا مکل اور دا اور ال مم کو زا 
اور بے جا یر یشان ×۔ 

. اتا یکا E‏ رین الله کر الم ولا 


۱ ریک لعشم (البقرة: 0*۵ 
مر ”ال کوتہارے سا ھآ سا یکرنا منظور سے اور ہار ےار وشواری 


سور ۱ 
ض الزش, ین عرج یله 
لیگ ایک ا:۸ 
e i‏ پد کک کم 
ا سے با پ ابرائیم یل کی ( ای )مت پر( می ) قم رمو 
ا ا کل وا ا ا ر و مر 
مناوت کے لے مول اور حت ز مان دمکان کے بد لے ره سے بلق ری ہے ابا 


اللمعان شر اردوالتبیان 124 
ج بلول ای عم ز مان مرو ہوتا ہے اورضرورت ال کی ست شی بو ہے پر 
جب پوش رورت رح ہوعائی ےتو کس کا قا ضا وت ےک سابع مکوا یی ےم کے ات 
تپ رل وضور کرو ا جاۓ وال دوسرے وقت کے موافقی مہو ناخ اور 
ی کوشا یرت کت وای مق رکو پوراکرنے وال اور بنروں کے ے فا دہ من ہوئی 
»ال کال ال ڈاک لک ہے جوم ربع کے زارت قا بلیت اورصلاحیت کے 
اختلا فک وج ےفز ال اورددا کول می بد یکرتاربتا ے۔ 

اور اب می میا وم السلا بھی ول TE‏ اورثفوي اناع کی اصلا کر نے ۱ 
دانے ہوتے ہیںء ال لے ان کشر یں زمان ومکان کے الا فک وج ے لف 
ریںء اور وو شر اکا م س سط بک ےآ کل > یوک ہر بت اجام کے 
لد وال کب ول کے ے ‏ سو ابی کش یع یکا وچو واک ر کی وقتت میں لت 
»وک و وی دوسرے وفنت می لمع رہوچا ےگا ءادر جو بات ایک امت کے لما سب موی 
ےوہ ووسر امت کے لے نٹ یں بوک اور یی وہ ا لیم وم زا یک کرت 
ےک سے ہرز ماشہ کے ال کے متاس اور کی 
علامقاگ رم ال کا کے بار سے ایک کد هکم :ام جال ال 71 
رما کی موسوم زان ول رن سک محمد وبات زگره ۴م اس 
۲97۹ پا کہا لک ہیں :تا اگ راشفا ہیں: ' ۱ 
۱ "ات پاری تی سکس سا کےعرص ہم لعرب تو مکی ہجرد ت می تک اور 
میت مرب لے معاشرتی ال ادا ۶وا لک نا چترصد ہیں س می مل 
اولکن و ای لیے ان پراحکام ا نکی ابیت واستعداد ما ھی لاگو کے گے اور 
` جب ا نکی اشتحداد بڑ ےکی آو اللہ نے ال ی مکو دور ےم ےتید ب لکردیاء اور ہے 
ام اف راد اورقو مول ہیں خال کی کیال طور پر عادت دایاح» چنا اکآ پ ال زنره 
کا نات مقو رون رکم یتو ان ٹل سک رن کول فط ری تافو دضابطدے جوامور 
ماد برادرفیر باد ردول ئل بیل وقت ااا اس 

چنا تچ انا غلبو ں کا رت مادر کے اندر پیل نومولودہپچھر ےکر کے اورنو جوانء 


اللمغان شر اردو التبیان 0 25 
راد ڑگ راو رگ ر رسپ ر و TG Ty‏ ۱ 
دا سار شآ پکو ایک 3ا شاف رمل کے ذا یھ ہے بتار ہے ہی لک کا نات #ل ردو بدل 
یک فط ری خابت شدہقاخون سے اور جب رگ روت یکا مات سکوی ناور 
انا باتک اسهم ےڈ ر لے ضور وت موک ا اسک توم س کے ۱ 
نا انوس وکا جہوکہارتائی دوراوراوفی سے اع در ہکی طرف بڑ نکی بیش ہو؟ 
کیٹ جس می نف لکیتھوڑی یھی بی ہو بیخیا لسکا یکم تک قاغا ٠‏ 

یھ اکر بو ںکوا نکی ابتائی عالت مم ا ,چا مک اب ند يا اج ج نکامکلف ہوتا 
اناف بو نی ثرک مد اور بش یکالات کے انا ینہ پر ہونے کے وقت ی ان 
کے من سکن تھا ؟ 

اورجب ہے بات دنا کون رت کی لک کت واش کے بے یں جک 
الاکن ہیں یا تا ہکوہ امم کو ای کےا دو رطف لیت میس ان باتو یک مکلف 
ناد سے تک دورف ا سپ دو رباب از هبوت میں ی تمل رک نی ؟ 

دوٹوں لول سکو نی شر یی انل ہے؟ »ای شر یع تک جن کی عدوداوز 
اکا م واشتی ال ےبڈ ات خودہمارے لے مقر رک یا اس یل ے جو چام ےون 
کے گے ءادراۓے ال ط ر کا کرد لک جن وا می ےلو یبھی اتی کے یں رکتا 
۱ کہا شی سے کی ایک ر فاو( تک ناء پر )کرد ے ہکیونکدہ ہرز ماشرومکان کے 
موان اورانسان کے احوال می سے ہرعالت کے منا سب سے یا رکرو یش تی کے 
کاتول سے بد لمکررکود یا اوردٹیانے اس کے اکا موم الا او رک انا زندگی سک 
ول ےکی طود پرا ن شر عتڑں کے منا فی ہون کی وج سے ان پل نان ے؟ 
ر کےلفوبی اور اصطلائیتتریف: رت می زا لکرنے کسی می ساےہ 
عرب کچ ہیں : "نسخت الشمش الظل* سور رخ نے سا کاردا مت 
میس انتا یکا ارشادآیاے: :فسح له مایق الكیْظط ن4( حج. دا یی" 
اتال یمان کےڈانے ہو ےش موزل اور یکرو تا ے“ 2 
71 درک و ا 


اللمعان تشر اردوالتبیان ۹ ۱ 126 
عر بکا تول ے: "نسخث الکتات“ ئل ن ےکا باوث کیا تن ای یکناب کے 
توش رو ووسرے اوراتی تش کر پیت یس ال تما یکا راك +( 19 
كدح ما ْم حون (مافية:۰ »سم (دنیاٹش ‏ تہارے االو 
(فرشتوں ے )موا ے ہا ے خی" ت 
اور لکر نے کے ن م ںآ »وال بیف مان ال آیا ے: 
«واذا بڈلنا ايه مکان ایة4 بی اورجب گم مس یآ ی تما دوس رک آیت کے 
رل ۱ 
یز یی یی ےن کی دبا ہےء اور ای "ی میں قول ے: "تناسخ المواریث 
من واحدالی واحدِ ES‏ 
یلا آولشت کے اختبار ے تھا٠‏ ماک اصطلا 701 لف بے "انتها ,الحکم 
وتبدیله‌بحکمآخ رگ مق یک حم دورس هکم ےم ابی کر“ 5 
فتہاءاوراصوتیں نے ال کی ہت یآ ربا تک ہیں پھم ان میس ےق راور ہا 
راخت رزن ہو کا و ن ا ریف 
مس ووفرماتے :"سورع الم الموج بَدايلِ ماخر یر مر 
وکل شی کے ف رھ شر یکو مک رن ےکا نام ہے۔ ۱ 
اتا 6 رآن پاک ش ارخا د متخ من اق آؤ تیمها تب کر 
ِنبا آؤ یلها« الم تغل آق اللهعل کلک ریگ (البقرة:۰۰) ۱ 
ترچ آ یلوک و کر سس ۱ 

ا یآ یت ےآ یں كي مکی جا کہا للدتاکی برچ پرقادر ہے“ ۱ 
کت ول صسە‌ 0 ۱ 
یں سک موا لہ ےچ بل ہوت طکروه اپنے ایو ںکوای عم د تا ہے پیل را کاس 
نم کرد یتاے او را۲ ں کے خلا ف دتا هآ ایک ا ت تا سول اس سے رج 
کر لت ے؟!! پر یکا کرک اه شب وف رو 
وو رض سےقاف ی 


اللمعان شع ارہ _التبيان 127 
چا چا نک مات وجباات پر رو کے لیے انش وگل کے اس ارشاد سار 
۱ آ یت مہا رک کا نزول ہوا: 
(ما تنسخ‌ین ية از نها کل َر با و فلها دام تم نله 
علی کل کنر ریز (البقر ۰٠:‏ ها" کا 2 مان رآ ن ححضرت امن عباس 
قاس بیان فرمایاے دہ ىہ ے: م ےگیھوڑ د ہے ہیں اورتید بک کر ے اور نہ 
یا ےنور کر ے ہیں ۱ 
۱ اور - کہا س ےک یا “معن نرک سے ماخوذ ےمم ا ےتیل 
مر سا وک 
کی سای شرلیتوں میں ثابت ہے؟ رن ثریعت اسلامیہ می ازرو ےل 
ام تلا ردوپ تاو افو کال پاچ برخلاف مود ےک انہوں نے 
ال وو کا کیا ےد کے ہی کر وغل ال دا یل یگ 
یھی پرداالم تکرتا ہے شتا لس پاک اهامای ۱ 
اقول میں مود کے نوا ہیں وہ کچ ہی ںک تاب الل می رل بو گیگ شتا 
نے قرآن اک ان فا ج ل ایو لبیل من بی نَم وا من 
له یل ٹن میم یی (فصل: ۷ ۱ 
رج 7 وق ا تاش کے شر a‏ ہے اورت 
ال کے بک طرف سےہ مہ خدائۓ مکو کی طرف سے ناز ل کی گیا 
ےی اگ رر چا موتو لکا ای میس دقول بان بسک( جب ہے بات 
درست کیل ے)۔ ۱ 
او ور رسک جوا ور پرا مات سے اش رلا گر ے ہی ںک دا قط 
حر ت تھ مال کی نبوت رقا یں اورا نکی نبوت اک ونت مع غار موک ہیں جآ پ 
سپ شیع ں شورخ انا ہا سے ری دعل ی ہے اور رپا یاوق تو مور 
ہے ا کر شت رش تال یل وات ہواےء نی زخود مود شر بعت کی دا تح 
ہے کیو تورات یل نود ےک ہآ دم علقلانے اپتی ولگ سیخ ول سے باس کا ۶م 


اللمعان شن اردوالتبيان ' 128 

7 یا یھر یدرت بالا تھا قی ا مقر ارد دک گی 

مور تو SEDE Gr:‏ 0 لا لکی مج 
مان دورخ ذ گل میں اختار کے سات کر ے ہیں : ۱ 

بی ول :اش تال نے مت رچ ڈی لآب مہا رکشل ری صراح تک ے ج رکاش 
تا مان :ما تنس من ی از تیاب بة بر اؤ رها الم 

۳۹۳ اله عل لی فَرتژگزالبقرۃ:٦٠)‏ 

7 تو ات نک ريت ربق رشن الم نہ ا 
دوری ریل: ذ اشتعا یک ارشاد :وکا رلا ای فان ية د وله آعُلَم چا 
یل قالوا ما ان مفتر بل رهم لا بعلیون فل نله روخ لین 

ك باق يكرت اانا ۇمى وی لين (الىحل: (re‏ 

ہریڈ ”اور جب ہم آی تکو ام دوسربی آیبت ‏ پر لت #ل» اور 
ما تاج لکد خوب جا تا ےآو یلوگ کے ہیں ات 
ام کے وانے ہیں شک بال اتکی 


2 تام راب 
۱ اور »ورد بل ای کلم کے رع (اٹھا ۓے جائ )اور دوسرے کے اشیات ۔ ۳ 
تلو ہے۔ اور فوع (اٹھائ یکی )ی لاوت موک اور یام وی ےکھی ہو رتو رن اور 
ری ورای بات پآ یت ما رک دلا یکر ری ے۔ 

یی وین :قب کا بیت رل سے بیت اعرا مکی طرف ل ہو ہے 3س 
معابل ےءاس لرتنک سکرسکتاء چنا چ ادان وتو اسلامیہ کے ابتالی 
دول اما ول یس میت الق دک طرف در نکر ,هریم ضورع ہوگیااور 
اشتعال کےا ارشا دک وی و ہکرس 
کی طرف رخ کرنے کا عم دی و( طقل تز کلب وجهت فی الما 
كول رها (البقرة: ۱ 


اللمعان شن اردد التيان ' 2 129 
۱ ر ج مآ پ کے مض الم ماد بارآ ان طرف انا ۲ ا ہے ہیں ءا 
مآ پکو ایت رک طرفو کرد یں گے شس کے لی ہآ پک میج 
(لو) بچھراپناچرہ(نماز یس ) مس رمرام ( کم )کی طر فکیا نیہ اور لوگ 
کشت مو جودہواپنے چرولگوای( کچرمام) اک طرف اک 
شتا مات وال لکنا پکی اس طعت زف کی ری ر ےدک جو 
کہ وہ ریب مسلمائوں کے بیت الق نکی طرف ر وه اور بیت اترام کی 
رفز ری وجہ ےت رآن اور ی اکم اٹ کے بارے کر یں ےہ چنا می اد 
تپارک وتا ےم ای نیو ل الكْقَقَارمن الٹگاەں.4ز(البقر یں 
ترجہ :' ابو( ) قوف لوگ ضرو رش مک ون (مسامافوں )کون 
ال مت ) تبلہ ہے ( کہ یت القرل2ا) جس طرف پل مرج ہوا 
کر ےس( بات )نے بل دیا ءآ پ فر ما دع ہک سب شرن اورمخرب 
شیک ملک ہیں لودای چا ہیں( ی )سیر ساط ر ان جلا یت ہیں“ 
وک وکل :ایر تی E‏ ان ال اراد و کور یکو پار اه اور دل دن عرت 
گزارنے کا کم ایاے: طوَالَيَِْ يوون نکم وروت ازوَاجًا رضن 
اهن رَه اشير وَعَفر 4 (لبقرة: ۲۳۰ ۱ 
ٹر چ اور جو لوگ تم یں وفات با جاتے ہیں اور تیال و جاتے ہیں وه 
تالآ پک( کار وفی رو سے کرو کے رل پار بے اوردل دن“ ۔ 
شقن ںآ یت نامضو کرو یرورم شتا کے اس ارشادگ وج ے 
وتو رے سال عرز ار ےکا تھا :لو صیَة از واجهم .٭(البقر 5"( 
چم وهوصیس تک جا اکر سی اہ ان ول ل 

2 
اوا ہے بات ردان ےم میس کہ ود سے مال دفا تک عر تگز ار ےکم 
چاداهادردل دن ےم ےو ہو چکا ڪب 

۱ اورا یط ری ری کے ای شان ش لیت اسسلامیہ بش پاسے جان کی وچ ے پورگ 
14 پر یآ باب کے سا تھی دوپہر کے سور کیطر رون اوروا 2 +وعالی ےء 


اللمعان تشر اردوالتبیان 130 
رن را کے تو لک کول !عتا ر یں رہتا :وکر وہ وا اورصو کہ کے خخالف 
وموارل ے۔ ۲ ۱ ۱ 
ا کک رضم اشکا یراع الا ام ل اراک ای قرشی رم 
یقرش رن کی دضاح تکرتے مو کے فر ما نے ہیں: اس باب( )کی حرفت 
ہے دصرد رک ہے اورا کا بہت بڑافا کہ سے ا یکی حرفت سے نزو علاء بے نز اور 
تفم ہیں اور یکر جن جائل لوگوں کے علادہ ا کک وک مر »لوگ ںآمدہ 
کے شرگی احا م اور ان ی علت وترم تک حرفت ای تب مون ہے مناخ رین 
ٹس سے ایک نام نہاداسلائیگرو ال کے جوا کم ہے یش لیعت میس ره وتو 
سل صا کین اجھا عکی وکل ان کےخلاف قائم ے۔ 

پچ رآ گے لک رآ پ ر اشر مات ہی ںکہعلاء کے درمیان اس بات کول 
الاک سک ابا مہم السلا مک یش رییتوں سے تتصولو قکی و بی اور نیدی صستوں ہی 
ہین اور سے بداء ( کت کے ہہونے کے بعد ا کا آغکارا ہوچانے )کا اکال 
توب لاز مآ گا جک یہ ام اس ا تک طرف ے ہوں ج و مور کے انام سے 
اداقف »یلید چام سے ہام رذ اتکی ہاآوں یں تبدل وق تون یرل بناء پر 
ہوا ہےء الک مال اس‌طبیب ومجاغ کی کی ہے جوم ری کے احوا لک رعایت رکتا 
ہے چنا اشد صد ہاش کے لوگ و لک اپتی مشیت واراوہ ےر عایت ر < 
بان کے نطاب می لآوتپر موق ےکن ا نکاملم اورا را مرو کیو 


پاشک یتیالو ار 
نکر میس کی اقام :نے ک نی ہیں: 
ا- تلاوت وگم ولو شور ہوں_ : 


۳- تلاوت طسوغ موم با ہو۔ 

7 یی یتو وکا کاش تال اپنے ایگ مکوز مان ومکا نکی ای کر ے ہو یدیل ف ردفص اعم 
تاز لف ماد یی ؛ادریہ بات پل ےلم ای میں تین ہو ان پل ہوک کہ اتا یکا یی ایک ار ارو 
ریت کے کار د ہو نے پرد هار ادمتپر بل ہوجائے۔ 


اللمعان ارده التبیان 31 
سم ضورخاورتلاوت با ہو 


یم اضر )اما اد ال 
پر لکنا روا ؛ وگ وه پاک مضورن ہے شلا ول پار دوده لاد سے مت 
رضاعت کو کیآیت جات ماک فا ے مرو ےک ورات ہیں 

رآ گر ش یت تال موی :عش رضحا مغلومآ بجوم ۳ 
"ول باردودھ یاج بک ال کے پیک کال ٹن ہوم کواب کرد تا ہے ۳ 
:نش شاب ملو ماني "ا با باه کے اک کی کے یی ےکا 
7س کرد گی ال کے یر رلک ا دا ےت رف لے 


۰ گے اور یت رآ نرک تلاو تک مان ری“ _( 


اھ ہو مہ وھ ۱ 
وتا و ررلوں سیر صن مس رضعات) تلاوت کے اعقبار ےلو 
مور ہے البتہ بای وان ہاں با ے 
دصرم اود ود رکم شف عات مشن گر ہا سے اور یریما 
کعلا مہ زی رح اٹہ نے :”البرہان فی علوم القرآن ٹل ذرکیا ےک جب تما 
۱ کی شر شر ریم یات 
قول :لیخ امه ادا کیا قار هما البَنَةَ تکار ن اللہ وله 
َر زیڈ ےی توا ار زجب نکر یتو هل کی طرف بطور 
قر و ا ل رین کے و 

رت عمر اٹاف ماتے ہیں :اکر کے بیخوف نہ موت کاو ہیں کے ےکر نے 

کاب اشلز یاد یکروک توش ںا لآ ی تکوانۓے ول کات اش لیا _ 
ابع ان رم الد نے اہ لاب کت می حفر تلعب 
کر Jit AVAL‏ اق پت 
کدنا ےت ریف نے جانے کے بی کک لض حط رات ات پڑھتے کر زا تارب ہی 
می داع ےک وج سےا نکک ہے بات کی ۔(ازممف) 


اللمعان شرا رددالتبیان ۱ 132 

ےل کیچ کہہے ہیں: ۱ 

”سو ر٤‏ ا زاب طولت یس )سر رای رای سے 

تخو مگ“ 
ار یں ی( وت کرک ت2 
اتی ۸ ) رآن میں بہت تیم ہیں ء اود شا دناد ری وکاک تم ران میس ان اقا مکو 

پا یں کوت ال تھالی نے ابقر سا بکوناز ل کیا ےک لوک الک تلاوت اور 

۱ ال اکا مکی فی ےبد تکار یکر یی - 
ترک :او ریس ری م مک مور اور تلاوت کا یا ہوا" ہے اوی رآئن پاک 
یس مکی رض نات ہے جیا کہ علامہ زی رص اڈ رکا کیت تا ا 
2 ر ھسورتوں می وان ہے اس نو اون من ے ال ولد نع کے امھت 
ام نایبت :کیب عَلَیْگُم ادا عظر آعل کر لت ان ترک خَلڑا٠‏ 
َصعَ ین وال قربن بالمَغرؤف عَلّا عَل المتقیی» (البقرة: 8 
آ مت ضراث :و صیکیر الله ق اواو ک > (النساء: ا کےذر یچ شون مگ » 
اود اک طز موه ورت ور مس وت ایت :وازن 
و منک وین آزواجًاً. E‏ رو اجهم ماع إل ول عر 
راج (لبقرة: ہس وھ و :وان 
رون ینک ورد تازاجا یرفن نع اف وَعَفرا4 £ 
ذرییے ون موی اور آیت. فمیی: ( وغل لش یه ديه لکاھ 
یشکن» من روزسع رقدرت رک دا لش کے نرہ و ہے ےا قآ 
دجو ب صو مآ یت :”فمن شهد منکم الشهر فلیصمه* سور کرد ی اورا یی 
حضور مال ےکوی سے پیل د اگم اور رین ےا لک ےک مانت وغی رہکی 
تما مآی تکوق رآ نکر د ایآ یات کے ذ ریو کرو یاج از رو ےم 
وولالت الوا ہیں _ 

لاہ می لن ما سراف شورخ تن ایک رسا لصیف فر ابا 


اللمعان ی ارده التبیان ۰ 133 
ےٹس یل مصنف نے بیکپارت ذک کی ے: 
"انل رت یی ےو رک رع 
بارے ل کر لو اورا( دترم( کے روزه» پش کین سے اع راض ر 
ان سے راد رر ل راب یکا ناب سے ججز ین دی تک جچہہادکا 
تمہ رل معاہدہ کے مین شتا رین ہلی تکوتوڑت ےکا 
کم دیمان کے دوران تناکا »وف ۳ 


اہو کہ تلاو تکو بائی کت سعکست 

ا کم تکوعلامز نشیا راش ہے ات 8 ان مرآ" 
س میا نکیا ب چنا دفر ا کے ہیں: 

"بان ایفسوال پا ودک وضو کر کے تلاو کو باقی رکه 
۱ سک نت بح 

ال ان کے اون : ہلا جاب بسک رآ نکوجیما اکاں لے 
پڑھاجا ا سب ےک اس الوم ہوجاۓ اوران لکیا جا ے تدای لر ا کوال وچ 
ےگ بڑھا جانا کہ دہ انز دش لکا کلام توا یکی تلاوت پرٹذاب بو لپا 
او ایتک با با رکھاگیا۔ ' 

دوس اجواب و اوقا یف کے لیے ہہوتا سے چنا تلاو توافت 
اوردو رگ جا وال مشق تک یاد دبا کردا_ن باق رک اش 
صاحب ا یمان ردنا ہا نکر کے توق تک ہے ات ا لحم تک قضارد سب 
آ یق رآ نکواحاد مت مار سس عضورنخ که اک ام رفا ان بات 
انفاق_ جک رن بجر E db‏ و وو رز ہوگق ب(اری 
طرق رتوا ایی شل سے ورغ رک سپ ہک ری مش ان کااتتلاف ےوہ سب 
گآ یا ران سنت کےذر بیج اورغ رتوا غر توا کے زر لوشو مکی ے پاہیں؟ 
کک کی ضکمتیں دوس ر یبن سآیوں کے ہے ادد اک رح ایک صد یی دو یی حدیث کے لیے 
ار ے۔ 


اللمعان تر ارروالتبيان 14 

امام شاف رتاش ملک سک رآن کے لے نا اس کے ملق رن ہونای 
ضردرکی »الا ال کے ہا لق رآ نکیا رح سنت نوی کے ذر یی ہا یں مکی ول سنت 
ت رآ کے درجم ل یں ۱ ۱ 

برعلا کا سک ی ےکی ق رآ نک رن ق ران سے چام سب اورسنت هم روت 
کیان دوٹوں می سے ریک او رک ماو را یکی جاخب سے از کرد ہے اور 
س بکی سب الشدعمز وڈ ل کی کے #وماینطق عن الهو ان هو الاوی 
بو رتپ مال وش ففسالی سے تست »ا نک اراد زی وی 
وان 989 تج 

اور مورک یک وک لآ یت وت کے هد یف سورخ وس نهک پار سے مس ہے 
روایتگھی ے: له غطی کل دی خی عم لا لاو صبه وا رٹ “مجن اشتعال 
گ2 007 NLDA‏ 

یزان ہوقو ا سآ یت ما ررض ا سک زاو مق ری :ال یڈ 
والرّاق فاجلنوا کل رتنیا مِأئَة جَلَرَة4 یز کرانے وایگورت اور ز نا 
2 والا مردسو ان میں ے ہرایک جا ات ری دورو بسا سار 
کے کم عضو ہوگئیء چنا نرسول خدا لاڈ نے حطرت از اور ما مب( ٹ2) 
کے رج کم د یااوروولوں مل ےک ای کوک یکوڈ ےنیس لات گے ریس بیقھنہرانن 
بات دا ےکی وکوڑو ںکی سای »را سے سنت ہو کے زر بے ضو کرو اگیا» 
کک ےم واف اعم ۔ 
اا کاو ن ہے؟ ور نا س کرحم او نوی 
EE‏ کی لک کل اتارک وتا یکینرک ب ای 
:کن جاوما کہا سپ کرب ری لوا لک راب کے 
اشرتعال کا شاد :ومن مرت الیل وَالَأَعتَابِ تَتَخِلُوْتَ نه گرا 


ورزا سا 4 (النحل:») 
رم ”او رمجوراوراگوروں ون تر وگ نی 0۶ 


اللمعان !ردو التبيان ۱ ۱ مت 
زس نات مو 
زا ہا شرا بجر 0 180 
مت شرا بک ا ںیت سے ملسو کرد یا ہے اکا مر ای والاتصاب ‏ 
لام رش قن عم لش قاجتیبو نوعلم تفرکون» رالماکدة:-) 
رچ "پات کے کیش راب جوا اد یت یر او ےک ت ب دن 

با (اور )شین کم ہیں موان سے ب کل ا کک روک ولا 

ام رین ام ان رک رہ اللہ ال شیر جا البیا نٹ بیان 
فرماۓے وں:”ماتسخ مر اي نها نت بخیر نها مثهاآومتلها" مطلب کی 
آیت ےکی ہم در ےپکریطرفخخ نکربی کاو ہم ی مرد ر 
ی گے اور وہ یہ ےک علا ل ترا اورترا مکوعلال مت 
بن 

ا اف ا غ2 وی ر مرت وعلت ٤‏ او رخ وجواز مل ہی روا 
ہے اور چہا ںکک اخپا رات وا یش یس تنا ہوسکتا سے اور ری شوخ ۴ 

۱ بش ریعت اسلامی اور رآن وسنت میں سح کے تلق اه اور طا نر نرق 
طا بل کے لیے ض رو رک س ےکر وہ ال مک معلا کے اور بز د یه نا مضورغ اس 
اطیف اسلوب پر احا م ا زی او رآیتول کے ا٣ا‏ نے میں عکمت ال ان کک 
نے لوگو نک تو ںکو رارصا خیرات( ماش ووش بدو چلا۔ اک با تکو نم نے 
ال بحرت ری س اختضار کے ساتھ دک ہکا سب: نله یقول احق وهو بهری 
السپیل۰۹4 اوراشتعال تن با تفر ما ہے اور وی سیر سارت بح سے 


اللمعان غر ارروالتبيان 5 16 
بل 
و رن 


عم وگل 72 رآ : رآ نکر مکو دوعہروں میں نع کي گیا: ا- ر بوی» 
٣ہ‏ ہظلفا کے راد ن- ۱ 

ریک کے کی اتی تحصوصیات او رخو بیاں ہیں لف و ہک رک ےی تو حفط اور 
لوگوں نو می ں تفوت اک رن مردلی جانا ے ارگ ا کو بو لک ریغو اوراوراق س 
2 پراو رتو کرت مراد ے۔ ۱ 

عص ر ہبوت می لمع ق رن کے لیے وف لصو رل سا تس تبون : 

ا حفظظ اد رہن د کے یا دک نے کے اختبار سول م کرن _ 

سر راو رسای کے طور سورس f‏ ۱ 

اب تم دونو ں تمجوں تقرس فصیل بح کر میں گے(انشا متا ) 
کہ مار ےا رآ پگ ال یکمابت او رت وین کے سا ھک یا گیا یم ان 
اا مآشکارا وا ےک الث ہک بز رگ وه کناب اور اٹ سے اہر ی رہ رآ نکم 
نے جودعایت وج اواج مکاحصہ پا یا چا کیک یآسال یکا ب ےک پایا۔ 
کیوں ک2 جم رآن: ق رن اک ی( تاخواندہ) ی پرنازل ہواء اس ےا نکی 
بور توج ہا کےحفظ اور ادگر ےک طرف عرکوز ریک جسطرر رآ نک رول ہوا 
ے٢‏ اس ای صو رت ٹیل یا وکر لیا چا سے ء اور کراس ےل وکو لکوش شس رک سنا میں کر وهی 
اسے یاو کے اپفنےسیینوں می ں تقو دک لیس کول وہ ای کی ے الد نے یں ان پڑھ 
اورا ی عر ہو ںکی رف بحو قفر مایا تھا: 

رم وی تس نے نا خواند ولوگوں میں ان بی عل ایک کیرک جو 


اللمعان مر اررو التیان 137 
- ا کاش ی ہل پڑھ TREES:‏ اک کرتے ہیں ادا نک 
کاب اوردآشنر ی کیا ù.‏ ہیں 2ال : (r:‏ 
اور خوا نرہ سی عام طور پر بعادت ولا کرو اپ عافظراور ادداشت 4 
اخمادک رتا کین پڑھ نان جا تاءاورعربتو نزو لق رآن کے دورب کا ی کیت 
مات سے بم ووی بان صو میا تش کار ت ماف تیر واشت از نون 
1 شرا کی تھا اوران س ست بقل مار وذ مز ,سب شب ب 
اف موتا اور صب ونس بک یراز بان پڑ کر سٹاو یا اد رال لرک تار نگ یمم رکتاء 
ادرآپ ان مل »تم ی ای ےآ دی پا گے جھآپ کے ساسنے صب ضب بیان نہ 
12 نیس ماقم شر ( د ںہو رش راء کش آناتی انشعا رک گُرے )اشعارگی 
کت ورجا شک بوذ کے باوجوداز ردول »بان کے پا کت رآلن پا کآیا 
وال نے ایل اپنے زور بیان بش وکت احا م او رت وکل سوت و ترا نگردیاء 
ان کے مز بات داساسمات رغال بآ گیا اورا نک کقول اور اکا رورت میس لا 
اور بالا خرا نکی تو کو بز رگ ویر کتا بط رفک ردب »انمول ےگ اینارتوجہ 
ا لکنا بک طرف موڑد اء ا حف اکر ے اورا سک یآ چوں اورسورتو ںکوز بای بڑ ھت > 
بب اشع رگرب پت ڈال دیرگ نہوں ن ےق رآن می زن ری گر نک پالیاتھا۔ 
اورارظر ام ما حف کان اک شی ےکا با تکراپ مہ راتو ںکو 
ازول می ںآ بیا تق رآ یر تلاوت معبادت رابت اور رآن 0 می فور بر 
ار ہن ارفا 2 بابک رادرب الهزرت درخ ز مکی ما آوری 
ںآپ عم کے دونوں قرم مار کرت قیا مکی وجہ سے ورم زده ور کے کے: 
8اا بل ثم الیل لا قلیلا ْضقَة آو انقض منہ قَِيلًا آؤ رِذ عَلَيهِ 
رل لا تیا (لمزمل 
رم ا 
ٹف رت ما رخف ےو رن 
ال بیو یج بک بات سک ہآپ ما سید افا رآ نکر وین اطهر 


ہماسا موی 


۱ اللمعان مر اردوالتہیان hE‏ 
مث کر نے وانے ادر رآن کے ال بی نے دانے ہرمعا بل سل انول ےرت 
اور ماغز مول _ 

اورر ےکا هرا رضوان ال تم کت ا کین 
یک ضرے سے سوقت نے جا ےک کش کے ا ام کر یں اس حر اور 

یاک نے می صر فکرتے ‏ اورگھمروں میں اپتی لول اور چو کو ا لک تم ده 

یہاں ت شک روت سوا ےکرام روان امن سک درو کے تریب سے 
نت تار گی می ںگزرتا اج روز 0 من ME‏ 
رآ نکی آواز تاد آپ از ری کرش انصا د ےگھمروں سے »وتا وآپ 
وال ش بک ان تی رک ل رن فک ده کے نک رجاتے۔ 

امام خاری رہ الد ۓ حظررت آبوموی اش ری تس دا تح کل کم 
آحضرت نے ان سے ارشا وف مایا:” تم کش رات دک لیت می می تہاری 
تلاو تک د ہاتھا ؟ت نما دا دک یل سے ایک بت را عط اک گیا ے'۔ 

او رس مکی ردایت ٹل ید گی ہہک نک یش ن ےکہا: یارسول اش !اکر کے 
معلوم مومع گآ پ میرک تلاو تن زہے ہی تو بنرا میں اس می شا باکر بڑہتا 
اورآحضرت تام سے ہرد ایت کی ےک ہآپ ام نے فرمایا: اشع ریو ںکی اعت 
جب رات می وال موی ےآو بی ان کے ق رآن بڑ ع کی آواز و ںکو چاتاہوں 
اوقت ان سکن ب ع کیآوازوں کے ذر یع میس ان کےگھرو لا لیت 
ہوں اگ چون می ان کےگھ میس نکی بے وت 

سر سض از 
بی فا منناشر ان کے مات اتنام دتو چ کے جذ پا تکوان یس برا ینکر ے او میرن 
اورفر اوحض را تآوشهرول اورستّوں کی طرف کہ وہ ال ثرآن ها ا 
تمس یکراپ نے رت سے یط صعب ناکرا انوم 

ی وب آن پاک یڈ ما له 

ارط ۶ یپ9 00 


اللمعان نارو :الصیان -۔ ۱ 139 

حزن اده من صا مرت انرا نے ہیں : ج بو اج یکر کےآ ما تو نی 
نل سے ہم میں سے( انا رش سے )سی ےی کرد یت جک روه اسے ت رآ ليم : 
د او وی( کی ماح ا الف حدوسام )تلاو رآ نکی وج ے ایک شور 
۱ سنا دیاءای وچ ے سول اللہ گم یاک تی آوازؤ نک پست رت اک 
مفالطہ ٹل نہ بی( اود ایک دوسر تک کلیف ذ ہو ) او یی 1 پ م کی 
نکی مد ان رآ نکی تح وار سے یا سے سے کل ره 
یمام می هید ہونے دا لے فا نکی تھ راد ے سے اوی ا یط رپ تی یی بر 
معو نک ڑا شا یتررقدا داز لشہیرموئی- ۱ 

علا ری رح الڈفر مات ہیں :”سن زتفاظط جنگ مام ل ہیر مو سے اوردو ینوی 
ہین ر ہر معو ن یں ی ای قدرتفاظکی شہارت مون( ن صرف ان رولژا ول 
: هل ایک سو چا تاہید ہو سے ءحاش ٹل ) 
امت کر ىہ ام کی کے مشا ل قصوصیت یی _ ےک یمقر تتاب ان سین 
فور ا ل نے مل وو ولوں اور تون می تفوت کرام برا ول 
چ صر فکفوں اور سور مک یآ ی رنه رف اا کناب کے ان 

۱ کوک یی تورات دا لک عفر آ ا ولوگ ا نکی حفاظت می کیک تن 
اتارک ے لاو را لب کے پڑ نے کے مھا ے صرف نار می ہے بل :اک بنا 
کاب ری “ت77 ز0 ا کک اش ایق یکو بی 
۱ تھب ر کے زر عطاقت فا اوراے حف اک نے کے لی ےآسا نکردیا :ولق 1 یا 
لانشن كر (القمر:») 

7 ناورم نے رآ وک ماک کے کے یما کرد یاچ را 

کول مت اص لکررے وال ے؟““ 5 

اورا عوراو رہیلوں ورتم لور بی ورد تال 
کا ییاراد اک وا دلج 5 تا ال کر ولد لو جر :) 

رم نے ق رآ نوناز لک ارتم ای کان یں 


اللمعان مر اردوالتبیان E‏ 
اور پلا ول وا سے الہش رآن کےسا تج سی عنایت اور و یز از 

ےجس کے لے الد نے اس اص تح يم تب اور فا کیا ہے اوران سک کیفو ںکو 
ان سول می فوت اکر کے رکرو یااوران چرام کنا بکوناز لکیا سے پا نی کل دوسا 
( ی صرف اوران پرا کا دارورارگل اس امت کے نے اس کے یکفویر تع 
ہیں )اورشا ۶ر ےکا خو ب کہا ے: 

اللاو و دن محم وكتابه وی زر تیلا 

اند کر التب الشولف عة ملع الصباخ فَأَطَفِىء دی 

ج ال را لاش تام کا دب اور ا سک کاب قوی تر اور ال 

راس ت کلام ہے اس کے ہہودتے ہو ئۓ ساب هکنابو نک زر دگروال ےک جب 

پیر رورا رو چکا ےلو افو لکوھادو“_ 
سول رآ : ق رآن پا کک دومری اتی زی تصوصیستمص حف می ا کی 
ندمت ہے رسول الل سک پاس چندححقرات ورن کے لے مقر ے» 
ج بیت رآ نکاکوئی جزءنازل ہو تو آپ مل اس امین رک ےکم فر ہے اور 
ا ں کی وج ہا کی تفاظت وکابمت یل انچائی درج ہکا تما م اس کے ضط وااو س 
یادن او کاپ اللہ کے ہار ے مل ز بروست اعتیا ی تا کنا ہمت حف کی اور نے یل 
کفوتل وویعصی ال ( ]شی حافت )تی رگ ینز بک معاون دمددگار ہوہ اور ےکا کین 11 
دواو یل ا سیا کرا م رضوان ارم ای جا ,نکر تا ے 
ایس ماہراورائل یکیال جحخرات کے درمیان یس سفق بکی تھاء کرودا تم انشا نکام 
کی زمہ داری صلی »خضرت زی بن ثابت تفر تلعب رت معاز بن 
7 تل حشرت مواوب می نآ سفیان :”رات خلا ۓ راض ر بین رها کرام 
ہو رک ین وی میں ے ہیں ٢9‏ 
(۱ کم ویش ۰ ۳ کرام رضوان التبم ان کات و یکا فریض رانا دیا ےرت الد جن 
سعید ای العا ٹا لے و نیب ص“فالی ہیں جنہوں نے سب سے پیل کم امامت و یکی سعادت 
را ےی می مات ی زاموزی تاغل تل ار رت سر یوروش 


0 


اللمعان غ ارده تیان 27 
EIT RITES‏ :سارت 
اب ا میس چا اش نے ق رآ گر یا جوسب کے سب انصاری سے :ری 

کب ےی زنل رت زب خابت اورنحخر تآلوز بر اا 

رت الق وچ یاک الو زی رکون ہیں؟ تھآپ نے فرمایادہ میرے 
1 3 ہیں اور ہہ ذکورۃ الص ر رحط رار ہو ر ومح رو ف کان وی کل سے »ورد 
ہا لوا کرام ٹلا کی ایک بای جماعت ے جو رآ کوک کر تھی ء رازن .۳ 
بہت سےا ےکی ہیں تن کے پاس ایک نا حف موتا تی سل رسو ل کرم ا 
سے رس اور با وکیا ہو الک رکھا اء یاضر رت ان سحو حر کل اور رت عا کش 
ٹون وفی رہ کے مصاجف حے۔ 
رک ط رت کار: تر رکا ط ریق بی تھا کی بک را م رآ نکر مک جو رک زاره 
شماخوں سفید بار بک چوڑے پھروں ( کاغز ور رت 
لول ویر رھت اور یبال ےکر هت ےک کاغحز و لک صناعع تک عریوں کے ہاں 
روان اء ال دض دوس ری توموں ےایرائُول اوررٹیوں کے اں ا کاردا ان 

و فر وت تھاعاماورز ادو یں تھا ای لے ان عرب حراس کوج وک کے قائل رآ رای 
سے م میا بوجا تی ای لیم لیت ےرت ز بی کن ابت سے روات کہ دہ 

مرماتے ہیں: م رسول ال کرو ر آناولڑوں بت الس 

اور تلف و وین اکر ال کے راد شاک مالس مق 
یو کی تر تیب سے عبار تح ء اک لے قامعا کارا ن کی رآ ن تونق سے 
ن رآ نکی تیب اس موجودوطرز رل پراےآ نج ممصا حف یی در ے میں ہے 
ی کبس )می کک ایا ااا ےا رک امار امت بتایا سے اورک ز یاد نو اور 
خوبصورت خیا ے این مق نے اسے یدیا درا لام بخ رکھا تھا نکنا ہت تق ان مجر کے لے نا 
ےک وی کک ن بو ی- پا ظز رر وال ویپ کی زا ار خی ار 

نیرز ٦)سوان‏ میں ق رآ نیگال ن ونر یدیل بسانت وک لآو ام ے۔( من جخیر ) 


اللمعان شر ارروالتبيان . 142 
اشک و اورم طا ست» رواریت شک جر اجب ی ظفل راون 
ایک یا یاد ہآ ہیں ےک ات ت ےت وآپ اھ سے :گرا اش پ لوم ر ے 
ب کات فلا ں سورت مل فلال جر پر رکړوو؟ اورا یرب رسول تم سیا رضوان 
یم نارق متام رک 
عرصرق یس و 01۳ :سول ال ا ام خداوتری اراک نے ابا کو 
تک وا اس ورگ نگ از سم بوک رف رتم 
کرک دال کے جوا رر تکی طرف رصا ت ف رما »او رپ کے ببعرتحضرت 
اب وبکر ص ران ٹ ٹون خلا ذ تک مہ داری ناء اکیں اه دورطافت ممل باس 
رات شر اتب او تی ی مکل کا امتا کنا یڑاء ان ماب می سے 
ایک ان ادگی جک بھی ے جومسلمانوں اور سیل سکف اب کے چیلوں کے درمیا ن لژ ین 
رکه یماما یگ مع رک تا ی ٹیل بت ز یادها او رق را سا کرام روان اللہ 
کم ینید ہوئۓ مجن می سکبارتفا ‏ وکا مکی تعدادستسےمتاو نی ۔ 

تافو لپ گرا ںگزراء حر ت عر ری معا مات ہواتو وہ 
حضررت الور د لے پا ںآ ۓتو نی نم دوهی حالت یل ھ9 
رن کے کر نےےکامشورہدیا تا روهار مکی مو تک دج سے کھں ضا نہ 
جا ۓ! پیل بابل تو حضرت اب وک رص ران ٹفاس کو یڑ ل دا EE‏ میں ررر 
۳ ا رآ نکی ت کارا ہوک یتو انہوں ن بھی می 
مناس ب کرت کے شور او لےلیا اس اور ان اس بلن رکا مکی ام 
دی کے لے ا نکا شرب ص درف ماد یاء پگ رآ پان ححضرت زی بن ثابت وئ کو بلو اکم ہے 
معابلران کے اس اه اور رک ددظ رآ نک ای کف میں کر ن ےکی زمر 
داری نے رل ین صرت زد ش روم یس یت دموا ان نے ان لام 
کے لحرت زید فک کی شر ص رف ر ماو ال کے لیے ریت ابوبکر او رنضرت 
عم رٹ کا کول د یاتھا۔ ٠‏ 

امام ارگ ماش نے ای قصوابق See ET‏ 


اللمعان شر ارہ التبیان ْ 143 
کی ایت کے ٹین نظ را یا کے تیش کر ہیں :ضرت ز ید بن ثابت کے 
روایت ےک ووف ا ے ہیں :**<عضررت ام( نے ال برا کی شبادت (یجنی تک 
امہ شی مت رفا کا مکی شہادت ) کے بعد بے با يا می سآ پا توح تک بھی 
وہاں موجود تھے حضرت ال وبکر صد ان 9 کے ےر مایا کک ر ےکر کے می بات 
فا زا ف27 اول یک سب تدای سر هرک 
ماق رآ نک ریم کے حفاظ ایر ہی ہو کے رتو کے اند یش کف رآ ند کیک ۱ 
۱ با لا سارک راۓے س ےکآ پا رآ نکم دس دبیی ء می نے ان 
سےکہاکددکا می کی ےکرسکتا ہوں ھے رسول ان لکیا؟ اس رت ر 
کرد اک م ہکا مب ری کر ہےءادردہ مھ سے بار می کے ر سے بیہاں 
می کہ اٹہ تتاف نے مرا شر درگ ا کا م کے لیے فرماد یا ی کے لیے حضرت 
رسک سیک ورد تھا ود اب میرک رام کی اس ٹیل دای + ے جوم ٹل کی 
راۓ سے ترت زید افر ماتے و ںک اس کے بح رححضرت اوک رص لی نے مھ 
سےفما یا :تم ایک نو جوا نت رآ وی ہو یل ہا سے بارے می کول کان کی یں اور 
رسول اللہ ڈیم ے سکلت ہو لیا رآ روشک کے ا سےش حمکردوہ 
زیت زید افر ما نے ہیں ٤‏ !ارات مج ےکی پاڑ کے ڈھو ن ےکا عم و ےے تو 
بچھ پراناگراں نہہوتا جت اک ییک رآ نام ہواء جس نے ان کہا :کہا پ دوڈوں دہ 
یک ن چے رسول ابثر تلا ےسک ؟! ال پر ریت الوبگ رص ربق 
EE‏ :خد اک یکا ری یتر ہے اس کے !حرو ترا ال پ رآ باد مک ے 
سچ ا ردول وش ا 
اروت رٹل کاشرب صد رر ایا تا ۰ ۔ 

چنا نچ یٹس نے ق رآ نی آیا تکوجلاش کرت نش و کرو یاء اورسفید با ریک 02 
کرک تراشیدوشاخوں اوراگوں' سیون ال کر نے لگا »ال یک 
نے سره تو کی آخرکآیات :لقن جا ء گی زشول شن انف گی ے ےر 
طوَمُورَبٌ لش ای 4 ک» > نی خر مورت م کو صرف حفرت الوتز یہ 


0 


اللمعان شر اردوالتبيان 144 
انارک کے ال پایا کی دوسرے کے پا وه نیٹیس ہ چنا ہیکت ہک نحضرت الو 
رصم ای وفا کک ان کے پاک ای دسج بل راس کے بعرو دض رک ر کے با لدب 
ال ت لہا نکا ای اننال م وکیا اس کے بحرو وتز ت حفصہ بن تم کے ال موجودے 
ا یں بل رواک رآ ن سب پرصرا ہے لال تک ر ری ے۔ 
تع ش رآ ن کے ہار ے میں چٹ رموالا ت :ال مقام پر چن رالات داردہوتے ہیں 
ن کا جواب تنس یل سے دیا ماسب معلوم موتا ہے م درل میں ال 
غلا صز رک ے ہیں : 

سوال انل :رت ال وبکر صر لی کی رن کے سل میں ابتراء یں تر وو 
کول مواء پا وجو د یلوہ ایک کد ہکا ماورایا مل تھا تے اعلام ضروری ٹر اردتا ے؟ 

جواب: حت اب وبکر صر ان وٹ کو ای با تکااند یشاک( اکر رآ ن ےک یاگیا 
و( لیک رآن کے حفظ اورز ی کے تال 7و 2 اورگفول یں موجور 
ہونے پراخناوکرٹٹھیں کے بتو ا قوب حفیق من سے عاج آجا کل گےء اورا نکی 
یل اس کےحفظہ اورز بای یا دک نے میں اند یڑ جا یں کی .کول وق رآ نکمصاحبف 
مطبوم می مو جودوم توم ہو نے پراخمارکرتے ی ےک یف رآ نکی تاو تکرناان 
کے لیے ان مصماحف کے زر ےلکن ے جب صا حف میس موجود ہونے ےل تام 
لوک اپ یکوشخو ںکوق رن کے دن کر ل فر فک ے تھے بیو ایک لو ےتھا۔ 

اور دورو رتت کح رت ابوبگرصد اعد و وش رع کے با رے میں بہت زیادہ 
اط اورتو ق ف کر نے وا کے اور رکم یں رسول اود تا گی اتبا کے متلا اورال پر 
لن وا ےت تھےء اس لے یس خوف لاکن ہواک ہیں ودا ہل ےکوی ایی چز 
ایہا دگ نے وا نے تہوجا میں جور سول خد اتام کے ہاں نا ند یرہ وه اک بنا پبراننہوں نے 
تک لاک میس و ہکا مکی ےک رکا ہوں جح سول ار لسن نکیا ہو؟ اور 
شای رکا بات سے ڈ رر سے تکریاد ضرع ایل القت اور برعت میں بتلا تہ 
کے ا جب ال معا کی انم تکا اد راک اور و بے کک ینجو یز نی 
تفت رآن پاک کے یادکرنے اود اسے فیا اورتحریف سے میا ےکا ای کیم سبب 


اللمعان )رہہ التبیان 2۳۳ . 
ہے ےت ۱ 
ا نک امتح رآ ن ےق پیت ہوگیاء اور پچ رحص رت ز ید وی ا کا ابر تنل 
کر »هالک کاش تھا نے ا نک ی شرب د ری فر ماد یاء اوررانہوں نے 
ال انشا کا مکی ذ مدا ری اشا -وان راکم 

سوالي دوم :ال ای کا م کے لیے مت ابویک رد ان ٹا ےرت زلم نامت 
لاکوی سی پوکرام وا ارم یک درمیان سیون کیا٣‏ 

جواب :رت ز ید یم دو رین سل برچ مو جو بجی ج یں ی 
ترآ ن ک۱ا رادشه در ےکی می سر کیا طور نبا ما 
تس »کاپ اف ق رن ےب رول اس ںانین وق میں سے تے۔ 

زا ہوں نےآپ نزن عون مق رن کےعرض انر ہک کی مشاہدہ 
9[ و 
پا بت قد یکی دوات سے بال ال او رکال ذکاوت دہارت لمع رون تھے .اور 
انہیاوصا فک طرف بقار ی کی حعدریث میس حصت ابویک ٹپ وس کلام میں اشمار مکی کیا 
کہ جب انہوں نے رت ز ی ہشامت فوا کو بل اراس ےک اک :تک تم ایک ۱ 
رن جوان ہو ہیی تمہارے پار سے م لول کنیل »سول اللہ ماگ کے لیے 


وی ی کے ر ےہ و" 5 


یی اس عرو تصوصیات اورتویوں e‏ اغ ایر 
ت رآن کے لیخت بکیاء اور ا نکی شرت رود دنعو ی پر ا نک تول ولال تکرتاے : 
!اکر کے کی پھاڑ کے ڈو ےکم و و مھ پرا تنا رال د ہوا تا اک ترآن 
ہوا“ 

سوال سوم :بتار یکی ردایت میں حطر ت زیر اا ےل طا کے“ 
اک کہ میں نے سور تو ہکی آخرکی آ یا تکوصرف الو مہ ( کے پا ینک 
دورس بان کے ووس“ : 

جواب: :ریت زیر نے ان آیتو ںکوایوخز یہ انصارکی کے ماک 


اللمعان غر ارروالتبيان 146 
دوس ر ےسا لی کے پا کھھا ہوا یش پایاء ہے کیک سکردہ کو اویل یں .کول ضرت 
زیر پاٹ کوب ویس با ںاوراک رع بہت ے ما رام کوک ہے 
یں ایس ان حضرت ز ید نے انتا وش ز یاون اوراحتیا س مار فرح 
پیر دوفو ںکوش کر ےکا رادو مایا جیا یا گرم ان شاء اللہ اے ما نمس کے بر 
ءالا شالت ےم زنل پر 
جع ق رن ےق ره رول : E‏ 
لے ایا دگل ایا چ نچا رل رکم ا ای یں ا مق ںکتاب کے 
ا ذر ییا لک لا تکارت ,1 پ نے 
صرف اپنے جنے ‏ شوپ »وه اور کا لول سے سے ہوئے پر 
ی ا تنا منک ٦‏ رت یی نکر سے ر ہے اور اپے لف شلوا 
با تکا پابند ہنا کرد ہگ رن سل هل دوماغز ول یری اتاد بی کے : 

ا وگول کےسیینوں می ںتفو کلام _ 

۴ رسول الق سک سا سن جح کرد کلامم 

چنا ضروری تاک دولوں | م حفظ اور اور موم یں اورا نکی ال 
اس م :می ار اتکی شرت اس قرب کر وی ی بو چرس و 
قت کول گر ے ج بک کک وو عاو لوا ا کوان ہد ےد سے هک رات سول 
نش ساسا ےکا گیا ے۔ 

اورال رده عد ی توب دلالت زی ہے جوامام یود وور الہ نے اب یکناب 

مس نآ راو" یش ذکرکی سے فماتے ہیک ضر تچ رو ےکک اکس نے 

بھی ق رآ نکاکوئی حتہرسول اللہ اٹم سے عا لکیا ہو وہ ا سے لن ےآ ے ء لوک رآ 
آبات اوران تون او یو ریت اغ ر ه‌شاول ر 7 ال ت اس ون تکتک 7 
کال یامواقول رت چگ کدوک اح در ےر : 

اورای‌طر اک رشن یداو یک دوسرکی روات ی ولال تک سکن 
قرت ابر ری تگراو رتیت ہی سے فر ما یا: ”تم دونو ں کر کے درواز و 


اللمعان ارو التبیان ۱ ڑا 
بے جا کہ مرج وکاب الد کے ۶ قباس پال دوگواہ ٹ ےک رآ جا ےو 
ا 
اک چ رر اشر ماتے ہیں :د وکوا مول ےم رادحفظ ادرف یر ے۔ 

اور علام سخاوئی رح الف ماتے ہیں : مطلب ہے س کرد هل وید لک ہے 
موکلام رسول اش کےسا ت ےھ ایا سے 
۱ ۱ اور خضرت صر این بر 4 ی طرف سے طد درگ اعقیاطء بار یک تین اور 
میتی جے انہوں نے خضرت زیو بن بت کے لیے تع رآن کے سلملہ 
۳ اردیا ول _() ۱ 
چا > 
امم ہیں: 

۱ مل ٹپ تجواورعددر جک اعیاط_ 

۴نی نآ یا تک تلاو تک ق رور »ون ایت _چصرف ال نآ یا تک کتاہت- 

لیامت او رال هلک بآ یا تق رآ اتو اتر ے قول ہو کو _ 

۳ ناتسبد( رکشل ہونا۔ 

۱ ھی تصوصیات نے ما گرا رضوا لن اللہ“ یم ان اورت :پور صلی ٹا 1ك 
رز نت 
: اور یسب التبا رک وتعائ یک توق اور رو ےی ۶وا. ۱ 

حر تی بن اللی طال بکرم انش وجب کا فر مات ہیں :وگول بیس مما حف کے 
EET FRITS TIE‏ 
سل دو ہار پ ما پور اق رآ نکی ای( ما )۔ 
(۳) قراء ات سبعہ سے مراد اتر ف سبو( سات وف )ہیں جوت م متو ات تر ارتو لول تے خواو سات 
تا س ہوں یاو »گیگ کف صر ف تر اء ات سبو رل زرا بلاط 

تسا روف پتل ردقا ۾ 


اللمعان شر اردوالتبيان 148 
اا سے می سب سے ز یادوٹ اب کے کن حضرت ار یں ء اڈ ہک رصت ہہ الوک 
رده لش ہیں جنہوں نے ق رآ نکر لو کی“ ۔ 

شیج ق رآ نکا کا م ایک اہی یم دای منقب تک ورت اختیارک گی شے جا رت یش 
اخراف اف وگ رائی بیس رت الوبگراورجخیز ول میں حضرت زی کوانڑھ الفاظ اورد ول رذ لف 
کے مات ذکرکری ر کی روان رم مو 

> آنا رت الوگرصر لی کے دور یس ایک کف میں کر ےکا ہے 
مطل بت لکلا کرام رضوان ارم ن کے پا پیل ابی مما حف دہ ےجن 
مل ا نہوں نے رآ نلک رگا ہد کول مج رآ ال بات کے مزا نین نکر ساب 
رضوان ای شیہم کے بای ایا کول نا کف ہو الیت ز بروست ہین وف ضور 
اتل وخ آیتون ما روت کک رسای جما امت اور سارت جرفوں سی ت راء ات 
سب رکشل ہو ےکی جو تح میات جیی اک زر یکا“ حف صر ل کو کل ہوکیں ہے 
صوص یات دور ےم صا حف ال کر کے_ 

حطر تی فا ہیں ا نک ینایک خا کف تھا لوا نو حضرت الور 
۱ صر ان ٍ ی خلافت ترا ایام کھاءانہوں نے دز مک لیا اک ج ب کک 
میں است لور لول ما کے علاو مر سے پا لو اعلام سوت مج بن 
رن اور او “و رہم اللہ لف کیا ےک ووفرا ہی یک :خضرت 
اوک رصد بی ٹل کی خلافت ابر وونل جب ححضرتپلی بین لطاب فا 
کر کے ہوک ر رو رتو ححضرت اوک رد بی ٹلا ےہاگ اکم انہوں ےآ پک میج کو ۔ 
پگ لکیاء(ااس ل ےکر ے با ہنیس کے )اس رح رت ابوکرصد یں و ا نکی 
مرف بلاوا ادرف ایا ہکا آپ نے میرک ہین کون پئ کیا ے؟ توحضر تکل وه 
جاب د یا :یش نے ایکا بکودیکھاکہاس رز ید کی جارہی ےآو مش ان 
ول ٹیس پا اراد کر کہ جب کک بل اسے لورا کرلوں ای چادرسواۓ ناز ار 
وکا( کرت با ری کو ںک) رارصا سا سےکہا: ہے 
۱ قآ پک دابانگ چا 


اللمعان تر اردہ التبیان 6 ۰ 

ا سےمعلوم ہو اکا نکا ایک ال تج نناک ن حی اک اہک ہی رین رتاش 

مرو هک رال میں نا او رورغ ولو مکی آ یات »ال لے وہ کف» مج : 

صدا مادقا 
سالت مس ترآ نک ای سحف می ںکیوں کج نی ںکیاگیا؟ م یہاں 
سوا کر ے ہی ںک یق ما نکر وروی لف یں ایک صحف کے انر رکیوں ع ہی ںکیا 
گی ؟ اس سوالی ک ےکی جوابات د یئ گے ہیں جور ذ مل ہیں : 

جواب اول: ظ رآن یا گی نزیس ہوا فرت طور ازال بوا اس کے 
الک کر ھل نزول من تا 
. تاب دیم: :ع ر نوی می ضآ یت سورخ مون ر ترش 
س قات ای کف ماکان کرم کے کن بو ۳ 

جوا سسوم ٦:‏ یو اورسووتو لگ تر تیب نز ول کے مطابق ی چ ابش ہیں 
تی کات مش :زل ہدس پک یبش مووں کرو اور با 

وب می تید یکا تقاضاک رت ے۔ 

واب چ زی وق کے تدول او رآپ کٹ کے وصال کے ال تک 
تفه یی کل شک د کا ےک رآ ن مرک مکی سب ےآ خر زل ہو ے وای 
٠‏ آیت نازل ۲وک وہ اشر تھا کابیارشادے:طواتَکُوا توما ئزجغۇن فور لیک › 
ادرآپ ال کےنزول سک راتول کے بعداپنے ربک جوایرمت طرف رعلت 
فا گے * چنا ہآ دی وتات کے انیت یہ تیذا سک کر 
۱ ول کل ہونے سے نرق 

جوا بم :ا ایک کف س نے کے جس رع اسپاب وال عرص لی س .. 
سے کے ا سے پل ال طرح سک سابل یاس گے ء چام پیل ملمان ان 
0 ,۰ئ ۱ 
کال ں تف گرا مکی شہاد تکا وا قو یآ یل سےححضرت ابوبکرصد نی( ٹکو 
مرن کے فیا کا خرف لاق ہوا 


اللمعان شر اردوالتبیان 0 _ 
فلا صتےکلام ىہ ےک یق رآ نکواک راس عالت سکیا ہا جم نے بیا نک یتوجب 
کی کو وا تح ہوتا )کو وا قروا وتو رآ يو یکا ہرف بن اج »یزاس 
دور کنات کےآ لا تھی میس رنہ ے ادر مالا تک پرا ےک وچو کر جوف 
راتس هاگ ار ان هک اي رون از فتاه 
کن رت جرقر آن ےتا م نا زل شد حصو کرد تا لگن جب اس موابل نے تر نکی 
کیل اوررسول اللہ یه وصال سوق ارام سے ینان وکا اور تر تیب 
معلوم ہوک یتو یک حف می ا سکع کر کن ہ یا اور ہے ہی مکام تھب فار اشر 
خضرت ال برص ان امد ا ءال تھا لی ال رآن اواب لق رآ نکی طرف ے 
رن برل عطا فر ا یں 9ن ) 
تا س رن : حضرتعثان فا ےد درس رآ کاب ب رص بق 
کو وق چو وا لے سپ سے لف تھاءعہ رای میں ف مات الام ےکا واه بہت 
یاد« م وکیا لان دوردور کمک اورشہروں س کیل گے او را لا ئی علا 3ے ش 
سے ہرعلاقہ کے اندرا “ھا ی کی راء تش ہو ر موی جات رآ نیتم د اکر ہے کے 
ابل شا محرت ای بی نکحب باک قر اء ت اہ کون خر ت بدا زنر بن مسعود ٹاڈ کی 
قراءدتء اوردوسرے لوک حمر ت ابو موی شعری ٹلا کی فراعت میں پٹ نے گے اور 
ان کے درمیان تو فک ادا مک اوروجھ وق راء ات یل انتا فک بناء هتسه 
کاو ہت" گئی اوراختافی تر اتک افیف وسر ےکی رر نگ 
رت اواب بت مرول س کر وه ترا 2 :"رت عان پٹ کے 
دورظافت ٹیش جب ایک من قاری صاحب نے ایک سا فراعت اور دوسرے 
معلم نے دوس ر ےسا یقرت لسکھانا رو )کیا تو چ جب باہم کے تو اختلاف 
کرت یہا کک ہے بات اسا جو اود ھا نے والو ںیت کت یو ایک نے دوس ےکوکافر 
کہنا رد کرد یا ۔ یہ بات جب رت اکآ پ نق ر مگ اورفرمایا: 
ؤ2 مرن ری ہوک ری اختلا یکره ہوتو حول کر ے رئا وولو شر بر 
انتا ف کا ششکارہوں گے۔ ۱ 


اللمعان 2 راید ا ات ۱ 5 
انی اسباب او رواک بناء رر ت نان تن ای که راے اورخلصات وی 


گی وج سے بیخیا نک یاکرلوکگوں کے درمیان شاف اختلاف کے وٹ ہونے سے پل ی 
اقا لک ونر گرا ںکا ار کک رل مادرمش کے لاعلاح و و 
سےا اکیا ڑچھیگیںء اس لیے انہوں نے کارا اورا شیا شل ویر تکوش کی اود ای 
اور لاف سک سر باب کے با ہے میں ان سے شور مکی رتو سب نے متخ وه پر ہے 
فیس ارک اک ام رامو ن چندمضا حسآصوا میں اور لب اور مک طرف ان یش سے ایک 
ایک کف د یں اور وگو ںکوان مصاحف کے ملاو ہد رتا ممصا حف نز رآ کر ن ےکا 
گم د٤ا‏ اک وج« قراءت مل وہال تزار] اور ایکا کول راد نہر ےلو آپ ` 
2-0 ا کیا تر اردا کو ف کے گم دیا رها کرام اورک جنات کرام فا 
طرت زی جع شابتء معظخرت هداهن زیر رت سعد من العال اور ریت 
ران بن ہشام شا کی زتهداری سو بی بحرت زین ایت ٹڈ کے علزد وتام 
یاجرب ارس تھے کی ز یز ٹل خودانصار مل سے تکام چوٹیں 
مرکا راضعام پا یا ریت تنس ان سب ے بیف رما الک جب وجو وفرا عم تک 
دجو ےکی وج تھارابا م شل اتف ہوجا ےتو ےلت قریش مسآ 
کینکت رآ ن تق لی کی لخت میں نازل ہوا۔ 

رت عفن ٹڈ نے فص بشت گم لاس درخواس تک یک اسے وه گف درے ۱ 
درس جوان کے بحرت اب وکر صر ال کرد‌موجود + کروه اک چثر 
کا پیاں این پراش وولوٹا دی گےء چنا حفصہ ا نے ان سک یل 
کروی۔ِ 
دوزئالیٰ میس میق رآ نک سبب امام ارک ماس فرت انس مین ما کک 
سکیا ےک دہف ماتے ہی ںک ابی امآ رم اور آذر ہا ئا نکی کے لے ہل 
را کے س اتی کر جارس مشغول ے» (حضرت مذ ی 9 ی اک محاذ پر کے 
1٠‏ () اس سے مرادی ‏ ےکراےےق یق رم اظ مالعا جاسے بر ی لشت ما امیش ارس رم 
انب پراختمارکیاگیاکیش رآن ایلفت ےمان ات اقا 


7 


اللمعان مر اردوالتبیان 152 


چےو رسےے تچ یچ چچ۰_ چجچج یچچ چو چ re‏ 
وال )اپ کوت راء ت یں لوگوں کے اختلافی نے پر ای او مراب یں بت 


کرو یا وآپ رت عنان ٹا کی خدمت ںآ کر شکیا: یا ای الم و تن !اس 
ام کین ریکل ال کک کی مبودونار کی ط رح ا کناب یل اختلا یکاشگار 
ہوجاۓ بل حضرت عفان او حضرت حفص ا کے ال پام یی اکآ 
پاک ج نے ہیں دہہمارے یا سح دج ہم یں دما ہف مرت کر کے پو 
وای رن گے رت حخص ہے وہ یف نحضرت مان ٹا کے ا دار 
حضرت عثان فلع ت زید بن مامت + رت ان زرح رت سر کن 
الحاش او حر ت کہا ن بن ایرث جن ہشام فا ون سک کر نز مدز 
تبون ا کلف مصاحف قل رد یا اور رت قیقر ری سیا بے 
کرام ی بعاعت فر مایا: بالق رآن کشا اور زین 
ات کے درمیان اختلاف ہہوجا ےلو ا ے لخت ف رل 7 ی کول ثرآن الیل 
زان نازل »وا چناغچانہوں نے یبا یکی اور جب انہوں نے صحف صر یکو ۱ 
رجف می أق لکرد وتان ٹن ےسیا ف صلی ووو پار 2رت حفص 
یلٹا کرد کرو سے اور معلا شق کرو ه ول سے ایح نود ی یزاس 
عطاوه شم کف ںکتے بت رآ کییز رآ کر کی صادرفر ای - 
کے اور کا مرن مھ 4 کی ِ 
ملف راون ےت کے مطابق انمہوں نے اپنے شا پچ وس 
ووروراز ا کک میس بی توتیقت ے غ وآ لکی دض لگ ایت رامو ا ےکی را گنفت از 
دی اور اول ندال او ری ول نو تآ :ان زول ریک "8 
ایے لے سارے عالم میس چھیلا د ے جا کی جس می سول روف ہوں اوراس دک کر فی ہکیاجا ےک ایی 
تراسج ےاوررک مال ۶۴ھ ال‌وفت‌معارک ٹس میں ساتوں مروف شع ہوں ذہ الیک می تھا سے رص رف 
اي دردرس راد خلت رای لآ تک اجکی قرع 
رن کااہتمام تقافر ان هاچ لانت می شی شا نکر نام انجام دیا۔ 


اللمعان ردو التبیان 153 
درمیان فرق تہ زور کلام ے تم کے صد لی اور عاف کے ورمیان فرق ان کے 
الاد رد دی س ےک رص د لی 013-٤‏ کل رر بات 
:اسف دروکر شیر خر( افو 
وت وفیره کھڑوں ش مول »الک سیب فا کرا مکی شا یی ین خضرت 
ن ا کک کہ رص دیق می شع سے کف چفق لت روا ےکا م 
تھا کہا سے اسلا ی ا کک میں ییا ہا کے اور ال ع کا سب ب قرا ”را کا قر اء ت 

رآ نکی دونش اختلا ف تھا واش کم ۔ وکل اس جرد لور وم 
(۱) رت عثان ف قرب کے کے اما کلت مج کے کے لے تارکراۓ ء اور صا حف پار هار 
اہ کے انار ےکی کے کک ریک صلخا ایک تلاوت کے لئ رک لی ادر در نے مین سیت بڑے 
بے شرو ں یط رف روا نکر درۓ ا اکینام ال سے ان نوں مقاب ان یا 3 ق لرش_پزارل 
کف کے سعلم ز یبن ثابت ٹاو رکون کے او ار »ری کے عانتما ی کے خی رون انی 
شاب اور داش تن ساب نها مما حف خان یس ےو کف ال ونت ون لکفو رن » 
ایک تا شقتر س حےاوردوسااتفبول ںوکشا جور عفان رونت شہادت تلاو تکرب کے 
.اب کی وو اشقن رش کر اش تفوظط سے »اور گنت والول کے مطاب ن7 بت:(فسیکفیکهن الله وهو السیع 
العلي م4 يركن انگ رون ےکاخ ت ہیں (مفا لا 
(0) تعن ندرج یل مکی مگ 

...نکر وایک جلد یش ٹین رین کر کی جج ص لقی لک فکیفول اور اورا قکی 
هیکت( ۷ 


۱ کم دلاو 
٭... ہ رآ نگ ری لآیاتالطر تن انس ماجائمیں۔(علومالقرآن) 
...لضاف بی افتیارکا اگ( علوم القرآن) 
فا رہ: حر ت تان شی اد عنہ کے ناو کار ناس کے بعد امم تک ال انار ےکر نکر رما 
کے ظا ف ھن ازس الہ جب اسلام شی ما کک یس اورز یادہ یلتو لے او رت کا کی ضروڑت اور در 
کل ارت وتو ول 


08+0۳ دول و یز کر بر 


اللمعان غ اردوالتبیان ۱ 14 


شی کے تحرف ک اوه یر کے ے جاور کے لے سا نے ایک نقط الا اگیا۔ 

۲-ال بر وگول جات ےق چترعلا اور یدسا نیل بن ارز ایر لی 
رح ال فیا کا تکام رڈ جطر 3 اکا 

اک کے پا حرصہ بحدحاجع بن لوس تک فر بل رت رہن عام شی اور مر رت لد نے 
تلاوت س ہوات او ہی شس مرت کے ے بو ےت رآ نکڑقطوں ے قو گرد 

حطر ت کہالڈ رن عا ہنی لس م روک ےک تضور لالم ےر ایا قآ مید 
مکیکروہ س نے عوت لکیامیرے تلاوت ےر ایا کات دن م مکرد اور ال پرز یاوق کرو 
شایداک سے اف دک ےتاج کےز مانے متس پارو ںکی اصطلاح مقر ہوگیء جوسورت فا کے لوبق لی 
کات کےشیار کے موا ساوک یا تریب ببسادکی »رب ارہ کے چا رس کے سای لے ارم قجہ 
تفون شیع( چت )نف( ٦د‏ ے )لف (تھائی )کے ےار روف کے اعتبارے در ہیں۔ 

+ - می و ایک ہف می لتق نکی تیب این رن ماش رف انش عد کے ے مق رذگ 
ب رکف اپ اشم ای تیب ےنا یتیل پ بد ع2 تے شایرمنازل: ی برق یرام مقلاےۓ 
شوققرآن ہے )ای اعادیٹ سے اغ دک ار کے ز اد میں ایک تغل اصطاع ینار ہوں جوشب 
جع ے شور ہوک رشب جرا تک مون ی٠‏ فی شوک فارگ سم اتد کیب یاء لن سک ءباء تا 
اس اش لکی ین شع را ءکی واو وال ٹک اورقا ف سورب نک رمو زز _ 

ححضرت عثان حضرت ز ید خر ای او رنظرت اہ سحو وزی ارڈ کنہما کا مول ےتا کے قارا عرو“ 
ےطان ترات ےکک جوک سات دفوں می تہ رآ نک کر ے سے ای عزو کی فا فا تی :رہ 
انعامکیء ایک طامط کی هک کیو تکی بز ام کی اورواووا ق وک رز 

رو کی علاما تماقا ءارعلا باورا اقم نےمقردکیاے :ان ک لق ررکاز ما تقر هه ۳ 

سے کا ےن کے شع کا ظا تھا کیال ت رآن تسوبی ش بکوہوجاۓ »رشب قد دک ز یاه 
اعایث اک رات تیآ ہیں باقن پا سو یال رکو مقر کے تکرب رات س ایک 
رو یڈ ع سے تائحیسو میں ش بکوق رآ نپ ہوجاے ء اس میس دو ہاو ںکالھاظا رک امگیاء ال یک اوق اء 
کڈ شق دار ےم 6د دوم ےک رک ایک لے مون تلو 

٭ - تیف رآنی جلوں »رز وقیرہ ی اشارا آل د سے کے ن سے بیمعلوم ہو کاس 
وق کر ؟کیسا ے؟ ان اشارا تک رموز اوقاف * کچ ہیں ء ان میس ےک رمو ز سب سے پیل لمآ 
رام ونر رص الہ نے نع فما سے ہیں _(م؟ خوذ از ماخ تاز وعلومالقرآن )_ 


32 


اللمعانم اردو تیان ۱ 155 
اتور ل 
فی راورمفس ربن 


انتا نے اپ مقر لکنا بکونانز ل فر مایا اک وہمسلرانوں کے لیے دستو رحیات 
ورای شا ہراہ موی پبردہاپقی زندگی یں روال ددال ر ہیں اورا انی امیس بات 
ہوں ءا کی راہ سے ہدایت پا یں اور ا لک ان عر وتحلیمات اورحیما ضط ول سے 
ستاو ہک یں جو ایل سعادنت وعزت ےی متام رام داب ر یکی بل اور 
کک تاد ی او ربچ رانا تا غل کی تیا دت دسیادت ان ےپ ردک درک وو اقام دنا 
کومزت وشراف تکی راو حیات پر نےکر وا اورانساخی تکوان وآ شی اوراس ام 
ےکنا ر ےتک ماد ین وانے ہہوں- ۱ 

ال اون کی سک انام تآ نج بش اود ابی تکیاگھناٹوپ ان رھ راو لس 
ام بال مار ریا سے آززادکی اور مادہ ی کے مترروں می خرق ہے اورا لاو ال 
مشکل سے ہکا لے وال اعلام کےسوا او راون رک ںآ جاء جک ہق رآ کی ان تخلہات اور 
ما ط لقو ںکی رشا کے زر سے ےا کا جات دہندہ بین سکتا ےکر میس بی 
ور نانک سعادت کے لے خا کا مات اور کت دا نے رب کلم کے مطاب ق تام 
عناص رل رعا تک اے۔ 

اور تاج ےک ان تخلیمات لت رآ نک یکن ای کے معالی می ورون رکرنے اور 
ق رن یل موجودارشمادات وتا رقف ہونے کے !عر ی م وکا ے۲ اور مور 
ال وت مک نیس ج بک کآ یا قآ دلولا ت اور معا نی کو اورت د 
گیا جا ای دہ یز ےہ سی رکا نام مد یں ٠‏ 

صوص اا ںآ غ ری ز مان کل شی ری بیا نام اسر اور می تک تصومیات 


اللمعان شرن اردوالتبیان ۱ 16 
یار شکارم وس ایی کیخوداءناعحرب کی نایور ہیں !چنا رف ری ے جو 
ال‌مقرل کاب کےاندد لول اوروفتو ںکک رای کے یکی ےلوگ تس 
تر ری ت رآ کے الفاظ درا ےکا ہتما مر اور روز ان وشام ا لکی تی ں تلاوت 
2 رو ں یر ےلت ران ذخا الوں ء اور ہیر وتو لک کک کے _ 
اورانچائی او لک بات ےک سلما ن عر ف رآ کے الفاظ رتارف ہیں 
کہ ایل دہراتے رت ہیں اوران یں پر قاع تک لی ے ہیں و سو کک یعفلوں, 
مقبروں ارو ارات لسکا قمع سے »قآ نک ان کے ہاں 
ماع سے اطف اندو زک با تلاوت رک ماک لک نے کے علاو هو مرح ر باء اور 
آپ ظفل کے اس اراد _- کی مراد ےک ہآپ ا نے فرمایا: سز ون القران 
رام “ین لو کق رآ نکورامیر یناش گے۔ 
لدان ہے بات ف رامو کر گے ہیں یا زخو دبعلا دیا ےک رآ نکی سب سے بی 
برک تتو اک می قور ولک رکرنے تالک راہ سے ہدایت چانے اورا یکی تلی مات و 
ارشادات سے استتفادہکرنے ٹیل اور لاحم ومرضیات ےآ گے نہ ب گے اور 
ا کی تا ای مقابات اورمنمیات سے دورر نے میس ہے۔اللتھال یف ماتے ہیں : 
مرص ا ارت ات ےکم اب رال واسےناز لک 
د اک لوگ ایآ تون یں قو رک ری اورا ہک ایل تی ماس کرت 
(ض:۲۹٢)‏ 
اور اشاد پاک ے: اقلا یتدیرون لزان آم غل فلوب فقالها 
یں ۱ ۱ 
Ty‏ ریات رآن و کی سک نے یادلوں رغ لاک ر ے ہیں۔ 
یز فرمان ای ے: ولق یرتا لزان ینکر هل من مک4 
(القمر:») 
:”اورم نے ق رآ لوقت ها لکر نے کے هآ سا کرد یا ے سوکیا 
کوک نیعرس ما لکر نے والا ے؟“'_ 


اللمعان تانود الشيان 157 
رج بالق رال تغل کے مشاہ یں ج یال ساتے ہو کے باوجو پیا 
سے مرجاۓ یاا نکی ال ال جوا نکی ہے ج چا ره ادر ال یھ پر مو ے کے پاوجہود 
وک اور پیا یکی وج ہے بلاک ہو جاۓ ‏ اورشا رن ےکیا ہی توب با تآی ے ! 
کالعیس فی اليا يسا الما والماء فرق ظهور ها محموللا 
تر جمہ:* ا کی ال ان اونڈ لکی طرر ہے جوجگل میس پیا کی سے ربا 
کہ پا ا نکی و پررکھاہوا ہو ت2 
آتحضرت تون جب فرای ول مایا : نم تہارے درمیان دو یز سی 
وس جار ہا ہوں :ج بتک تم ال ویس تھا ےرہ" کے می ر سے بح دیج یک راو نہ 
ب گے اور ہکا ب القداورمیرکی سنت ہے“ 2 ۱ 
2 ئن کے ول کرت ںہن کت 2ا کل 
ت یں اور ہر یکی سوج کی گر کرت ای ں کم رآ نکی کیو لگ 
ڈیں؟ ال یی ےک ہا لک راء ت وتلاوت من پی ار ناور ارت حاص٥‏ لک بی ؟یا 
اس ل ےراس کے پوشیدہ معانی گی پرد کشا یکم ہیں ؟ یا اس کے راز و ںکوظاہ راورگا نکو 
کھو ل کر رکرو ں؟ ۱ 
۱ میں ہیں درف با E‏ و" 
بترو ںکی ری اورانسا نکی اطا عت ےکک رتنا مانا نول کے پورگ وا رم 
وا لے تن میں ءاورفردو جماعت دوفو ں کا رشت ام الک تام وتء بت نون 
2 لک ارم کے رب سا جو دیی۔ 
رآ نکریم اس تک نخان طرف ے رشا اور ال زی نکیل ای 
شریعت ےءاوردہایبار بای نور ای ناور جزل ابی انون ے ٹس نے انا نکی 
اچ دی نوک مات می تنم رورا کوٹ رگا »وال کو ی تچ بکی 1 
با تن لک دہ ایک ایک ل کاب اور بم گر ظا م سے ج عقا نر وکباداتء اظاق 
اعت گر اگ ی ی فقوت 7 
تا مشو ںکوشال ے۔ 


اللمعان غ اردہالتبیان ۱ 16 

سو ہیاک جا ماب ہے جوا ٹم تھالٹی نے اس لے نال فر مکی ےمردہ(دی نکی 
تام باتو لیا نکر وال اور( ضا٣‏ مسلرانوں کے لے بڑ کپ رایت اور ب ڑگ رمت 
اور( ایا نک )خر کیاسنانے وال مو اور وہ ان تام پاتول بت تیاب چھری 
ہوئی سے انار ولا فک شکاریس ہوثیءاس لیے اس ملک تیر تک باتک نکم 
اگرسعادتکا انا کاش قرم پر لے ادراس کے لا سے ہو سے احکامات پر لک نے ۱ 
کےسوائمکن لہ ہہ بل هلاب دلوں میں ہو نے وا لے سر وگول لیے شغاء اور 
ہی وی ار کے انح فاد لیے دوااورعلا رع :وکل 
من الا ما موشقاء وه موی ولا تزیل الظلینی إلا خساژا4 
۰ (الاسر اء:۸۳) 


رع اور رآں یرش یس ابی زی تاز لک ے ہی ںک وہ امان والوں 
نم ستو شفاء اور رتت ے اور ناانصا فو لکو ا ے اور الٹا نتصان بڑھتا 


سک 
ایر اورا وبل می فرق تی لت هل" ار وضاح تک ےکچ یں 
انش تیل کا ارشاد ے و ینت ك مکل ال جنك پاي اخس خس فا4 
(الفرقأن: ۳ 
چم اور یل ککیسای تیبسوا نآ پ سا کرم( ) 
میک جواب اوروضاحت میس( ھی بڑھاہواآ نی تلد ہیں“ 
چنا نہ اد لت" کاس ہے اس نے ترتع اود وضاح تک ء اور کلام 
عفر ای وا دق رام اور یر اسطلا یف لول ے: :”مُوَعلم 
رف یہ هم کاب الله لعل على نیح صلی الله عليه وسلم بیان تیه 
وَاشیِخْزا جآخگامه ؤجگمہ“ 
سے ہے ٹس کے ف ر اشک ا سکاب کے مو مک مھا چا ے و 
انہوں نے اپنے نی حض رت مھ مخ پر ناز لک ء اور اس LÛ‏ »ال کے 
ام ری و و 


۵ 


اللمعان شر اردو التبیان ٠‏ 159 

ادخ دوس رے حضرات نے ا کیت ریف یرل ے: ”و عم لفحٹ ننہ عن 
۳۹1 آن‌الکر یمین یت دلالته على شاد له تال ۳ هیر ی 5 
بک ت علق رو ۂللم ہے ٹس پیل اناف طاوت کے بقزر رآ نکر یم کے بار ےل مکش 
کی جا ےا ی ور رکو وانش تا یکی مراد پردلالت کرت ہے ا ۱ 
ا ولک :لخت یں تاویل' ول“ ےشن ےی ےکن )لافس 
ای تکوافظط کے تل مان کی طرف لوٹ جا اور راخ عکرتا ہے۔ 

راعش علاءکی راے ہے س رتاو لیر مرادف اورم کل ہے اکا کے 
صاح ب قا مو فرماتے ہیں: ”اول الکلام لکوت" ٤‏ ن ے: "دبره وقذرہ 
وفشر ی ال کلام لن رکیاءانداز وکا [ِ_ یاک 

اور ایک می اشرتحال ک براشاد ے: «یکاء ال ایا لب 
( ورن میس )شور عون ےکر سےاوراس کے(خاط) مطل ب وونل نوش 

اوراصطلاع میں 'جاو یفن مین کے ال یر ےم سس اک ےتا ول 
ق ران اورفسب رق رآ نک یکی بتایا جانا ہے علا اہن بر یرب ری رم اللہ اقفر 
(۱)نقمیرنے جب ایک مرو نم صورت اختیارکی او تلف بباوول سے ا یک غرم تک یگ تو ایک انا 
و دارم نگیاءاورزمانے کے تقا ضوں کے مطا بی اس می ںتخصیلا تک اضف ہوم چلامگیاء ا تقر 
جن یلا تال ہے اہ کی اصطلا کیا ریف بی ہے : 
”علم ببحث فيه عن كيفية النطق بألفاظ القران ومدلولاتھا وأحکامھا الأفرادية والت ر كيبية 
ومعانيهاالتي تحمل علیهاحالةالتر کیب‌وتتماتلذلک" ۱ 

"مومس مس اقآ نکی ادن ےط یق ان ےمان کے افمرادگی اور کی 
اکا م اور معا سے بن کی چا سب ج ان الفاظ ےکی عالت مس مراد 2-2 ی نی زان سان کا 
گل :نا وضور شان نزول اور قو کج کال میس بیا ياچ : 

الا وق رآ نکی ادا کے لر یتو ںکی محرت کے لعل قرات ما وی رفس 
تالف کے انف راوکی احا م مادہء ون او روص ہے" مرف + کی اام اوران کے 
ما اع جو او یلم معا کی عالت الا هو ےنتف نوم سے مدد لی جاتی 
سب اور مھا کےیگملوں کے لئ یام دیش ےکا لیا جات ہے ۔(علوم انقرآن ) 


¢ 


اللمعان تر اردوالتبیان ٰ 10 
میس ذکرفر مات ی ںک: "لول فی ال قوله تعالی کم وا ختلف آهل او فی 
هذه‌الایة؟ سی عا رتوں یس اب تاو بل دراد لتق ری ہوتے ہیں“ 

او رکاپ ر رح انل کا قول ے: ن الْفلماءیٹلمز' تاویه > ن تک علاءال 
( آن )کی تاویگی جا ہیں“ ا نک مراد ا ےق رآن ےکی رب 

اورعلاءکی ایک ماع تک راسة یس کلف راورتاویل ےوران 7 7 

موچور اور ٹر یرتا بین کے پل شہوردمخروف ہے :دوب یک تضی رآ تہ مبارکہ 
ظا کک کے ہیں ج ولل متحددمحا لی کا حال کت وا یآ یت مپا رکش 

ےک ای تل ی ورا قراردہی ےکانام ے۔ 

علام سیو رح اللہ نے اپ یکا ب ” الاتقان في علوم‌القران ںول قر 
میا رک کونسیل سے دک کیچ اورلا ۓےکرام کے ببت سے وال ل 
کے ہیں م ان بیس سے چا رن او کت کے ز یاد مترپ تو لکو زک رک نے رتفا 
کی اداد یپک کچ ہی ںکہ: 

”تی رق مان کے اہر یمن کی پد مشا ےجب تال آ ات میا رکشل 
فلا بپشیره معا اوراطیف ریا مربت راز واکان م ہے ج کان کنا ں علماء نے 
استلباط واخ زار کیا ے» علا ہآ وی رح ادڈدجھی جما ری اخقتیارکردہ رائے کے قائل ہیں » 
کنا ن کے نف سے کار ےکا لن فک 
ال سے عارش پا کے دول پر بر نے وانے مشا کم قرس راو رما رف رہا یک کت 
ی فی رای مادم ۱ 

خلاصکلام ہے ےک فی“ رآ نکریم کے ان تام ری معا یکو کت ہیں جوا ا 
عر ول مادک لا یکر ےش وا ہویںء اور تاو ان لو شید معا یکو 
کے ہیں جوآ یات مبارکہ سے متا غور وکر اور استطباط کے متاخ او رل مان ےل 
بے ے »مس قیال وات رال ط رشان یش سے ز یاددقو یکوتر ی دیک 
ا بت جات و میس ول ؛ کہ یمسر کے پا لا اور وکین کے 
ان اد پرمراد هناب 


161 


اللمعان2 تارودو التيان 
رش او ولج ال رات اک : 5 


ویو »تن ان( ) طلب رن تال اول اور 
کل مان 
تق کی اقام :فی تک ھی طلا کے مطا ین مین ایس جیا نکی ما ہیں: 
اف یریسم طقول لش ال رج کچ ہیں۔ 
یر پال رایت اورا سیر کی یکهاجا باس - 
لف یا شا 7ء ال یغاد کے نام موم کے یں۔ 
اوراب ٤م‏ الع شاءالتہ ان ٹل سے بر شم یل یا نکر تے »اور 
کلا رود و کلام یاو روا گر ۔ 
1 بل سم تلق منقول :فقول وو روا “یو رآن وسنت یا کا بررضوان الم 
کین کے اقوال میس اٹہ تی یک مراد ہیا نک ےکی کے سضت نبو ہے کے زر رآن 
یر بیا نکر نے کے ےآ ہدہ چنا کی قول یاوق رآ نکی ق رن کے و ر بیتاقیر 
بی رت ری وت 
ےم روگ اقوال کےذر ینس موی _ 
الف ۳ نان از نکی مثال ارت شاد :(أجلث لت لگ 
ية انعا إا مايل لک عور لالص4 (المائرة: ) 
ت جم :*تہارے تام چو پا سے جوانعا م کے مشاب پر سکول( اوینٹفء 
LJ KEE‏ وا 2 ان جنک کر E‏ 6 
چنا اش تعالی کے ارشاد: اما ئن علَیکره شیر دوس یآ یتمارک 
مس کی ہے جک تال کیان ے: سان ت عَليِکم اميه وال وک 


(r: eT 
خر تہ‎ 27 ۱ 


اللمعان غ ارردالتبيان 162 
اورای‌طر اشتحا یکافر مان ے اوَالشباء والگلاري€(الطارق. :1( 
چ ا خا نکیا اد رال چ زک جرا تاودا ہے دال کے“ 
اور اک سورت تلا یکا و «الیْجُمُ الاب ن کے ره 


سح کاب 
اور اي طررت اللہ تیال کا قول > :مکی اکٹھ من ره کلب قتاب ا 
یو (لبقرق:»۳) 


تر :بعد ازاں ماک کر سی ےآدم نے اچ رب سے چندالفا تو اٹ رتی ایی 
نے رت کے مات تو چ فر مائی ان ر( ن تو قو لک ی )“_ 
eS‏ 
2۸ را کُلَبتَا انفكا وان لُم تففز لکا وکڑگٹتا 


لکوتم من یمق (لاعراف:۲۳) 
ترمر: ۳۷ 


72 پ ارگ خقرت نہک یسل کے اود ہم پر تم تکرب کےتو وق مارا ہڈا 
تا بویا ی 
اف رق نی کی ایک شال اللہ تھا کا رگ ے :3 0 رده یاج 
بر (الرخان:۳) ۱ 
ترجہ :نم نے ا سکو(لو رفظ ےآ مان دنا پر) ایک برکت وال رات 
میں اتاراے '۔ 
اورمپارگ را تک شیر تال ع بارش :3 تزننه ن هلر 
یں شب قدر ےکی ے۔ 
اوراں دی 9 مشیر رآ کدی 


1 رس ورین اه اور 
لسو اا اتی یلم وله امن وَهم مُهْکَدُوْنَ (لانعام: (r:‏ 


اللمعان 2 ب‌ّارده_التبیان 163 
رج جولوگ ایبالن ر ہیں اوراپے فانک کے ات رتش ملاتے 
الیسوں تی کے ےا ےاوروی راہ پر رے ہیں“ 
اور اپ خی رک یہید یس ان تال کا ہے ارشاد ج کان رن الھ رك کل 


عَظْية 4 (لقماآن:۳) 
ج نفک شر فک ناڑا ہار کم ہے“ ت 


اور اک ط رع آپ ا حاب“ ھی ری یرعش سےف بیسن ایا لوصف 
موک کرت اورا ے اھا لک یاود اکرانامراد ہے اورا لگ ایل ہے ےک جب 
ی ا ات 
لإ گیا ا سے ع زاب دیا جا ےگ تو سیر ہ عا کہ کے کیا یا رسول الثر !کی ار تال 
نے یرل فرای: اا من وق کنبه بییییه قسوق بحاس چتاتا قا ` 
وینْقَِب ال له منر ور ۹(لانشقاق: ء) 
ڑج“( آوای‌روز) رسپ تام اعمال اس کے واس پاتھ میں ےکا 
وا سےا مان ھاب اا اک وہ( سےا )چ تین 
کے پا تو وآ ےک 
( ن ا ںآ یت می و موسین بھی حاب لی کا کر ےت کی کی مزاب 
دی ماس گا؟) چنا رآپ نے (آسان صا بک فی کر ے مو سے ) فرایاکرال 
مت شی مین پران کے ها لک کرت مرا ے )اور وو جس 
اب لیاوا خر ابد با جا ےگا“ 
اورا کم آپ اڈ نے ال تا لی کے اس ارشا می سلوج رض یافیرنازخھر 
ےرا :ولوا عل الصاوت واللوة ايى ° وف ره فیینی» 


(البقر۲۳۸:8) 
تیم حافظت کرو سب مازس کی ( ٹو) اور درمیان وال نما زگ ۰ 
( صوصا).- 


اور سورم فا کر میں: ٹالمغضوب علیہ م4 اور «#الضألین4 ک تفر م9 


۱ اللمعان شرع بیان ۱ 194 
قاری راق ۱ 

یآ بات مہا ر کک تیر ہو یکی ایک ال تضور خلا کی طرف ے ال تا لی کے 
ال ارشاد :"یدق" کل وضاح ت گا :رن آخسوا الْشلی وراد 


نت ۳۹( 
مج ن‌لولول نے 2 71 چان کے وا سے جو بی ( جت ) »ورب 7 
۳9 ی 
کراپ ا ے: زیاد8ۃ “کیاکی ریش فرایا کہ ای سے مراد بکرم کے 
مارک چر کا دیدار ے۔ "للع اجْعلنا من المخسیین ال لهج الخشنی 
وزیاده- 


اور ای طرج حور تلم نے ایر تی کے اس ارشارش: 9 8 فیر: 7 
ری '(تیر اندازی) ے ا ے: طوأعڈوا لھم مااستطعتم من قو 


«لاتفال:۰) ۱ 
زر ”ا نکافرول هدرم وس سس 


٤ 
ا‎ 


چناپ /_ذفر ای : "لا ان القوۃالرمی, لا ان القوةالرمي ۳ ورستکن 
وروت ند زی نی ےب بی رگن لگز گرا وق تو تیراندا یتیاس 
ای رح اللہ تدای کے ال فا نکی تفر نوی ہنومن حرف 
اَْمَارَمَڈرالرلرال:) 
رم ”اس روز (زمین) اب سب (ائچھی بریا) رب نے کے 
گی کاپ 9 فرمایا: ”کیا تم اب رز منک ر ںکیا ہو ںی توا 
می رام لقع کیا اکراش او را کا رمول ہی زیادہ جا کے ہیں :تو آپ 
راا ین ہرم ددگورت کے فلا ف ان تھا مکا مو لک وی ےکی جو 
ہوں سالک پر کے وہ کی ےگ کرو نے فلاں فلا دن ایا کم : 
اور ان تفا سیرک الیل بہت زیادہ یں علا م سیو رم الد نے اہ یکتاب: 


0] التسيان ۱ 15 
"الاتقان فی علوم‌القرآن 7 Tg‏ 
ےا ںی طرف رج کا اس 

یهد یی :”تضق رآ نی ا وی بوی ا شی رک اش سےسب 
ے ال دا ہیںء اوران کے مقبول و و شک وش یں ال وج 
سا ےک اش تال ایق مراوکوغی رم سز یاده جا کے قل» او کناب النرسب سے چا 
کلام ے؛ کک اٹ دون کے مان سے او تی ا کے یچ سے اس می دائل 
و سکب 
E‏ 
کا میا نکیا ے اود بتایا ےک ہآپ و کی ذمہ دارکی ی وین ے: ۳2 انرا 
لَك الل کر یلاس مازلإ «لسعل:*) ۱ 

WT ROE رح‎ 

کیا نارآ پان پرظاہرکزدیں“ 2 

اذا شرع رجش بھی رسول اللہ ملا سے رابت سند کے سا مدکی ہے اس 
کے چا ہونے می کون کرک وش کل اورال داماد هاوگ را ری ی 

...ارام رضوان الما ن کے 

تفر مانو ری اقام سس سے تیر یم رہ ال ے جوک نی اصی ہی“ کہرای 
ہے سو" یی ایک تر وتو لیر ہے هبو سی رام ملق _ذ سول | 21 ی 
بت اغ اک آپ ٹلا کے ماف چش یراب ہے وق دقن کےنزو لکا 
مشابد هیا ساب نزو لکو پان لا اوران کے لک کی زک بفطرتو نکی سل اور 
قصاحت و بلافت هلان کرک رگا ارس کک کے 

بل اوراں ٹم ان کے رازو کو ق سےزیادہ جاتۓ والابنادیا- 

۱ اام عار ال کا تقو ےک :ا ا ی کے نے وگ ار آن ےول 
کامشابدءکیاہوعدیث مرد ےگ میں ہے 

مطلب بی ےک سال یی راس عد یش وی گم میں ے جآ خضرت ] 


اللمعان ر اردوالتبیان 16 
7 راس یی ہو چنا یرال نے ایک میتی اور ہو _ و 
ای تو ا ںکآفی رم اختلاف ے۔ !ضعلا کی راۓ ہے ےک وولضي رو لک تیل 
سے کوک بھی سے کاب ہکرام ٹا ےی حاص لکرتا ےجیک ویرک راے 
یہ ےکہتا لت ی کے فی ربا رآ یکیل سے سق ا کاک مان با مف رب نیرگ 
طرحع ے جومنقول کا اتترام سے !خر رآن کف رعرنی زبان آواعد کے ماب 
یکرت یی 
تبیہ :تقسی مان ری اتا جب رسول تا سی شنم می نی طرف 
موتو وف کی ال وا غ مل سب سے کل اورع وف بو :اي مان رر ذکرکر نے 2 
و روا تک مر بت و کاس 
حافظ اب نکشی رر ابش فر مات ہیں :”تی مآ ڈو رکا کے حصہناقلی نم ک گی رن یہو 

دہ ایرائیوں اور راتان ال لکتاب کے ذر بیج پیا ہے اور ان نا ت کی اعتپارروایا تکا 
کر حص رانییا م السلا م کے اہی قو موں سا توا قعات ءال نک یکمالوں او زا ت اور 
ان کے علاوہ ورا ری واقعات ما ا حا بآبف کے قصہ 7 1 بارے هن 

اک 2 روات مل احیاط ور ایک لان ارے۔ ۱ 
2 یت پالمانور ضیف ہو نے کے اسباب :نی س ہم بیا نکر گے نلک 
تر نکی ض1 نو نگ دک سار نک وف مز نوی سک زر ے 
تق ر کے تبول ہونے می سکوئی شک ے اور ای ان دونو ںتموں ےی کے اع مر 
پر ہونے می لول اختلاف ہے البق رآ نک فی ر تا یتین ڈول کے نقولہاقوال سے 
کی جا ےت وی وج و سے اس لضف رای تکر جا تا ے: 
(۱شرطیلکہو یج م فو هد یٹ کے تالف نمو البہ اگ رسحا یڈ کی تامس باہم اختلاف ماوق 
نمو ےکی صورت س چ روزا کے اتتا ر سے مضو ما را ےکاخ رک ے۔(ہعان داقان) 
(۴) حافظد ای نکش رح اللہ نے اس سلسلہمی تاک دک کیا ےکا فلا ص یی ےہاگ رتا یع کے درمیان 
اہم اختلاف: موتو أن کیلش جت موی او راگ راختلاف جوتو ا لآی تکتفیر کے لے ق رآ کشت 
عرب:احادہث و یآ ارکب ادرددسر ےکی دال مر مکی جا ےگا تخب نکیڑ) 


اللمعانش رع اردہ التبیان ‏ 67 


(ا) یی وجر: روای تکام سل جانا او رسا ہے با انتا نکی ماب ضوب : 
وال !رر کی سے ایق وبا کے ات خل مط اکر نے وال روایا تار زر 


کر کت 
...۰ (۲) دوک وچ رذ یے س کہ ہے دایار ت ا ایلیا ت “سے لب ریز یہ اوران مُل 
سے اکش دی تن ج اسلا ی مقا کر کے متام ہیںء بر ان کے بطلان پر دلا قائم 
۱ زل -» اور پوه روا بات ڑل جوا کاب کے و ر لع مسر ول میں را فلہو 1 ل 

(۳) تسری وچ قول جا ہب کے مانۓ والول تس لوگوں نے اقوال 
7 نا گر شاه گرام ٹول طرف و زین[ شا 
خیعا نمی اک انا پیندفرقہک جس ن ےآپ ٹل کی بانب ا ہے ا ہے وال ضوب 
کرک ن اب با بری الز مہ ہیں اکم دولوک جوا سیون کے نی رر 
یں انہوں نے حضرت این عیاش ٹا کی طرف ام مکی چاپلڑ یکی خاطر ای باق 
مضو کی رن انت ان 4 9 

(۳) چ وج :ٹن شمان اسلا می بن نے جیی اک رسول اکرم مال کےخلاف 
اد یٹ مها رکش ساہشی یل اور با لس اک ط ررح صحابرادراینن سل 
لا فی یبن اوراس سے ا کا مقر دن کے قل ہکو سے سرد پا ارت 
اون کے و رح صما رکرنا ناء چنانچہان سط پناء مت وق کی طرف 
جج ۳ ا رن سید E‏ وچ 
سول تلا 

۴... ج نک یجلف جب فاد دلائل سے ہیی ہے یرو ایات نا قا اتپا ری - 

...ہن کے بار سے یس قاری لال سے دا نک صرت معلوم ہوتا ہواور نہ ی کف ب» ان کے پارے 
لآ پ وکا ارشادگرای ے: ا صت وحار لاٹگذ بوا“ دا نک تر ل ل/ ارد یکذ 

فا و تی ےکی کتاہوں ل چوروایا تکحب الا حباراور ہب من مس قو ل ہیں و اکاک یل سے 
ہیں ۔(علرم القرآن) 


اللمعان م ارددالتیان ,168 
منوب اقوا لکوقو ل کر نے میں نچا امتا پا اورشن 1 وت ے۔ 
علام رز رقا رجم ای رکا ”میا مل المرنان“ میں زوو ہار : لام ز رتاف رحاش نے 
اپ کاب :من عل الحرفان 0 0 ٹور کے ان بہت کد پات ذک رکی ہے امام 
ات اور اہ تھی رتا انش ےکی روایات ڈکرکر نے کے بح رعلا ز رقا رھ اشر ے 
ہیں :اورا نصا فک بات ا وضو ہے ےک تی لا و ری رون یں: - 
.ایک بے سپ کہا کت وق لیت ٹل دلا رون اک شی رکا ر وکر کی 
تنس کےمناسب انریا کےساتھ بے انی اورفلت روا سار یر بی 
با تک لک م اسےق ران کے رست سے دو رک نے کے اباب میں شا مکی »یبال 
کے انا ام انے کک اباب می ایک یب چ۔ 


پھر" ی ویو 
طرب ماس بت سار ےتا ط مفس رین شلا ای نکر اد ویر ہک ہے عادت ری ہے 
کج راکو کر 2 E OT‏ تم نک سے یں اوران یس سے جوخلط یا 
ضیف ردایات ہیں ایس چم وق ارت ہیں۔ 
ہو رمف رین سی کرام نرق علا مہ وی رم الد نے الا انیس درک ے 
فی رل د صا ہکرام فا بت شور ہو ے : غلقا مار بحرت این مسعودرحضرت 
ابی عا ی »حر تالی :کب »حت ز یر ہن شا برت »ضرت الو موک اشعری او رتضرت ۱ 
راب ز بر اا الین خلقاء ار بعہ یں سب ے زیادہ روایات حطر کی ب ال 
طال بکرم الشدوجہہ سےمنقول ٹڑیںء اور پا تن فافام سے بت تیم روایات نول 
یہ شا کہا نکا سیب ان حرا تکاپ وفات پاتا ے۔ 

تا ہم تین خلفا ,رت ال ویک عفر نع راو رح ضرت ان شڈ سے ردایات کے 
وکا سب بو جیا سیک علا مہ یوی رح اللہ نے ال مت رگا با سکره ان تلافت 1 
۱ رت ل ازا اا ی کا کان 
کا یا۲ قش مکی شش ہے وه یگ 


اللمعان ارد التبيان 9 
وو لوگ رسول انل ظا کی کیت شاد هلب اوق رآ کے راز ول سے باخمراوراں 
سا واعا ماس وا ہے 29-0 فا خلا نہ کے لد اپ وور ` 
مس زناه ر ےجس میں اسلا مک دائرہ و جج »وچ ھا 0 شزا 
وال ہو گے تهاورسایء کرام مک اولا تنل پرواان رہ یتیج نہیں رآن 
کے طا ےا ا ا زک ا تگا اور وه وجو بات شی و 
ناخرت کے لق غلقاءراش ر ن کے مقاب سز باد ہ روا یار تقول ہو 4 
اوراب ہنیرق آن می شرت باه وا ےش اہ کے بارے ل تدر ے 
تل سا نکر 19 ۱ 
...رتکد ادن عا یں وا حر الا مرت حر کب رال ہن عبال توف سول 
ام ول کے باذ اد بھائی ہیں جن کے ےآ خضرت تفم نے ان الفا کا دا 
رال :هم فهه ف الدین وعلمه امن اویل ۴" ی اشر! الکو ی عطا ماود 


5 يت رآ نما اورآپ ارآ دم سے اقب یں هقرت 


راڈ بک ن سحود ٹف ماتۓ ہیں : ”نعم تر جمان القرا ن عبداللهبن عباس “” "یرال 
ا رآ نکم اجان ہیں“ 
۱ آپ تا کرام س رآ نکر کیش روسب تیاده ہاۓ والے 
پل وکال کے بڑے دس هرقف سے جب رآ پ ای 
وجا نے ےب یہا ںک کک ہآ پ ایق م یا کے باو جود یڈ ےبڈ ےکی برام شا 
ے٠‏ مکی وفباح گے او رال تبرت وجب مل ڈال دیتے- 
حر تع ا ہیں کا شور میں بڈڑے بے نکیل اقترا ۔ کے 
نھادئےء اپرآن سے شور کر ےت و بھی رت امن ع ماس سا بھی بات 
کت حر گر کت دام دیا سھا برک رام ڈول کے پال کک ومباحظ 
ک6 رک کی بنا ہا لک کہ کاب ےآ یک کهد با اکن یجان ار بل ش 
کول دائل وتا جب مار ے فان ےک رش بڑے ہیں؟ ۱ 
انکا 0 6 )مان ہی بنا رکم لکیاہے جھ 


اللمعان شر اروالتبیان 170 
۰ اورت رآن لیف رازو ںکی ےت ی 
دلالت/تا۔ے_ 
بارش ښک روات :لام 8۶0900" ٹور با 
ححفرت ا٢ن‏ ال سکیا سب ووفر مات ہہیں :حر نگ هرن پرر 
کیا می دا لک کر سے تھے سو اب کرام نے دل یں پر او کے گے “ 
کہ بی ڑکا ہمارے سا تج کیوں تسج ال کے برابر کے مار سے ہے یں؟ زر کر 
لے فر مایا بو دہ ہے جس ےت اٹھی طرں داقف ہو( نی یتو وہ ےک مم 
وزکاوت ےک وب واقف ہو )_ ۱ 
چنا خر تک ر تسه ایک دن ایس بویا اور کی ان 0 
شا لکرلیاء می لبج کیک ای دن ابو نے کے ان کے اتر مرف اس لیے بای ہے 
کیل میرک ذکادت وفطاعت وگلا دی ءتا مآ پڑنے ان سے لپ پچھاک ان تھا لی کے 
اس ارشاد یا امیر کے بارے می ہار یکی را ے؟ :اذا جاء نر الله والفتح. 1 
ےگ تال )جب قد اک مدداود( کرک کلام اپ ےار ے ) ٦‏ نوا 


تش اسک کیک جب کش داد تیب ہدوہ الک 
ییانب اورال سے استغفار ۲ھ زر حلص دوس رےحعقرات نامو 
ر ہے اور پگ تکہاء رت کر نے مھ سے فرما اکم اے این بای ! مہا ری کی کی 
را ؟ وغل نے جواب دیا کک ۔ت ھآپ نے فر ما یک کھت مکی کے ہو؟ یس نے 
کہ اکہ سول اللہ ایم کی یل مپارک جو اٹہ ےآ پک تلا وی او رکو اک فرمایا: 
سے )جب خداکی رداور( کک )2ئ 1 خارکے )1 ین ین راخ 
وا ) و یم ہا وس ع ت ا 
و لکرنے والا ہے۔اس پرححفرتگھ ڈنف مایا : دام لت ا سآ یت کا مطلب 
وی جات ہوں چم 

بل یرقم اکت رآ یات کے انط مل ا نتم او عم را داالت 


اللمعان ماد و_التبیان ۱ 171 
کر ہے ج کا جانا علم ون یل بتاور بارعا رکا یکا م ہے اوراس می کوک ی تج بک 


پات لک رت اہن بان بلق رآ کے رہ راز و ںکو یک یں بش متام 
7 او سول اش ان کے می دی نک وک کی دعا فا رح اک کین 
”خضرت ابا ڈگ کی ردا یت کی ےک دفر سے ہیں : 
”رول اللد تاا نے ای سیم رک کےا ت لگا یا ادرف مایا:''یا 

نا ا کودی نک طابر اور ام افر" لے ۱ 

می ہ چپ نے فیا بط تک مر ۱ 

ححضرت این باس با کوا نکی حر یک اه مک سمندر) ے 
ییا راما تھا۔ ۱ 

ادایت مآ ما ےک کی صرت عبدان نا پگ کے پا لآ بااودال1 یت 
کا مطلب او کے گا :لیوا وَالْأَزض گالکا رما کف " ۳1ن اور 
زنل( پیل بترم نے دو کو( ہق قرت سے )کول دیا 

ت ھآپ بے ال مےف رمیا کرامکن ع ال" کے پا ی گے جا ڈاور ان سے ال کا 
مطلب چو یکر کے بت وائیں ونس پا یاون سے ا لآ یت کا مطلب لها بآو 
عیاش لے فرہای کرآسبان یل بن تھا کہ ہاش دسا تا دی بنا یک 
جات ناک ی پا لکو بارش اور کون جات کے تیال کول دیا۔ 

تو ونس حفرت ار ا کے لاس وا بل[ بااورآن ی جواب سناد یارتوضرت 

اکر ا فرمایا :م پیک اکتا ناکین عپا ی فآ نکر ق یں دولر ی 
خوٹی کےا بیرق ین ابش نے جان ایا کہا سے صو م ےلو اي 

اوارروایت ےک :”ری تع من قطاب نے ایک دنا ہکرام ول ے' 
فرما یک تمار یکی راے ا ی ےق ازل ہوئی ے :او 
لگ آن عو لھ تفن کیل وشتاب 4 کیش ےا بے پااج 
کال کے 2 رون او رو نگاو باق وه ۔اتہوں کہ اکنہاشدز یادہ چا کے ۔ 
لورت وائ خم شآ گے اورفرمایاکہو جات یں یل جا »ال پر رت 


اللمعان شر اردوالتبيان 172 
کال ےر مایا : می ےول یں اس کے تلق ایک جات ے ضر تک ر 9 ۵ 
یوضترم توا خضرت ان عباس فلا نے فر مایا ہنیک 
کل کال ا نکی هرت 989 و چھاکیکون ےک لک ؟ حر این 
اس ری الثم تما فرب اک اج لررتض شل سے جال کی فرمانبرداریی کے 
ال بالات ہے رای کے لیے شیطان یاوه هالک کاب 
۱ کرٹیٹھتا ‏ کا ےگ ز شت انا لگ فاد کرد تا ے "-رواه‌الفاری- 
یا با ٹیش اورا نک بتک دوس رک با رک سپ کی رس ار 
کروراع پر دلال تکرلی لاو رای وج ےآپ 2 ار دس بڑ ےئیل القدر 
اپ کرام ٹول ی مفول یس ہونے لگا اور یل پات خو دکبارسحا ہہ کے اعتزاف سے 
جر الام (ا مت کےز بردست عا م )کے اقب سے پکاراجانے لگا۔ 
جرت اہن با یں ٹا کے اسان :ریت این عباس بسک وه ات وین کے 
علوم سے وو رسول اٹہ تلم کی رعلت کے بع یراب 2-7 اورا نک آ پ کی رما 
وم وتر میت میں نمایاں ا تھا ہیں : حر تع رجن تطاب او دب کب اور بین 
ای طالب اورز ید .نات و ڑیں ۱ اد ہے ما نو لآ بسا خاصص اسا تہ ٹیش سے 
۱ یں جن سےآپ نے اپناز یادوتعلم عاس کی اراک بڑاحصہ پیا اوران ۱ 
حرا ات کا آ پک ال سک یس تکی طرف رما کے میں اگہرااڑے۔ 
حشرت امن ع اس ٹلپ کےا و : حضرت این عباس پیل ےی نکی ایک بڑی 
بقاعت ےکم مال کیا هآ کے حرو ف شا گررول مل ےپ سے ز یاد ھ شور 
لاہ جنہوں سف ا کي اور وغل اس ی ڈں: زیر ہن جس تعقرت 
کیا جن جرف ری نحضرت طا کول + نکیمان یر ت کر موی بن تال اورتظرت 
عطاءی نلیا با رما یں ءادر را تپ الننمایاں شا غالزروی یس سے ہین 
جہوں زلف ٹیل مددستھامینعیاں ا رتفا ان سپ سےراشی ہو۔ 
حت که دار ب نحور : حف رت باب سود کا شیا ان کیل القدر 
محا بل ٢وا‏ ہےجنہوں سے یرم شرت پا اود نول کرم ےآ خا راتوا لکد ہم 


اللمعان اند التبیان 173 
1( پا هل اسلام لانے ناونع 
سے جک کرجب دش پان دهد مان رون کم ۱ 
پا کے خادم تے .1ب 9 کون مہا رک پچہناتے اورآپ کے ساتھ او رآ گے بت 
اورای تیو ی اک یناب پا ررکم اورش :نکر ے۔ ای لاپ کا غار 
کناب ال ےکم وا درل ومع ورام لقاش سب سے 
زیادوجانۓ والال س وتاے۔ 
امس رح اشر فر کے ہیں: : حشرت این مسحود الائ ےآفی ر یں مروبارت ‏ 

خر تک آرم انچ سے زیادو یں بش نے ان سے یت کرک ےک رورا 
ہیں :”اس ذاتک ام نس کے سوا راو مجو یں کاب اش لکول یبھی سورت نازل 
نیس ہہوئ کر کرت جات ہو لک هگبال تاز ل وء اور نی اش تی یک یناب س 
کوئیآیت ازل ہوئی موق گر کشا جانا ہو لک ہار ےش ناز لک یگئی ء اور کے ۱ 
یسک »دسج تاب لیهست یادہ ان ول ال کے پا ضرور 
جا لگا بشرطیہ ا لکی ےتک وی چا مور" -1 پا نے نت نف 
روایات لک ہیں۔ 

ووسر یم تقو :تخیر داید پا کون کے بعداب متیر 
پالدرایدی طرف 2-1 ہیں۔ ال فو کوعلاے مفسريین کے پا ”تی الرای“ اور 
تی مال معقول'“ بج یکہاجانا سے :کیو ںکہ ای شاب ای کے والااسے 
اجتھادکاسہارالیقا ہے کي یا ا نیشن ےمنقو لتق کا ء یراس شی عتارم لی زبان 
تچ نیز ال عرب کے طریقہ را لوب یوکن ان کے ہاں انراز امب 
۱ وا اوران علوم ضرور ری محرفت راتا کیا ہا ےکا جانا ہی رق رآ نکاارادہ 
کر E‏ مکیلع ضروری ہے مض :مرف موم بلاغت»»اصول فظءاسباب 
ولک رنت رای عاد ر کی براجت 
کور بم با نکر بی گے۔(انشاءالش) 

تفا سک ”ك :را سے سے مرادووا اد سے جواصو لک او سك وام رل پر 


اللمعان مر ارددالتبیان 174 
ی ہوا ےہ جر یتخب ق رن میں شفول ہو کاارادہکمرے یاال کے معان کے بیان 
کر کے توا کیل ضرورکی ہے وہ ان امو رکوحاص لکرے اور رائے سے 
راوخ را پا صرف واش تفای یانما کے دل لآنے وا سل خیالات اہن 
جیاہت کے م طا ن رآ ن کف یرک یل - 

علرقری ر انف راتے :”جرش نے رآ نکی میں اصو لے 
ترا هروا کے وتم شآ ید ایکا تفش ری کا راو رتال 
مت ہے۔ ادد ہے صد یٹ شرف کی اک بات ول ے: کی نے جاك ہو چک کے 
روت باندحاقددہ تاکن دوز رح یں بنانےء اور کے رآن ٹیش اق راۓ زیی 
یتو ددا پنا ٹیک نینم میں بنا لے“ ۔ادرآپ مل کاخ مان ہے : ج نے رآن بیس ای 
0 9 )6 ۱ 

لام ر کی رح اللہ نے ای کا ب لھا رخ لاحم ارآ" کے مق مہ مین فر ایا 
ہے ول فر مایا ےک رت این اس شی الما کی روایت :من قال في القرآن 
برآيەفلیتبوأمقعدہمن النار“ کی در بیان ہیں : 
بی نے : یھ ئن کل رآن ے بے ودبات جوا کاذہب 
معلوم اور تاقوا نا راشگی مول دالا ہے 
ورک شی : نے آل اہی تک ده تاکن ال کےعلادہ ےتوہ 
کین اشنا 

اورعلام ری رح اد نے دوم سے تول کوت ی دک ادرف رما اہ کہ یل 
کے اعتپارے وولو لتولول میں سے زیادہ کم اورز نچ» بے ا کہ عد مث 
جنرب رن اٹہ تیف عت "من قال في الق رآن برآیه فاصاب فقدأخطالوتض اٹل ۰ 
جرات نے ا بات یرکو ل کیا ہے را ستمراوقوا شا ہے اورمطلب ہے 
یٹس نےق رآن لاک ہا تی جوا لک وال مطالق ہی یاه مساق 
صان سک تلا وروت ی رهم فش تلاو ارو وق رآن کے ۱ 
بل ال نے الیمافیم لکا ےک اکل سے دہ ناوا تف ہے اورعلاۓ عد یٹ کے ای 


٠‏ اللمعان 2 اردو التبیان ES‏ ے17 
ارے مل کچ گے وال سے ابد ے۔ ۱ 
اوران عطیہ رح اشر با کے ہیں: تن فک مطلب يسک فلت ۱ 

"تب اکن وق در یاف کیا جا ےتودہلاء کے اقوال و واصول 
یرہ قا قور کے بغرا ہق رها فش دے- ادرال میٹ سل وه 
۱ یر فلس ج کا٢‏ للخت الک لخت وی ترات ا کی کاو فان کرام اس کے 
معان وا تی کے »ارب ریک اپنے اتاد کے مطا تی کرت ہے جوک یلم و 
نظ رکے قواٹین پر ہو ے + کول )کہ ال صفت کے سات تف کر نے وال اب 
رائۓ زف کے وال ۱ 
هر ,حقو ل اقام ریق تقو لکی ری مگب 

(i.‏ آف وو (r‏ یروم 
ےیور :ویر ہے جوشا دک فرش کے موان لت ری ط٣‏ 
کےتوائین کے ات لے وای اور رآ نکرمم کے نوی کے کے میں ع ری اسالیب 
کاسہارا ی دا وچ بو اب را سے ( یی اجتہار )ےر 70ت 
نیکتاب ال کے میا کے باب ٹل اہ را ۓےکی صورت س ان زور شرگون 
کول زم کت ے اوران دوکر توا کی خسن خوشگواراوراں رن ےن 
ات سپ يور یا یشور" ےلقب و ازاجاۓ - 
رم :من شم کے یالقت دشر کےا مان سے ناواقف ہونے کے پاوجود 
ق رآ نک وشات تفاي ما نکرنء اش سک کلا مکواپن ال نب او گرا 
کن برعت مو لکرنء ئل منک چم کے سات فا کیا ہے ال میں خوش 
یکر ن اورشن ےکنا کہا کے ا یکلام ےقلاں فلال رای رال 
زیر موم ”فی گل کہاجاتا چ ٠‏ 

خلاصہکلام ہے س ےکی روو وتف ر ےج کار[ والالفت ےتا ن سے 
واتف اور ال کے اسالی بکو چا ۓ وال ہوہ شر کے تدا بین یرت جا مہ رگتا مو 
لشیم ۳ 4 اهوم ویر ہے جونخواہشا تکی پیداوادواور چا لت رای هلو 


اللمعان غر اردوالتبيان  ٠‏ 176 
زیم و ی مثال:ارشادبارک تال وو پت 
ترجہ :نم جس رو زگ قما مآ دمیو لکوان کے نام“ اھا ل میت بلا وی گے“ 
212 کے وزارت جابلال مرک ےکا لآ تک ن ہے ےک الد تیل 
قامت کے دن لوگو ںکی پردہ پل ان ا نکی مائول کے ناموں کے ات بار سی 
هبل ان ال ل مفس رنے” امام ای مہات '(ماوں )ےکی ہے اور امام“ 
کو لم کیج کاس باوج ویر فلخت ا لکا ۱ رک ری ہے کیو لکد اعم کی 
تی" عبات ے۔ا کرای ےن وامیادکی 6 

چم اورتہا ری دہ ما کل جنہوں ن ےت مکودودھ یلا سس 

اوز کی شع ”ماع یل :کیو لک راخت دشر دوفوں اتپا ر ے اگل ہے۔ 
ابت ہا ںآ یت می امام سے مرادامم ت کا مو بی مہہ یا مرا اعمال نام سب 
اورای ریت ایت فن 4 ۱ 

تر جم :پچ رن سکانامۂ اعمال ال داز ہا یں د یا جا ۱۰۷62 لوگ 

انم اتمال ینس اورا نکاذ را نقصان کیا جا سک - 

یل جب انان لشت لوا رکوجا تا اورت ی۶ فی کے اصولو ںکوتووہ انی 
اش کی ضرب) ہے راہ چتاے او رگڑورراۓے وزان نم کا ماک وتا اورای رب 
شش لع تک کو کت بو جہالت ورای ےک ے میں ارتا سے خلا دہ 
فو جآ یت پا دک کے مرف قا راولت ےد ہآت ہیف مان الا ہے :ومن 

:ورجش دیاس (راہنجات کین ے) اندعار ےگا وہ ارت 

سی( مرل چا تک کے سے )اندھار گا“ 

لپزاوہ اتر ےے پر بش ءضارہ اور م یس وغول کاگ م کا ما پاوتودیلہ 
آیت پا کش ان ین مراد ےکا تنل بک ای ےم راود لکا یرت نہ 
رکھنا ے۔ اورال پر دعل ال تھا یکا ار شادککرائی ہے :لد نها 

چم بات ہہ س ےکہ (ن ہکن والوں کی ی) یں انی ہیں 

e ۱‏ مار بر دلج یں یس ہیں وواند ے ہو چا ارت ںا 


اللمعان شر اردہ التبیان 7 


او رتش وف و ںکااندھاپی کی انا نکی سعاد تک سیب »وتاب جیار 
عدیشد رک مس آیاے: ج سک میس نے الک دوجوب چیزیں ( تن مس ) 
رک میس ڈالا کچ راس .نے مب رک یا تو بل اس کے برل یل اس جنرت عط اکر وکا _ 
ربیب تم غراب ای رکے کے بن کی شور بو و 
جنر و نے اسلا یگس او ملا یاه ۱ 
یر اصول وءاغز: وو امورتنی کی طرف شی قوی سل زا.2 کل نیت 
کنا مناسب اورضروری ہےء ا نکی اکل چا چ زی ہیں یی اک علا مہ زی رح اشر نے 
او کات الان اوی اسف اکتا الاتقان شا نکوڈکرکیاے۔ 
متا شتا کےا تھا نکاخلاصپ کر ے ہیں : 
۱ وضو اضف اماد یٹ سے کے ہو سے رسول ایل ظا ےج لکرنا۔ 
تفیش ای منقول تو کول کیو ںکہ ىہ عدیت مرو ےکم یل 
بوتاے۔ - 
۳- ج کی کیش عر زبان نہ ر کے ا ل ککرتے ہو ے ملق لی 
آولیا؛ وتک رآ ن صا فش ازل ہواے۔. 
۴'- پ یکلام کے موا با تکو ینا ج رکش ری تافو نک یکن و اوت و ا 
۱ ہے کی بی صلی اش علیہ یلم نے حفرت این عباس ری مھ ا کے اه اس 
ارشمادیٹش دعافرمالیے: سے اللد !اس دی نکی بۃعطافرمااورا ےکا کے“ 2 
مقر کے رور اور زی علوم :کاب از با نکر نے ولاعلوم ومعارف 
کی چندااسی انوا کا اع ہوتا ہے جن نکاال کے اندر ایا جانا ہا یت ضروری ہے کروه 
تی کال ین »ورن وہ مفسرسابقہ وید( لنقال الق رن بر نیت مق وین الزار) 
شی اع ہوگاءاورعلا ۓ کرام نے علوم کی ان انوا عکوڈکرکیاے مجن کامفسرمیں 
ا یاجاناضرورگ ہے۔علام یھی رح ان نے ایق تاب الانقان مس ان علوم او پنددہکی 
تح رارک تاد یا ے۔ یم رزیل یس اختمار سا تال یاک ے ہیں : 
اسر بان اورا کت اع رمن مرکو م صرف اورم ا تنا قکوجاننا۔ 


اللمعان شر اردوالتبيان 178 
۴علوم بااخت تم معان م بیان اوم بر وان 
۳-صولي فت بت ناس و عم ارت ول وف وجانزا۔ 
۴۔اسپابیٹزو لام فت۔ 
رون اکم 
راء تک حرفت ۔ 
موی - 
۱ مرول + ور ُو یتسد راتس 
اس کاجانزا شر کے لیے ضروری ے :کیو لک مفردات ور اکب کی محرفت 8 
رآ ت کین وی ایلاء “او تریس کے لوی ی ہا 
خر ش ناشیا نرکا ے :للزین.. ‏ 
رر "جاگ منت ہیں اتی ول( پا جانے ) سے ان کے 
ےل چا رسب کک ہلت ہے۔ سوا ار لوت ) مودک وت کیطرف )رون 
کرت اما ی زی من ا 
امام ما کک رحاش فر ماتے ہیں :اگ ری لخ کو جا کے باوج رکب ارگ 
ترذ دالا مرس دو برولا یاو عیرت ناکم زار ی 
جاپد رم اللہ نے رابا 27ں الثم اور لیم آرت یمان رگ 4 
ام کو ہاب ی غر بک ز با کوت جا لن کے باوج تابر ره ۱ 
چنا جر جب ور اقوی سک تیم موافتت تس رک هکاتووه ی | ا 1ھ 
خاش رواش ناک اس اراد یں دو دنفرت لورت 
فاط ی الا ےک ے: مرج لمغوی کی "ای دودر ال 
کو (صورہٗ لی ٹوس ےب 5 
اورا ی قران الیم ال اور رز مرجان "مرا تن نین شی ال عم لیے ہیں: ۱ 
ن ۳7 ال وَالْمَرجَان4 ' ان دوفوں سے موی اور مو ۔ 


ہر متا ے '۔ ١‏ ت 


اللمعان یامد ه_التبیان ِ ۱ 179 

ورای طرح اش توائ کے اس ارشاویش فرگون شیر لب" س کرت 
»اور قل ب“ تفت ول انا نکا دل مراد لیے ہیں : 

e‏ ال نے بی رارت 
اغتار 

علا تی رج افر ہا سے ہی ںک :”ا رض میتی اض وان مقا ص ریش 
من کلام اورا تکیت ولا کے کیلع اتا ل کر تے بلج نوا ے :کیو ںکہ 
راغت می قا گرا ہے کنا ان ہے۔ادر شیر قرل بک اع تک ددو جو ەل رے 
ایکوہے۔ 

اور معل وم ات بھی ضر کے ا کات سے 
۱ رن آعا یل ن ہے۔ چنانیہ شدای نے :3 ۹4 یی اللة ین ۱ 
عباده الْعْلَوٌاہ فط ارز کے رصب اور العلا & کے رہ سر ہے 
ورال صورت مج :کوان وتش تکر یکا مطلب ے:" اللہ 
سے ڈ روا سے بتر سے دای ہیں جو(ا یکتم رکتے ہیں ا 5 
1 اق رجو اشک رنت ی کی ترات ای و ی 
اا :اور ار رکا تکوس کے بلس کردیاجاۓ اورلفظ ی کے اکومہ اور 
ڈالعلباً مدوب .سید چا ا 
ایک چپ قصہ :علا ری رتاش ای رٹل ”عدم اللحن فی القرآن“ کے 
یل میس ال ق کو زک رکیاہےہ دہ فرماتے ہی کہ ایک دیہان حضرت عمرین خطاب 
ٹپ کے دور ل پر دمور ہآ دای ےکم ایج ا پرنازل شد هلاب شس ون ۱ 
سے پڑھاےگا؟ راو 2 ںک رای کش نے اے سوہ برا وت بڑھاناشرو کی ء جب 
آیت مالک ان الله بر یڈ شن الم رک ور لی مج رسوله س لام 
کش کے با لام کے ج کے ساتھ پڑ یود ہا ےہاک يا سول 
سے برک ہے؟ اجب الد اپ سول سے برک لو میں E‏ رب 

بے بات لوگوں پر ی شا یگذ ری رت گ رڈ کوجب دیا کا کلام بت 


اللمعان شرس اردوالتبیان ۱ 10 
اسے بلا یو هیا کہاے اعرا بی !یتو رسو اود مہ سے راو کا کہا رک رتا ے؟ تو 
ال ن ےکہا: یا راو خن !مس ع ینہآ یاتوقرآن سے ناذاقف تھاء چنا مہ بش نے 
چم درون کے ر آن پان ےکا وان ره رات انش و عکیء 
ادرال نے جب بےآیت: مق الل بر ی2 قن اف ركن مل لاد ت ى 
A E‏ 1 
کک ای کےرسول سے براحو کا اعلا نک رتا ہوں !ال تفر ت ری ابن تیا عنہ نے 
فر مایا اےاعرالی! پ سپ تی نین !توآ ت 
چرس ضرع ہے؟ توآپ نیت امت لاق اله رت2 شن اف رکه 
ملد چناد با نک اکا شی تم وس وھ رس 
جن سے الثم اورال کے رسول برک ہیں ۔ بھی کین سے بیزارہوں ا چاچ 
حر تع ٹون عم دہ اکآ« و یک نع و تار وا کیا رور 
یاسور وی ند وی نکم ديا ٹیہ انہوں مرا دطور پا 

اک رح لم صرف اور اتتا کا ای ضرع لازم ے ؛ج اون" 
شبکوراڈ یکی ط رع راون چ لام ری رح ارا نے چ یک انی ارس 
ےا اقول یی ے جوا شتی کےا ارشادییل ایامک Pi‏ ام کیم قراردتا 
:یو لل وو وت 
ول کے ناموں کے اس ال کے نام سے پیا را جات ےگا علامفرماتے ہی کرش 
ھی ہے اور کاموجب تصرف سے ججالت هکم یج 
امام ال 
ام ووم: اعلوم معا بیان اور بر کا انات وتاب ان ینف کااراد ہک نے 
وا کا اا کی تبات ضروری ے :کیو ںک مغ رکیل از کے غ یکی رمات 
کرناناگمز بر ہے اورا رعای تکاادراک الوم کے جا ۓ بی بر قوف ے۔ 

خلا ارشاد اک ے: وار با لفاغ الج( مطلب بے کان کے 
قلوب میں وی و سال عبت ووست و گی ۔ت یہاں مضاف حخذوف ہے۔ اوراک 


اللمعان ثم ارده_التبیان 18 
رغاد چ :اوا سال القرية 24 مراد اف د- 

اورالثر تا ی کاارشادے: 5 پباش Kd‏ ونم لاش ای وہ 
تھھارے(جاۓ ) اوڑ ھن بو نے ( کے ) ہیں اورم ان کے( مہا ے ) اوژ موس 
( کے )ہیقت رول تل» ی یہاں استھارہ ہے۔ چنا نے لہا ی انان کے سز 
کوڑھا نا اورا ےکن و مال خخا ے ای رح میال ول ملگ ایک دوسرے 
کے لیے لہا کی رح سب ہک اےمسن و مال ےلو ا اورا ی اک ےد 
استعارہ شا نداراو ہت ری کلام مکی نم ے۔ ج بکوئ شس الآیت ناس 
کے اہر رمو ل کر سکاو فاسدہوجا تگا۔ 

یبا باجا تا کف سول نے ق رآ نکاایقی زبان تج کرنا پاب جب 
ا لآ تک بتک پم باش لگ ۳۹-۳ لباش له تدانبوں نے اس 
کا ظاہرکی ت 2 جم ےکی اورا میں بوشیره رف رازکونہ باه چنا مہ ا ن 26 مہ بالآخرس 
ط رح ھا: و تہارک پینٹ چتلون ہیں اور ا نکی بینٹف بتلون مو .کیو ںکران کے ہاں 
لبا کویقلو نکہاجاجاےء ای طررح ان کی مھ نے ی کھائی اورق رن کی مره 
یرک دراک کر کے _ ۱ 

ای رب تریب ایک د ہا کاواقعد ےک جب ای نے الڈدتعا کاب ارشادس: 
ووا واشریوا كى يجن لگ القیظ الي من الط الآشوَده 
” اورکھا 2ہ یو( بھی )اس وق تج کک فی رخ ( مین مو تحیز وجا سے سیا هس 

وال نے سیاہ اورسغیردورنگ کے دا گے یئ اوران گی طرف 7 ده 
ک رکا جار پات سورع لور ہونے کے قرجب م وکیا وآ ضر ماف کی خرمت 
سآ یااورا کی خجرد یتو آپ لان اسے ارشادفر مایا :”وت جوژ يگری والاسب 
( سن اانددل )»ال سےمراوتود نکی فی ری اوررا تک یالاب 

۱ ق رآ کرت میں انتوارہ ءکنا او رجچا زک اور ہت سارگی منالاس ہیں جن کے کے 

گیل م بیان دیق کا انز عوضرورک سه سل شرت کاوج ولا کشت سر تلق 
امشادج: هری بأعیندا4 اداشادیاگ ج: (قدم صرق) » (سان - 


اللمعان شن ارروالتبيان ۱ 102 
صرق “جاح الزل» تام اوران جیسے دوسرے ارادا کا نا عم بلا قت 
اوررازہاے بیان سک کته پ وف ے۔ ٠‏ 
فیس ی کو :یر ر یتلوم اصول فت ابا ب نزدل ہنا وشو 
۲ اون قراء ت تام کے تم مم دوعلوم ہیں نکا ماتا کاب اٹ زک فی کر نے وا کل 
از رام رہ ؟ ک مت ٹیس ال ے لخو نوا ور ان روک ا مور سے جہالت کے بب 
الک ول رپس ے تم ۱ 

ادرچہاں تک علم وک کی بات ےتوس سے راڈ م ری ورا“ ے: 
(وعلمنه 4 

تھ جمہ اورم نے ا کے بل سے ایک ضال‌طورکا ی با 

دمم اث تال ےم پل لک نے وا ےکوعط اکر تے ہیں ء اور کاول 
اپنےرازوں کے کک ےکی کول دی ہیں -اشتتالفراسته ہیں :و واتقوا اه 

رچ اورغراے ڈرو اورانش تھی( کاتم پراسان ےک )کم 

رات ۱ ۱ ۱ 

تو ینک کی واخائ کیره سے ا لع مکود ہج تن بات نس کے ول میں 
ذ را یبھی برعت بر اوتا کی محب تک آمیزشل مو ی کنو ںکی طرف چگ میلان 
ہ۔الندنتھا یکاخ مان تافر ف4 

ترجہ س ایے لواو ںکواپے ا وج بجی رکھوں گاءجودناٹل 
کرک ہیں کان لوی تی تن 


اورا ما شاک راش لیا ی و ب فر مایا سے نے 


شکوت... وأخبرنيی... 
شی تے سے استادول سے عافد لکزور یی شکا ی تکی 9۲ انہوں نے کے 
گنا ہہوں کے چھوڑ ن ےکا مشور ود یا۔ 
و بتاکم ایک نورا لی ہےاورائل تھا یکانو ری نا خر ما نکوع انی کیا ما ۔ 
لس رح اف ماتے ہی ںکہ:” شا یدک ہآ پم وہ ی شرا اور 


اللمعان شر ارد التبیان ۔ 183 
کیک از ےہ دمن کل جی اکآ پ 
نے مچھاہے۔ ال ھ۶ "0 کے ان اسا کات رکرنا سے 
ور سوب و 

۰ ارت سروف ی بر ۳ 
کنا ہیں:تا ہم پم جم نے بیان سے ہیں غ رکیل آ کرک ہیں ءا نکیل 
کے !نیرکوی مفس ہیں ہن سنا چنا خی جوش بن علوم کے حصو کے اخ تق ےکر ےکاوہ 
ممنوصراۓ کے رای ےک نے والاشحارہوگا۔ اور شر وط جوعلا ء نے کک ہی تی ر کے 
ب مہ کے صول کے لیے ہیں٠‏ اور یبال پگ عام مشیم ونای کی یں کے اننان 
رآ نکرم کے الفا کوسنع ی بے لیتاے کیو لک اللہ تیال نے رآ نکوآسان 
ویدار کاب کت اورا ےت میم :فلا 1 
يوت رن شور نکر او یمرج نلک ۱ 
دانےہیں'۔ ۳ 
ابر ر دهم ناخ یرود ود رجات تما 

۱ ا درج ۲ 011 
ال درجر: لد جک ای سے چ داوس پا کی کی چچ ے: 

رن می مدا مت ات کر تہ تل کے 


1 افقیارت- 


٣‏ عا ی شان اسالیب ات :از نے کا کے استعال را کن 
دیول اور نکوجاتۓ سے بی اکل ہوکتی - 
٣‏ اانیت کے لت کم وک تی اورقورت وشن رت وزلت 
براقا ار ان هخا مز سک و معن الہ یکو پاتا 
۴۳ انی تک ق رآ رتشا کے طر کی حرفت اورجاہلیت بی عر بک بین 
اور ای کےاحوا لک ۔ چنا هرکرک ارڈ تھا لی ع ے مر وک ہے ہددفر مات ہیں : 
"میات ےد بس راتک ہک جا لی تک زنر کامطالو کے“ 


اللمعان شر اردوالتبيان : 14 
۵ )ضور لم اورآپ کے ی بہرضوان اش تیل یی نکی یرت اورک 
۱ د وکیا مور ان سم ارپا 
او درج: یرک اد درج ہے جےکہانسان کے ساس وو بات فا وبا -2 جوا کے 
رل انرک وق نت( ار وال مرول رل لآ 
رف باک کک نے جاۓ اود درجم زاوها کل سچ چا کراشتقا یکافر ان ے: 
ظولقں ٭ 

مر ”اہم نے تما لک ےسا نکرد اہ سوک یکول 

تحت ما سل وال" .2 

یرل صورٹش ا رح الا اءلي 2 مرحم ال ل و 
تع رطن سے حفر اکن عبال نی از ا و ہی کہ انہوں ے 
فرب کیرک چارصورتس ہیں 

١-ایک‏ ورت وه ےرب اپ کلام سے جان 2 ہیں۔ 

ووسر کی روہ ہٹس سے ناواقفی تک ایک کے بھی تاب ل م ری - 

٣ت‏ رک یرو ہے تصرف علا یجاسن ہیں۔ ۱ 

٣‏ چگ فی روہ ے کے اتبا دک وتا کے علا هل مات 
آفے معتول سے جواز لق علا ے کرام کے افو ال :تی با رای کان 
اورا کی شراک جا ہنۓ کے بعداب تم اس کےمتحلق علاء کے اقوال اوران کے 
جوا ارم جوز قان یل سے ایک کے دلا ل دک رک ے ہیں :ا ا دور ے 
سور گ‌طرن ان الیل ظا ہراوررشن ہوجاے۔ یی تم اٹہ سے بی روط بر ے 
ہو کیت : 

راۓے سے مراد یہاں اجتهاد_چ سواس ناشیرپ رآ یک رک کلام رب 
اوران کے ب کم اسلوب خطا بکوجاۓے اور لی الفاظ اوران کے تہ سے ولا تکی 
حرفت کے بع مفسراجتھاد کے ذس رآ نمکرت سے علاء کے امقول کے 
جا ز کے بارے میں دوک گر ہیں : 


اللمعان 2 ر اردو التبیان ۱ 15 
۱ 1 ”فی رممتقول کے .عدم جوا زک ے :یو ںیما موف ے۔( جا 


ماش ر کے ای گر و وک رائۓ ے۔ 
دوس راتفر ناسا تیم قول کے چوا کا چ اور تور ءکی 
راۓ ے۔ 
مین ول ل س تعکر دا رات چردل اض ال 
کر تے مہیں نج نکم در ذب ل میں خلا ص شی لکر تے ہیں : 

لی وسل :تف قول بی یلم کے اشفا یک طرف ک با کشو بکرنا ہے اس 
سے ال کے انل خر مان میں کیا کیا ہے وان 

کر تو تا 
دوس ری ول وت ویس جوعد یٹ شریف ل رآ نکی اپننے راے نییان 
کے وا نے کے تل آل ےءاورو ہآ پ پ لا کاىےارشادے:' یر ے بارے میں 
عا یٹ بیا نس سے کرحم ان ول نے جال بد هگ رم مور 
با تاحاو ایتا ھک م ی بنانےء اورک ےت رآ کے بارے یی ایق را ےفیک 
توو وی ا بنا رکا نم یں بنا نے 
تی ری وکل :تال کافر ان جل واترلعا 4> 

رجہ اورآپ پگ پیش رآن اجاراےتا اک جضان لوگوں کے پل کیچ 

گے ا نکویآپ ان ظا کرد یی اورتا 27 5.027 

چکگ یہاں شتا بیا نک بض ورس الل علیہ مکی طر کی تو معلوم 
ہکا پ یسک دور ےا رآن کے مفا میم جیا نکر ن ےکاکوئیتق یں _ 
ی ول : ذ ا ہکرام شی ارم ایآ رام کے ذر یق رن می لکلا من سے 
”وع کرحت ن مرو نے وس کک 
کون آسمان مھ سا لکن ہوگا؟اورکی ز مین مرا اھا ۓگ ؟ جب مم ق رن میں 
79 سس و اشن ا سکن و هبات فا کین پا 


اللمعان مر اردوالتبیان ۱ 16 


ضیرم تقو ل وھا ربمت والول کے ولا :ریم جو تی با را یکویامز 
قرارو ےت ہیں ووی چدداال سے اتد لا لک ے ہیں جج نکوہم ذیل میں اختضار کے 
مارگ ے میں 
یی ومیل :ا تھا لی س آائن می ںو رک نے پر ا وراک اطع تک طرف 
بلایا ہے چنا اشر و نک فان :کلب 4 
ره الات ارات تاب ہے سکو ہم نے آپ پرال واسط ازل ` 
کیا ےک ارگ ا لک یآ یتوں می فو رک یں اور اک اب شیج م لک ری“ 
اورارشادگرای ے ناو € 
رھ کیاوک ن کک دول کا یں 2 
09807 باق رآن 0 ران میا کت تیگ یکر نے 
سے بی کن سے نوک اکٹل می شک نے وال بات ےک اس مطل بکو یا نکر لور 
نے ا ےلم کے ساتھ ا نی لکیام شور ہہ باوجو وی پم ومحرفت کاراستہ 
وطریتتی_؟! 
دوسکی یل 0820-890 )وام ۳ )یا اورگوام 
کوان علا کی طرف رج کر نے کا گم دیا ے جوا ها مکا سکره ہیں ء »چا رال 
تعال‌فرا تے ہیں :ولو ردو » 
ج او را لوک ا سںکورسول کے اور جوان یس ا ہے امو رک وت ہیں ان 
اور وال کت توا کوو محرا تو تیان بی لیت جوان میں ا سک تق نکر 


اور اتا کے ہیں اطف ھ0 ات و ۔ اور 
اجتهاداوراسر ارف ] آل روط تون ہے یسا اک مول او راپ رات لا لے کے 
مر رک اف هر ول ت تر اک ریب 
ری 7 :پور فر ہے ہی لک اکر اجتہا و کے زر ریا نکرنا امد نہ موم ل و 
اجترارگی انب تق بہت سار انام شع کل ہوجاتے :یل یہ ال سے 


اللمعان مب ارده التبیان 17 
:کو ںک کچ شر اڈ ا بکا ET‏ ارڈ کت 
کیک کی ین تام کش ںکرتار سچادر ابقل رک طاقت اک شم فکردے۔ 
چٹھی وکل :اس م کوئی کی ںک کاب ا ےت رآ پڑاادرا یک آقی رم تقاف 
ال شل بٹف کے اود یی معلوم س ےکاخ ہوں نے جو بر قآ کیرش ھاپ 
ت مکاتمام نی کا ےکی سنا کیو کا پ لیے گن سے ہرز جا ن کک بای 
یش سے گز یر ہاقو کو یا نکیا اوسر شض او کوھڈ د یا ج نکی حرف تی سی ہہ 
شی ال فعم اہین عقلوں اوراجتا سک زر ندرا رپ من سے رآن تام 
۱ مالیا نک و آوان ےد رمیا ن رآ نک فیرش سکوگی اختلاف وان نہوتا- 
پانچو یں وکل : ی اکم نے حضرت این ماس رش اتال ا کیلد کرت 
ہوئۓ فرمایاکہ:” امے ادا یل دی نکی عطاف او ماد E‏ 
اویل ق رآ نکی رح سار رل پرموقوف مون تو یہاں ضرت اہن عا ی دی ارت 
ما کوش دعا کے ساتجھ ما کر نشکا کول فا ره نوتاه »لایر ال بات پردال س کہ 
تاویل رات اوراجتماد کے ذر ہیی رک ےکا م ہے۔ 
> این کے دلا لک جاب :۱ ور ۓےگرام ےکی خا تےکر نے وانے ا قائل 
وا ای برائی نکی رون میس مالین کے ورا لکا جواب دی سب مورا نکی - 
کل یل جاب نے ا نا a‏ 
انرم ےب ,دومن اب سح بالط ۱ 
۱ اھ ہا تک ناے۔ 

آ پ لک ارشادر ےک :”جب اجتھادکرتاہے اور ورک پالیتا ےتو ا سکیل 
دوا یی اورجب اچتہا دتا ے او رخا ارتا ےتوا ی ال صرف الا 
چنا داب رکا شی کے ہوا سے با ےا جت دی اجاز ت کین ہو؟! 

۴- ریا نکی درک جک بعد یش :نت ران یت 
تعد ون الا" سو مس 

۱ از ینیع سب کل ضام اتال ںہ ۱ 


اللمعان شر اردوالتبیان 188 
انب سے جوا للع ضر و ری علو کو سل کے !خی رکرنا۔ 
۳ات کي رک رن اک ہو نکی مرا اتی فی ےہ واو یٹس جاتا_ 
(r‏ نظ ات زاس رل _ط‌شره ہس میس مک کول ا وکو ع 
یاک ۱ 
")خی ردئیل کے نطو یفص کر )کاش فلا رادب 
۵ن ای اورا تی خاش فس کے م طا تی ےکر _ ۱ 
٣‏ تتیس کی وکل پردٗکرت ہے علاءفرماتے ہی ںںک شیک کی ليم کر 
ارم بيان پر مور تھے دنن ج بآ پ مل اون کے جوا رم تک طرف تا" گے 
اوراس کیلع برچرَفصیل سے بیان کر کے توٹس پر ان آپ ام کیان 
۱ موجوو ایکا ےء اویٹس ےتا قآپ مل کابیان واروس +واتواس میں اجتماد 
27 3 لیے نر ت6آ زی حص کی ای پردال ے: FH.‏ 
کون ”کیو کرک ری دای با ہت ض در ام رہے۔ 

۴ چگ ومک جوا ب د یچ سے عابس ۓکمرامفرماتے ہی کی ھا ہکرام شی ار 
ما ول نے پازر بنا تقو بی ءاعتا طط اور بل درست بات کک نک کے نوف 
کی بنا اه وه تست ت ےکی اٹ تی فی کے تلق اس با تک گوای ےک ایند نے افظ 
سے هل مالیا »لب اوه اس بات سے کے د ےکم مادا ن بات ا نکی ہاب تہ 
ہو ناکرا کےسا نے را یکا پبلدراز ہج توو قول ےہر کے سے ۔ 

ال برص ر ان ٹا ہیں جوا تاٹی کے اس ارشاد مس مبلق هعلق ای را 
لکد + لں: یش فوك فُلِ الله یکم فی الک4 و کآپ 
سکم در یاف تک سم مادک هلق وال اب ماس 

اورقا کے ہی ںکہ میس اس کے تن اہن راغ ےکبتانہوں, سواگرراست گا 
تواشری امب سے ہوگااوراگرراست شہہہو تو می رگ اورشیطا نکی طرف سے ےک 
کلال وہل ہ ےو کاپ بو ۱ ۱ 

اس مرک نظرسے جمارے سا ان وگول کک ام روا ے 


اللمعان ارد التبيان ۱ 9 
جقران کی فیراجتہارے زرےے. اجار تراردےۓ ہیں اورالے قول ` 
وم کرد جمپور کے مضو رن اور نکی طرف سے این کے ولال 
کوفلط رار کو نوی آپ نے جان لیا اب ہم یہاں اجتاد کے زر ت رآ نکی 
تق کے جوا ز کے تلق ارام فا رح راڈ کے ارشماداو راغ بصفپا رح رنڈ کے 
قول اور خی علا مق ری روہظ رکو فک کر تے ہیں : ۱ 
ایام زا لی رم رال دک ارشاد :امام غمزالی رح راثا یکا ب ”الاحیاہ“ بس فر ہے 
ہی ں کت رآ ید کے ماف عم داد را ککامیران ,او ے اوراس یں سرت و عت 
۱ ویش ےء اورظاہ ا تقسی ری جونقتول سے وه اس میں ادرا کک شی یں اپ لیر 
ول ما کی شر :ب ل سج ادرال یش سے ہرایک کے لیے جاک کرد 
ایم او نل کے بقرت رآن کے مطالب ومحاٹی کا تتا اکر ے ۱ 
امام راغب اصفہالی رح الث اقول E‏ | 
مر شی وولو ول اوران سک الکو ڈک کے سک درا 2 کرت ین 
علماء نے زک کیا ےک دوفوں با ہب افراط وف یار یں ہیں اس لیک ٹس صرف 
تق رمنقول پراکن اک یاتو اس نے بہت سا دو ضرورکی حص جچھوڑد یا ج لک سیق رآن میں 
ضرورت پڑ کی »او رل نے ہرای وی می دا ہو ےکی احجازت د یتو ای نے ٠‏ 
کنا ب اش رکواخطاط واتزاخ کانشانہ بناد یاءاور وہ تال کے اس ارشادکی تقیق ونر 
کتک یرالیه ولیک گر ولا باب (ص:۲۰) 

تر کا رگ ول ںورک اورا کا حت ما ا 
علا ری رح ار رکا رن : ما مقر رامع لحار 
۰ رت وب لے ۱ 
کافر مان ے ان تَنَأرَعْكَےر 

E I ر‎ 

رسول کے وال کردا ارو 
و ری پل کمن ات دو سے خلا ٤ي‏ 


اللمعان مش اردوالتبیان ۱ 190 
دای تال دارم اقا او رتاک رگنس یاال سول دوسری با تا 
0 ۷۹ رن اد رن 
۱ 0 7 ہبہ فاش ران ویر 
می سک ربیقوں می باج اختا فکیاراورہر جا نون ےکی بی اکم ےن 
نک »ال ل ےک آنحضرت ملا نے ححضرت این عاس ری اور یا یلع د اکر ے 
وس یا :"اس الق !اس دنل که عفر مااورا يلصا دس تفر 
رآ نک ط ر ں قل رن بو توححضرت این ع اس ہنی اث نصا گواش دعا تفاس 
لسکا کنات دھھا؟! 

علا تھی رح نیا-2 ہی ریق رن ےمانعت دوصورتوں مه 
کید ول ے: 

| کس یخس کی ایک معابلہ ‏ لکوکی راسع سے اورا یکی ہاب الک طبیصت 
اورخوا کش کی میا رن ہے وتو فان ی ی ی ا اور 2 طا 
E‏ 

۲ - ا أن آیات کے اندر جن کان غا رآن سے ے یاان مل عزف 
اضاقت وت ہوئی ے ایک سا پش لک یادد ال !خی یگ فی فا الاو 
وک رآ ن یرس جلدی e‏ 7 


7 وتا مود النَافَةمُبْور لّوا پا (لاسر )ال ا ےکم 
نے تو م موو مومع مس کے طور پا دیک ا 
ایی جاوں پلک کی“ 2 


اب گر لی کے تیاب ری الغا کور یت والا نکن یی دس 
کک انہوں نےػس پل کیہ دوسروں بن کیا ا اپنےلفسوں پر؟ چنا بیعزف داارل 
یل سے نے ء ورای کے ظا رن میس عبت( یاده ہیں »ان دونوں صورتوں کےعلادہ 
دیز یور کنیل بو - 
تیر یمم فی راشاری اد فرب نیم مر بلق 


اللمعان نارو التبیان 191 
ہے :ہکم ال بحت یں فی اش رک یکا می اشن کش با اوراس کے تلق علا ے کمک 
آراء زک رکز سی گے اوریچراس کے بحع فی راشا ری کی بجی منالوںء اس طرز ی جانے 
ولد اوران مو جودا تن کو ہیا نکر میں کے ۔ 
تیر انار یکی :تیر اشا رک رآ نکی ظا ف ظا می ہے ےی اشا را کی 
.بنا پرکی ال وٹ ال لملم پا لطر یقت اورییاہ دن سکرنے وان مار ار 
۱ پرظاہرہوتے ہیں تن ےو کول تال نے متو رکد یا ہوتا ہے تس کےسبب ووت رآن 
1 پک کےرازو کوپ ی یں یا ام شف راف کی ہنای ران کےذہنوں سض 
۲ ال مھا رون ہوجاتے ہیں اوران معان اور یات مہا رک کی تلاپ رک هراد کے درمیان 
ای کا 07 
۱ چنا نیقی راشا رک یمفس ظا ہرکی می کے علا ودک دور( یال ےجس 
کاآیت مپارک ان ل ی کیان وه بان کف کل ہوتا بک ایس 
رناب موتا ےت کال اشتعال کول دبا ہو ءا یک لیر تکوروش نکرد يا #واوراست 
ا ان ان بٹروں میں دا کرد پا وت کوار تال نے وادرال ےوازالے _ 
حجی اک خضرت موک .سک ات حط ری خم رانلا کے قم کے بارے می ارشادر بای 
ے قوجداعاً.4 
رم سو انہوں نے جمارے بندوں یس سے ایک بندہ ( کن خض )کو پایا 
7/۳ مس ای خاک رمت( یی یت )رگ ارم نے وچ پل 
سے ایک فاص و رک ٥ل‏ سکھلا یا تھا ۱ ۱ 
مک موه یعل میں جک کیت وی اکر سے سے ها ہوا هه ول 

سا یی وم ے ج هک صلاں وق ی اوراستتقا س تکار ۰ جیاکرالشتحا یکاف مان 
ے واتقو قواالل 1 

ڑھد” اورغراے ڈرو اوراللر تیال 2 امان کر تدم 

رای 7 


رک سے تلق ما نےکر مک آراء:علا کرام ا 


اللمعان مر اردوالتبیان 192 
اش کلف اقوال اور تضادآ راء ہیں ء چنا ترش علاء نے تواسے جا رف ارد یا ے٠‏ 
اور ےک کیا سے اور نے اس کائل ابیمان او رتا حرفت خداوندکی س 
شا ریا ب»او راشف استز بخ دضلال اورو ن ای سے ارا ف ھاے۔ ` 
یقت بی کرت دش موضوع ے جوم وای رت او رتقیق تک یگہرائیوں 
سو طز فی متا ےک علوم ہو ہا ۓک یرل ا حم سے تصورخواہمخات 
کی پچبروکیءادرال کی آآیات ناور برا یکن ہو جیی اک فر قباطت ےکا تو زنر 
اورالیادکہلا ےگا یا ای ینش اکر ای ہا کی طرف شا ہک نا ہوک ہا تھی کلام 
کال انان اما طس کرک کیو نکروه طاقتوں اورقدرتوں کے ا یکا کلام ہےءاورکلام 
لی میں تور من 7۶5 ای ی 
حرفت اورکمال یبال سے ہوگا حجی اک ححقرت امن عاس یانما فر کے ہیں 
ےک رآ ن کل فآنوار و اقام ل ان کل قاری 
دموا کچ کو یا چوا ے × ای ےکا ہے الیش ۱ ورن 
ی ا ل(بریکراں ) سےکنارہ تک چیا ن چه جواس می می سے وال 
وتات بات ےگا ءاورجواس می سک کت ا اس میں 
اخارواسال+علال وترامء اح وضور کم وتا ہیںء اس کا ظاہرد ان 
ہے لیس ا لک ظا پرا کی تلاوت اورا سکا ان ا کی ر ے اپا اراد 
7ئ وی ما سك 9 و او رچچڑا ۳۹۹ اس سےدوررمو 2 
تضیراشار یکوجا ر کے والوں رال اك ی کے خو ا ےا شا ان 
وت ادلا کر سے یں جا ہام قاری را اپ تاب یبن 7 و 
اتی یں سور تم ری يمک 2 ہو ےک ہے عد یٹ کے الفا ہیں : 
حر این عیاش سی ارڈ تفم ے ردایت ے؛ ووفرماۓے ی سرت 
عرص برر کےکبارصوا رک بل میں دخ کر کے عضاوم بات 
اگوا رگز ری او رح رت ر ے ٹل کہاک ہآپ اش ےلو مار یت ٹن ون و 
کر یں ج بلاک کے برابر سک ہما رے کے ہیں ؟ حطر کر بے جواب دبا کہ 


اللمعان سارو التبیان 193 
دوه کم ول ےت ای طرر واقف ہوا چنا جهن ترذ کے ایک 
دن بای را نکن و کارت این بای طا سے یکی 
ہوں نے کے مرف ای لے بلای ا ے تاک اکس( میرم )وا وان مروت 
عھرے ان سے در یافت فیک تال ےر ان :اکا جاء تخر الو وال 0 
کے بارے یس ہار قکیارائۓ ے؟ (اے مھ یی اللہ علیہ وم ) وڈ 
اور( کم کی )جج (مئ اس آخارکے) ای( وال ہوجاۓ )“۔( جم عاشی 
یں لن سک کت کم دیا ےک جب یں داور نصیب موتو ہم شم 
یا گرب اورال ے استغفارکی ورخواست یں بحض دورب زامش رے 
ارگ ہا۔ ا 

آپ ٹاپٹانے کہ ےکی اکہ اے این ععباس !مات بھی میں کچ ہو؟ توس نے 
کہاکنئیں ۔آپ نے نر یاک بہار یگداس ہے؟ شس کہ اک سول ال 
اشرعلیرو مکی ال ے جواشتعال ےآ پکوبلادکیء اورفرمایا: کا ججاء تَشژ الله 
اه :ا ریاشع یلم ) جب خد اک مدداود( کرک کل اپنے 
آثارکے) ای ( تن وا ہوجاۓ) “'۔ توم آپ کی ال کی علامت ے: 
«فسخ.4 نمی اپے رت 2 بیان کے اورال سے استتغذارل وروا ست 
کے دہ بوکرس دالاے“۔ ال پ رخزت عمر تایاکش کی اس 
آ یتک مطلب وی چا ہوں جوم سکس ی ۱ 

را این عباس کے بیان کرد ہآ یت ال مطل بکو قاری ال م نہ 
یم کے اور مطلب صرف رت تمراو ان ال ی کی کم میں1 سکاء ہے دہ 
تخب اشاربی سسکا تال اب تلوت یل لو پا یں اس پرالہا م کے ہیں٠‏ 
اورا ےش بترو کال س ےآ گا هر تے ل» چنا چ ناور الا سورة مها رک لآپ 
یڈ کی وا تک راورائل کے قر یب ہہ ےک طرف اشاردے۔ 

ایر کی ایک جا تکاذکرعد یٹ شیف یں یآ ا ےک آحضرت مم نے 

ایک دن خی ارشاد فر ما یاو رخط ےش کی فرمایا: نے تک اش تما ی نے ایک د 


يرد 


اللمعان شرراردوالتبیان 194 
کو تیااو رج ےا کے بای ہے اس کے درمیان اختیارد یا( کول یل سے جو چاے 
پندکرنے) لیکن بندہ نے ا ںکواخقیارکیاجواللد کے یال تھا“ بیس کرحضرت 
2 اد نے کے اورایک ددایت جس س ےک خر ابویک ے ع کیلک یارسول 
ناماد مال با پآپ پرقر بان ہوں ‏ راو کچ ہی سک لح تابر سل 
رونے رب ہواءجب آپ وغات پا گے وین معلوم ہو اک ہپ نی عبر 
ر (اختیاردے گے بنرے) تےء اورنضرت ویر نارهت وہ بات که گے 
جوم مھا نہب کے ءاوروا ‏ توزا کی رع ہوا یم اک ہآ پ پان یا لکیاتھا- 
لا رام کےتضی راشا ری کے تلق ات ال :من انا شی سک بارش 
ایا کرام کے چن داقو ا لکا ذک رکرو لگ »پورگ ر ے اس با تک سوال ےکر تے 
ےک وول دقن راس کش نکر سے ار خطا و ای ھَ. 
ران !توا بیس چ الالام امام رای رح نشکا ایک مقولہ ذک رکرو لک جک سب 
کید تام مرک سسوم لک موں او راد ای سے ب ردک اس رجول : 
علا مز رش رح اتقو : زگ رم ای ب رصان ترا 2 
ی ں فی ق ران تلق صوفیا کرام کے اقوال ےت کہ گیا ےک یں ۔ 
ہیں بلک وتو مغ م اوراحراہات ہیں جولوگ اور یکر ے ہو ے کو نکر ے 
»جاک اش تیال کے اران 2 باه می ںہن صوفی ےکا مک باس کہ 
لن یلو تک ےم اس :9هایلوا اکن الْکُنَاە”ان 
کفا ےا وجوت ہار کل پا( ہے ہیں 

ان تیال س کار ےت کا ےا لک طا ر ب پچ نان اسب 
...000 
۱ علا سی اورعلا نز انی رما الک زی نظ : لام می رح اللہ اپ کاب“ 

الق میں فر مات ہی ںکرنصو رآ ےا ےت ظاہر رول ہیں اوران ےا ہے معا یی 

طفع رول کر جن کال ال کر ے نراالیادے۔ ۱ 

اقترا راڈ راصق کر یں قباس کرک ر نکو با طط ای وج سے 


اللمعان !ردو التبیان 195 
کہاچاتا ےک وہ ولوگ وو یکر تے ہی ںک صو شف ےا سے ظاہر رول ہیں بان کے 
اه مطالب ومعائی ہیں ہیں معام کے سواکول کل جاضماءاوراس بات سے ان کا 
۱ مقصدش راع تک با کک نا ے۔ 

پر یف تع لقن جوا طرف کے ہی یرو نار ول 
یں کن اس کے پاوجودان می چن لا فک مر تھی اش رات بھی ہیں جرف 
طریقت پشف ہو نے ہیں٠‏ زان اطا تف میس اورظاہری عراوش تونق وی ق کان 
ول وو کال این اورخا لم مع رذت خداوندی بی سے ے_ 

چنا ئآ پ نے دای اک علام لی رض راش کے باطت کی طرف انار هر کے تاد 
کہ نکاراست دزن غراوتری یل الاد ےجب یناز لی رم الد نے تفیل ے 
یا نکیا سے او نوک تات ہے چنا نج بانیم پرا نیکرات یکا ریا 
اوررقآ کے ا ساط وی اشاروں مض ایل سلو کےظر یی ہکا ا ترا فکیاء 
اورا ےکمال حرفت وا یمان شش ےق اردیا۔ 

اک سے ماد سا نے فرشا ری( جوک حش عارفین با کی تفر ے ) 
رقف (ج وک مقر کا ب ای معانی مت ری فکرنے وا ےکن ان 
یچ کے ورمیان فر تک لکرآ جا تا ہے چوک اول ال کر حرا ت ناوریش 
سے کک سے اد رکچ ہی نکن اکل دنورا ری رادی یل پر 
کر 2 ہیںہ خی کے ہی ںکہ بل طابر مع فت ضر وی ے :کیو لک جو اس رارق رآ 
وکا کو کرت ہے ان ظا ریم یکو نہیں با تو سکی مال ا سن کی ے ۱ 
جودردازے ھلوا ل ہونے ست پت کاو کے 

اوررے پاطتی توو کے ہز کہ ظاہرسرے سے مراد ی یں بلک بل مرادے. 
90س ۶۶۷9۷3 تل ا 
بات کے دن الى بین اتود کون یل یں اتال ا 2 ٹیں: ان 
الزين..4 

nasan a مھ‎ 


اللمعان شر اردوالتبیان 196 
کل ہیں سوچھلا جو شآ گ میں ژالا جادے ده اماب یاوه جوقا مت 
کے روز اکن ومن ماقم( جت یسل ) آے جو گی چا ےکرلوء و تہار اسب 
کا موا وکر با" - 

القن کم علا میتی او دک تقر یر :علا موی رص الف کے اپ یکناب 

”لان این عطا ہرعاش سے رغال کے ہیں: جانا لوک کلام ای یا رسول شرا 

اٹ کی حد ی کی ال متیر ( نی راشا ری مک نا ظا ہرک مت کو اپنے ظاہرسے 
ریش کت جس مم کل وارتول سے اوریر بی ذیان کاعرف تی بات 
پردلاا ت ارتا ہے اہ رآ یت سے وی ہوم »وتا سے“ ان تھا میات اوراعادیث کے 
کچھ انی مفا یی ہوتے ہیں دک رن دحدیث من رای بش2 
جن سک او تھا لی ن کول دئے مو ے ہیں۔ ٠‏ 
ایز می انل سلوک سے سول اس لکرنے ےکی راو خالش کر نے 

وا ےکا قو لے نکر کر الد تھا لی اوررسول دا لکلا موی بی کنا سے ء 

چنا اعا )احا لتوب ہو صوف سک ےکآ م تکاس کول له 

ہرود رات مہ پل کیت یرطاب ری الاو ظاہر پر بیقر ار رت ایں) اوران 

ے ان کے کرره میا راو لے ہیں ءالبت ا شک طرف سے وہ معال کی مج جا تے 

ہیں جو نکی طرف اش تھاٹی الہامفر مات ہیں 

مصنف رطف مات ہی کرش ماو ںک می نصا فک بات ہے او رشن سیل 
ریہ الد ن ےج نکو ا پقی اکل مہ پررکھا » اورظاہرکیاٹصسوس اورایک عارف پاٹ من 

۱ کے ون ردو ہو نے وا 0+ ۹ »جاگ 

خر ت ویر صر ان برض ر تکمرفارو کے سا تج بھی مکی میا 80,۵ 

کی جات »چگ اش سے چاہتا ےحکمت سے ازا ےاوردی کیربت اس میں 

رک دیتاے ارب کی ووثرآن سے یں سید نادا وو اور سد نیملسم ی 

ال تک ان دوفو پیش کے گے ایک متا کے اندر رد سے د ہا وولو یل سے 

ایک نے وہ فیصل کیا جورو سرے کے فصل کے الف تھاء چنا نج رآ نکتاے: 


اللمعان ےب اردہ التبيان 9 
«ففهیداها.» 
رم سو کم 0 و کے 
دونو ںکوکمت اورم وطاق ابا تیا“ 
غیرغاری باد میں واردہوے وال عد یٹ کامطلب: یبال 
هار لیے متا سب معلوم پوت گرا بت گا سرت وف کل 
صن یکو بیا نکر کیل اضیےر اشا ری کے بارے بل واردہونے ول صد یش کے مطل پک 
وضاح ت کروی ؛ مک رین ال پان ال عدب کو ا سے ی طریقہ پراورایق 
وشات کے م طا یآ یات مہا رک ےتھٹا اکرتے ہو سک شیر یں اپ پفل 
وو ےکی وکل باش 
فیا لی رم الہ نے اہک سند کے رار حر ن فلت اورا ہوں ۵ حضور ٠‏ 
اٹ سے روای تکیا ےک ہآ پ ا نے رما کہ: e‏ 
ہے اور فک ایک عدے اور رر فکا ای ملع 
اورطہرالی راش نظضرت ہن ود ےہ کیک" اران 
ساون ایا رف شس سکی مدت ہو اور ر فکسلئ ا ےن 
علا یوی رم اللہ نے عد یت رکف ریس ظاہراور بان ےکی کے لیے 
چندوجھ کو ۃک رکا ےکم ان میں ےدرک کےز یاد وریب وج جا تکو زک رک لیے ہیں : 
کی دچ ماس ایکا ار ان تراد کف سب - 
ورل وج : ظاہہرے مرادایت کے وہ معاٹی یں جوظاہرے واق ف کار علا ۓےگرام ۱ 
0 6 71 ,0 پراشتعا ی 
ال مرت وتقیق کیٹ کر ے ہیں_ 
ر اوج : وہ تھے جوایڈ تیال ےے مش امتول کے بیان کے ہیں اوج سز ۱ کن ان 
دک ڈیہ آن اتا ریہلوں کی باکت ک خردیناب اوران کاباشن دو سرو کیت 
۱ کرنااورپپہلوں بسا افوا لکر نے سے ڈراناے؛ تاگران یی وہ عقراب اذل تہ وچاے 
جو ھول پرہوااتھا۔ عام سل رح انر اےژ لکیدیل کے ذیادهمشاب دموا 


اللمعان شر اردوالتبيان 198 
ےت کو وت 
ال مراد ارت این با ی EE‏ مر بش ےک موی و 
ارآ ن زو کون وون ...اورا لک ال ری کا اما 
اف شاری ول موس ےکی شر ا و ای وف تقایل قول بر 
جب ال میس ذ یگل می زک کرد دشرا کل ان ہا یں : 
ا رآ ن ابر یک کے مان ہو 
۳- وی ن رکم رف مکی مراد باب رین مراد ۔ 
ایی A E‏ کس اک باطنے 
۳ کے اس اداد یی می کته ںک امام مملی ی عمش ان کے 
وارت ہو ے: 1 
۱ وَوَرت : 8 1 1 اوردا د( ما کی وفات کے !عدان ) سے قاتا م 
لمان ہے“ ۱ 
٣ال‏ شیر اوی شر 1 کل یار موجور مو _ 
۵اس سا ترا وگول کے ہنو ں رتشوش وان میں الاد ہو 
اك را یا SRE EAL‏ ون وو وا کل اورگنویر 
راے ا وس ن ی کی ر ا رک 
وا رکش وا سل ہیں۔ 
زرقال رد ای ایک )بارش :م لتیار کے بارے میں تن 
پرا یم رقا زح اشک ایک ق پات ڈکرکرتے ہیآ ج وکا کے لے راز 
کت اوز ہی یکت ہے جس کے با کی( توا )ول ہو اوه( اکر ول سے )مج 
ہوک( با تک طرف ) کان ای زدیا ہو۔ 
ورا ہی ںک شای دک O‏ 
اشارا ت وخیالا ‏ تک مکی طرف ال مو ےکی وچ سے فت هل بتلا ہو سے اوران کے 
دای بے بات ا یک تاب وسنت تال بک پر لام لات ڈو اک 


اللمعان ت ارده التبیان ` 199 
ال نوع پر ی سوچول اورخیالات کے سوا 7R‏ اورانوں نے وگو یکی کے اسلام 


کا موا لہ چن یلا ت واو ہام کےسوا ین _ اورم طلو ب صرف وای خیال کے سات طاری 
وس دالا مال ہے ججہا ںی وه طا رک ہوجاے - چنا ا ہوں نے احا شرع کی پابنری 
کاخیال ندرا وکام می مین تی ناب ارت سول ال ما کے کے میس 
عمر یز بان کم کا اترام شگیا- 

ال ےی 2 لیس کرو خوش پ رت ہیں دوسرے لوگو ںوی ہے ۱ 
پاورکراۓے ی ںک ینت برس تآووی ہی ںسکہانہوں نے زی صدومالیااو ره کے 
ان کا ایا باق جاک ر بط ےنت ش کی فی فک لا اکر :یا زان 
اسباب اتا رک ےکی بن سے بلاک دیا( ن اسباب کے اخقتیارکرنے سے ہے 
زرد اوه مومت پیش رب الا باب کے سا تھ ہیں- ۱ 

خد اک کا ہے بہت بڑاالبیہ ہے جو با طنیہ نے اضتیا کیا ہے »جاک دشر بع کا کی 
ول سے اگما یلیل اور اسلا مکا ہنی باق ار تکو بنیاو سے ڈ اد بی ء اپنے لدان 
بل کے فرصت م سے تقاضاکرتاہ ےک رتم یس ان فر لول بل 
جن ےڈ را یلاو رال ہی شور ہو یک وہای کل یر هراشا رای تھا ر ے دست 
کل ہوا ھی کیو کہ تام سرا زد دود نات سے پارت یں جو بش 
دپاندی کے دا رہ سے خرن ہیں ء اور بسااوقات ال س یال یقت سار اورک » 
اٹل کے۔ تل جا ا ہے روا قشع ین سب س کہدہ اسآ پکوان 
سلورنون ٤0ص E‏ ُ0 ۱ 
سا تکرب وسنت اوراقت وش ربعت ان کے مطا بی ان دونو کی شروعا تک 
صورت می ںافستان دبا تچ ہیں : «آلستبرلون.. > 
ا خر و شی لت چاچے ہدادلد کچ کاچ ےش 

جوا در جکی ہے“ ن 
چ الاسلام ام ار رک شاد ذ یت الا ملام امام فا راش اہ یکتاب 
820 کر کیل س بوں فرماتے تیک جالع سم 1 


اللمعان شرا رروالتبیان 200 
بات ستآو اک سے با رک مرا ولا مکی ود ود ہیں ہیں صوفیانے ایچادکیاے : 
یم :الد کش اور اہر ال سے بے تا کروی وانے وصال ای 
کے سے یال م٠‏ کہ ایک با عم تلو وعرت الوجورء قلق ون کے درمیان 
تاب کے اھ چاےء ذات بارک تا ی کادیړادے 2-7 اوراک اور ان ت 
زور و و کے دو ےکک اء اورال نے گی اا اشا طرف 
سے فلاں با تک یگئی سے اورم نے فلال جواب دیاء اس یش و سین علاع“ کے 
منوا سے ا لم لمات سن ےکی وج سے سول پر هایا گیا ما جما عت ملاح 
تول آنا“ ے ات دلا لکن ہے۔ یکا مکی ایک ا ینم ےج وکام کے لیے 
بہت زیاهتصالن دہ ہے ای لئ ارو ا مکی با کر ےتو ا کان لکرناوسیوں 
اون زنر کہ نے ے زیا لے 
دوس رک یکم : :ہج آنے دا ےو وکات »جنک ارب شش اورا یکی بقل زک 
زبردست بو ہیں بین ان کے تی ےکا مرک لول بات تس مون ملا مکی اس مکاکوئی 
کش کر وه دلو ںکو پر یان :عقاو ںکوم ہو اورذ متو لگوترا نکر دت ے٠‏ 
خضرت اہ سود ڈوف ماتے یکرت ننس ےکی کی قوم سے دک پا کی سے دہ 
لوگ کے ہو لآووه ا نکیل فت ب نک اورحعنررت لی رات ہی ںکلوگوں ہے 
۳۹ با تکروجووو مت ول کا ب وت وک ال اورال سے سول نر 
ما۱۹ 
ٰ لے نشی یکی چنرشاش: رامام را طیب الت ہے افر ماتے ہی کہ الب 
طاحعات می جما ری کر دو ال موان ہے اورال مقام پرایک دوسرکی بات ے 
جوان طاعات کے ساتھ نای ہے اورو و شرع کے الفا اکا نکی ظابری مراد سے اه 
ای امو رک طرف پیر ہے جن ےعقلو ںکی طر کول فا رهق تک ںکرتا تو یم 
ھی رام ہے اورا کا نقصا نبھی بہت زیادہ ہے۔ فت پردازو لیر چن رشا 
درز لک ہیں : 

ا تھال یکاارشادے :دمت ال ِزعَون الیک 


اللمعان اد ه_التبیان 201 
مر ف رکون کے ال وال نے بذی‌شرادت اختیارکی ہے“ 


ان یش لس یماس کراس ارشا دس و لک طرف اشارہ ہے اورف رون 
ےول مراد ےاوروتی ہرانمان سر اود بفاو تکرتاے۔ 

اوراشتحا یکاارشادے :ق يعَصاك) ‏ 

چم آپ اپناعصاڈال د گے 

ال کا مطلب ہے س کم عصاے مراد بروه ہے سے مع پراللہ تا لی کے سوا 
اعتماداو رھ رو سکیا جا تا لاا سے چاہی کہا سے ینک دس - 

اورضورل الش علیہ وی مکافرمان ے: ”تسحروافان فی السحوریرکاة“ ”ری 
کھا یر کیو کرک کےکھانے ل ریت ہے _ 

یس ان لوگوں نے جو رک فیرح ری کے وت می استنغفارکرنے 2 ای 
طر رگا کل ہیں۔ ۱ 

اوریرسب ال لے ا اوت ورف رآن از اول شیک ال ے 
اہ ری سے پھر وی اورحضرت این عبال ٹوا ورتا مکیل القررعلاء ہے قول 
تی میں رف وب یکر ڈالیش ان لسن تفا رد دک ہیں ج نکا ھا الا ن 
ہونا شی مره ی اک رفرکو نکورنز کول سرد کیو لک رون یب تون 
اورا کے و جود کے پار ے یی روات مت کآواتھ سیگ سب اوران ٹیل سے 
تفا رانک ہیں تن کابطلان قال ب مان سے معلوم ہوتا ہہ بے تھا مکی تام را 
اورگراتی رشن تا ہیں او رلوگوں کے نے دن میں پگاڑ پان کا سیب یں- 

ان شر بپندلوگوں مس سے جوا کمک تھا کہا متا باوج له جا تاے 
کالفا ظاٹ ر٦‏ نع سے معا مرا یس توو :رش کے مشاہ سے جورسول انی اٹہ علیے 
7 پرپھوٹ پات کے اور ری با کوان کل طرف مضو بک رن ےکوچا ردیل 
شروو ج رای مما یش سے دو ماس بککتاہےآپ مال کی طرف شوب 
کی لا سرا درا یوسب 
”من کَذّب عَلَیْ مُتَعَمَدافََوَأَقَعَدۂ من لار“ 7 کر ان الفاظ بیس اس مکی 


اللمعان شر اردالتبیان 202 
ول کا قصان بہت زیادهادرضرید ے کیو ںکہ بت الفاظ رتور کو پان 
اورثرآن کے کے اوراستفاو هگر _ذ کے ط رو نکیل ور مکرنے والا ے۔(امام 
زا راک کلام ات موب 
فلا ص کٹ : ا کلام سے ہے بات ماه سا ان یکرت راشار یک شرع 
گی طرف سے تا ئیدموجودے ہلان ال کے اندض فاس تق کی رفل موی ہیں 
اورت سقضرات نے ا یرت بھی با طف کا راست ان اک خلا ےکر امک و کر دشرا یر 
ات ا ال تن وت نان 
ا ی ات اتا پروست درا زی شور کروی ےء اورا ںکاخیال 
ےک میارج وهی بے وی ء جہالت اورگراای ہے دکیو ںکہ کناب 
الس یف اوی من ائل بان کےراستہ نا ییا يا ان 2 یش 
ان معا قرآن ریف ضرور ہے۔ 

E‏ ا تما دک ہے اتد زا لکرر پاتھا 

«قل اللہ جر رهم يعَوْحِهۂ بَلْعَبُونَک' TT‏ 
تال ف ایا ے را وان هفرص + ےیہر 5 

کی کے طالب کے لف ال کے ذک کی طازمت‌طرورگ ہے ایس نے 
فا" ان" وتو لک مقولہ ہناد یااورمطلب ہہ مو اک :”تم التبا کرو ا سکوڑ مخز ھال 
ہمت E‏ ہے ال 
ازل“ اک هک یت مہا رک کا ییات اک پردال ے: وما قروا له عق ذرۃ 
یھ ٹن نى ےہ فل من ول شب ہس 
مُؤلی نورا وهی تیاس #۳ قراطیْش بوتا وف و حون گرا 
ولمم ما لم تَعلَبوا اک و اباو ك قل اه د ٿھ دهم ن خَوضهم 
لبون 

رھ ”اوران لوگوں نے اقیقد اواج بگ »وس ترد 

۳ لہ نیتال سے کشر کی تنل کی آپ 


. اللمعان ادو التبیان 203 
ہے لی کہ د کاب ےن ے سکو موی لاس لت ت 
د ےک۔التھالی نے تال غر مایا ےپ را کوان کے مشخ یس ب یی کے ظط 
گار نے ہے 

سک یت ده کیل ماب یں 
کردوا کم کے چا ء کاب ال پردست درا زی اور ظا کے غلا ف اورآن وراست 
کے متا دق رآ نکیتقبیرکر ن ےکا موق دی کیو ںکران ابا ںکاخیال ہے س ہک ی 
تفیے شار یک ایک نم ہے وی کی چک تو ووراک یں :اود ہن کے ینا س نیل 
کمردہ ال کے بار سے یل ایک داس سے کے گے یالب ناتا ںی کے زد بی اک کے 
فو می ںٹھٹ اکر سے بے شک الاسام اکن تیمہ ماهس فز مایا سکن 2 
شع متس مک گا ڑتا ہے جک نیم عام م بک پگاڑدتاہے۔ (لڑنی نمی خط رہ جان اور نم 
بلا خطر وا ان وتا ہے )اوراللہتھاٹی ی فراے مر راس کی طرف تما 
رن نات 
راس لے : لام یوی رح الد نے اپ زاب" الان شرا رص اد قل 
کے ہوئے ذکرکیا ےکر انہوں نے دوجلروں تل ای تک بتصنیف فر ای جس 
2201 مب درکھااورال متیر ات نان یره اقوا لک کی سے کان 
کہنا چا رادید دی ان پراعمادکرن کیو ںکہ ہہگمراولوگوں کے اقوال ہیں کر بان رہ 
اشنا اقا لصف اس لے ذکرکیاہےت کان سے میا ہا سے دخو فر ماتے ہی یکا 
ن اق ا کو دک رک نے سے مبرامتقصدصرف ہے س کر وولو یتلوم ہو جا ےکم کے 
دو یراروں سس مل ان بھی بہت بل ۔ 

اب ام یہاں را اقو ا کا ایک حصہ دک کر سی کے اورای‌طررج باطنیہ سےمنقول 
ض دوسرے اقوا ل کی بیا نکر یں کے؛ 4 کرام ےک اال ےلان 
ہے ئا وا کی بروی سب رفل 
ہو گے ہیں۔ ۱ 
۱ نالک رشا : قال را طاحخ, عس ی می دہ کچ جین 


اللمعان شرارهءالتبیان ۱ 204 
کے مراوتض رت کی وحضرت مواو ری نله تا کی ب ( ی جنگ ) رس 
م سے مرادخطافت کک رداك ےر سے مراد غلا فت عحباسیہ سب» ا سے مراد 
مفیانو لک خلافت ےت سے مرا دفو مہ دی( مق اسو مہ ی ) اورا کے علا ووی 
در بہت یگمراوکن ہا یں یں ۔ ٠‏ 

۴۔ایل تیل کا اراد ے: طونگو فی القصَاص > عیوڈ لال لباب 

"ارس تون )ام تہارک کاس 

اس بیس اُ ن ہنا ےک تاش سے رادت رآزن کے هولج راز ره 
لفت وش دولوں اعتیا ر ے پل »وراک بات سے سے جہلا وا کہ کے ہیں۔ 

۳-اشرتعا یک قول ے: جولکن یمن قلین4 ان ال ش سے ہے 
وروا س کنا ہو کر ال بو وه : 

اس میں وہ گے یں ارام لٹا کے ایک روست کے سے امول نے ول سے 
تج رکیاے اورا ن کرات نے ا ںآبی تک فی ریو کی ے :لیکن اس خر سے ہے 
ورخواس تگرتا Ur‏ کر ےدوس کو کون ہوچا کے -ج ی رابت ز اده بد بات نت 

۳-شتعا یک ران :یا ولا حلا ما لا طاقة لتا یہ)”'اے 
اد رب !اور ہم پرکوئی ابابا ر( دتا تک )د ڈا جنگ مارد 

ال یش انہوں ن ےکا کال سے ماوق وحبت ہے چنا انان کی 
عاف ت کی رکا ا سکی ول نے یہ اش یرک لی ءا نکی اس پا کرو رحاش نے 
پیز لا ۱ ۱ 

۵- اش تیل کا اراد وین شر ادا وقب4 "اور (قصص) 
اھر ی رات ر ےچب دورات اجا کے 7 

الک فیرش دہ کے تک «(خاسی4 ما« تال سے ج بک دہ 
کھٹرا ہو جاۓ )اور بل شیر یسب وغ ربیب ج رات اور بت تفت ال وگتای ےج 
کیا بے وف اور پر لے درج ال بی ےساد مک ہے۔ 

٦مان‏ ای :لزق بل لگ شن الفُجَر اضر تارا فاد نتم 


اللمعان 2 اردو التبیان 205 
مه لفن4 los”‏ ہر تی ےپ یک 
پیراکد یا ےچ ال ے اور گی ا لیت ہو“ 
ال میں ان ہنا ےکہ: جو نت سے ماو رت ارام اور . 

ارا مار ریم قفا انعم مده توقروں پ4 ۲ 
ےک م ال دی ماک لک نے وا نیت تیب ور یب ےکی پرافشت 
ولال نکر »از اقآ نک اع نی ہے اگ ا لک سلاس مد ہاورعبارت 
رج ۱ ۱ 
۱ ٹیوں یار ےچ رو :یعون سے لف فر تے ہیں جور تک یکرم الد 
وچ محبت میں لور تے ہیںء ان میں هت توشیعیت میس ال قررفرق ہی لک 
اراد ها نک مرن ست لیذ اور بان تون مودک این سیا“ ەٴس نے 
اطام EE‏ رت ون سیت انی زا سے می اسلا م تو لکیاء 
اوران شش سے ایک فرقہ یاقا د رتاک جب ربیل ادن مالاا نے متو از کے 
ای ےا ی ارت لحر تی ( )رات رن دہ چوک 
۱ کے اور( صلی الش علیہ سلم ) رجا نے شعو ںکابیگر ویش سے مسلمانوں کے فلاف 
رید ہا سے ال کفکہددایات ۴س7 نا > خر ت لی 1 بذات خودان 
کےکفذروضلا ل کی بنا یران پر کی ان سکن اوران رتور وس ۱ 

ان بل ض لوک اعتترال پننگی »جوا کنر دم میں نہیں 
گالب اتہوں نے ال سنت وائجراعع تک لش تک )اور ہے اتاو کیک حر تی 
تا کاست باح تاور نر تک راد عفر کان ٹپ ےبھی نل یں اوروی 
خلافت تن داریں :کیو ںک۔وہآل میت سول فا سے ہیں۱ اورا ن کاب اخنقارے 
کول خلفاء نے خلاف کا متم نیال وج ےط رتل نک نار 

اوران شش سے ای ےکر وو صر ف حض تی واا کی فضیل تک تقائل ے٢‏ اور و 
یں جواں رت کے بل ین س زت اُاوبک راو رنخضرت عھرضی الہ 
مھ اکوگالیاں دی ہیں اور گراه خی لک نے ہیں ( العا اق جب اٹہ تیال نے 


اللمعان شرن ارروالتبيان 206 
سرد یات می ا نکی مد سرا اس او رال اپنے پیارے کی تا کے ناش 
رفقاءل ےر ارد پاسے۔ 
اپ ٹم انا کش ورات ل کے دونو ںگروہو لگ طرف 18 
تاب الک ظا رکے چن رمو نے ہی کر کے ہیں : 
شید اشا يمک فی میں٠‏ ا- داد پچ رلوکو ںکو چا ےک ال یل 
دورکرو س“ ی ۱ 
شیا لکیاقی ییک سے ہی ںکہاما می ٹل کی ملا جات کےذر سید هیال یل 
ہے ۱ 
EE‏ "تس نوذبادذ دای با ےکی مرف وی ے) 
ا ایک ھآ نے وال رآ ےکی( راڈ نام ے )'۔ 
(الراجشة) سے مراونضرت ی تدم ال ر ادفة) سے مرادن کے 
والرح ےی بو - 
۳۔- E E {lep‏ ب 
اھان دالوں ےمرادباردامام تلا ۱ 
f‏ - 9( تتخذوا. 3 دوس ودمت باو ی ری رش 
ایک ہیں۔ 
۵- واھ ر قت اود زین اپنے دب کاو( لیف )ےر ہوجا ےک“ 
ال لائ کے لور ے رون »وج گی۔ ۱ 
٦‏ - مل 46 جولاکا پروددگار کے مات رکف کر ے ہیں ا نک حالت باعتبار 
.شک کے مد ےکی یراک وخ لت ری ات ہوااڑ اس ها 
00 ا وم و ا نا کی وا ی ت کات رارت کے 
آوا لک الا او را را کج سے کے ہوا نٹھالی اورکحیر و ات 
ے- دی ینیب اش ای ٹا وجا تا( کراب سے تا “'۔ 
مطلب یکا ای وق را بک جماعت »یرتک یا یت 


2 


ار ارو التبیان 207 
فرق با سے فا رکے چٹ رمو نے :۱ - ہا یی یو نک TET‏ 
ی س کرت کرم الل وق باون ٹیل ہیںء ور دال عر لین کل یک یکر کی 
یرتک دک آواز ےکر تے ہیں اود لالہ رق ن ٦‏ ان کل سے ان کے 
کوڈ ےکا یمک یا نکی کرام مراد لی ہیں ء اوران جس سے ج بکوئی پک یک یکو ککی 
ازس توو کہا ہے :”السلام علیک یا می رامو نین !“ا ےامی رامو و نآپ پرسلام ہوا 
۴ن کک تن دی سے ایک گس جک د هک ہی سج لی اٹہ لیے 
7 رثن زگ کی طرف دوہارہ آ یں کے اورال پراترلال اللہ تما لی سے ال 
ارشاد ےکر 2 ہیں: ۱ ۱ 
ان الزی. پچ ”نجس غد ائ آپ پر رآن (کے ام بل اورا یک غلغ) 
کف کیا ےو ہآ پک( آپ )ی وان ( مت یہ ) میس پھ ربا ے۴ تن وه 
آ پننقریب دنا کی رف مرلو گا ۔ ۱ 
۳ ایر و وعلیا ی 


کک ۳ 
۱ لآب وکر قوب( نعو یامن ژ کک )۔ 
۳ -اورالٹہ تا یکا ارشا د ے افڑکیٹل .4 E‏ ۱ 
انماان ےکنا ےک یت وکاف رہوجا“_ 
٠‏ ںین شی کیان لی ر تےکر ے ین -(تعوذبالله‌ن ک): 
شیعوں کی تا یکن ست ای ناب سے جس کا نام ”مرآة الانوارومشکاة 
الاسرار ےت یی سرن سے ضف کی باس ۱ 
تفم رای 3 1۱ 
کربت رم شلام مایمن ینوں سے وگ ماگل اود جا ےقرارہیںء 


چانواشگارارب الم 4 انرا ےتا ن 


اللمعان غ اردوالتبیان 208 
ال ارشادیش ده باس هک ا رض ولچ سے مرادد | گ او راب الہ - 
اورایٹہرتیا کا فر مان ے: :افلم کیان لوگوں نے کک میس بل رن 


< 
م ص 


ےت کے 
ہیں بخ ری وسل کے امانوی مان کول کے اورا ل بات پرا ے صر ف توا شات : 
او راغ نیب کے اند ہے حصب کے بون نے بی اکسا یا ےہ ای با تک کرای س 
کولس جوکہ ہاطت او ھا زو لک ای ےی ت رن - 
یر نناک قوم ہے جوقرآن کے قاری کو لیے سے انارک ری 
ہے اوق جک رآ ن ظاہرد بان رشقل سے اورا گرال مراد 
مرف بان ےک ظا ا٣‏ کات لال ال تھالی کے اس ارشادست ے : 

فرب پچ ”ران (ف رین ) کے درمیان مس ایک د دا رقائ رد جا ےکی 
ٹس میں ایک دروازہ ( کی ) موا( کی کیت ہے س ےک )ای کے اندروی جاب 
رت »ول اور رو ما یگ طرف تفزاب موی 
پاطفیہ سفق :باطني کے بہت ےر 3 ہیں تن میں ے مم چند خاش فقول 


کاذکرکرتے ہیں: 

ا۔اسماعیلیہ: ر رصان رح الد کے باس بے اس اتی لکی طرف موب سے٠‏ 
اوراست ال ردانب ۱ 

۴سر اصطظہ:واسط کے ای کگائوں' ”تم“ کی طرف سوب ہےءا نکالیڈ قرم کا 
انی کآ دی تا کاناحم ران تھا۔ 


۳ سبع : سبع من سا تکی طر فصوب ے :کیو ںک ا نکااخنققاد کہ ان 
ٹس سے ہرسات میس ایک امام ہونا ضرو ری ےک اقق ال جائۓے۔ 

ره رمت ک طرف موب ے + کیو لک بی لوگ ا مکردہ اشیاء اورفو اش 
ات 


209 ۱ اللمعان تیاده التبیان‎ ٠ 
27 1 پاطنے یروں سے چند مال :ا فرمان' ال ے: لترکین‎ 
2 ایک جات کے بح رد ورک حالت ر یداع‎ 
RE E E, اک کہا ےک انیا‎ 

پت سی و و رت 
کرت هلو 

۴- اللہ تھی ما ے ہیں :قال اش لا بَجُوت لِقَاءتا اپ فزان عبر 
هلا آؤ رل4 ان نوا نے بال نے فش ےڈ آپ 
EE ALI la‏ 
میس کر کرد ۱ 

لاو بل کیرش کچ تک یکو برل ده جب غارس ےک حطر تک 
کال یس ذکرڑیں ہوا 

٣اش‏ تعال کا ارشادے: ان الزیں )€ ”بلاغ جلگ سلبان لے 
رو گے پھرمسلران ہوےۓے رک رصان بو رف ده 72 
گے اللہ تیل الیسو ںکو رن گے اور ال نموت بیش کا) راستہ 
ال ۱ 

ان کاکنا ےکہ بآ یت ابویک راورشان ا کے بارے شس اذل بو یک 
موس کی ایمان مایا برجب حر ت ی کی ولات ان کی کی 
توانیہوں ےکرک بعر یکی ہبیعت یمان لے ری ا کی موت کے بحددوپارہ 
کاخ ہو تام امت سے میت هک وج سکف رل بڑحتے چے گے 

٣و‏ -ارشادیاک ے: > :ان اللء بے کی تھا یت ومد سکم ایک یل 7 

روج ۱ 

ان ہنا هک 5ے مرا اش E‏ 
قول سے ماگ وز بیریں- 

9 - تال نے ہیں :مار ول 4 کہ 


اللمعان سر ازدعالتبیان ۱ 20 

انک ناک ولا € امیس € سے مرا دور ول ا خداا نکوغارت 
کرے(دی نی سے )کہاں بر چه جاتے ہیں؟! تر کہ با طت کا ملک ایک 
نت دپ درا سے جوا نکی طرف دیول ےل ہوک کی ہے۔ 

71 7 
تق رما زو سے اغ کرنے سے روز ےکی رافشاۓ داز سے کے ےکر ے 
»وراک کےعلاد شی ا نک گرا ہکن تنا یراو رغلا تلت سے پھریی ہوک با تس ہین ! 

ان رک نکم اط خیرم ساوسو نون والی مصیتوں میں سب 
سے یاد ہت او مرو کن ہیں »کیو لک ریش راید تک کار تک ایک ایک این کر کے 
توڑن هکاسیب »اور رآ کوان چ الیل پاتھوں یں باز یہ بنا تی ڑیں۔ کان 
اتیل کل ےکا نکی کت ہیں منظرعام رکد لآ تیں اوروهلوگ ال ا سول 
س یا دج ہیں ء اور وف و نس ز را کے ر سے ہیں ءاورانشاء اللہ یلگ دن 
بن زوال اورقا ی طرف رواں دوال تب طوالة اٹ عل آقرہ ولک اه 
الئاس لا يَعْلَمُو ی4 ”وراش تیل اه کم رقاب ہیں کان اکٹ رآری 
0 و E‏ 


یتقو يتقو ای انار یک ہو رک ہیں 
7870 یت 
دماج 


ز کر سو ین 2 
ےت 
ا وس ۳ ۱ 
r‏ الشف والبیٴن TT‏ 


'اللمعان !ردو التبیان 
ar DI‏ 
۳2 
775 
سر وج ےت 
بایدر _ 
ایا :ای کے ملف انب ری ہیں ما نکنی )هفرس ۴۲٣‏ مھ 
ٹش پبیداہوۓ اور ١۰۱ح‏ شی اشققال ہوا ءا نکی تفس کنب تفا میرم او رہ شل سب سے 
زیادہ مرک عائل ,راو ین شی اد عم کے اقا ل کی چا مخ تری تاب 
ہے اوریفس ری ن کا پہلا مر نچ بی ال ہے۔ علامرآووی رم الڈفر مات ہی ںیک 


تی میں این ج یک یکنا کسی ےار ی“ 
تق رابین چ ری تصوصبات : - - بکرم سا اورا لین ا ے قول 
اقوال را عاونا 


۳ - أسامیداورقوال مرو کن اور روا یاتاو دیاس 
۳- ار ضوع یا تک اعا رن اور ضوف روایتوں کے قنکو بو 
“و جوا راب او رآ یات مہا رل ا مسا تناکا کرک نا 
آ خی بات یس ےک ایک ماو بل کناب جوا اقیا زی تصوصیا تک 
بائ ےکی بات ےک و رخ سانکسا روات رر لت ہیں گھران 
کے حف تب کرت :ای رخ وشن امرا کی اتکی ۔ا نکی 
رده چاردانگ ا کا چ چا چاو راک مفس رر نکاسہاراہے۔ 
فی قیال کے مولف نضرین مج حرتدی ں٠‏ ان یکفیت ابو اللیث ے٠‏ 
“گے تھ مس وفات ال نا ب کا سپ رلعلومےء میرم و ر ےآ پ ال س 


اللمعان شر ارروالتبيان ۱ ۱ 212 
ما وتان کے اقوا لک بہت زیادہ کرک 2 ہیں۱ البتد ا رای رکا کر کر تے ء 
دوجلروں تل فرطو تاب »اد را لکا یک کین تداز برش وود 
سم لی ا کے مولف این ریم تی نمینایری اه آپ ك٦‏ 
۱ ون ےہ پک کیت ابا حا ہے ے ۲ 2 میں دفات ہو مآ پک رن 
ولاد تک طور کل )لتا ب کا م ”الکشف والییان عن تفسیر القرآن“ے۔ 
2 آ کک افیا سلاف وکام یکرت ںاور یا کاب یش 
اسان کے ذکرکوکا نی بے ہو ے شق رطور پراسزا رکا ذکرکر ے ہیں وی اورقی ابات 
کوب اکر بیا نکر کے ہیں اورننوں او رکہا ول بہت دلدادہ »ال لے ہم 
ا نیقی یل تبات ال کیب ور یب ارا یی ردایا تسه »بان یل سے 
فو سرے ےی باعل ہیں۔ ۱ 
ملام اہ تیعم رم الد الع کے بارے مل فیا کے ہی کی میس فی نف ت ورل 
ورد گوو وه رات لان ش کرنے وا ل ےکی رع لچ رک مکی راہ تک نے 
لے )یں ا نک فی ای کو رک کل میں مال ہے ج کور فرقان پش مو - 
۳9 یه مر مو جود ہے جک لقیہکتاب لاپ ے۔ 
یخی :ال کے مو ف یں مین مسعووفر١‏ اء لخو یںء ا وه 
ےی ات“ کے لقب سےمشہور ہیں ہکنی تآبیشد ے» ۵۱۰ھ س ای سال سے 
زان ررس وفات پء آپ نیل القدرامامء شی زنل اش 
ے ا ارس پو شی علا و کے چون کے عالموں میں شارکیا ے۔علامہ ۱ 
این تھے ر اٹ راصو تی رکے ین لابق تابکرم لفات اک بخوی 
ابق تیر شی 9 کی کن ان ی و کر زوا نت 
فاقوا سے فوط ے۔ 
فی تہ رام نکش کے سا تھا ل کر یچ نخان کے اتیک کک 
ادا نکی مض ام ابی ریات گی ہیں کین وئ اظ ےرہ بہت 
سارک لفیا ٹورک یکتابوں ےکر کے ہت 


اللمعان ر اردو التبیان . 213 
۵ یراہ عطیر: اس تفر ے مولف عبرا بن غالب مین عطیہ اندی» مفربیء 
ری ہیں »گنی ت اوہ ۴۸۱۱ھ میں پیا ہے اور ۵۴۷ھ مل وفات پالی۔آپ 
باس ےکوی »لفوی»آدییب» شا عراور ذکادت ومع لی کے ای درجہ فا ۓے؛اسلام 
ری دوریس اند میں تی رے۔ 

ا نکی رانا المحررالوحیزفي تفسیر الکتاب العزیز“ ہے ولف نے ال 
تفہ می و تال کے ہیں ایا یرام رنے وکر کے ہیں» اوران اقوال میں 
ھی جات کےز یادوقریب ہیں ان ےکر ےک یکو شکی ہے۔ علامرائ ن تیعم رص ٠‏ 
ال یراع بیہ رش ری می مواز کرت »و کے ہی ں “یران عطیہہ 
سے رقف و وت شارت رین اور رعت ےکوسوں 
ده جر تفت ات ری شض کر یر ری ےکا رن 
پت ہے لش یدانق یر درا ت بای رچ 

یراق حشرت اور فاد صوصیات کے پا وج هآ کی مور سے مہ 

یں بڑی بڑیجلدوں پل ہے :شا رکاش تال کون دے دی ںکمدہہمارے لئے 
زال ےئال کراس خکرادے تا کی کا ال کے ذ ری عام ہو جائے۔ 
۷ لس ابی یکشر: ال کے ملف حافظ مادالد بن سابل مرو نکی قرش وش 
یں گنی تاواد اء ہے؟٭ ٭ مے م ل پیذاہوے اور ٣ے‏ ے ٹس وفات پآ پام 
علوم می اور طور ربیف اورشی ر میں ایم پہاڑاوربکربیگراں سے وتیل 
اقدرامام ارت وتصنیف شل بہت بڑے اب نامرک ر٠‏ الٹہ ان ن 
فرماتے ہی ںکہآپ اام اکال کرت ما فی مہو ما یرٹ موش 
مقر ژلءاوزا رآ پک بہتکی مفیدتصانیف ہیں- 

آ پک ا تی انام یانبم نيا رم هنن 
1 جانے وا لکتالوں ہیں سب سے یاو شپورے ا ری کے اجرد ور ے 
درجم ماج ےء ای می مولف نے ف رن اسلاف سے روا تک نکاما م 
کی »چا ۳ روروایاتگوان کے ای کا ر تھ روا تکیا سب او رعش 


مره 


اللمعان تشر اردوالتبیان 214 


ع کی ل ی ہے ان ۳ سے مگراورضعیف روایات ۱ 


پرددفرمایاے ای لئے کر رر ھی باس وش سب سے 


یادا بی ما ے۔ 


تی ا نکاط ریت کا ہہ س ےکآ ی تک ودک رکر کے ا کی باک لآ سان اورحشظر 
عارت یمس ہیں اود کرد دمر یآ یات سے اس کے شوب ہیا کے » 
اور یران آ یات کے درمیان مواز کے ہیں ٤ا‏ ارگ فا مراورمادصاف ہوہاے ۔ 
اورتفیری ال فو کابہت زیادہ امتا م2 ہیں جے علا کرام" تضیرالقرآن 
إا کے بسا انز کے د یاچ س ذکرکرد وکظا مکا ایب حصہ زک رک رتا ہوں : 

علا رام نکش رطیب ارت ادف ما کے یک :کون مین و الا یہ سیرک بت نی 
ریت کیا ؟ تو ا لک جاب نے کش یط رید ےک رآ نک تقر 
رآ ےک جائے :کیو کج بات ایک تل درک ا سکیل بان 
کرو که 1 ہے با تآ پکوقوکادے اورآپ ال سے عا جآ جا وم سنت 
کولینالازم ہے :کی ںکہ سن ت ق رآ نکی شا رح اوراسے وضاحت کے ساتھ بیا نکر نے 
وال ےء رام شا رح الد ن تو یہا ں کک فر ماد کش با تکابھی رسول ای 
علیہ کم عم جیا نکیامے دہ پ تئ ےق رآن ے ھا ے+ اڈ تھا لی فر ہے ہہیں : 
یٹک ہم ن ےآپ کے پاس بوش میا ہے داع کے موافقی ؛ جاک رآپ لوگوں کے 
دران ال کے مو ای یمرب جرک ات ےآ پک جلادیے“ او رش اللہ 
کم نے ارغ اء "خر هک وق رآن ون کے اوی عنام تکی یا 
س 

علامم ابی یک ررضہ اش دکی انقیازی غوف ہے س ےک وہ تیر ہا او رش موجود 
اسر ایلیا ت یس ے نا ليم باتو کی نش نت یکر ے ہیں اوران سے ڈراتے ہیں ء 
ری ےک زاب نکش ررض اد رکا عم ا نک تی ر وتا ر کا مطال کر نے وا نے م قوب تا 
ج“ اورآپ کی رورت آپ کا اصنیفات وتالیفات مل سب سے 2 


اور ی ینیم ارم اتروشا تر ہے ار چ توقای تام 


اللمعان 2 اد اتا 215 
رل( 7 
ے2 ی تومیر مول ف کل اتد بم ہراس بن وال 
جزائرکیہمفخررپی ہیں ۹۰ے ۸ شس وفات پائی ا نکی ترا رک نیل سے ےا 
یں انہوں نے لف صا ین کے اقوا لکش لکیاےءاورکھصرے ارو یگس 
آپل بے جنپ گی ے۔ 
۸ یسیو : ا ںآقیرے مولف چت» تک u‏ جال الد ین سیول ہیں٠‏ 
مورا بو کے مولف ہیں ۰ ی میس ولادت ول اور ۹۱ھ مل وفات پل .آپ 
کی رانام! الدرالمشورفی التفسیر بالماٹو ر“ ہےد یاهکناب مل فرماتے لک 
ہو نے اکتا بک رانا ان ل 

یرک ادر مول اک لعل مج کب ےہ نس سم چپ بی 
ہے اودرآپ نے ایق کاب "اقا یٹس ذک کیا ےک انہوں نے ایک ا مق رو 
1 ے جو تاس قول ول تنل استباطاء اشارات»وجوه اعراب؛لقات٠‏ کات 
لات اوران بد یرہ رضردری رگا وک اورا کم اکر و 
الپرر تن رکھاہے اور شا ایر کے علادہ ہ ےش کانا م ال ررامخو ر“ ے۔ 

شس نے ا کالفا تايه هرب رک راوس شک 
برےج۔ ‏ ےئ 


سک اص ام ھی 
چا اج ےت 
50 7 72 
كت 


ےج و دے۔ 


اللمعان شن اردوالتبیان 


راب ال رآ نوراب الفرقان نظام ال ین اکن نیش ری 1 بی نمیا لو رک 
ہج سڈ EES‏ 
ا کت a‏ 
ا ؟کٰٰ.7] 
ا فی تخ راز ی :ا تفی کے موف حضرت علا تن رہم یکھررا زی ہیں ۴۰٦٢۱‏ میں 
وقات پل نک اتفی رک نام ” فا یه آپ نے ال ا فیرش کے 
تیالو یک رش انا ہے اوراچے دا لکوسپاص شر الات ( تیالو ) کےسا مہ میس 
ژمالا» محر او دیا ون پرا ا ور بان قاط کے زر_لج 
ردلیاےء اسر ین وچاد تن کہا بش انی وابطال کے ذر ےچ سے امن اکیاے» 
آ کلام کے وضو میس و تر یی ہے جی اکآ پ سای او رکا انی 
علوم ٹیش بہت بڑےامام ہیں آپ نے ا یرل افلاک :برجوں ہآ سان وز ین متیوان 
وتا ارت اورانان اء کے بارے لس رال کتک ہے اورای ےآ پک 

خر و نکی نرت بوجوو با رک تھی پرد لال قائ مکنا رال زی وضلال پر دنا 
٣‏ فی ربیذاوی ا تی کے مول کیل ار لئ را ناوک ہیں ۰ھ 
س وفات با سیکا نام انوارلر گل“ سے ایک تبات لن پا یہ دنل ادرجائخ 
مو ھت پ اف ےک مہو ول مکر ے 
ڈیں ءآپ جت اورشبت عام ہیی ٤ئ‏ ٰ۷ زین 
مرو اعاد یف بن مرن ےکا اترام مکیا سے البتہ بارهس کپ عدیٹ 


217 


اللمعانغ ن‌ارده_التبیال 
لے کی کی کا سضر لاف توا ETF‏ سز یا هو رعاش تباب 


72 س 
بی رغازن: فی ر ات داہن اروف پان :اع 

سے ۲ لیاب الما ول ق اق سے یربا وری 
وو فا ا 
نس میں کول یی گی ہے اورنہ بی ابہام ٤وہ‏ كصول اورکہانیو ںکووسمت ےے کے بپڑے 
دلدادہ ہیں ء بی تووہ ا پت تفیش کول اسر نکی ردابیت کا کرک ے ہیں اک ال س 
موجودغلط پا کی نش ند یکر میں ء چنا جر وه بل قم لاتے ہیں رال رضحف با موش 
ہو کے ہیں ءال یماوقا ت ان قصول کے بارے می وه سے لوت 
اغتا رک ے ہیں ٹس ے قار یکو انس کنا ےکہ یرقم ہے تاہ مآ پک 
- تک ده او رہ ہی ہے لش ال شس ان رات اوتصون ال نات مون ن 

کا ذکرکرنامناس گیل :کیو ںکردہ کے یاتوضوف ہیں ینت 

نی :ا لیر مولف ام زر عیراش بن ارس »ال 
وفات پائی ءا نکی رانا مرک اتب وان اد ولا ايمل القرره ۱ 
سراول وشوو ہل او تتیرے, ورتا متقولہ 8 مقابل. کش ے 
تی مختقمراورمتوس زگھی ال ےءصاح کف تون ال کے تحلق فر ہے ہی ںکہ: 
"قرش ایک من سوج راب اور وج وقراء تکوجا م بر واشا رت کے 
وتن شقمل ءال سنت وا اعت کے اقوا لکوقائل اختبار بنانے والی ءاورائل برعت 
وضلال تک غ انات سے پا کاب »وهای اتاد ہے وال‌طو کاب ے اورنہ 
کش یر دا یق راتا بے ۳ 
۵ یر نیش بوری + سیر مولف جم ضام الرین ا سن نیا ری ڈیںء 
۸ سل هل وفات یال شیر م خراعب القرآن و رفا عب الفرقان)"سب» فی رال 
او و زاو ره حاتتفا بو ےکی وج 
سے مفرددمتاز ہےہآپ نے ال میس ووتو کا بہت اہتمام وتا مکیا ہے :ا تر لول 


اللمعان شر ارددالتبیان --' ۱ 210 
رٿ ۲ تفر اشاری پرکلام- ۱ 
ی کے ماش موق طور ری موق لٹ ےء اارے بہت سار 

مات اگما مان زایتما 

ےل سعور: س اف( کے مول مشہور یام لقوی ,مطبوی جت تی مجر بین 
رصن یوی ہیں جک وسجود کے لقب سے حرو ف ہیںء ۹۵۳ھ مس وفات ان 
ا ن کیرک غارب رن اورا ر وت سی اون 
یرس کال س یی مو ےآ پ نے اس مس ق رآ بلاغت اورر ال 2 کے 
سرت زو نو کرد هیر چو نی 
سلامت۔ رت حون و کل اوت 
اورژ اتروطوالت ے وورگی کے سا تح سا تق رآ بلاغ تکور وش نکر نے ہ اچ اق رآ ۳ 
بیان بش تصو ی توج دی کے اتیازات آ پک تبرت بی ژال دیب گے ان گا 
تی اسان ےک کے لی نواس ای مکیض رورت ہے۔ 

»یرل حیاان :ا آفی کے مولف غ رین نوسف بن حیان نی یں» 
۵ ےھ شس وفات ال رکنم رایس کیم جلدوں رل ہے اس 
ڈن مولف کے فرسرت :اف ت کی ام اوردیرللف علوم کی الوا کون 
کیا ےا آضی کوخ ز تھا ریش ببت اہم باخ ها تا ہے ا لکی عبارت انتا ئی بل 
ےکوی یی ےکی ورام »اور کان مآ پ نے ا ھن الع اس وج ے رکھا سے لہ 
یس میس ون یمس تالف نوم بات - 
۸رآ لوی : اس تضی رکے مولف اہرعالم امام غہاب ال رہن یور وی ہیںء 
٣٠ھ‏ سل وات هآ پر بقدادہ جد الاد بائء قد و الا اودمرقم ال نل 
وشحرفت تھے آ پم کم اور وخ معلومات میں بڑی قدرومنزات رک ےآ پک 


(۱ )اس کاو نام :”زا رشان ہے 


لی مایا اتاب اریم ہے ہے بسااوقا ت زر یک یکشاف سے بے تاز 
کر ۱ 


219 


للمعان ےار ؛ التہان ۱ 
.-۔ نو الما سے تاب لیام ول ہا 1 


وال قل اورک شام تفارک ہا فلا ص ے۱ آپ ارا می ردایات م پر ہت 
زیادہتقیدرکرتے ہیں یری راشا رک اور بلاشت دیا نک وج هتم سپ 
کر يتقو ا وی راک کے می رمق عک ردان ا ا ہے( 

(۱) یکا یراع م :رو ا ال فی الق رآ ن ملاعلا ہنورکی رحمت رل باه 
ی کمدوح العاف مرن دید رآ نکر مک اتی رہ کے ےن غار کی شر الا ری :مرف فرق 
ىہ ہ ےکن دیلوت ےکا مک شرع ای ے ا نے شر نج ار یکا جر ضرامت پرتھااے 
دا یشک کلام اس سے یچ کرو انان ا کات ادا اکر کے۱ اکر چ اس مس ابق تام توا ۱ 
یالعر نآرد (قمدالیان)- 

(۴) "اج امیر“ اور تفیر لن aT‏ کم ابال ان کا گر کرد ینا 
مناسب کک پر : 


اسراح ام :اتی رکاپدانام :لرا 27 سکم ری 5 


ا الم مجر بن شی ٹک قاہرکی غاق ( تون : ے ے۹ م )کی لیف تفیش الاقوالء 
رورا تاموتا ءاشکالات کے جوابات؟آ بات کے ورمیان متا سرت او نی ال وک کر تے 
ہیں ءاعاد یٹ ضویف ومو وع ٹیل علا مہ ری اورعلامہ ماو یکا تع یک یکرت ہیں ء ریم توز یادوطو ہل 
ہے اور ہی پا لک قاتا رومام تک تن ازا ے۔ ۱ 
تق ال شن : :یکن .دقرم ی ہلال الد ی (متوفی نے 
الک بت فا او زور ہف سے ے21 7آ آن اور یھ سور فا تف کش لیکن نل کر کے اوراام 
...لا الہ سیوڑگی(متو نی :۹۱ھ )نے اپنے اتا ذف کات سناش وکین اور سور یرہ سے شرد کرک کے 
> سور اسراء پر نمیا فی رکا غار ان ناس رٹل مو ےج اتا ھول وسراول اورک راع ہیں۔ 
آیاتکی بر رضرورت اک تفر ہیا نکر تے ا که ایک ددر سے کےساتھ پاب م لوط ہوجائی ہیں ءلشت٠‏ 
راء ت نار وضور مفمردا تک وضاحت اور لو ںکی اع رای حیشی تک نکرتے ہیں یق قول 
مقو لکا بت نز تهابش ول یل اس می موض وع اعد یف پر اعتادکی گیا ہے اورشان نزول 
شک کرت تھے اورکبا نا ںی موجودہیں ال سے مطالہ ےرت تیر اہک رکا سا سس موتا ضروری سے کہ 
۱ موضوراورضیف روایا تی ای ہو کے۔ ۱ 


اللمعان شر ارددالتبیان 220 


آ پات الا چام هو رتفا سیر 


مه 


تس 


(۱) بابرا تیک رای متوئی: ۰ روف لام جاک ےی آفیروں میں مرا 
با فص وصااحاف کے ہا ءا لک تو ب ی تیب کے م طا نگل بی انتلاف یا نکر ےن 
لے ہیں۔ ۱ 

ال کےعلادہ امام کاو ینک اام رن" بھی فتہا ۓے مکی ز بردست یر ے جوروجلرول مل 
نول ےی ہے۔ نر دورحاضر می حضر ت گی الا مت مول نا اشر فی تھا وی رم ا کے افادات واؤکار 
کے مطابق م القرآن“ یت ره اور معتقر لآ ات اکا مک نف ہےء جو ملا طف اص عثالی فق نیع 
دی نیم وا در ک نیم لد تکاله جولعصب سےکوسوں دور لال و بان سے 
بن ف نت یک تون مان سب» ات ال لت بآیک مسجت سک طر و اتتا ضرورگ ے۔ 
(۳) پا سکیا رای شاف سول ۰۳ ۵ کی تلف شافع کے ن وی اپ فرشا »وب نس طر امام 
جصا خی سک کک مایت طرف دار می معردف ار مول فک را فک تیه ے ہیں۔ 
() ریش عبد اٹہ انی کی (متونی “۵۴۶۳ )کی جلف ے فان رل سے شور ہےء انعر 
یتو اتال سکم نیت ہیں د رتخا اف مہب وا کے دب دلب تے ہیں اس را نکی روایات بک اعا مشضوز 
زگ پند دک کی اہ ےک کے اوران سے احجقا بک تے ہیں۔ 
( 1)۴ کیرات م :لیا ا مق رن ہی نل رت رین ای ی الف رقان ےت رق ری کے نام سے 
ہو سے ہو رشان علا مہ ایویھبداڈرمحھ بن ات بن ابر ر ہی ل(متو فی :ا٦ھ‏ )کی تصنیف ے, اکل مضوع 
SN:‏ ےی سا لک اتبا ےک ا ئن سآ تو لک لت ءاعراب ‏ پاات »اور روایات کے 
تار گی | بیا نکی ےنام لور پر ددر انگل ےآ نک مکی بدایاتآووا a‏ ایا“ 


اللمعان نارو التبیان 


ETE‏ :سس رج مو رس 
بات سس ریس تہ 


قاری کش رکب 


0م ٗ0۴20 ,"و 

ناما مقار _ 
ےچ تج 

- کی سک ہونے کے باو جو رکرو یتعصب پا ک نتر کے ہیں اور یل د ب با نکی رو یکر ے ہیں٠‏ 

اراس می جن شیف اورموضور اہاد یی مو جو ہیں ج نکی امام ق شی ےنتا نر یکی فر بای ۔ 

(۱) یراب رل ین عبدانڈ تی (سنو نی : ۲۸۳ھ )کی تاليف سے ی لود سے رآ نکر مک فش بل چیدہ 

چید ہآ یا رآ ہی تر دوت س جوان کے شاگردابوک رش بن ات بر تع کی جه ایک صل پل 

او رور »ال کے مولف ایک نیم ارف پاش بزرگ تھے-. ۱ 

(۴)اس کے مولف ونر سین ازو لی (متو نی : ۱۳ ) ہیں بصوفیاء کے بڑے فا او رخ 

تھے ان کے باد سے سکم امیا ےک د+ثقہ نہ تے اورصوفیہ کے ے اعاد یف ےکی اکر تے تھے میک بی 

ملد لو لآیا تیر یبال کتبہاز ہرم سحفوط ے_ 

(۳) یی ردوہلدوں مش١‏ کچ درس بیان کے عاشیہ پر موجود ہےء ا سکینبت تن 

این ۶ بی( سو فی :۸ ٣۱ھ‏ )کی طر فک جا ہے یلین لوگو کی راۓ ہے کي عبدالرز اقا 

(متونی:٠٠کھ‏ )کی سے جرک شور انی تفت رده اور علا مرش رضا ای بی رائۓ »ال مس 

اہ یکو ال ل نظ ا ندا کرد ییاه یر جزیاددعدۃالوجود کے مہ پگ ا ے۔ ` 

7 )ا سال میس موجوده مانہ یش سب سے عو او رکب نیف مض تم مرت مولا اشر فی نوی 
رصان کی ”سال السلو کک کلام ملک املو کے کات بھی حغرت نے خودہی”رنع الوک ف تج 
تون ان القرآن کے ای ٹیو ہیں وس مین سل علول وت 


اللمعان تر اردوالتبیان 222 


۰ سنڑل اورشیدی ورش یت‎ 7٦ 
ورین زر | ساروا‎ 
کت ۰۸ تن‎ 
]وس سی اھ اس اص‎ 
| .]تھا 2“ .موک اھ اماق‎ 
020 
تھیراقرآن‎ | . ۸ 
| ۴گ میغہان | شی هم قان‎ 

ا ا 

ور کے ره تید 

جا ہے SERE‏ 
٣‏ اش __ ایی اآضیص ‏ 
سے اس لس 
0 
r DE‏ 
200 


-آتمو اقم لن شک اگ ےت 


اللمعان 2 4 التبیان 


ا اس جے _۔ 


المد ایال ان آبوز ړمو ری 7 زور 


070 2 2 ] 
۔. جح کے نخان 

کر ان ره ایر 2 ES:‏ میں ہیں ایی نک یم نے 
)١(‏ موف موصوف نے عص حا ضرکی جن تا کا ره رای ا نکی انا دظریات ے انتا فک بہت 
گی شش ج لش مقامات پر از وضروری ے٢٣‏ م بک وار اورد ان اف کے سے اں سے استفادہکی رامیں 
کل بو »مات مفسرین نهد یق رکو چو کاو لی بت اور اتا ی طرز اسلوب اتی رکیا 
ہےء اود دت ری سے کی سا اوق کی رات مرکو بر کے ہیں ء خا طور رت رده اوران کے 
اگردسیدرشید رضااو رخف ی مرا غیرد رآ نکر مکی می کی فقبی سک اویل نظ یں ر کے 
اعاد ی موضوی یا تفع کو پل نیل د »تسا توق رآ نک نکر ے ہیں اور نمس بین کے اقوال زر 
کر ے ہیں اور ٹ علوم وفتون کے اصول وتو اع رکا کر ہک ے ہیں ایک نآ ز اواد ط رز وکر بے ک دک ڑل سے 
مق ہے ول انا یکل الحا ن کے ہیں عقا تہ کے باب مم لچ مد ی کی تس لین کے ہیں غ 
ج ری طزطاوکی ن بھی علوم جد یره فو ن حاضر ہاور اس را رکو لوا پتاموضو ر .کت بنایا ہے یس س یڑ ملا سے ۱ 
کی رآ ن ا فلا تتاب ے۔ 

ارس دور چھتمیں پست اور ازور یں ا لیے جوہضرا شی ماس رکا قاعد و مطال کی کر 
پا ےا کے لے مار ے اک بردر یج یل تقار کے مطالع کا فر ماتے ہہیں ء ج بای عدکک دوس کلب سے بے 
یا زرو رت ہیں :ا تخمیر ای نکش ٢‏ تن مکی < تی قرطی, ۳ ری او هدعاق ان شا 
ےکی د وشوا مکی یں :تس رک ما کک کی اور ری دو کی ہیں۔ 

۱ اور ارو علوم هد یره بان سد اورک کےصربت راز ولگ و اقف تک کو ا عت وتو وہ ج ری 
طنطاد یک جوابراقرآن" کا مطال یرک ے اور اگرق رآ کارا و مت ص کوچ ری اسلوب میں رگن 
چاہتا ےتوسیدرشیدرضا شیر انار کا مطالدکرے۔ اود اگ حدم الف صت کی ہنا صرف دو تا رد یھنا چاہتا 
ےآ نظام الد ین تیش پر کی 'خراعب ارقا ن وتف راز یکا مفیرظاصدے اور" تفر ای سوج زیر 
کشا فک م الپرل کول زم چا نےء او راگ رصرف ای فی رکا مطل کن چابتا سے اور اختقدارمطلوب تو 
عبرال نشی یک فیا جوا رصان کا مطالنکرے ج تق راہن عطل یکا خلاصہ ے او راگ رزفحیل مطلوب ے 


اللمعان تر اردوالتبیان 224 
طوالرت توف تےکر یکی رازن توق دے وس اورسیر ھھ رات ےکی 
طرف رشا کے وا ہیں- 


= ےآ ورو ا لھا می فو طز فر ا ے تی الیا نما مقر 

بر تار هواس کلا مق اردوز بان می ایم ری رتفا رل : 

ا ان القرآن :یتر سامت مول نااش رذ فی تھا نکی رص ال کیگراں ت ہے Ase‏ 
ن کے سل ر جس رح عفر کوک وشات کے از الہ کے بھی زان اضر هگ تفر یں الکو 
انیازی اورخصوعی مقام مال ہے اس یمان الوب اورققا طز ات لال سے مطا ب رآ ےآ ہا 
بت دل ڈو +وجا_ 2 لوف سا وا لات سے مستبط ہوتے ہیں ا نک ذک ری ولل س 
سارک کے نا کرد یا مولا اما درا پا رح اللہ ال نف رکواردو تفای رکا رتا کردا نے 
تھے البتہز بان یک کی اورا صطلای ہے عام اردوداں طب وال کے بے میس دشواری ہوکق ے۔ 

٣‏ ۔موارف ارآ ن :ی حض رت مو( :اض دی بندک صاحب را شک لیف بیان القرآنکا 
ار لکیس ول ما سی تا کیاکی پک یرل بیش ےء الفاظز مات 
معان عام اور بان ٹل کے گے ہیں ام وتوا ریک کے ل ال مفیر ے۔ ۱ 

٣‏ ۔موارف القرآن: بر ححضرت مول درس کانرعلوی صاحب رم ال" رک بلند ا شاه 
عبدرالقادر رہ الہ سل تر جمہ کے بعد رواں تر جمہ ہے جس مس ضرور یتر حا تک ہیں اور تغل من و 
متاخ کی شای رک خلاص کی ہے دب آ یات فی ری ات اور ملا عد ہ کے اخکالا تکا ملت جوا پیش 
سور صافا تک کل اک رمصنف علی اار7 کی وفات موی رور 77 کی بطو رمان ے 
فر زنر شی ولا نرب نک کا برعل وی رما نے مولا اہی ےط رز اسف ایا 

۴ تق عنانی:اس کا 7 و رقا کے نام سے حضرت اندو رن دیو بندی رم ال ہکا ب“ 
جو درتقیقت شا عبدالقادر راد کے تر چ یکو ب جاوره او ر۱ج یا سور ٤‏ نسا کک ال کے جو اٹ یی 
حضرت تم لہندرعوالل ر رف ما )بی ران جواش یک کل ان کے نا مور شار وحط رت مور نا شب رام عنالی 
راش ےکی ء اور ال نام سے مور ہو گے روش ا چے ابیجاز وا یاز کے حاظ سے ابق ا لآپ 
ہیں ءا تی رگد لی تکا ہے عام ےکس تور یگورخمنٹ نے لاکھو ںکی تخ راد ملاس اکر اردوخواں لے 
یش مفت اعد 


اللمعان ارد التبیان_ ۱ 225 
ويي مل 


ا س ے مفس رہ حرا تکا کر وکیا ہا ےآ ا کا عروشار بہت زیادہ 
+وجاتا ے اورا نکی تعداومفس رین صا سے بہت ز ده بیا نکی جا ہے یاک بناء پر 
۱ سک جو ما رامق یرگ فدست مل مروف ہو سے جیار وی رم ال 
نے ای کناب" الاقان یس زک کیا سب» ول سے ز یادہکڑی ء جعارے ساسئے ان کے 
اما ۓےگمرائیگمزشتہ .کیت ںآ گے ہیں اورم نے ان میں سے ہو رات کے مالا ت 
کا پک گنی مال می سک کیا ہلان مالین شبن داد یہت زیادہ ی٤‏ ۱ 
ول نے »بت بذک رت ِء اور الع می امک ناب“ روزگار جستیاں طابر بو 
جنھوں .هناب ا شک آفے کا بہت ز یا دہ متا کیا ہمفس رین حط رات نے ال نکی اکا رکا 
ایک احص رای تکیاےبضر سن تا لت تن قات س م ہیں : 

الط اطق ٢‏ ۔ائل مد ی کا طبقہ ٣۳٣۔ا‏ ی عمرا یکا طبقہ- 

ا- یہلا طبقہ :وه کرک طبیقہ ہے ءانہوں نے اپنے علومکوامامامفس ین مت مان القرآن 
سینا رتکد اڈ بن با ل بسا لکیاء علا سدونھی رم ال این تم رم انم 
` کیا ےکددوفر مات ی :وگول سب سا رواخ وا کردا لے 
یل »کوک وو خر تکبداش جن عباال کے تلا مز ہاور رفقاء ہیں “۔ 
.را شس ے ایک بڈک مماعت نے شمر پا درا شش یلسع روگ 
مت ار »ان سمل رت اد ریت عطا رت کک ر حر 
ال اور ریت سعید بن جیب رہم اه اب تم ان متا اور نیل علا کر 
فالات رل رر 2 یی : 


اللمعان ر ارددالتبیان ' 226 
ریت تاد بترم القد: جرت مار رہ القد ا۳ رارک دل چا ہو ۓ اور 
۳ ری مس وفات پائی چکا نام ماپ من جر کی او ی اورک کے 
دس اس خی رل ان کا خا ر شور تا یل ون سے علامہ ذ ٦ی‏ رح ال ان ے 
اس مرا ول وخر ی پآ وف سک ماقرا لسن ادن ے 
ححضرت ابین ال ٹون سے سیر ماک لکیا ہے اوآ رت این ال کے نا 
کات اوران ےت یکر نے والون مس ب ہے نال اا رش ن :ن ون 
سے امام بقار رص الا اکنا نکی تیر پر اتا در تے ہیں ہیا کاک رمفص رین ا نکی 
رایت اناد بل - ۱ 
لاش لالج دی ۳۰ھ »او رفس پاک رونت 
تیار کی کی جرت ایز ر کے تلن لے آو ردنر اکر ا سے که مت بحرت کاپ ررم 
اش اب ال یمک چم اتا ضرت یڈہ بین عیاش ناسحا کی 
ارآ سپ نے اپنے استاذ سے انا رورا ورق | ی آیجوں یش سے رای کآیت پھر 
کر ران اھا نان ہے ان لآ ی تکام ار ی کےا اود انتک ےیل ین 
ھور حر تماد رت تم سے کی ےک ہ مرا ہیں 
”غرضث امن على این غبّاس ثلاث عرضات یف علد کل 
یَةمنه گر یر 
۱ ترجہ :ریس نے کن مرح ہا کیال فو ےش رآ نکا دو ریا »ریت پل 
تپ رجاااوراس کے تح ور اف تک تاکمہ کس کے بارے می ازل مون ہے؟ 
اورکیے :از لک ی؟“_ 
ضز اپ ر رص الیل رکا ا ےل الت اعا کے سا تج یردورگرناصر ف رآن 1 
2-2 رک »ال کے راز ول اور پا یولوم اور ا یکی حمتوں اوراحکا مکو جاۓۓے ۳7 
ھی تھاء ای تاه اما فو دک رض افر کے ہیں :اگ رآ پ کے پا نف اہ کے وا سے 
ےآ موتو و یاپ لی ےکانی ے نت مرکا ہوگی اود دنر ھار سے بے نیز 
کرد ےگ چیہ ا یرای کم نے وا کے ابا ماپ رت اق ہوں۔ 


اللمعان ی ارده التبیان ۱ 27 
رت عطاء ینا لی ر با رحم اد : خضرت عطاء ی آل د رپ رح الف ے ۳ ,ری 
ٹس بیدا اور ۱۱۳ رک بل وفات با کرش درل درک کے شی اور 
کد ث تن میں ا نکا شارمتاز هام یس ہوا تھا ءححضرت این عبال تست 
7ھ 09-0 جن وو تمر اور آری ہیں: امام 27 اُبوعفیز مان رح الد ان کے 
سے فان ا کے عطام نآ رباع ےک ن یں نےکیں ایا او رادو رص 
شراک کج ن ہب سے بڑے عام چات عطا عب نآل ]متس رسک 
سب سے بڑے عام لاو رسعید بجی فی کے سب سےزیادہ جات وا سب 
ی 7 یسپ نے مکل وفات پا ادرو ہیں ن سے رج ادر سود ۲ 

تفر کر مر موی ان عا نیا خر ری فک ر اش ولادت ۲۴۵ر مرک 
می ہو اور ۱۰۵ ری می اقا ل قرا امام شا ر سانشان کے بار ےش فا 2 
:کناب الت ہکا ضب سے بڑاعا لمکم کے سو اکو یبھی پا یل رآ یرت 
اہن عا هس زا رده رم ا سپ مکوحضرت این عیاس .ساب »اور 
ان تق رآن وسن تک تم پا اد رآ پ فوفر اکر ے هکرس پر و 
درمیان( کف دول ےد رمیا ن ی رآن ) انریا نکی ے اور ره چز جو 


میں رآ ن کےا بنا ا ہوں و ححضرت این عباس .سول ہے 


اس الاعلام سآ پکا تارف ان الفاظ ‏ ےکی گیا ے: کرم ہن بد الہ 

ابر یرک ار »یداش ضحخرت کب دالثر بین عباس اٹ ےآ زا دکردہ غلام تھے یرو 
مفازکی کے سب سے بڑے عام تھے نف ول پر لگا ۓے .ان سے روات ے 
والو ںکی تخد اون سو ریب بے من میں سے ستر سز یاده تا من لل»د یا رمخخرب 
کی طرف سف کیا اور علا یو مضربٹ سے اتف هی پچ رید ینرمنورہ اب لو فآ ۓ »ام 
دس الط بکیات وآ پناس سے ردیل ہو کے اورای رو وی مامت میس اققال 
فرمایاءآ کی اور شپورشا ۶ ترز کی وفات یدنورهش ایک تی دن می ہوک تو 
ک اک نات اعم لاس دش لا دول یس سب سے بڑے الم ادرسب سے 
بڑے شا عر کا انال ہوگی''_ ۱ 


اللمعان تر ارروالتبيان 228 
ریت طا ووں :کیان یبای رال : رت طاو رح اللہ ۳۳ ری 
یس پرا ہو ء اور ۱*۷ رکشل اتال ہوا هآ پک نا ”طا کول ب کیان الال“ 
تھا کناب ال ینف میں شہرت یال »آ توت عافظ هکل بات اور ذکاو تک اما 
وت اور زپ صلا رح ولو لک | ایک ا کته - اس کرام ا لاب یه 
زیانتگی فا کر ےآ سے شناد ہک نے مابد رتش کے کی سک 

نے پا ور ساب الد وات کی تھے ضرت امن عباس هه 
آپ قرف OS‏ سوق تا ہوں۔ ۱ 

۱ ب الا عطاع ںآ پک تارف ان الفاظ ےک گیا ہے : طا ول بن 
"02 01207 کشم دن دای حدیٹ رازگ 
ادر اغا ء اور ہکا مکو ہے درک وفظ ویک کر نے ہی رل تا لنش ہوتا ہے ہپ 
اصل یرال سے او رآ پک باس یر وکوت »ری کیا عالت می عزواف رت 
آ نکی دفات مو ہج خلیفہ ہشام ین بدالل بھی اس سال بن کے لپ رون 
تھے انبوں ےآ پک ناز جنازه بان > طا ووی رح اللہ خلقاء اور امراء کے تر بکو : 
ایپ رک سے سے این عینہ رج ارم سے یں :پا مول سے پر می زک نے وا لے ن 
نس ہیں حطر ت]إوزر طاوول اور ری 
رت سید ہن بی رر ال : رت سین می ررح انش ہک ولات ۵ ۳۴ ,رک 
یش ہوئی ءا نکاشاریلم وق ی تلبت اس کے این مس موتا ےآ پت نے تاب الث 
اشن بہت شرت پائی ہآ چم ول کے بلند پہاڑ اور رو منارے تھے پیادوں 
ےآ یل وکیا ور ےآ کے درو کچل پڑ ے سفن تو ری ر ار 
ول ے: شیر پا رو رس ام کدی نيرمت وف < 
اورتحخرت ده راتفر ہیں :عیب حب ی ر کے سب سے بڑے مامت 

قوت ما فش سیک ال شا ہکا ر تھے جو سفق یا وکر لیت بحرت ان ععباس کے 
کک ا نک توت افتکا اقترا کیا ہکایک مرج ان فا رتمک مھ سے 
مد تل کر سے ہو کیم نے کے سے بہت سارک اعا یت ز ی اوک لی ہیں؟“_ 


اللمعان نارف التبیلن ٠‏ ۰ . 229 
حضرت این عباس پیٹ" کی ۲ حول کی ببناکی جل جانے کے بعد ج بوذ کے 
اشد ےآپ سمل ا ےک وآ پ کا ا ا ٹا 
بی تھا سے درمان آم دم ءکا نا موجود چ نی هرت سعیر ین بی رر ان هآ 
وا تھے ہردوراتوں میس ای کر آن فرماتے اورایک مره ۳7 
میس ورا رآ ن ایک رکعت مل پڑھڈالا- ٠‏ 
کناب الاعلاعٴ a‏ ی رم 
چم 1 سدی اون ا وراشا بھی ہیں »پل الاطلاتی سب سے لاس عا ھے 
- اسلا ی ہیں ححضرت این عباس ارت ای رمع لکیاء جب رن 
۱ بن ]شع نے را لک بن هروا کے غلا ف غور کی تو رت سعید بن جب کی ان 
کےساتھھ سے برج بعبدالرنکن مارے و حرسم کل لے گے ین وہاں کے 
مام خال دم یی نے ارڈ رک کےا یط رف دیا اوه با حا کے تون 
هی دوس چا آپکوسعید بن جیر بان سی رک کم پکارت تھاءاما مج مین 
بل رح ادف مات ہیں :”نل ابر سعیدرآء وماعی وج الا رش اعد نا وحور الی 
ا خر تھ اوا ہے وک يکي جرب رو ے زین روش ایا 
نہٹھا تھے اس ےک ضرورت نہ“ 
اوردوایت ںآ تا س ےک ج بارع نے ان لک رات ول مد اگہاسے 
رال کرد اڑ دیسرن ال تب اک موز دو کی دو 
رت پڑھولوں اع ے جا د کب اک پیک اکہتاے؟ وجلا دن ےکی اکان پڑعنا چاہتا 
۱ نے لکن اق نے؛ ےم رفن( نارق سیق ین ماب تک بات 
دی( تارج نے سے سلمانول ےت رک طرف ما ز یڈ ع ےک اجازت ددی) راح 
نے جلاولوکم دا اکا ی زوق اڈ او ے: اورا کار موز ےو اجول نے 
1 هويم دیا ای وت جفرت ی سے بآ یت تلام ت فر بای :ايتا 
1۳ ۹1 فد وَجْڈُارلو یں ت لوگ ی طرف م تک رو2 اھ ری )ابن تھا کار ے' 
رای عالت می ںآ پک گردن اڈ اذ گنی تیآ لا الہ الا ار سول رک 


اللمعان تر اردوالتبیان 0ت _ 
دددف مار سے تھے او رآ کی ہر اور یا هروس پروردگا رل جا ب اج کے مکی 
شکابیت نےکر پروا زگ »اور یوں اس سا ضو لوا کیره ورن راہ قر بان 
کرد یاءالڈدتھالی ان پررحمت فر ہے او رال ا کے ون اقات ٹیل چک د ے ا هن - 
۴ ایل مد یت ہکا طب :ان ٹل ےکی ایک زک تع راد یرل شہرت یا »ان س 
تیال اورمتازححضرت شر ب نکعب قرش بجر تاب والعالیہر یا کی اور تحخرت ز ید بن اسم 
و مر ہیں٤‏ اب جم بل مھ نیش سے ان تین رای تکا کرت گے یری 
فرصت میں قو بش ہو ہو سے اور ہکرام سک اوعد یت افیف لکر نے 
ان ی مک رداررہا * اک چان کے علاو وی مدکی تن یں ےک کرات نے شہرت 
EE ٦‏ لالز 
ل رم الد : علا عستت فی رح اہی کیا ے'' جرب 
الہ یب مس ا نک تارف ان الفاظ س ےکی ا گیا ے: ٢‏ پک رانا مک می نکب ارگ » 
تال سمل اوس کےحلیف »ارام لآ روف شش تم سب بعد یش 
د ہے طی ہآ سے کاب رام کی الیک بڑی جراعت سےتحصوص] حطر کل ین ای 
طالب حر تیدا حوو تست ہوں نے روا تل یک ہیں _ 

ا سح رر ایڈدفر اے ہیں ا رام ت ی اورصاغ عام تے کے 
ور میٹ وکس وت ۲ 

امام مارک رح الق نے ا کو رگ کے نام سے موسو مک ن ےکی وج ذک کی کر 
پا کے والدان لوگوں میس سے کے جوغ وہ ی ثریظ میس نابا ہو ےکی بطاء پیر موز 
دیج گے ےہ اور برا لیے ہو اک نیا ارم ڈیا نے بنق بط کی رثن اور خمداری 
پان کے مردوں سکیا ورپ ظا نے ان مٹش سےا نے والوں کے ےی اور 
»تلع لڑکوں اورکورتوں کے لیے اما نکاما درف ایا 

آ پکاغا راا هیدهم وفقہ کے اندر بڑے ملا یس وتا تھا ہآ پیک مرح سر 
س ہیا نکر ر ے ےک ہآ پ رادراب کے ساتھیوں پ رھ تک پک اور ملب کے ہے 
آ نکی وج سےوفات پا کے ردا تھ ےا رک می جآ یا رج اتر تی ی ر :اڈ ۔ 


اللمعان شری‌ارده التبیان ۱ 231 
ححضرت اب والعالیہ ال یا کی رحم اق : آپکا نام رٹ بن ران نیت بالق 
تار یا ںکی ای کرت ےآ ز اد کر دہ ام ےآ پڑت ٥ا‏ ال ہیں »ره کے بش سه 
تھے ناویل شور مو ےرت ابو کی ز یار تک ہے حر تآ بن 
کحب وفیره وأ ےت رآن رها رت مر ریت این سقوو, حطر ری کل » ریت 
عا نش ناور ان وه یی + ےرودایا تک ہیں ان سے قول موی 

سن مهار نیک وفات کے دی سال بعد رآن بڑھ“'۔ 
آ پچ رکف تا چاب رافب ارات فاب ر نشلگ رز 
ھال ی کک توب بارت ماک لکی » اور اپنے مرول ےتلوب اتی شی سبقرت لے 
که نحضرت اہن عپال تفا نک سیت تم پار ان پر ھا کے تھے جک دوس ر ےر ی 
رات ےار یفام ما ہو تے دوهی کی مار شیف انان شرف 
میسن اضا فہک تا ے اور غاا مو وکت بر - تیاو یاس ۔آ نکی دات ٩۳‏ کیبل 
و ما ےن ۱ 
خضرت ز یھ بن اعم رہ اشر : آ کا نام ید بن اسلم العدوگیء الھری اورکنیت 
اروام هس الوم بیع کےنققیراورمح رث تھے ح زک رہ کب ال بز رص اشک 
خطافت کے ز انیل ان کے سا تجح ر ےولیر نی یز ید نے فقهاء دید ایک مات 
یط نہ کے لے ہی ںبھی شن ہوا پلیہ او رت رای عث عا م 
تھے :سید نوی سأ می لآ پک علقہ درس ہو اک رتا تھب یر پک ای کا بگ ہے 
- آپ کے بی بدا رن نے اسے(وااج تکیا ےآ ایک رحب دا نس ےہ این تلان 
رم اک وک کی سے انتا عو نہیں وتا کرت زین ال سے 
کوب وا اب 

سسک تھا کت 
کہا لاسما یهد یس موی ہے؟ آوآ نے فر ایا اسر کت 
ارک مت بے وتو ف لو کول کے سا تن ری ہے کہ ر ہوک می لآ کا بہت بڑا علق 
در کت تھا حر تی بن کین رح ار یک بکیج یس ت 


اللمعان مش ارددالعنیان . 232 
سن اور او مکی جا روز رکھ تھا ء انان سے ال بار ے می سوا لکیل گی اکآ پ 
پتی قو مکی ما کو چو ڑکر حر ت ربک خطاب 9 ایک خلا مک یل کول اختیار 
رن کیک ہآ حفر تع فآ زا وکرو ولام تھے؟ تو ضرم تی راش نے 
جاب د اکہانمان ات لس یش وال هدن کے لے نال هآ 
ر اش کی وفات ۷ ۱۳ ری یٹس پد تور وس ہو _ ۱ 
۳۔ ایل عم را یکا طبقہ : رض کر ا رت کان 
سل + رت تن بص ری حطر ترون من اج د نر تقد ند تا منرت 
عطاء بی ی کم تراسا اورضرت مر جم لی رم اش »اب تم ان ند پ علما ءکا 
قر ہا تارف کرت ہیں سو ہم نی سے مدوطل بکر نے ہے کے ہیں 
رت ن برک رح اق : آ کا LN‏ | ۱ 
امام اور اپ زمانہ کے جم سے ےت 
مج »در اور زارت »بر یدنورهش ولادست بو اور رر ی بن ان 
طالب تل ھی ول میں جوان و ےرت معاويم کے ز مانہ س راان کے 
ورن من اد ےآ پکواپنا کاب او ررر بنا یات ھپ نے هروش کوس اختیار 
ری لیکن کے ولوں می ںآ کا رعب بہت زیادہ نتھاء اذا پل راقول کے یال 
ےک دادر بای ےن کرتے بن کےداست کی باس کر وا کی 
ملا مت سے شڈ ر »الب سول کی بکرم اک تکرب شترگان بصرو یل 
سب _عز ام راد تزا رورش تج 

۱ ال اقول هن بقل سب سے ز یادها 
کلام کے مغا ہا اور نکا ربق سب ےزیاد ہما برام کف ریب تھاء و 
صاحت کےا کی درجہ رتست ان کے منر ےب گی 

7ص 0" رک ده اج 

تن رک سے با فقیہ ہوء وه لس تکوتفو اکر تے اور ال کے زج بات فر ا کے 
سے جب سارک د یت ایبول موتا کرد دما مآخرت یس تہ 


اللمعان شم اردد_التبيان ۱ 53 ٠‏ 
وال ےآ ہیں اوران باتو لگ خرد هت ہیں میں خودد یکسا اور مشاپر وکیا 
9 ء۲" AILE‏ 1 
اعادیٹ مہ با کرتے رج لیکن جب عفر یبن طالب بی کے داسط سے 
کول عدف ذکرکر ت تو حا جک یگرت کےخوف سےا نکا نام در نکر ے۔ لوی می 
عیبر رح اش فر ہا کے ہیں :یس نے کرت ی ےکر سے ہو ت هراس ومع 
آ پککتے ہی ںکررسول اش نے فر مایا جیپ نے رسول الف تلم کا ز باس پایا؟ 
وجرت نے جاب دی ا کہاسے کیج ! آپ نے متا مک بے زک سوا لکیا کہ 
اس سے پیل اس ک یتح یی نےبھی کے ےنیس نوج 77 پک تدر وزات هرس 
پال ت مون تو ہیں تہ بتاتا یس کل زنل ہو لآ پ در ے ہوہ مرو شی جھآپ 
E ۱‏ 
اب 9ص یبد نا ایکا 1 
رس ۱ 
جب نر کر ینیع ال بد رح ای ٹکو خلا فت یتو انہوں نے 7 رک اک گے 
ُٰ ای لآ ز ہاش میس ڈا هیاس هآ پ میرے لیے ایس مددگا 8,8 
در نرتسن ر اللہ نے جواب دیا: جہا کک ونا دارو کی بات ےآ ھآپ 
یں کل جات اودر س ےآخرت کے ما قد نتو د ہآ پل چا ے ء اذا ال سے ہی 
ا سے مابش مددطل بک بی ۔آ پک وفات ۱۱۰ ,ری یش لصرہ یل ہوٹی ء اور و ہیں 
نوس زارد واس 
ریت رو اچد ر رحم راد : رت سروق می نادرم اما یکوفہ کے 
رت اس ےق تا بھی ہیں رت این عور کے ان ش ردول یل سے ہیں 
نیون سرت سول افم کو کمک بارعا فت ے٢۲‏ انیت 
الوم کش ےی راو ر روات عد یث ل شوو رمو نے آت ا ن ا 
شوارول یل سے تے او رآ کے مامموں ضر تگھ بن دیرب اٹ ہیں - .- 
آ ہے تا را نا لتق پض اب 


اللمعان ترےّاردوالتبیان 234 
اور الف تال یکی تیم پدداشی ر بے وانے کے باو جو ویک ہآ بای ول دانے تےء ایک 
دنآ پک و یپ یا لآ اورک ہاکہ: ا ےالڑعا کشا آ جع آپ کے ابل فاد کے 
لی ےکھانا یں ہے؟ تو اس هراس ادرف ما یکدی کم !ابرض رور یں رز دےگاء 
چنا ال تھا ی نے اک نکش رز ےوازا۔ 

ان سے ردک س ےک و هرت رن خطاب تست نی ےتوانہوں نے رما کیہ 
آب کاکیانام ہے ؟ وآ کہ اک سروق نآجدر حر ت ر کے فر ما اک 
آجد''شیطان ےەآپ سرون ین عبدا لن ہیں٠‏ ان کے بع دآ پ را کر ے 
رم ر که من ہوں۔ 

ا تی دحم الت کے از رت لی جن مد یکی رت باس ںکہ میں ریت 
یرادن وو بوت کے شا O‏ سرون ےل شس کتاء 
ون نے ر ت ابویک پل کی ات اء یں نماز ی ہے او رخض رت راو رشان فوش کی 

+ بک قاوسیرٹ اپ تن بل سیت ریک ہو چا 2 چنا ول بسا بیان نوس 
0 0 0و0 و 09 ١اپ‏ 

1 وت 
انی سکوفہ کے ای ککوڑاکرکٹ پر نےکر مھ گے ادرف مایا ”کیل یں دیاشہبتائوں؟ کی 
دهدن اس ایا کر دی ات تادر پرا کرد E‏ 
رد ا اس یل ایک دوسرے کے خونو ںکو مها ہا مرا کردہ چیزو ںکوعطال کسی 
سک ڑا :ایک دنب یی خر ے ا سے ے بے جا وآپ 
نےف ما کرٹ پر کرت کراپ ال ناے می یشک ا وں۔ 

حطر ت قا دہ :ن رعا مہ رح الد : ہکا دہ ہڑوا نطاب السید وی البرک ۸۷۴۱۰ 
رک می بعر ہیں پیا مو سے اور ےا رکشل ۵ھ بر ںکی عم ریش ونا ت پا ضررت 
اس ی تک او رت سید سیب اور دیسا و گی الیک اعت ےروایت 
کر 2 PA‏ وت ژکاوت با کل تفه IN‏ س ےک وہ 


۱ اللمعان شر اردہ التیان ۱ 235 
ترا ان مین ہے یی کات مرواب خر کی تن اور 
می رس ےکا نوں ےکوی ا کک بات کی کن میرے دل نے باو تکام 

اورروایت ں٣‏ ٣ا‏ سک رآ ریت سیر ہن میب رہ الہ کے با ںآ ے اور 
چٹرروں کل ان ہے رے اوران سوال تک باکر لورت سے 
آ پت سکب :کیا یآ پ نے بجھ سے بو چھا ہے دہ نہیں یادہے؟ آ نےکہا: گی ال! 

رت سید مارا بات ےچب امه نے اکن س ےکہا: ل ےآ پ سے 

فلاں سوا لاپ نے فلاں ج اب د یا ارت نے فلاں پات پیت وآ پ نے فلاں 
اب دبا اہ وبا لک کک جویی سنا تھا تام انی ارت سیر او نے ان سے 
فرمایا: نج سکما نک لک اہ ےآ پ ی ول دس رات پیداکیا وگ '۔اورایک مت 
ان کے ال فرمایا:”نمیرے پاس قادہ سے بت رکوکی عراتی کت ںآ یاءیٹش نے ایک 
تراک پا یف ا تو ای نے اسے یا کراپ مادرزادنبینااوراند ے 
تھے کیہ ج بآ پک ولادت مولت رآ پ ین سومان هنز اوت اور 
کیال ارت دل ای کر وون کے _ 

امام ات ن بل رتم ال ہآ پک بہت ز یاد ریف اور مدع با نکر نے او رآ ۱ 
کلم وفقکوپھیلاتے تھے تی وفنقریش ام تھے اکن ان رات نے جر عکی 
ہے ےکدہ ایک سے روات لیے ہیں یہا کک ابا ی رحس راد نے آن تاق ر 
کہقاددرات شی لگھڑیاں شع گمرنے وا ےکی طرع سب( رطب ویاال رر ع کی 
بات لے لیا ہے ) ره لآ کی وفات مول دهدن ہو جک ہآ پک ر۵۵ 
200 پک دفات م ونی واب لبرہ کےآ نوںئھل ۔ پڑے۔ 
خضرت عطا ءارا ساف رح اللہ :عاذت ای رحاش فر مات ہیں :پک ولات 
۹ ری اوروفات ۱۲۵ رٹ مو ءآ کات معطا نآ الخ راسا نی“ سےکنیت 
"وا ےآ پت نمایت داس کو عاب وز اہر بہت ز باد ہ پاد تاز ار او رغوت 
پر »رو نار اور ال نت برار رکفت - ۱ 

دا رگن بن بی ید لهس وای تک ےکآ پ راتو ونماز سے زنده رک 


اللمعان شراردوالتبیان 236 
اور جب را تک الیک تھائی یا آدها زر ما توجمی لآواز دہج : : اسلا لااودات 
فلاں !و وضو رو ار ماه گرا تک ام ورد نکاروزہ پیپ کے چ سے زیادہ 
اا ي 

7 ا »تب تکر 2 نیزا ,۰ھ 
کوعد بیث سنا نے کے ےد 0 سک اس وروی سر 
تنل پل جاتے ادرال عد یٹ اس ف دی او مم حروف 
ہو ے ءاورا نز پوق وی ال درھ 27 مھ ےراہ 
ریت تر 3 ادا رم ائل: آ کا نام "غوین شرحبیل الھمداتی“ے ۔ 
بت زیاددحابہ ا کیپ نے زياس تک ءآ کیت ”ار مل“ ہے اور“ مِۃ 
الطيب “اور مرج اط اقب سےمحروف ےآ پ E‏ 
کی وجہ ےد گا ماب زار بسا تن تھے گی رض الف مات ہی ر 
سپ دن اور رات میں با سورکحتنماز بڑ ھت ےآ بات ی ہیں ٤ے‏ ہج ری 
نک تال »ار حمه له ا وأسکنه نسیح عم 

رده ان یل سے بڑے بڑے مف رر سے جنہوں نے اس علوم ومعار کو 
صحا ہکرام رضوان انتا ٹیہ مین سے ماک لکیاء اور هرن سے تع تن اور بعد 
ین NIE‏ ا تاد هیا او شر رح سل رل لی او لقن کے ر اند 
ستالنمکا ین او رال لاب نیت او رال کےعلوم وار کاواس 
فان با رک تھالی :لت اد کر و هون گ۹( مجر : 

تج ہےر آ نکوناز لیکیااورہم اس سکاف ہیں“ 

رسو ل کرم لالم نے ا سم کے بارے میں ال را کہ : 

"الم جن ہشن ےکن من کے ازج کے عادل لوف 
موں گے جو ام سے عد سے تھاو کر نے والو ںکیتحریف ا اون کی 
مور اورچا ہلو ںکی ا وی لوو رر نے رہیں ور 

ای‌طرن اشرتعال نے ان بان پاب میات اورست رعلا کی جنا یکر نے کے 


اللمعان ارو التبیان ۱ 7 
سے تک ترس بتک نی خومت کے 
لیے وق فکرلیا تما» اللہ تیل یں اسلام اورمسلمافو ںکی طرف سے کر بل عطا ` 
ریا میں او رال اب جت کے باغو ںکی وسعتوں میں رل آین- 
تھے : : رات جا لین رہم ارش تیا ی کی قا یر پت رہکیاجا تا ےک ہن کے اقوال س 
نس اسر ی ردایات وف موک اور نے و ت غم ن 
اورا نکی ز بای نس ایی یلیل ہیں جوخا بجی :لہاان کے اقا ل اقش 
کرتے وت 6 ردایات سے پاش کرٹ ضروری »ور دی کے لیے مناسب ےک وہ 
کپ معتجرہ می سے قائل اعد ماد رک طرف رجو کر ہے ملا ای راہن جر بر اور 
دوم رک تفا ردفیرہ۔علام یھی رت اد اب تب :الا نان مسج بین بیس ے 
5 گن کے کک ر کے بعحدفر مات ہیں : ۱" 
”اور بی سفق ین مفسرین ہیں ان کے !کش اقوال وه ہیں ج نک 
ول ہے سی رام ٹا سے استتفاد ہکیا ےء پچ راس طبقہ کے 
بعرا بیت کیا وش جن می لھا اورتا ین فا کے تو ا ل رع 
کیاکی ملا :”تق رسفیان بین مب وی بین جراں“,”' 
تی رشعب قاع تضی ر یذ یجن پارو وفیرہءبچھران کے بعد 
علامہ این جر رک رح ال هآ اک یک اب تفا رل سب 
سے مور کے“ 


اللمعان مر اردوالتبیان 238 


کو 


انا یش رآن 


رآ نکر مکی لی مکی طر فصو یتو جہ: جا رن ای می امتوں میں ےی 
امت لت یل + واگ رال نے اہ قآ ا لاب پرا یتو جوک ہیل یتو چ ال امت 
یس دی سے پر نے ی فخا کا کے ہے می کیا کان نے ات 
واجتمام رکشت وبز ریک وہ متا م ا ا مو جو ا مق لکتاب گر ابر 
کا ی ب پان + اور پیر انساخیت کے لے ا کی اک کوت عات نے پایا ہے۔ 

سو رت و رت0 
کیا راون کے ولوں میں ال شیم مرت ین جا »یال وجہ سے ہو اک وہ وو ادث 
E‏ توف 
090 :0 
90670 ٰٰٰ۷۷ 
دسر ڈیکں شاع کیای خوب اور دبا تکاس 

لله ایز و وین محمد وكتابه أهُدى وم قیلا 

ارس شک حطر تر ملا کا و رکز تما ہو ں کا ال کے ا سن ےت دک روصت 
کیا کرو اور ا لک کاب سب سے م ربا اورقوب سید بات ہے ال کید 
ک رودا ر ہو کا ےب لی زا چ راکو ںوی رو 
ش٥لی‏ اٹ علیہ یلم کا ابر مق آن : ازل گت الہیہ ےرک کرالثر 


e 4 


ا انا ,او ولو کی رین قرات»وا رون اور ندید ندال 


اللمعان تب ارده التتان 239 
2۱-2222۷2۱۲ ۳ظ 2 2222 7 ال 


طرف ان سول اورک یر ہونۓ پر دلا کر تے ہیں ابر تارف وتیل نے 
ہمارے پا نکر يم هتفای 

يروو وربا اورا ای وی سے سے تال سنا ی کےسین اط ریا رل 

رآ نکی سورت میں ناز لکیا ن کوک لنپ ازن ارات کے 
پہروں مل پڑ ھت ر سے تھے اور بی و هلناب ہے یس کے ذا بے ےب 0 نے 
ےار ایک اتو ا مکوعدم سے وجود میں لا با« نک شمارمردوں میس مو تھاء چنا تی ات تیل 
نے ا لن رآ کے ذر بیج مردود ل تو مموں بیل روج ولآ نکی الک لک رح کی طرف 
رشا کی اور ان ول ےکا لکر ای مت رین امت میس برل ڈالا جولوگو ںک یکن 
مسا و 
تا قیاق فا :اون یاںمیتاً 4(الأنعام: 0۲۷ 
تج :”اننس رک یل مرو تھا ریم نے ا یکو زندہ ہناد یاء امس 
الکو یک ابا ورد ےد کہ الاو یو آویوں میں چا پھر ےکا 
باتش ای یی نا تی ت وو کو شی ے 
ان سے نک یک با ای‌طررت کافرو نکو ان حاکن 
و 0 

72 تن نے انی اک مو ںکوضیا اک وا امیا شر ہہ جوز ل 0)0 
ار کارت ا سی شل سک * چنا نیش رن نے اس رب لوم سے جواونوں اور 
رو ںکو ایی اتوم ٹل UE EE‏ 

کرو وآ اوو یا کک مرو ں تک اوم کر نے کے ادر یتام ای رآ اور فام 
ال نی مومس نا کے a‏ 


رق ارس ظا عون 
موک عیسی دعا ما لَقَام له وات أحییت آجیالا من عم 


تر چم آپ کے بھی مکی نے مرد و پیا راتو وہ ای کے لیے اط رکھٹرا ہوا جب 


اللمعان تر اردوالتبيان. 240 
آپ بے شا لو ںکوعدم سے تیاو جو خش _ 

یقی اگ شام الم کے سپس تھے بیس دوراورز بادرس اکٹ 
مو لیا کی | ال کے مناسب ت»جیاک هرت موی لیا کا جج ز ہک ید مضاءاورعصا“ 
مرگ و ہا لیے زمانی کیچ ےس میس اهر وک کی اور وان 

ای‌طر هر تک ولف کا جم مردو ںکوزند هکرناء اور ز اد انوقول اور بل 
کے با رو ںکوشفا یا بکرنا ارت فی امو رگ یر د ینا تھا یرمک بعش اه 
زات ہو ی یل طب وکس تکاش وق ار ار معا موجودتے, چنا حطر یی 
مرک السلام کن کے بای ر یشو لکوشفا مد ,مرو ںکوزند ہک نے اورانرعول » 
کول ارو یکتم کر نے کے رات کرت یف لا سے جنہوں نے ال ترا 
۱ اورعا ج کر کے رکد یا۔ ۱ 

می سآ کا ہو نک رز شت ایی م السلام کے جح زات ما کی او رک زات“ ے 
ونان لم که ”روعاف اوت ره ہے ءالل ن ےآ پھر رن کے 
ا ا وا زوالا جره ےکا اما 
مج ویرت ات دیگھیں, ای رو ے مور ول اور ال ںی بدایت ے مال و 
می gS‏ 

سبدالاخیاء ٹا سے ردک ےکہآپ کف نے فرمایا: ب ری قد رجح زات اور 
نثایوں ےنواز اگیا ای تر رلوگ ان ا سے لاش کے جوم عم ئوک امیا ےوہ 
وی الیل( ق رآن )ہے ہے اللہ نے میرک طرف ناز لکیا ے یں می امی کرت ہو لک 
انیا ء یسب ےز یاد ہیر وکا رو لوالا ہو ںگا- 


تا کہ وتام جہاں والوں کے لیے روک اور رمت مء ران اسلا مکا ابد ره اور بآ 
وال 0 سے جودتیا کے لے مضہ ما روت پر ۓء سول ال اڈ کی ص انت پر 
گواوء اسلا مک تست اور ال د نکی اجدیت ےگ گان ہے جک ات اس 
نای وا قعات ات از رم ہو سے اوران ارام العلا مکی وفات کے 


اللمعان امد ه_التبیان 241 
بعد جوا را 2 اک وچو وہر پا لاا یکا وجودوبیا نس شاسواء ال 
رآن پاک می لک جا نکی رد تا ہے ی وجہ ‏ ےک ہق رآ کرک تا م زات سابقہ 
ولا تق ریک بہت بڑ کی فیلات رگا ہے :شا کیا ی توب بات الا ہے ے 

. جاء الیو بالایات فاتضومث" ‏ وجتتنا بکتاب غير فصرم 
اله کلم طّال العدی دد يهن سار اليتق وم 
ھجم انیا ۓکراعمجحزات ےکا سے جوان کے ساتھ لے گے ا سک یآ یات 

راز 2 زب کے او یں ادیپ پا لام یکناب ےرا ے 
تبون وای ںا اک اورت رام یک مالز نت نشی راے“ 3 
علامز رقا راشا ے یں ` 
"زا رد-2 یکت رن کرت ند 
تل چ ابدی تک م رک کی ہچنانچ ویک د ایام سا نہ ٹم ہواءارندی 
رسول اللہ تلام کی رغلت سے ١ے‏ مو تآگی کرو ہا بی دنا کے سان ےک ڑا ہے ہر 
تا نے وا نے سے تا مک رہ ا ہے رتم رم هچ نو موق 
اسلا مکی ہدا یت اود تیآ د مکی سعاد تک طرف بلا ر ہا ۱ ۱ 
اور اک سے ہی اکرم تلم ےرہ ارآ کی انبم براوری ( شب مآ زی اصلو چ 
وم )رات کے درمیان فرق داح ls‏ ہے .کون حطر ت مھ نر کے 
زات صر فت ران بی میس بزارول لاکھوں میس ہیں ءارق رآ نآ ج بھی اور جع کے بعد 
بھی بقاء سے صف ر ےگا ء پا لت فکاندز لن او رای رمو جو داي ز یکن کے وارث 
دا لک بن جا میں ( جن تیم کک )مان تام نام کے زات ر ووتح راوشس او یل 
رت کے لیے هن کے زان عشت کےکگز رنے سے وود چاو رآ نکی رعا ۱ 
ےی بھی مو ت کی اور جح بھی اب ا کا لم کا وی کرو یس خی 
اس »وال یٹنا شی کے لیے ا زات پرگواوصر ف ق رآ ن ی باق دسا لم ے۔ اور 
(۱)آیات سے ردقزات لآ تک س زه انصرمت کا ہے انا کے جانے سے دوک 
جے کے( ازم نف )۔ 


اللمعان شر اردوالتبیان ۱ ۱ 242 
یکایاا ان یق رآن نے تما ماو ل» ان مور امب پر ایا ے۔ 
اشتعالکفرمان :وتو یک اکب بای مُصَیِقَا ای یه 
مالكب وَمُيَيْہنًا عَلَيْه(الہائدة: :۸( 
تر جمہ: ” اور نے میم ےتا بآپ کے ال بی سے جوخودبھی صرق کے م اتر 
وف ہے اور ال سے پیل ج ھک یں یں ا نکی“ بی‌تمران کی سے اوران 
کتا و کی اه 
درا پا ککاارشاد ے من لول زليو نه وولو 
کن امن پالله َملپگیہ و یه وَرشلم لا توق بای اع ادن نی 
(البقر۲۸۵:8) 
ترجہ :”اتا در کت ہیں رسول ( )ال زک جواان کے پا ان کے رب 
کیا رف سے ناز لک یکئی چاو رونت سب کے س بحقیدہ رت ہیں الہ 
SE‏ کے شون کنر SG‏ کے و ئن کے 
رون کے اج کہم اس کرو سے کی مت اک کے“ 
اک جناءپرسیدالاخیاء هک رم کی یره ھا 7+۷ 
رما سب چنا غیرد خضرت موکی نک مصال( انی کی طر کول عصانہتھاجوسانپ ٠‏ 
99 9 یل این یاک یئ 
کی اورسلامتی دای جن جائی ء اور نہ تی و خضرت صا علیہ السلا مکی اوی ای رر 
ا رچان کیا ا ری وور یں تا جو 
شفایاب ہوجاے یا ند تاج تیک ہوجاۓ جج ا کح تکس بانلا ےکی بل دوہی 
اور ابری مزه تھا > وہ وہ پیضامات ایکا 92 » چا جب کک زماندر ےگا وی 
رگ اور ج بتک انان بل ےو وی باق ہوگا۔ 
مج الہناءاپنے الفاط مش دون فرماتے ہیں : نی مرح اوک شش وار 
کر له پا رف را ان وش ر عا وس رات صاور بے ی مان 
یسنان سکره میں دیا بلک مر فت رن کے در ےد گیا ای بناء 


اللمعان رده التبیان 3 تن 
رآ سو لکا ایا رہ ہے جوا نکی رمال تک تام کرت ے او رپ فک اتا 
کرنے وانے مون کے ولوں میس چنا دکتا اور ال منورکرتا ...ی تاقیم کی 
رسالت عام اور ارک وتک وو تلام راتو کا فقوت منک ہآ پک 
رہ کی فور رساات کے نوا ہکوہ پل ہ ری موجودمقوم کے لی رسالت لے 
کرت اور ہی الت اپنے بت دس وال رسالتول کے ذر ےنم وال اور یے نان تھا 
کہ غاقم این و کدی ایک نی یز ول سے اس کے وو کے وقت ایک 
باخت دک ,او رجب رسولا ٹا # رل سے جا لک تو شون جر" یتم ہوج اتی 
اورآپ نا کے بح ماو ا سے نہ کچھ ا نا کول ایا ےو رسال تک ال فو وال 
گی ابد ی تک موا فی یں ہق رآ تام ان ول کے لے ھر تھاء ورای لیے دو سابقہ 
زات کے ر بے کے علادہ ایک دور ےط رب ےآ یا ءاور وه دنا کے سا سے بشری 
وربور رانا یک کیل کے لیے ری اتا ءکی نک سیدن مم تلام کی رسالت انمانیت 
کی مق اس وقت بی جب ال نے اچ حوراو پا ورام انیت بڑھوتر کی 
زاپ نهک اد رال کے ر یج ہوا رک تسا 
ار درا چنا یر رین یج کی نرک دراک رورش نان 
ساود رآ ایک ایا مره ےس کے ر یتام انان لاوفطاب فر ما گیا ہے 

از مآ کا مطلب :انا زع بیز بان شش کے ہیں :” ددسر ےکی طرف ہز 7 
گرنا“'_ الیل تیل کا اراد ب: وٹ آن آگون یفل ها لاب قأواری 
سَوْ ٤‏ آخق. سب مب من الثرمنی4(لمائدة: (r:‏ ناش اس ےہ کیا اہ 
LJ‏ ےم کا مج 2 

۳3 ره ال دج سکیا انا یک شل لانے سے عا ہوتے 
ہیں کوت وہ افو العادت ایک اع رہوتا ے ج وک اسیا بحرو فہک حدود ے فا درخ مو 
ہے او راز رآ نکاس :انسا نو یک فراری او راجا ی‌طور ری للم 
عا ہو کوب یکرم ےء اورا از ق رآ نکا مطلب انا نک یز یر( 
ا نکو لان کرد وق رآ نکی شل لانے سے عاج ہیں )یں ہے کل چو برع ق کو 


ال اردوالتبیان 1 244 
معلوم »با یکا مق رای با تکار س کر کاب چاو الکو نےکر نے 
وا لے رسول پچ رسول ہیں ء ای ط رح انا رام الام کے وہ تام ر ات ش نکی 27 
لانے سے اننان عا ےن ےقصور صرف انیا ء ی صدراق تک هار اور ال پا تکا 
اتپات ہوتا سب کرده جو پیم نےکر ہیں د ونیم وم ذ ا تک طرف سے وی اورمعبود 
وقاور “یک اب 0 ر ت اور وو رات انیا ہم السلام فيا ان 
داوس وا سے »اور نک کا صرف بتانا اور بیان ے_ 

چنا رات تب الل تھا یک طرف ےو قکی طرف اه انمیاء اور رسولو ں کی 
ن رد ہہوں کے ءگو یا کہ لش تھالی ال یه کےتوسا ترا 2 ہی گنیر 
بنردے نے جو می ری طرف ین ام باب یئ ئن میں وہ سیا ہے٤‏ اور ل نے اے 
تاد پاک پغام نس کے ے کیا »وال کال رد ہے ےک بی ال 
کے پمپ خوارقی عادات امور جار کرو ںک اکت میس وی ا سکیل لا نے 
کی استطاعع تنس ر ےگا ور:ہب یس یبھی انا نکی قرت مل می بات کرد ال کے 
کی کال ال جار یکر کے ہے سے اا زک کی اور یج ز وکا مض ہوم ے۔ 
ایا زاق نکب ہوگا؟ ایز ای ونت خابت + کج ان تین مو رک ف راان ہوگی ء مم 


ورڈ ی ںا نکاما زک ے ہیں : 
(الف) ٹم اول: :کرای مقابلہاورمحار کا E,‏ 
۱ ام ووم: مج رور ےک سیب موچودہونا- 


(ج) مر سم کسی ما اد نہ بایاجانا۔ 

ناس علوم ہوتا ےک ہم میں مور الوں سے وضا تک ری سوم ۱ 
کے ہیں ۱ 

٭۔ ی رآن پاک مھ مال دهم ہجزہ بے جس کے فر یت یلد نے ععر بو 

خصوصا اوقم رو نک کیاء اسے ایک ای بی نےکر نے جو هنکن ۱ 

جات ی پا اور دای ال نے اس علومکو یڑ یرو نیورسٹیوں 

n‏ میں سے کی بویٹ می حا کیا اوا کی سے بی اتی کہا سے کی مجر 


اللمعان ارو _التبيان 245 


م سے او ویب یفنون شس ی ار ت نوم ومعار کا کو حصہ 
ال کی موه اور ش بی وه ال لاب ودوتصاری سیا الم سے اتر س ےکددہ 
سارت احو نیش رون ا رگزشتانیا مک ماتوں ےواقف ہوے۔ . 

آپ ان کے پا ال نقد تا بک سارت ریف لا سے »او را رب ام 
فصاحت اور وار بلا خت مو نے کے پاوجور ایی یا اوران سے ایی تم عپارتوں 
اور وس لگانے وا لے وں کے ذر بی ےق رآ نکا معا ضط بکیا جو ایس ( ل رر ۓ 
کے لیے ) پفتدارادہ پر برد تے ء اود مق جلہکی طرف رت »او رآپ تن ان 
سے e‏ نور لا یع سے ا سک یت نون ےت کیطرف او ریگ راس 

۱ کش ا سرت لا نے ےی ماب عرو ل کر ے کے جب دہ لوگ ان تام 

صصورتوں میس خا موی زےء اورل کشا نکر کے اورا کے باو جود چم درز اور 
کات درگست م کے ل ےہ الم ا ران پرسب سے بی یل اود 
جس ؟۹!!! 
کر نے شرآ نک اسلوب :رآ نکر می ایی تھ روصورتوں اورکتاف 
لیب یں آ ہے جوربو کی پا ڈ ی اور وج اوہ اکر کرد ا ہے اورائیس منا ظر و کے 
میا نکی طرف جا یل :و وگھی ای کو رگن او روش انداز کے سات ھک ج ابر 
یی اور سن و جال زر ےا شور تابد ایتا سء اوران ےدلوں غاب 
ہا ےا رآ نک شل لا ےر ا ن سوا فصاحت اوش شاو بیان ہو نے 
کے باوجودوہ عاج آ کے اور پپشت پیر کی پا کی تم ات ل ا یکیل دی م٢ن‏ 
کرت سور لسکا کان ای یلست ور بن کا سام کن ڑا اوران دل‌سورآول ۱ 
سمل ھ0 

رال مز یرل کے طور رسب آسان او هکل تین چک تع یا می 
رآ نکی تام سورتوں بیس سےصرف ایک غور تک ال سای نکوئی ایک بھی 
۱ میدران کے اعا ڈ ےک طرف تدم نہ بڑ ہا بکاء ای کے سا دق رآ نے ا نکی ےکک اور 
لس تکورپکاروکرلیاءادرناخواندہنیئ مال کو دنا بت نيا کہ رآ دول جہاں 


اللمعان شش اردوالتبیان ۱ سے 
کے پردردگا رکاناز لک دہ ہے :واه ريل رب این تڑل بو لو الا: اٹ 
عل قبكلتکون من مرن بلس ان عری شین 4 (الشعراء: ٦۱۔٥٥)‏ 

2 مرن اور یٹ رآن رت الفا ن 6( غ) چا ہوا( کلام )سب ا یکو 
امات دا ررش رآیا ےپ ےلب پر صاف رل زبان ل٤ک‏ ہآپ 
(ھی) شحملہڈرانے والول کے ہوں“_ ۱ ۱ 

اور اللہ تال نے ق فراغا ے: «فل کرد زو ارس ون رك باق 

ینت اَن اموا وهی وَبف ریت4 (السسل: ۰۳,۰۷) 

oy‏ آپ ٹر باتک کہ ا کو رورت القدلآپ ےر بک طرف سے 
لت موان لاج ہیں ؛ کہ امان والو ںکوخابت قرم زك 
ممسلمانوں کے لے ہدایت اوخ ری ہوجائے'۔ 

یع کی اقام : رآ نکر نے وا ےکی میں ہیں: 

۱ 1 موی۲ 2 خص ہمیخ 
ا یی جع کی بک یتس تر قوق کے سجن میس فلاسفہ ناف روزگار 
قیالع او رکا تا موقل »اور وه کر کور سے پا کا کے موک یکا خر 
و مو SOR E EAT‏ 
7 گی طرف دعیا نک :قل لن اجتَمعب اش وَالِنْ ل آن تاو وغل 
ها نیون ُهَلَو کات تہ لغ یڑا ۹(الاسراء:۸۸) 

ی آپ فرا وع ےک ارتام انان اور جنات ال بات کے 4 
موچاو ب یک السا ق رآن بنا ما وب سب نی ایا درس اور ارچ ایک 
دوس ر ےکا ر درک جن هس 


۱ دار دموا نظ ےواردہواے: 
کشم 7 جرخ 


اگ تن کےس ات ان کےا کا م بسن اور باضت وین کے ہار نے میں 


اللمعان رده التبیان 247 
سنہ 
رل دم ے اکرش ےی 
تب اچد نکی زر سر تون نس کے ایک سورت ہو لے ہو ر لو _ 
نتم مال اتعا کا شاد :فلاا ریت مله إن کالُوا 
ضیوَیّ4 (الطور: »۲ تقو لوک ال‌طر کو یکظام(بنا کے ا 
دوش )چ ہیں“ 

ا لآ یت ما رک ل صد یث ے مرا" و رو سے من دو اما ق رآن نےکر 
آئیں چوک رسول الثم تا کے لا ے ہو ےق آل جیما ہو اور کے بار ے می ال کا 
یال ےکآ پ 9 اسے اہی طرف ےکم ڑااورانٹہ وت پا نها سب .- 

e 
ای جل کائزا ینب قن وئب الو فو آفلی نت گنفت‎ 
)٩:صصقل(؟قْاَویض‎ 

رج آ پک کا چاو رتو ات رآ نکر تاب ال 

رہ ا ہش وت 
رو یکر کو ں کاک( ت اس دکڑے میں ) جج ہو“ 

سوان سے مطال کیا مگ یا وہ ال مق کاب کے علاد کول دوس رک ی کال ناب 
ےآ میں یں جب و ولوگ اس پکارکا جواب نہد سے کو معلوم ہو اک وو حصب لوگ 
ہیں خواہشات پرست ہیں اور الہ کے تس ہو ۓ راستہ رل لے ۔ 

۳ چ ذ یٹ ور موو کے اندر اٹہ کے اس ف مان می ی ے: جر بفولون 
رهق فَأَُوْا بعش " رما سی سس تر 
اللوان ْنم ص اف یستجیبوا لک فَاخَلَوَا ما اثرل بولم للووان 


آوالمالامی لاش ان مل مسلون (هود: (war:‏ 
ہوم می | آپ نے سابل 
طرف سے ) خودبنالیا ے؟ آپ(جواب می ) ف ماد ےک( اکر بیع ابا ہوا 


اللمعان تر اردوالتبیان رک کہ 248 
ہے ) تو (اچھا) تم بھی اس سی ول سو رفس ( جو تمہاری )بای ہوٹی (ہوں) نے 
7ور( پقی مد کے لیے ) جن تاو بو بو گرم ے - 

ای رع اس ےکچ کم می دروم وا ال رآ نکی سورتوں میس سے ایک 

KA 1 7‏ دیا اس ا سک ےک کے اظہار 8 

ات ملا ہواء اوران کے نام ال نا کاٹ کور رذگ ہو سے وارد ہواء جو ا۲ نکی خر تکو 

مادقا اور محر ض کی صعوبت اٹھانے پر باکت کر پا »خاش لو رن کے 

ا قول وو گے کے ات رک جب انہوں ن ےکہا: لو تَمَاء لَعُلَنا یف 

نَا ان لال سار اوشیپ (لأ نف ال: اکم اداد ہک یتو اس کے 

مرا لاو یں بیو نوج کیل صرف بے سند با ٹن ہیں جو لول ہے تقول بل 

1 -ے ۱ ۱ 

سو رک پر وی الل کےا یکلام س انلا کاگیا: . 

طوان کُنْعُم ف ریپ ییا تلا عل عبیکا وا پشورة قن لهم وَادْعُوا 

شهدا گم ین خن للوان کتشم صرنی انم تفعلوا ون تفعوا او 

ار ال وود الگاشوالیجار 4 کت فرش (لبقرة: ۲۳۲۰ 

ترجہ :* اور ارم بیان شش ہوا کنا بک بت جم نے نازل ران 
ےا وفاش رام رم بنا لا ایی رورا جوا ںکا پل مو اور الو 
اپے برو کو جوخداسے الک( کی درد که ہیں اگرقم سے ہوہ کا ہے 
۱ کم درک اور یتک بھی نکر وک و ورزر کے رمودوزرن سے اس 
ای نآ دی او ربھم ہیں تیار ری »ول ہےکافروں کے وا سے“ ۱ 
علا ر کی رم نایم" الجامع لأحکام القرآن “یں فرماتے ہیں: اللہ 
تال کےارشاد: لغ ان لم تفعلو €۱ کامطلب ےک اکر نگل ےکا م کر کے :اور 
ولن تفعلوا کل کل میں بھی نہک رسلو »اس میس ان کے راکو 
برا مخت دک اگیاءاورا نکواشنتحال ولا با یا ےکا ن کی هک اس کے بعد ز یادها هو 
۱ ہو اور ییا نکی باتوں ٹل سے ہ ےش لک ق رآن نے ان هل از وقو ‏ روگ ے۔ 


اللمعان 2 جرد التبیان 249 
۵۲ -ر پا دوس اهر TTT‏ ا ام ہونا 
ےآوووموچوواوری اگل تم :کوت کی اام ان کے پا ی ایک نیادین ےک رآ سے تھے 
ی ےکک ںآ پ مھا نے ان کے دی اولوق رار دیا ا نک کقو لکوکم مایا ان 
کے مچووول اوربتو کا اٹ اڈایا اوران "مورا پاط لکول وگول سک درم ل دیناد با» 
او رال ال رو یکر نے اوا شتی یک طرق سے رسول ہو ن ےکا خاو رک کی وکوت 
دی اوران سے فر ہا )کہ میرک اه یےکتاب دمل ے نے اللدتھا لی نے میرک طرف 
تاز ل کیا ے ازات رال بات میں مرک تد ا نک کے موتو میں ہیں دتا ہوں 
زس کت تو ات ا کن ان وت وو N‏ 
ج بت ال میس بے ٹس اور عاج موتو کی مر سای کی علامت اورتہاری طروت 
ہو ےکی دلب ۱ 
چنا ناب عرب فا طور پمال 7 اورا نکی عقلوں ,ء9 
اورگوں کےساتھ انا شر اک نا کے بحر رآ نگ شل لانے ےکی قر تاح 
تتے؟ ایی شکب ہو نکرپ سک ولو ےکی تر دی دک ناء اون کے رسول اید مو ےکو 
پا کر ان کے لے ببت ضشروری اورم تھا اور 1 ب ی دک ےکوروکمر نے 
کے لے کل 20+“ 0 سگرن 
ا اور بای ےر بی ےتاج می ماہراورا کر وب مروف سے ان 
وو یکلام می بلات اورز پان مل فصاح تکاتھاء اور یط ری ان کے لیے ز یاد وٹ 
کل تما ہت اس جنگ سے شس کے م صا کوانہون نے یلم اورأل کے شرا رش 
ود پڈےء ییہاں ک کہ انہوں ول کے چا موش کے اورجلد باز موت وکوت 
ون کر چپ پان انہوں .هنیزه پا اوت انداز یکو دی اورمنا ره کے لیے 
میران سآ گوارا نکی ق اتی با فلا لی رما ذف مات ہیں : 
" کین یا و زان سرت اور ےن E‏ 
ال کا ر ا نکی کا نی ات فان کے 
سوا کک کرت و بل کات نت مور کزان ون رف 


اللمعان شرارددالتبیان 250 
لما پا عادو مس ان ےل اد وی و »رای کآسا نی 
که ودک بات ہ ےک اد کا وا ونی ہے اور داش 
ہمندلوگو ںکااس ے تن 

ری رح موز ؛ وگ رن 
رل زین یش نازل »وا جوا نکی اب ذبا نیاو رای کے الا ظاعرموں کے الفا اور 
سی عاس اسلوب عر بکبمط »نیز وو لوگ تود پان دبیان سک الک اود 
فص احت وبلاعت کے امام تھے ,ان کے اشعارہنقار یر اور واشت را کلام ان کے این 

س کال وس پر لالت کرت ی» اول نے فصاحت وبلاخضت کے 

میدانوں مشش سیقت کے ماڑےء یسا سز با م کرت س ےک وو شع رون میں 

فو تیت اور کي فصاحت .مر پروا زک طائت اوراستطاععت رکفت تے_ 

گابال! ق رآ نکی ای ی ا نکی گی ذبا نک جن یرون زک سبب بفلوں 
کے انعتا وکا رید اور اس میں مخ ےک رک کی ء اک دہ مت ری قصا داو ر تقار یہ 
لاد ره قاری پا ری تور می مس اء اور شم 

ی ا نکی عقاوں سی » با ن کی قرت وا مقر ار یل موجوداور استطا عت شهور 

ننزدوصا< بل ورات کی ےکن اس سب کے باو جد رن نے یں کرت 

د کرد ہٹس سے وال مددطل بک میں ءاورسابقہ اہب والوں سا اندرموجوڈڑھی 

1 ,7 رو بکابنوں ءاور اف اواأس وشن یش سے جس کو چا ہیں اس کے 

اتی یکر تیا رکرو کلامم سا سے ای - ۱ 

مان سا الع جردا اوی ڑل ےن کے لے معا رض کیکوئی 

مت او ایکا ان وق تبھی ییا نکیا اکان ے می کوس کیا ب 

مرت کال او ئن مرگ »میا کف رآن ا 
ارات رل کے بل ۳۳ سا عرص من نز ازل جوا برایک ازل خد 

و سے اوردوسر ےو سے کے د رمان اتتاوقت ر تال تلا رآ نکی تررت میں ہوتا 

تو دہ مقابلہاوراا کیل لا سے کے لی کاٹی تھا سو جب وہ اج آ سوم تلم کم 


اللمعان ۸ ارو التبیان 251 
رت التبادکاناز لکردہ ہے او ری بات دی وب بان کے ےکا ے۔ 
ایا م آل پر ایک ال :علاسزرقال راش نے یکناب "مزال الحرفان “م 
ایک کلام ذک کیا ہے :ہم سے نی کے الفا کے تہ ذک رک تے ہیں عل مرت 
رصرالش سیف بیان س مت رر ج ب کلام ای سب : 

رہ غار از عادت» اسپاپ مروف کی عدود سے جدا ایک اھر ہے اشرتتال 
اسے دک توت پاتھ پردکو سے نبوت کے وت ا کی چا پر بطو رگواہ پی افر ہا ے 
ہیں ء چنا نج کی کون انان اٹ ےڑا مواوردگو یکر کرد و ان تال یک طرف تال 
لوق یط رف و کیاکی »درالم کے بترو کی طرف الک سول ہے اور کې 
کر سے سے کے اندر میری ای کی مرت یہ ےک ہس الد نے کے کم کے 
رت پاک پاچ عادکی امور ا اوک ام رکونتبد فر ا یں AE‏ 
ا سپ وی طا کاش سے کی طر یکواب چھوڈ دی کے اور رس ھتریب 
اش تھا اس رت ایکا مار یق سے ے۹ میں کے شم اپ ےآ پک ماہر 
کے »رال پرخوب قدررت رھت ہو اویل کل د تا ہو کم سب لکر یا تھا 
۳۹ ان نت گنن A E‏ ےی کہا را اتاد a‏ 
او ہیں جیا اکتا راوی ےس مر اتکی ما الم سب ایک طرف 
ماو رٹل اگیااہوں_ ۱ 

وہ ہے بات پر اتاو اہ شس سے اور ال کت کے یں اب وت مس 
للکار ےک نس میں دہ جار ےعتا کد وعارات اور اغلا تی پر لک رب ہواور ا ری عقلوں 
اور مارک ماخ مما ر ےآ باواجیدادکی عقلو ںکوگھی او رار ہا ہو یلم اتی زت کے 
دار درا پت بوب چ یرک مدکی فا رال وقت ئل ہت ز ا د ووا شن رمو ںکہاے عا ز 
ونم کرو ی اوران پرخلبہ وکا میالی ما لکرلیس رلک ت خر کے و وبھی مکی 

ہو ہے اوہ کی ووی اپ پختدارادمکرتا ے اوہ مبھی کان تو سب کے سب کا 2 

۱ دو جر اورآوشٹوں کے بھی استتطاعحت د رککوگی ںک اس 1 ]/ 
آ ںہ چ جا نواس خیم ار ال ہوہ باوج تم ایک جماعت ہیں اور تھا ے٤‏ 


اللمعان شرا ردوالتبیان 252 
رواب پاک مار هتشک2 ن راست اور ہا رےز ماضہ ههور ان کے 
سیر آیا ہے ءاورساتھ سادا نے میں اپے ا کال مو خر ہکا سے اور 

7 ر نایک ی 

۱ کی موز ی یک ی قل رک وال اس بات وپالا اور اک انسالن» اب رسماات تس ۱ 
اد اور اہ دگوت یل ےھ کے بارے میں شی فکرسکتا ہے؟ ا صوسا تام 
پاتوں کے علاذ یں یی معلوم ہوک ہا نے جارس درمیان اہک بن اور مر یج 
زاس سے نےکر ایق لعشت ورسالت کے مانہکک سا کی امات او رم پت رین اغلاق کے 
ساتھ پور پا چا اوہہ اییے طز یق سے 2 ےت دبا ےتک 
ع هک رق امش ےجس نےفقون می انش مارت ما لکل سے سے ہم 
ات یادہ کانگرلوں ین سے ای یرک ے واٹف ےج سی یں خر 
نیس کن ومآ مار ے پا ایک جبت ےآ ی ”ی بی ما سے لی تت وسبقت کے 
ر ف ہیں اہراج بک ہم اتصا کر سے رہیں سا سے یه نکی ار رن 
لے سے د ین یمان کےسواکوکی پار ہکا رن ہوگا۔ 

پ کا سے ایک شال بیان ہیں بحرت موی یاک یکی ا یکا 
E‏ کل زو شی کت ا ات رس »+ لزات نے 
اک یی تھا ایکا 2 را پیک دیا کو دہ خداکی قدرت سے ایل دوڑتا ہو 
سا مک نگیا وب مب نے اس بات اج یقرش فاص 
می بلندعقام اور وا رح ھی تصوصا جب و ہلوگ ایک توم اورآپ ایک فرد ے۔ اور 
اس مادو یں برطو یکی حاصمل تھاء جب ہآ پ نانا کے بار ے بی ان کے درمیان رو 
اس باوجو کی د ن بھی چا دوکر نے پاعلم نروس وکیا شی کون اد پو بای رہ جانا 
ے عراز ا لک موی علیہ السا مرکا عصاژ الناتھاکہ: 

ا5ا ھی تلقف ما ون "ال نے اڈ دعا نکر ان کےسارے بے 
ا ےیل کون شرس (قوقع اق وع ما گاٹوا یفھازی4 ۱ (ب) 


)۱۱۸۔۱١۱ء:فارعالا()١‎ ) 


اللمعان شعادو _التبيان ۱ ۱ 253 
ال وتن ( کن ہونا) ظاہ رہوگیاء اور انہوں نے جو ی نيا تھا س فآ تا پاتا ره 
سو سی جس 1۳۱ مایت 
لین رب مُؤئی وَمٰرُوْن) ین اون مخ یه پار گئےء اورخوب کل 
وس اور ج کیره سک گے (اور پر کا یج 

رف پمک اد برد نگ دبع 0 

جح ضرو رآ کارا وتا سب» اک بناء سب سے ی ےآ پ پر ایمان لا نے وا لے خود 
چادوگر 2+ کوک وه پاد ال کے مادی انا رار با وا لے کےء اور 
ہوں ایآ ھوں ےد یاک یجرد ای ادو کی کی نوم میس لین ے وہ 
۱ چات »ول ,آپ ایر ہرائلد کے کیچ ہو ے سول جھزرے کے بارس می کہ ۱ 
گت ہیں ءآپ تفر صلی نکب میں کال مہارت کت اور رو تقوم 
کرو یروا نک ماورزادانر ھے اور بل (جذام کے با رو چا کرد ےۓ ردو ںکوزندہ 

کرد سی ورخ دا ےکم سے ند سل مناد کے بار سے تک میگ ۔ 
اوراکی ط رع بالگ بڑ هراپ خاتم الا نیا سین تہ تلم اورا نکی رای 
و روش نشانیوں اوردا رات کے بار سے سک کہ کے ہیں+اورآ پکیلے مرف 
رآ ن ایک رون دمل بای روت دلال کےطور رکا سے ال مس سے مر نآیچوں 
کے بتزرکاام ای ںی ت0 ہے جودنیاکے سا سے امت کے ون کل کیل ےبھڑری 
دناکواے اتا رس سوت ماحت ویلاغ اورتطو مارک کے رازوں خی بک 

ول اور کے لال کےذر بیج ارک ے۔ 
رة ابی شرا 1 :ردک پا شرا ہیں جن ن پرعلماء نے تبغر ای ےہ اکر ان ۱ 
ٹس سے ایک شرا نہ بای اوه رہ رہ و 
.یل رط: زه ان امور سے بیشن پراش ب العظزت سر 
000 


(۱)(الاعراف:۱۳۰ ۲۲ 4 


اللمعان شر ان 54 


000 
۵ - ےت 

: اگ یہ با شرا کی پائی جا یتو دہ خارقی عادت ام مج ز هلا ےکا جوا ی بد یکی 

توت پردال »وکا ی کے باتھ پر یہجھزہ ظا رہواےء او اگر ری اط نہ ل جا آووه 
امز ہے سے کل جا ےگا اور یک چام پردلالت د دار مان 
بب ی شر دی فصیل :مرو ق اہی زد ںآ ےجس میس انی کا کن ےہ 
اوررسال کا دوگ یکر ےءاوراپناسج ز هرا ون »با ءکھانا * ناء اور ایک چک ے دصری 
کی طرف مک تکر نا قر ارد ےتوا کا ول ره د ہوگاءاورنہ کی ال صرق 
پردال »هگ کون توق ای لاس پرقادر ے٢‏ او رجات کے شرو رک ےک دہ 
ان اشیاءٹش ے ہوں ٣ں‏ پرانساان تدر ت نال را ےن رکا چ راء چا ندکادگکڑے 
کرنااورمردو لک نوک نا ویر ۱ 
روک شر رک تفصیل : دوسری شرط جج زہ کاغر ت عادت ہہوناےء لبزا اروت 2 
ویدار کہ اک رازہ ىہ س ےک سور شرق تلور ہوگااورمغرب میں خروب 
ہگاءاوررات کے بعد دن ای وال کے اس دگو ےلو چ و وی لک جاگ کی ان 
مور هر چ اللدتعالی سکول تا ریس بیان وہ ا کی ورا ہے 
ایس سے یی کے ہیں چناغ اس شا کول ول موی ۔ 
ری شر و یتصیل: : اوروه کہ مرگ" بوت ال زہ کے ذر بی اپ بوت 
پراترلا لر ے و تر رو تر ان کے و جھزہ ایا اس 
یں ارو انان ہے دو یک تا ےکا لک زه ہے س کم بے ہان وان یاانان س 
تیر یل ہو جا ےک کن رفن وال سک دوس کی صداقت پردال یس ہوگا۔ 
ی شر ی یل :ر اوه یہ سکره قوب کے مطااق ہوہ اس کے خلاف نہ 


اللمعان شر اردہ التبیان 255 
وتک اک رخلاف وگاتودہ ا لکی می بک ےکا مر وی ےک سیل ہک اب لح اللہ 
کے ساتھیوں نے اس سکب اکرو ءکنومیں یھو کے ت کا کا بای زیادہ ہوجائے ا 
ن ےھ وکا بائی زنل ات گیا بو ا کےکغذب پل موی _ 
۷221 شر رک تفبیل: اوروم ہے سکره کا موارضہ ن ہکیإ ہا که پزارگرس 
کا موا رض کیا گیاتوا کا رہ ونال ہہوجا ےگاء اور صاحب ٴجزہ کے صدت پردال نہ 
وگ زا ارو سمت رک چیرنے اور نو ےکر هقرت هتفاي ھراور 
خن تر رازگ ہوک ای 2 تھالی نے مشرکمی نکوتطا بک ےر :لا 
ریت فة ان لوا یوین( (الطور: + ** تو رلوک اس طرر کک کلام 
( اکر )سے یں اکر ہے( اگوی شس ) چ یں“ 
ران انگ وجگیاے؟ رن پاک اپنے اسلوب عم بنسن و بیان علوم و 
ول مار ہرایت اور ود یی کے فیوبا تکی هشال شارت قو کے 
ےکا ہے علا ےکرام نے از رآ نکی وہ کرازبا یا نکی نقا کشا 
7 ج بعراز کہ ای ت ان 2 و رہ وچران ول 0ھ 
اورقمام ارب اوران ٹل ے اب زان هیا نکاال پرانفاتی بک رآ ن فی نف جر 
»نآ نکایازایق فصاحت فان بیان اور اہ ے مرو اسلوب میں کم 
ون کاکوئی لوب ا کا مق بل سک رسکتاء زا شک زا-۱ ورک ناف طط یق کی 
وجرے ےا سل صویینا موا ل اوی ارت اہی ی کی تچ 
اي صرق ہکا ماک :مخز تن میں ابو اشن تام ہیں مکی اسب ہک 
Uj‏ از صر ی وچ ےء مطلب ہے س ےک الثر تا لی نے انا نکومعارض 
پرقادرہونے 1 باوج رآن کے معارضہ سے یمیرک نے کرد یا ء اوران کے ولوں 
اورز ہا وں یل اس ال لاس نے چوک راکفا کرای ان اوا ما رض ند ۱ 


ریاس کاقول ےجس کے۶ ف جا نکاذ اہ یما ے اور نہ بی دہ ال کے 
رموز ےواقف ےء کیال ٹن کول ےجس علوم میں تسوا ون کے 


اللمعان ترا رددالتییان - 256 
گنیس باج جونہ ای فر کر ے ہیں اور ہب وکمطا کے ہیں ء ای ککراہوااورکھٹاقول سب» 
کرک ود تلایا ءاور با سک برع ےتا لف ے۔ 

:الدب الع ر لی عل کی اراق رح ادف ماتے ہیں :از رآ نکی دج کے 
ار میس من کی آ راشای ہیںء شیطان ینکن نامک کک ہے ےک 
اؤانصرذی وج سے »رذب ےک الڈدتعا لی سر بکومعارضہ قددت کت کے 
: با جودظرآن کے معارضہ سے برد ا »چات ہبی رناخرق عادت ےہ اورشیع رش سے 
تیب ھتاہ ےک بر کا کا یکاش تیا نے ُن ےو وتلوم سل بکر ے 
جوا کے نے ن و ست هگ یاک وہ مےکہناچابتا ےک عرب 
اکا ب بلاخت تھے تق رآن تم لوب کے لانے پرقادر سے بدا مک۲ ال 
اذا ناشن معانی رل ا نکیل لانے پرقادرنہ تھے کوک وه الم تے اورنردی 
ان دورس ری فر دا تی ...... e‏ اکا پد کچھ ہے ہیں ظا ہر لیران ے! 

برعلا مہ راا رم الٹ دفر ہا سے ہیں : خلا ص کلام می ےک ”صر فقو ل شرن 
رب کےق رآن کے بارے می اقول سے پک ل کلف تس سب (ان هلا له بط 
1 وق (المدثر (r:‏ نیس می مادو ہے(جواوروں ے) متقول (ے )“'۔ 

ڈوک ریش ی تال نے اس ڈول دیب 
کی ہے اوران ول نگ نکی ایک اداج فسخ هلآ آم انش ۷ 
يورو (الطور:) ” یام( ہے تک 
ظرک ںآ“ ۱ 
۱ ای فا سذ بک این کہ رن رش هه 

تصرف ٹس کے سب دوت رآ نکی لانے سے تاک حرف اه ونم 

اَم قوم یعون (التوبة: (re:‏ ”خداتھالی نے ان کےولو ں لو( ی ایمان ے) 
ا رک ی( کا سے سے بسک یں 

'اوراب نع زم انطا بر دی جب ال ت دار کک پر لتر ول بات یں ہچوک ررہ 
گے اورا سی شی رونظا تی کے اغخقتیار کے ہو ےلچ کم ا کی ابا مکی »ات 


اللمعان 2 رّارده التبیان 257 
ا ںکااسکوب بڑا دی اور شا ہے بای طور پ هرا نے سیپ از سے ن ایق 
کاب :فصل“ می سککھا ےجس کے الفاط یہ ہیں :کول بھی اس با تکا ال 
کک اٹہ تی یکا کار الب جب اشر تیال نے اس رف اکرے ناکلام 
ایا باس چ بنادیاء اورا کی ما لت سک دیا او ری دیلک ہے دور 
دلگ متا یں ۱ 
چنانآپ ال رائے کے قا لکد ودب ہیں نہ دہ رآ نکر ملق اردیتاے» 

اي یک ران یت دی نے ا سک ما“ مت سے فر ماد یا سے اور ےراے لو صرژ سے 
تال ظا م تز کی چ لہ یراس پل ہے ععلی اکم نے ب رک دی اور یم 
رون رو کے ری ےھر 2 سے کے دا ےت ےکا بای خو بکہا نت 

قدتتکرالین ضوء الشمس من رمد وینکر الغم طعم الماد من سقم 

ترجہ :بھی امک وج سور نکی رن سے توگ شمو ں کر 
سرک لے اھ کے : 

ایا ے بار ے میں علا سے لرام مکی آ را ءا علا کا ال بات پرا جما کے بح هکم 
ق رآ ن ف نف جز ہے اورکوئی انان ا کل لا سفق درش ہے البتد از رآ نکی 
دج کے بارے میں ا نک یآ را لف بل : ۱ 

(الف) تک بش علاءکی راےۓ یڑ کرایاز رآ نکی وچ فرآن ٹیس موجوروہ 
E ECs 21‏ 


هت رن کو ات وراک ریب و ره 
ہے هو رآ نکر بلاغت ای بر مرج راتس ما لتاق - 

۷9 ...او روص رر ےش علا 0 "ا‎ (GD). 
ال ہونے وق معالی اوران ی امور تل ہونے میس ہے جک انان کے میں‎ 
نی اورنی ا نک جانا ا لک قرت می ے۔جی اک ق رآ ن تاش وتی رض ےکھی‎ ۱ 
واج‎ 


اللمعان مر اردوالتبیان 258 


خوییال اور تر لس یں ج رورت کے آنمازء ماص داور نات مل ال ا 
رت دلایدت: 

ا-الفاظ مل فصاحت 

۲-موال یل بلاغت ۰ 

SE 

جا ہم یتام اتال ایک دار نی دارم یا TT‏ رآ ا 
متا زیت رگن سے اور ہے بات اگر الاچ رایز رآ ن رف خصاحہتاوبلاقت میں 
صر لزق رآ نکی وکرو جا تکھی ہیں :علا ی رحاش نے ای 
گرا ق ری موسوم اترام القران بذ ی که باتک ےب چا آپ 
نے اع مایق رآ نکی دی وج تن »ای‌طر غا ی تق ان ےگ اک 

ب من ل العرذان س ایا زی چودہ وج با تک ڈکرکیاےء ان میس ے ووو 
ہیں جوعلا تر ٹھی رح الد نے کرک ہیں اوعض ایی ہیں ج کاک انہوں نس 

کء اورم یہاں ان دبا تکااالاذ کر فانک پل ان 

ہز نم وتال کیچ ہیں: 
ایا رآ نک وج بات :اع ر زان کے رو تلف یں ٹوک م۔ 

۴ ما مک اسالیب کے خلا ف ایک نا دراسلواب- 

رن بش ا لا ماک وال نات 

۴ رشح کرد وقاوان سازکی الب ون او رک تون سازی - 

۵ - وی اش موم و وال تی باتو ںک نجرد یناد 

٦ش‏ طور یرت و وم کےساتحعد ھا 

2 7-7 آنگرٹمکییا کر دہ پروعد ے اور وی رکال راکرنا- 

۸ علوم رع ارو کو ر یرل چورعلوم ومو ارف - 
۹ق رآ نک انال ضرور یا تکو پور اکرنا۔ 


اللمعان ردو التبیان ` 259 
فرآن‌يات رون اور ول اون میں ناش 
ایز رآ نکی بی ود : دوجو و اس ور ز بان کے رو فم سے 
لف ایک اوک ام چ ذاعم ون کول حص رآ نکر سے مکی مات نیس 

رکتاء اورا این بلاغت اور ا تم فصاحت وین وی جن خر عبر بین ر یہی اور ان 
کےعلاد+دیارحرب کے 4 ون مورا تاوا با تک خو داع انگیے۔ ` 
تار ے<: برش الس : ۳ - روات می سآ تا کین مخیرہ ی اکم ظا کے بای 
آ یاپ لس اس کےا سنج رن ها ”کک سے وہ بہت متا ہوا ابوک لکوجب ہے 
بات یلید کے پا لآ یااورکہاکراے میرے تا ا آ پک یتوم چا“ ےک ہد ہآ پ ٠‏ 
کے ےل پود سے د سے »وتآ پ جج کے پا ی اس لے گے کال ٠‏ 
کی تو لکرددچرکواخیا رر ات نے یھ پالو اس پرولید ن اکرش 
کو اٹ معلوم ےکس ان مس سب سے یاو الا رون »رپ 
ال تک رت می پان من ےا پک تو تلو ہو جات ےکآ پال ے 
a‏ ےکن کی سک ہوں؟ اشک م مش ہتس ا 
میں جا با اورنہ کی ال کے رج تصیره اورجات 8 اشعارے کے ہے زیادہ 
واقف نے اورانٹ ہک م ایج کے ہیں د دان یش سک کےبھی مشا نیس »را !جوا 
کلام بی بلاک شیر تی اور دوا سے ا کاو پر والاحص کیل داراو رمیلا حص شاداب 
ہے بیکلام غالب دی ہتا خاد ب کل موتا یرل حون ےکا اکرفدا! آپ 
گرم ال وتک راشی درد ج بک کآپ ال کے بار ے کول از یات نہ 
گرب 12 وید تن ےکہا کہ یج ژد وت وگو میں چب ای نے 
سو چاتو رک :ان هلا زلا سر بو کر (المدثر: ۷۶ "بل بے جادد ہے( جواورول ۱ 
ے)قول(ے)“۔ 

1 ہن ار نا ان سا ۰ رن ومن اقث ` 
تاه جع مانوکن وییتن شهودان مههه اضف 
یلمع آن اريف کل « ات کان ایتا ۵ سارمقه 2 ضاف اه فَگر 


اللمعان تر ارروالتبيان 260 
ود۵ فقیل یف قَثَرَه ثم فیل گیف ره ثم تظر ت عبس 
رطف آذبر واشک تون فقال ان هد لا فد رخ ۱ ان هذا | 
۱ الب 48 (المدثر: .9( ۱ 
:داور الت کو(اپے اپ حال پر رد کو نے الا 
ا اوا کی کےا ور و( و اب 
رع کاسا مائنع ال کے ےم کرد ری اس با تک ہیں رکتا ےک( ای 
کو )اور زیادہ دوںء ہرگ زی ء وہ ہما ری تو کا حالف ےہ ا سکوعنقریب 
7 ( ن مرنے کے بعد )دوز کے پھاڑ پر چاحال »ال لسن سویاء 
کت بات وی ون پہخداکی ارموشی بات یه 
م4 U‏ خر بای پات چوید» رن رن سل 
چرو لک )دیما رم بنایا( کہ د کے دا نے ہے کی ںکہ ا سکیقرکآن سے 
بہت ز ید هر اجمت سے )ءاورز یا دہ مت بنا اء اور یرم راو ره ربو اک 
#ل بے ادو( جواوروں سے )قول( ے )»بل پت وآ یکلام ہے“ 
٣‏ نزعقول کہ جب ولیرنے ی اام سے قرآن ساتوبہت زیادہ 
ما ہوا او رازم زوم کے پا رن ےکہ اک دیکات مھ سے کی 
ایک ایا کلام سناہے جوت کی انا نک کلام ہے اورن کی نکاء ت ا! اس می بر شی بی 
اودروآل ہےء اس کاو پر والاحصہ پل داراو یلا تصہ شاداب »کلام الب ہی 
رتا ے مغلو بکہیں ہوتا جوف رئیش ۵ 7 ېد ووراک کم اقام 
ر بے دین موا یں هل سکب کرد لآ کے یی تہارک طرف ےکن 
ہوںء اودال کے ین بو ھگیاء اور ال ہے ص دلا نے وال با تی ں یں تو 
لیا هک او رتیل بھی ال کے سات ھکھٹراہ وکیا ء جب ورای آوم ۳ ال 
با ھک ردو هکم پل ہے »کیا تم نے اسے دیما کرو هیک او 
دہامو؟ اون کے ہوکہ و ہکا جن 9 و کی ات 
کال جوم کاس میں 


اللمعان ارو التبیان 281 
۱ ہا را مان کرو ہمھوٹا سکیا م ے الا مور کی با تکار کیا ے؟ ان ام 
پاقول جاب شل سب که دام اہ با تگل... ۱ 

تح تو ساات نے سر و 
موک ےن دی ماک وہ1 اوی اودال ےک دن ادیپ اد ۳ 
درمیا نتف ن پی راکد یت او رجو و ہکہتا ے وه ادو تی ہے تے وہ ال ال سے 
لکرتاہے ا باتک نکر سم ادا ںک بات پروی ارت کا 
اظہارکرۓ ہو شش وکیا 

سیر 8" تی سکم میں1 ا کہا و رض اعد بھائی تس فقا ری اعد 
رتور ارس ےہاک مر یکرت تمہارے ہم دینش سے فقا ت ول 
ہے دو وگو کرت کالہ نے أ سے رسول باکر کیا >( ابوڈ ری اد ع کے ہیں ) 
نے اس سے پوپچھاکرلو ککیا کچ ہیں ؟ تواخس ن کہ اکد کچ ہی ںمکہبیشاعرہےہ 
در اہن ے :جک ہایس خودایک شاع رت ول کات ےکا خو کی 
انس ہیں کی ا لکاکلا کنو Ee‏ تن ےکا کوشا ترک کی 
ام ردان کاشت رد کی ایک شا کلام کے موا بھی ۱ 
یں اترتا غ کم ارگ ود لاور ہنس ا ہے۔ 

۴- این ناک رح اللہ نے ارت لاق لکیا ےک ابول نے سردارا ن تی کی 
ایک جاعت می کہ اک کرک محال ہم تب وکیا ےکا یکتم ارس لے ایک 
ایا آ دی حلاش کرو جوش کہا مت او رجا دوکر جات ہوءاورد ور ے با تک پیر ہما رے 
بال ال کے معال ہک وضاحت ےکر -2,تواس رہہ لد چم جو لوم کے بڑوں 
اور برآوردولوگوں بیس سے تھا کے کل اس کے پا کی جات ول او رال سے بات 
کرتاہوںء چنا نت ہآ پ و پا ںآیا اورک اک ا ےھ ! آ پکیترہو یا م؟ اپ 
بت ہو یا عبدالمطلب ؟ آرپ بترمو یاعبدالڈہ؟ تو یرپ کول جمارے عداو لک برا 
بلا کے نز یی گرا هروا نے +و؟ اگ رآ پکوسردارکی چا ےتوہ مآ پکوردارکی کا 
جرا تاد یت ہیں ءآ پ ہمارے سردارین جا یں وداک ہیں عورتو ں کی خوا ی سے 


اللمعان شرن اددوالتبیان ۱ 262 
ورش میں سے جس عور تکوم جات ہوء اور نکی لڑگیوں ین سے کی تم ۱ 
پت رکرو قاری شاد یک راو ی »او را آ پک مال پا ےت و ہمآپ کے ےتال 
کر کراپ نم ل سب سے یادومالی دا دور موما یں ۳ ۱ 
ال دورا نآ پ نف نامو ر ہے ا ول جواب نہد یاء جب ده ال درخواست 
سے فار م وکیا توآپ ملا نے اس ےر ای ککیا تم ابق بات سے فا رن ھئے؟ اس 
ن ےکآہا: گی پا !جک رآپ اام نے اس سے ری کب سو ءاورآپ نو سورع 
فصل تک تاوت ف ما ناش رو کردی :حر ازل فن الخ ال یور کب 
تشد کُراتا َالَو وین شیا وتزیرا» فارص تشم 
هم لایسمفویه وال فلرنکاق ایکون تاریو وق اڈایتا نز ومن 
اتا اِلِهُکُم إل وال فَاسْتَوِیڑّا یه واشتفهروهد وونل تلف کنو 
لِم اون الکو وَهُم الجر شم کفژونن ری ال انوا یلوا 
الضلِحتِ له اجر یز توب فُل اكك لعکفرون باق علق الکزض نا 
وم وَْعون له ناء فيك رب الْعْلہيْنَه وَجعل فیبا رَوایی من 
وا وبرك فیبا وق یبا آفواعبا @ رة تام« سواه زنشایینیه د 
اشتوی ال الما وهی فکان فقال نها رض انیا طعا از رها قَالكاً 
اتيا طآیوفن0 فقضهن سب توا تومان وآو ى ف کل تما ی مرها د 
وريا السَمَاء لیا ًابيع وَحِفٹنا+ ذلك تفرتر العزیر العلیو 0 فان 
آغرضو ال نكم طعقةَفل ضوع عَاووَو4۵ (السجدة:۳۰) 
ےھ مء لام رن رت مکی طرف سے از لکیاجا تا ہے ہے ای کناب 
ہے تس ک آنتیں صاف صاف بیان کل ہیں یی ایا رآن ے 
جر( بان میں ےء ا یهاوگ نکب ( ن )سے جووآشن ر ہیں> بثارت 
ڑنے والاے ( اورث ات والو ںکیلۓ ) را والا ہے سو !کشر لوگوں ند 
(اں سے ) روگرواٹی کی روہ( بو جار کے )سن نیال اورو لوگ کے 


اللمعان ارد التبیان ؛ 263 
ٹیل اور مار کاثول بی ڈا ٹ لک ری ہے اور جمارے او رپ کے درمیان 
شش ایک تاب ےوآ پ اپنا کم کے ہا یں اورم ایتا کا مک رس یں »اپ 
فرماد ےک شس کیت ہی جیمانشرہوں بجھ پر و نازل مون س کارا ایک 
بی بور سوا( جور رل 09۳۲-2 ء0 
اودالیےشرکوں کے لے بڑی فا ہے جو کرد 2 اور وہ1 خرت کے 
متیر ہیں ء(اور برخلاف ان کے )جو لوک ایمان لا تیاور انہوں نے نیک 
کم کے ان کے لے( آخرت میس )اییا اج ے ج( بھی ) موقوف ہونے والا 
یں ءآپ ہر ما ےک کیا تم لوگ ایی فد یوحید) ان ررض نے 
ز شیک کو( ہاو جو وان بای وسصت کے )روروز مل ردیر اک کے ریک 
تھہراتے »وی سارے ها ںکا دب ہے اور ال نے ز می ٹیل ال کے اور 
از ناد یے اور ای (ز ین ) یش ار ےکی 2 ت کی اور بل نین اس 

(کے رہ ے والوں) کی غا کی تج ی دکرديی جار دن یس ( ہوا جوشار س ) 
پر ین لوٹ والوں کے لے ء1 سان ڑکے (ite‏ کی رف تو جربا اور 
وہ( اس وقت) وال ساتھاسواس سے اور من سےفْمایاتم دونوں قوی ےآ و 

ا زی دق سے دولوں نے عوت کیا موی سے ما ر ہیں مودو روز بی ال کے 
اھ آسمان ناد کے اور ہرآسمان می ال کے مناسب اپا حم (فشخوں 
کو پھچ ا اد ہم نے ال تریب والےآسا نکوستاروں سے ز ست دی اور 
(استراني فان ) سے ال ل تفاظ تک سے ے( ضرا جا ز,ردست 
واف 5 9 و 21 توحیرے )ا عراش 
کی ںتوآ پکہ ہدک یلت رکوا سی آضت سے ڈراسا ہو لک مار وود پر 

( رک کرک بروات) آف تآ لگ 

آپ اٹل جب انش تا کے ال فربان کک بن : قان آغرشُوا قعل 
رک حقة لی طحق عاد ونو نتب اپ کے منہ رقم رک 
5او یپ اواو را 34 ال سک اتدوک طرف اویش 
یرف کے پا ند یا سو جب وہ ان کے پا ی گی توقر ل ےک کہ مھاراخیال 


اللمعان شن اردہالتبیان 24 

کک س ری بے درن م گیا ہے ءلبفرادہعتبہ کے پا ںآ اور نے گ لک اے نت 
اہمارے پا لآ نے ےآ پک زایپ دنک ین 
کرتشم شآ ورن ا کے نے اد نے 
بے ایی کلام س جوا دیاجی فان عرو چاروے اورنہ ى یکہات» اورٹش نے 
ہار سے او پرخراب تاز ل ہو نے کے توف سے انیل رات دار کیم د کرد ہرک 
ال هکم اس + هک ج با تکہتا ےو تمو کی ہو کی 

لا مقر رح لش فر ہے ہیں :”جب متیر نعل زبان اورقصاحت ویلاضت 

یس اپنے یک مربدومتقام کے باو جوداس با ت کا اعترا فک رل کرای ن ےق رن جیما کلام 
کبھی ہیں سناتو اس قول عل ہہ اورال کے ماہ رصن فصاحت اورکلا مکی تام اجناں 
وا لوان ی تادا کلا لرکو کی باق رآ نکااق رارے۔ 
از رآ نکی دضری وج : درک وج وه نما رل اسالیب کےخلاف الک ایک 
نادراسلوب چ» چنا چ رآن پاک ا یره ۸ اس ان جا 
ان وال اورم چیا دشر سر رون اءاورال شو ا وصانت 
تھی جوقرآن میں موجوطرز یس یبھی انسان سکم سوساج 
کہ نے اس کے ذز رےے سے ینغ د ات این فصي موز ہسرداران بلغا کے مس 
اور لن ا پاب ش نکی ذبا نو ںکوگو کرد یا و مانریش ہواٛٹس می تیاس 
میران مدکی اورفو قیت ےہر ا ور ایی وم میں ہوا نکی یں اس 
جہت یں برت کہ ےآ ۱[ 

. علا شل رت الثر را ے ن ماك ششک نوول قرآن ہے دوس 
کر ھارتے اں دورتک ۶نی زان رون وٹزولء ہحت NE‏ وور اور 
هریت و بدو یت کلف ادوارکنذرے ہیں سکن رآن ان تام ادوا رش اہ رکه 
تام اپ ےآسمان سے س بات اکا درو پرا یحی راعلا وت ون تکافیشا کرت 
فصاحت وتیل بیا یکو ہا اء اورت ور ول یک یجن لول سےاہاہا ہل ہا جار ا اوروه ی یکی 
ری هت دک سے ات ایا کم قاس تقوم ی ین اتتا 


205 


اللمعان ارو التبیان 
اتر کی صا کول رتو ری او راز TET‏ 
و لار ہاے ج ل لو اجه جْتَمَعَت الال وا َل آن وا بل هلا 
لْراملاینون: یئل و اهم 5 ملِبَعْض که (الاسراء (Mm:‏ 
رم ” آپ فر دمب کہاگ تام اسان اور جنات ال بات کے لے شع . 
واو کہ السا ثرآن بنا لا وی تب کی ایا ف اور ارچ ایک 
وو مرن ےکایدوگا یلاوس ت 
اسلو ب رآ نکی خصوصیات ام اسالیب رن کے فا ق رآ نکر ےن 
۲ ادراسلو بک چن تصوصیات ہیں ,کم ال ذیل بیس امالا درک ے یں ٠:‏ 
۱ یی تصوصیت::ق رآ ناو ان جواس کے صونی نام اورغوی جال سابل ۱ 
دکھا تا ے۔ 
ووسر ی تصوصیست :قآ کار رمام ناص کیل نکر ری تام لوک ال ینت 
اورشان وش وک تکااد راک واحا لک ے ہیں 
تیسری خصوصیت :ق رآ نکل وز دونو لک مت نکرنا چائ رآ نل ودل 
وولوں ےتا طب ٢وا‏ ے اورت و ہما ل ایک سات یراج 
ھی نصوصیت : کا و اخ 
ڈ سلا ہواا ای ےک ڑا ے جوکقول _ یور مویکو وتا 
۳ او تصوصیرت ۳ رن رارکت ارت ادراق کلام تفن وه 
ایک مت کلف الفاظ اورنلف طریقول سے لاتا سچه» اور وه ام کے تام ره 
اورممتازہہو کے ہیں - 
چم خضوصیرت :رآ نک ایل فصل رونو ںی کرنا۔ 
ماو ش تصوصییت :اف مقر اتور سات تیک کی لکرنا۔ 
اسلو ب ق رآ کی خصوصیات پرچنرودل لال :ینہ روزگار جد الادب ار 
یراق رص اف ماتے ہیں : 
۱ ١۔اگ‏ رآ پ ق رآنی الفاظوکوان ےم و کیب میں ور سے یھو ےت وآ پکومعلوم 


اللمعان مر اردوالتبیان ۱ 26 
وک رال کی صرف اورلفوی کات فصا حت کے اند رون اور کیب 
ری »اور رآپ ان رک تک تو فکیآوازوں کےساتھ اون اون موی ان 
حروفکےہمآیگ پاوگ, ہا تن کیب کار کل ہو ےش لک با ده 
رب رگا ےاورشمز این جب اک رک وق آن میں استعما لکیا مگ ات وآپ اس 
7 

شال کے طور اک E E‏ ور “اب ہے سو بیہاں نون اورزال 
ها یک ساتھ E‏ 7 یل ہے ناس رف می ںکھردارا ہن 
تک نان کی E‏ آن می ال تال کے اس ارشادیش ال کے 
س ج ول ق ادر ھم بطش تتا فتماروا بالنزّر (القمر: ۳ 

چ اور( ی عذاب آ نے کے) لوط نے ان کو لش وا رو سے 

زرا باق ول نے اس ڈرانے میس هس پیا کے 

با آپ ال کیب مس رین اورقوب سوتل» پراش مال 
رمز یدورو رک »روف کے مواخ کاعہ ین » مرو فکی کار تکوقوت سامح 
هار یکر »اور ”قد“ کل وال اور "تنل طاء س تلقل کو ae‏ 
ریہ ادراش تھا لی کے فر مان :بطق تتا ماروا الف 4 ی طاء سے بعدرے 
یکرواونگ بے اعرد ےآ نے والی ات می ورک ری رو سا 
موجود اک یق اگل ال کے احرف باس را ماما 
پیا کی رح ےج کاس مم نی ہوکی ہے(جوکھان کول بز ہناد یک ے )- 

۴ق ران یل ایک اتی وتالفظ سے جوک رآن یل موجود برلفظ سے ز یادہنامانیں 
ہے اوروہ سوا ےش رن رواخ اسف اک گام می ھی ںا رف 
تال کے اشاد: يك رذاوشہۂ یری4 می سک طض یری( ےن انیس بوذ 
a‏ رازبا کات 
کر متام ال کےعلا کی دوسرے اف کمن سب یں پا یں سے وس لے 
کیک ہورت شل ےوہ مور م ےا لک مرآ یت یرم رای ے سو کہ بطور 


اللمعان شن اررو التیان . ٠‏ 267 
اصل ول کے1 با سر شرا ر خر کی وید ن ین سے کم ہے 
ون زوا دک تی سک باس می نان 2205 
چگ ابو ے فرشتوں اوریتو لآواشرگی ال قر ارد یا !جب وہ خووٹ کیو ںکوزندہ 
` درگورگرد سے سے راید تی نےفرمایا: ۱ 
کم ال ۷۳ انی یلک اذا سمه ضیْزی4 (النجم: ۲۱۲۲) 
بات ی ( )دس دراه ٹیا اس مات ین سے 
ی قم ہوئی“_ 

ہس E‏ ےک لوال نے 
تشر فرای یاک پر ےکا لاجمل ای ی صورت روشک ےکہ 
یت اد اود ریت مس 
ہے اور تصو ےش بلاضت کی مہ کل خاس طور پر اس نامانوس لفظ کی صورت 
نمی کہا نےآیت کےآ خر متام ی 

٣٣‏ د یزد کلام عم مک انسان کے کی بات ہی رد شی 
جوولال تک ری ےکم رن کاریکری 0ی07 بالا ایک ے ہے 
و اکہاسے ایک می بط رد عا هیا »وهی سک پش اه ہی ںکہ دہ 
رآ ن سخ تی استعال بو ہیں ءان ےر رکا می "هکل اجب ات 
مغرو ضرورت مج قوق رآن نے ال صلی فک مرا اسقعالکي جج اک ال“ کا 
فد کہ ی ہی آ یا »لاش تھا کاارشاد چ: نع اک تن گری لول 
اباب (الزمر: ٠۱‏ ) "ای (موض) میں ال ل لك بی عبرت ہے“ ۔اورف مان 
اھ ولیل گر اولوال لباب (ابزا ہج : ۵۲ در کہا نم حت ل 
کرس“ ۔اوراک ط رع کے دن رارشیادا تکیت کان میس یمفررداستعا لش مدا بل 
مفردکی چ اٹ تیال کے اس فر مان ”رات + اط :طن نفيك ن رر 
من کاله قآ آلقی المع وڈ کا دم ”اس شس راٹس کے لے 
ا ا 


اللمعان شرارددالتبیان 268 
طرف )کان ی اتام _ 

اور برال وچہ سے لفظ با شرت داش کی عفت ےۓ موصو ہے اورپ 
را ا و ی 0 

ا 

ایر لف لوب ان ع تال مودک ال 
8ی a‏ کے سل ہنادۓ والا وه طموروتزاکت. اشا ف ون اسب 
موجو زنس جیباکرلفز "کوب کل سے اک رفظ الا رجا“ سےءاس اف 
یش نس ہو کی دچ ےت رن نے ا ی اتتا کیا سب ری جرک الو جا 
“ن جاب ےءاورجی اک آ پوھد ےیک رآن 2 میں نوشن اک سکن 

اور ال کے کس لیا "1 ص ے وتک وہ رن مش دس ا 
واردواب»۳2 اق ملاسان با مجنپ الم کی ضزورت ۳ 
تواسے راز فصاحت کرو ےے وال اور لکن و مال سے دو درد بخ وال‌صدرت ۱ 
ےا لکر ای نا سا ایک گرا کے سا مر ہکردہ ہا ہے: 
اله اق عَلَق مزع موت ومن الْأازض لهي یل الائز یدبع 
(الطلاق: ۷) اشا وت مان پیداگئ اوران کی رز خن 
(اور)ان سب میں( اتی کے )امازل ہوتے رت ہیں“ ۴ 

۲- اوراشتعال کے اس فان شس ٹوک یبد (فازسلعا یم الوقان 


وراد ْمَل وَالضْمَادِع للم ايت مسب (الأعراف: ۳۳" رم 
ے ان پرطوفا ن چا وب یچ وت 
سے تھے ۔ 


چنا نبا نام یجن یس نیف ت رین الفاظ: کی ا 
ہںء اوران س تل رن الفاظ :”القمل اور الضفاد ع“ »ابر الطوفا ن “قم 
کیا وگ ال شل دو روف 7 رک گے ہیں کزان ال کشت سے الول 
ما بر را کوذکرکیاءای طرح اس میش بھی ایک دچ» راس کے 


اللمعان شاد و التبيان _ ۱ 29 
بعردومشد ولفظ لا ےن میں ے پہلاز بان پاد سان اورغ کی وچ ےآواز ٹل 


زیادہ دورہےء رش لفظ ”الم لا یاگیاجوکہ پا چون مل سب ے زیادہ کر 
اور وف ا کے ہے کہز بان ال کے اوک نے بی زک دص 
ژو تم اس رادرس کے ذر یج ےت کیب ایال ہوا جاۓے ‏ آپ 
نپا وی بھی تب رب کرد یکن اس متام کے لاو شام ی 
کے اور پل نر یی یا تا تر سےلغخزش غور پک بق کس ےک ارپا 

تاد ےک کآپ‌ال ےن یکو انبم ۳ 

اک سے اد ےسا سے یہ بات ها وبا کت رآ نکر سوبس 
فد هک انا نکن کر وہ پل تال وسلتا رانا نکی بش کاس میں ل 
ہو آوو ہا ریرحت سکاکوگی اسلوب اا ل عرب کے اسالیب» یا کے بحر سے 
ال زان گآسف دول کے اسالیب کے مشا وت :وا وو کان من ع عبر الله 
لَوَجَُوْافِيْواعْیِلانًا ییا (النساء: (Ar:‏ 

تر 9 ” اوراگر اہ کے سواک اورل طرف سے ہوتاتواس بل رت 


ناوت کے 2 
لے دا اھ وک E‏ 
اي بات نہ ہولی آووہ ال سے لاجواب نہ ہوتے اورت ی خاموش ر ےے هکیرل 
نہوں نے کلام کی ایک اک فورم کو وی ج کوان کی تس اراس رورت 
یں اورا نیودت کےذر بج ق رآ اموا ر کرن کی ےکن مرک تی ؟ 
علامہ زرا رح اللہ اسلوب ق رآ نکی خصوصیات کے بارے کل بح کر ے 
ہد ئ ےر ماتے یں 
”نف رآ نکاایک لکش اوران ے جواں ام و ال مل 
چکتاےء قرآن کے صول ظام سے مارگ مراد رآآن کاایقی کات 
وات ا وخنات اورا تصالات وگنات ٹیل ایا یب ارتباط او رم ن 
۳ کی ے2 یت ا ناک روید بالیٰ ج 


اللمعان شرراردوالتبیان 270 

شرآ کےلفوکی مال سے مارک مرادوه بی بکیفیت ہے جس کے د یع رن 
موف کے بیان ارام تک وگول تلا اتیب بل سب ے ع ہت تیب میس : 
متازمقام را ہے ہی لغوی سن وبمال از چون تک کچ گیاے بای طور یرک 
اکر رآن میں لوگوں کلام ٹس ےکوی چیز وال ہوجا ےتا یکاعزہ ال کے بصن 
والوں مد 77 یت یی 13 سے والول اون ۳ 
ایت رہوجا ےکا۔ 

ال‌لفری بعال اورصول فظام کے کاک E‏ اک اگ 
باس از دمل ای ںتو دوسرے لو ت جات ق رآ یه مقبوط ار 
»اک یل ہ کرلغوی جمال درو ظا مکی شان سی کرو او ترچ 
ان و ال ت رآ نکر مکی طرف اتال روج کے داعیہ 
کوا ھار سے ہیں اورا یکی بناء پردہ بھی کی تلو کی ز پا نوں اوران کےکانوں پر با 
رےگاء اوروہ لوگوں کے درمیا ن ای ذات او رتصوصیات سے با جات کا لہ اکوئی 
ایک اس متیر تید کی جات سکرسکتا یرتا یکاارشادے: :ان 
رلا الل گر و ۇن (ا مجر: :( 
ey‏ مس 1ا ونا زل کیا سے اورم اس کےحافظ ہیں“ 
اور رآ نک رکم کے اسلو بک تصوصیات بیس سے یگ ےک وول ورل دونوں 

کو پیک وتا ط بک رتا ے۔ اورت وا لاک اکتا ےآ پق رآ نکی ماب 
گی ںکہ جب رن وڈ ین کے ماسح روش ل تی قائمکرن ےکک ری 
یش ہوا سے اتد لا لکول جواب اور یم ہگن ول ےن مس واردلول کے زر 

وو لوب نار و ںویکین کے وا ےط ےے ے با نکرتا ےہ 
اشد تیال سور نصلت سے ہیں :وون وه اك توی اکر تھا شاا 
آلا لیا الماء امه سور 3 لزق 24 بي لو انه كَل 3و 
نژ( السجرة :۳ 


اللمعان شر ‌اردہ التبیان 271 
رج او رتم ال ی (قدرت وتوجیر) ک نثاثوں ےن ےکم 
اے فخاطب ) توز م۲ کو یمتا کرد دبائی ڑگ ے برجب چم اس پر پل 
برسماتے ا ںآوو ہا بل چاو روج( ال سے ابت مواک شس نے ال 
ز شی کو زنر وکرو یا وی موو لوزن هرد هک و ہر چپ دقاددس ی 
آپ سور٤‏ ت مم اش تی کے فرما نکی طرف دحیا نکر یک فرماتے ہیں : 
تلا من الشماء ماه مرا قاتا په جلب وَعتٍ لصي وَالَعُل 
یف لھا لغ تین زرا باه وآغییتا یہ َلنَةٌ ياء گلیك ‏ 
اروق ہہت 
تمہ :* اودم ےآ ان سے بکت ( یع وال ) پا »سای کرای سے 
ایت نما اک رکف او ریوک رتشن کے تقوب 
گوند ے ہوۓ ہوتے ہیںہ بندوں کے رزق دےۓ کے کے اورم 2 7 
(باش) کے زر ےچ سے مرده زک کو ز تد وکیا( بی ) ای شس زین رتم 
نا موک“ _ ۱ 
ان بیت رہ اسلوب میں غو رک ہی جوایک بی وفت س ق لکوقائ لکرتااورجذ ہہ 
کین چیا جا ہے ان مش ی ورن چو وزی کے عقر موں کے لے منز ل ن 
ہے اس لے هلآ یت مس ال تھا یکاارشادے :طان الزی أحیامالئی البوق4 
اورآخریآیت سان لاک رك المفروجح نی رو سے مراوتش روف ر کے ےتور 
سے نکیا سے کیا ی کرای ن اور بردست اتیاز سے جوانسا نگل وول دوفو ںکوایک ۱ 
اتان گے نےکر 0 00 91۳ ء7 ے!! 
رآ پ رآ نکی ط رفاظ کر یک جب وشا لوست لئ کا قصہ ان تاه 
ال کے فی ل له بروست نار لاتا سے او رال کے کن نیش وہ کرک شرا فت 
اورامام کو ضبوٹی سے تھا سے کے ضروری ہون ےکی رو دلا سے جرد یتاےء ال 
رین قصہ مه سول میں سے ای تن مل اشتعال ارشاوفرا2 یں 9و را وَدنْه 
۔ ان مو بَیوتا عن تیه وت اواب وال یت لک کال ماه ال 


اللمعان شرا ردوالتبیان 272 
له اخسن مَعُوائ .لَه لايل لوزن (یوسف: ۱۲) 
رچ اوریسعورت کے کصریں اوسف ر سے ےوہ ان ے اپنامطلب 
کر ےکا نک یسلا کی اورسار ےددوازے یٹک دے او رسکی ےگ یکر 
آ اقم ی سک ہویںء تسف بای ار ی گناہ ہے ) اللہ اے 
(دوسرے ) دہ یامرس ےکہ هک بر رگا فراموشول 
کوفاا یوار 
وآ پا سآ یت ںورک یک رای کےمین اسبا بکا باکر کے نین دوای 
کے سا توکس رح ایبا موز نکیانگیاے جرا ینکر وورشیط ف ر سے ان پش 
بیان کے سات خت مالک فھو یش یکرت ہےء اوران دوفو ںکوعقلی منصف کے سا نے 
ترازو کے وولو لپ ول میں رکود تا ے؟! ۱ ۱ 
ای رح آپ بے رآ نکش ری اورعزیدایشروب با یں کے جوففول پر 
ال علیہ کے ماما ییا ری فی لیت آسا نکردیناسب» اورقلو کوچ بای توجبات کے 
ذسیهآرام با تا ہے سوآپ یی انان کلام اس طرر پا گے ہیں ل» 
رن انا ن کاکلام اکرش ل کان اد سکاتوب تس جی کہم 
رف عام + يا ےکہ اناف اسلوبو ںکی دوسمیں ہیں تی ری مک + یف اسلوب 
ی ے اردور سوب او“ سے اپ اعم کون ضرا تکواد فی الو ب جملا ہیں 
گلا ءاورادوبپ کے چاخ وال یکی لوب نیگن ۲1ء اورای طز آپ علاء 
اورتقین کلام بھی وہتن راہ اور خی بن لا کے جودولو ںکو بلاج ےاوردی 
تقو ںاو کت یس سرپ واونشعراء کلام بھی ہکم ورک اور ہا ۶ 
ین رتسگ جونہ اوک روز اف راہ مکراے اور کت لکوم کرت یقن اس 
تصوصت کلام ی ا وا کے درمیا ن منفردمتقام رتا ے ءکیونکہ وه ال قادرزا کا 
ال رو ے ےے ایک مات هرک عالت فال سکن :هت راک له رت 
لیب (الغافر:") 


2 مرن سوعال‌شان انش جوسارے چہا لک پروردگارے'۔ 


اللمعان شرارده التبيان " 273 
از رآن کی ری وڈ از وچا ت میس سے تیر وج ایا رین 
اخفاراوری مول فصاحت ے وی انان سے بس نزن نے ال کااحاط 
کر کے یا سکیل 0 و و بشری طات اورانال ثدرت ے باوراء 
چرح» ایک یال ان والادیبائی ج ب رآ سا تورپ الما مین ساره 
۱ ربز وھا »اور یرال مقر کاب کے ن اورا تن کے واول یں ا لک ثرا ت 
ناء اوران جا ا ْ واہول کے احا یکی نز کت اورشتورکی لطاف تک یبھی ول ہے_ 
ایک ابر قر :قول ے هگا مرا کقرضاشایک دن باہر 3 
تو ایک نماک یاس دای ( یا اچ پالشت تن میات ہک )رل سے ماقات مول اوراسے 
شع کے ببخرین مصرمے پڑت ہو ستاويم اشعار ہہت پئ دآ سے اورا کے مال 
اسلوب :سن بیان اورقصادت الفاظ ےآپ کے دل وجا ن ترت راک ره کے چاه 
ای کہا را زاس وہای خوب ترک فصاحت ہے !تو اس گی نے جواب 
دیا: تیراتا ی »و !کیا ایز وکل کے اس فر مان کے اعدا ے فصاحت شا رکیا اکتا ے: 
ط(واَؤعیتا ال انم موی آن آزضونه. قدا فی عَلَيْهِ ویو في لب وَل 
ان ولا .زر وه لیب او من ری (لقصص:») 

چم :اور( جب موی پی رامو ےتو) ہم نے مو کی وال هلا مک اکت ان 
کودوده پلا یمرج ب ت مکوا نکی سبت (جاسوسوں کے بو کا) اند یش 
ہو( ےخوف وخ )ا اودر یا( کل یش ڈلد بتاورو( غر ے )ار بش 
کرنااورتہ(مفار تپ مک رن( وتک ) نمض رورا قباس پا ی نی وایل 
دی اور( اوقت پر )اون ہناد یں گے 

پر ای نے گی با کہ ال آییت نے انش اتضار ایا وجودا یش 


۱ ال کےیشمرسےزیادہ ال سم داد راک نے جرت میں ڈالاکہ میک رگ ےمان 
ال عم و مکاداتن »بت دع ہے باق ر سے وہ اشعا رشن یں و هگا ری یتو دہ ا کي 
کلام ھادے کچ 


اللمعان شش اردوالتبیان 274 
متیر الله لدبي كله مل الْقزَالِ اعماً في دلّه 


2 


ملت الساناً بعر جلّه. واتصف الیل ول . 


صله 
تر جمہ: نی الش سے اپنے ہرکناءکی معا باق ہوں ج کےا سے ناو ےس 
رن کے نم ونازک کی رب تھا کہ ی نے ایک ایی ےش کا پوس کہ ای 
کسام تھا اد رآ رگ رات یتک اور نے نماز تہ ڑگ“ _ ۱ 
اس یذ یک یتو ج رآن شی موجود بلاغت وفصاحت »اور خضارواگازک 
ص نکی طرف میزو لک ال چنا ن ےآ یت میرک ددآمرد ںکو دک( رضعیه اور: 
طالقيہ ف الی ںےہ یں دڈی لک کہ طز تھا4 ام طزاقمرن4 یں دخروں 
کوک اوح نا4 اور خف( ہیںء اوردوبشا رتو ں کرک :انا راقو اليك )۹ 
ا نل(جاعلوهمن المرسلین» تلا چةا کدی 
کل بثارتحضرت موی کوب وال« یرف سلامت اور از ت لوٹ ے 
1 ہے دوسری بثارت ہے س جکراش تال ای کنر یب رسول اوررا جیار تیگ الثر 
آ پ کا عا ئ ونا ر پتو رکم ی کہا دیہان گی نے ال اختضاراورااز کےراڑوں 
یس سے ایک را زکیے ار فطر تک ہناء پر پالیاء درا لق رآ ن کے بییرول می ے 
وه یر جان لا سک ووی نہ جا ے سے ہآ وگو ا ںآ ی تکولل ومرجان( رے 
جارات )کرک ٹن زد گیا ے اپا ای کے موی ای تو ازن کے سا تج ہیں۔ 
ب۔ مروی س کر اور میم ناز انشاء هداز اکن 1 نے ایک عیب ہف رکآن 
کا مق لکن کااراد هي :وال نے ایک را تا یکا مہ ارشا د مارک تلاو کر ے 
ہے :وق ی یار بل ماءلي ویسهاء اقل وغیش الْمَاء و فجن الائز 
واشکوث قل يازوم الشلیای4(هود: ۰ 
تج اور ہوک اکر اے زین اپنا انی نگل جاورا ےآسمان !تم اور ان 
لح ٹگیاورقی حم +واو رش جودیی پر ری او کرد گیا کافرلوگ مت 
اور ۔ ۱ 


انآ تکا روا او رن کات میں ما رض کے حل نکن شور 


ps 


اللمعان شعادد التبیان 275 
کیاتھا دوہ پھاڑ ڈانےءاو رک اک خد اسم ! ا اتان کے سک ا جات کن لکرده‌ا کی 
کل سس اود کدی ھکرد ادرا ی کاظھارکرتے ہو ئے اپنے 
آپ ےش رم سو ںکرنے گا۔ ۱ 
اورا ی طرع ایک دم اد یب ق رآ نکی ایک سورت کے تاب کاسو چنے کے 
بعداپن عزم سے رک گے یوگول رن تن سک راز الما ۱ 
رپ قرآن کے اسلوب بل فصاحت واختقمارکی رفن یی ء او رای 
کامواز یی بر لان ے ہیا کر دہ سب ے ین اسلوب کے سا تج ھکیس ء اور دہ ای 
اول کے ہو ۓ والوں میں ے سب تا سید الم رین مر ین عرش( 
کا اسلوب ےکی فصاحت و بلاغ تکااختراف اس کے نوا ؤل ے پیل ال کے 
نون کیابثرآن اورعر یت وی کے درمیان اگ رآپ مواز: ن ہک ںتوآ پآسان 
وشن کے ان فر نک ط رح ز بروست فرق اود بون بجی پا کل گے هرآ نکی بافت» ۱ 
تا نرتسن کے ال در اوراز ان لام فا 
آپ چن اورال س 07 جانے وا یلمتوں بر کے وصف ی( 
آحضرت تکاس ارشا دی ورک ری :فیهامالاعین رأث ولا مث ولا 
حطر على لب 0 ۴ ان ین دبس جو تی کر کا کا 

ساب اود سی انسان کےدل 1 ۳ 

۱ آپ ان ان درا کے باوجودان کے اواب جن تک ینتوں کے بیان 
می تال ان فراشن کے درمیان ت لک :وھجا ما ویو الانڈش 
ون ال عم (الزخرف: ائ( ”اورو ال دہ زیرگ اون 

ےآ عکھو ںکولزت ہو خر مان لی ے: :قلا َعم تفش ما آغفی هم نکر 
آغی(السجدة: ») سی خش کنر بو ریگ ترک کاسامان اه 
بل وت 

چام ہے ارشادیہ وزان مم زیادہ شیک کیپ میس خن ترینء لفظ نید 
می رت ادرف مالک ! 


اللمعان غ اردوالتبیان ۱ 276 
۱ او رپ ان نراشن کے درمیا نکی موا ز گر اگ ہآفحضرت لم کاارغادے: 
" کلکم‌راع وکلکممسوول عن‌رعیته,الرجل‌راعفیبیته‌مسوول عن‌رعیته "2 
میں سے ہرایگ تیان سے اور پرایک سالگ ریت ے پادس ل لو بچھاجاۓے 
کل ات ےکھ رک بان سے اودال سے اک ریت کے بارے میں ابا 
-اورانشرتعا یکاارشاد :فوك لمکم امین کا او عون 
(الحجر: ۲,۳) ۱ 

7ج سراپ ودرگ کم !ہم ان سب سے ان کے امال کی 

روز باز پر کر ی گا“ ۱ 
ار ران بک ے: تشن اليب اڑل لیم ول 
اهر سَلیق4 (العراف: 0 
رمرم ان لوگیں ےضرور تین کے جن کے پاس جرک کے 
اورم مرول سض ور لس _ ۱ 

اک طرں اگ رآپ یکرم یٹ کے تام اقوال اور رآ نک رم کے درمیان تقایل 
رق کپ وس گ کرو لکاکلام اتی بلاغت کے پاوجودا انیت کے 
پلدحیشیت کلام کے دائرے یل تاکن کلام ام کے مشا ہکوئی امیس 
و کو کروم انان اکم ہے ءآپ ا یکلا مکی ط ر فار ی یک وہ اق : 
مق دآ یات ل سے ای کفآیت کے حص ںکز شت اقوام کے احوال من وک ین 
کے انام اوران ینم مر کے یہ می ان رتا زل ہے دانے ماد شات ومصا مب » 
رش ٹیش عدر سے تتپاوزکرنے کے بعدرانع سب سے اام ا یک یکیفیت اوران مل 
ےک ایک کےکھی باق ند سکیا نکد بے الدب الح رت فر ماتے ہیں :این 
ئن اَزمَلْتا عَلَيْو عامجا یمن عون لسَیعة. ینبم من خَسفتابه 
لوزش. وم ن آغرفتا. وم کان الله مهم ولکن ۱26 آلفتهم 
یعون العدکبوت:۰) ۱ ۱ 
ترجہ :ا سوان میں ےحضوں رلو ہم دم وای اوران س رش 


# 


اللمعان ن اردہ التبيان ۱ ۱ 77 
کوہولزاکل آوازے دہایااوران س .7 ونم نے زس میں 
رعشاد یا اوران م سکوہم نے ( پان میس ) ڈبود ی راد تال یبا 
ان مر ان ی ارگ( شارت گر سک لاه لک کیا ار 2 - 

علا می رتاش اب ےق لکرتے ہو فرماتے ہیں : اموب 
اورتصاحت لول وجوبات رورت بللہ ہر٦‏ بب تکا ی نف » او رش ت گے 
جوم سے بر یت وسور کا مور انان تا مکلامون تمتاز جا جا ہے اور ای 
خی وا موق چاو دال ساسا رورت ول وج پات بل سے کی 
اوروجہ کے ملا ۓ اران نین وجوہ کے مات رمتا ز ری سے“ وه سو رو جوتن موف 
آات پل قرآن میں سب سل سوت ہے ہلان کی دوبک ترون 


سے 


ہے: 
بر 2 اس یکشادگی دوسحت اوراش کے برتول ٤‏ )کرت کے 
ی سب او یرال بات پردال ےک شرت سک مان ولولگ 
تاوتمام کوک 

ےت شش رن 

کے وقت ال ول ددال قاتا الک موال الا لا کگردیااورا یکی 
22 سل 
ایز رآ نکی چوک وج هل ای نون سا زک: زقرآ نکی وتات میس 
ایک ابی دج کائل ال تاتون سازک ہے جوقدیم وجد یرش انسان کے بال محروف 
ہرمصنوگی وا ون سازی ےل ے“ بل قآ نکم و ہاب سے میں نے عنام کے 
اصول» عبادات کے اجام فضا وآداب کے قواغلن» اوراقضادی» یای» ری 
اورمعاشری تاون‌سازی کے ضواب اکووضاحت سے بیا نکیا ے اوروی سے میں ت : 
مان اوس واک کي رتیت ناریا اصول و فجن 
۱ کا ج ٹیسو میں ص دک کے اصلاںح پگ هن وراپییث ر ہے ہیں .گی پال وه‌صاوات» 
زادگ اورالصاف پنری ج ےج و ڈور یی تی جمہور ی تکانام د سے ژںء 


اللمعان شر اردوالتبیان 278 
اورا کے علاوه مرش ری توا ین بناۓ اورا یی تاتون ساز ی فر ای سکی جا بآ 
جذ یرت روان دوال سب - ۱ ۱ 

عتا تدش رآ نکرمم از 7 اورروگ کقی ہکا دای سح ںکامدار الہ 

پرایمان» یل کے تام ایام و رلک تر ات ورتا مآسا کنابول پرایمان لاناے 
٤ای‏ پا تکاطاراشتعال کے افر ان س بود با :طامی لش ولاز له 
مهو نون کل امن بان وگه و که وله (لبقرة:۲۰۰) 

ت ج اتاد ر کی ہیں رول ( ا )ای چ وان کے باس ان رب 
گیطرف ےنا لن اور تی ن بی سب کےسبعقیدہ ر کت ہیں الد 
ا اور شون ضا از را کی اون کے سا تح او رال کے 
رو کے ات کہم ال مرگرس 

ق رن نے ائ ل کناب ہو وو نصا ری کوایک | ہے سف وک ےک طرف بلا یاششس ٹش 

7 - فان با بل 1 
بَیْنَکا بكم آلا تعب إلا الله ولا رک به میا ولا یل بَغضتا بَعضا 
این کون نله ان توا موی مشمون» رال عمران: *) 
7ج :” آپ فاد ہکا تا لکاب! 27ایک اسک با تک طرف جوک 
با ےلو ہار ےوران ( سم ہہونے میں ) برا بر ہے ےک شتا کے 
تم کی اور عبات کر ی شتا سات یکو ریک ترا او ہم 
س ل دوم ےکور درا رد غراتعال کوگمو زک کرو ولوگ 
( 7ت سے )١را‏ کر یتوم لو کہ دوک تم ( ار ے )اس ( اقرا )ےار 
ماس وس یں ۔ 
اورگپادات ینف رآ نک رم اپ مرن اور ند عپا دا لیک ب انا زءروڑہ 
کو اورقمام کی اوراطاعت کےکا مو کوش روع قر ارد یا ات اسلام یل صرف 
ان بأور؟ الصرر اصول وارکان بل ار ا بک و وتوہ رب لائیء برکا رش اور مرطاعت 
کوثال سے ای لے علما کرام نے رال لاو کے انان اللہ تما ی کی رضاکی 


¢ 


اللمعان مارد التبیان ۱ 279 
اط کر سے ادت تر اد دیا ہے مزع فر مائے یی : ”ان النية الصالحة تقلب العادة 
الى العبادة“_ ا ü‏ عاو توعیادت بناد قی کے چا چہ جب انا کول کام 
رتا ہے او رتام سے کے او ره ائل وعیال پر ی کر نے کے ارادہ ےا ہے 28 
پیش :اتا را ےہ اورالدتھاٹ یک اطاعت 7 رت وقدر تک ےکی ما ۳ ییا » 
وکا یئ رر یڈاب پائےگا۔ 

۱ ال باب میں کل نکر مق کاارشادے: ی 
فاط شر کر ےگا ال پر تھے اج ےگا ہا لک کک ا لق ی اج ےگا توا 
موی کے مرش کے یر" : بت کت کافرمان ہے: 2 تجہارے یوک کے ۷ 
۱ جانے تک ص ق ےکا ہکا رف کیا ارول اٹہ !ہم ٹس سکول ایی موت 
کل کل کے لے ای اکر سے اورا میں ال کے ے2۱ ہے؟ آپ ماك نےف رما اکلہ 
تا سے !اکر و وتا مر لے وت را یکر کیا ناه نوت ؟ تو ای طرح جب‌ال 
نے طا لطر بیدا پتاا ےتا ےاج ےک 

جب م عباداتمفروضہ کے اصول کرک فا ہڈا کے ہی ںو ہم ہے بات بات ہیں 
کہاسلام نے عبادات شس وسعت وج کو اپنایاےہ اوراکیں کلف افواع مس ا 
کرد یا ےء زاعپادات ٹیس ےلو و ”ما یعادت ےج اک کو وصرقات :اوران 
س ےش ”ری عبادات“ انیا نمازوروڑہء اوران یں کے رو یں 
چووونوں ہلاو ں کب ہا ع ہیں ںای اور بر عا دات ہیی اک جہادفی نل الثر 
ہے جوکہ مال وجان دوفوں سے ہوتا ےہ ا تیم میں اسلا مایم متصداورعالی خان 
لت 0صپٰی , ی ی جر ے مانویں ہوا ےچ 
و نکاما تانق اک میدس زر وزج نون فا 

او جتزل قافون سا زک“ کے میدران ٹل تفآ نود یک رال نے سیون » 
یرال »سای اور ا تماد تو این ے اق اقا نو رما اوران و جن ککی 
مات میس کی موا لاک پت رین طر یت اور عادلا تہ ظا م رین تو اع رت رر کے 3 
چا تجرمعابلات کے باب سآن نے لوگوں کے اموا لوف لوطم یق س ےکھا ےکور ام 


اللمعان تر اردوالتبیان 280 


تراردیا: یھ ال امئوا لا تاو انواتکر بتکم نبا الا آن تكن 
ارعن تراض ینگ (النساء:۰٠)‏ 
تھے ام ایمان والو! آئیل میں ایک دوسرے کے ما نات طورپرمت 
کھا کارت ہوجو با؟ "ی رضامت ہی ے ہو ومضما ان 91 2 
اورسودا گر ے وق تگُواہوں کے قا مکرنے اورقرش ےکی کی دوت دی :زایا 
لش امَثوا ا ادا اينم بت بش ال آجل سی سل فَا کتبوهه وید جک 
باعل (لبقرة: 7 
تج اے ایبان والو! جب موا کرت للواوخا رک ایک ہجاوخ٣‏ ن تک 
( کی ) توا کرلک ول یاکرواورییضردر ےہار ےک لی میں (جی) کر کین 
وال(ووه) اف کا گی 
اورتتزیرالی مور تخل بھی قرآن نے وشرو فرمایاءاورمعاشرہ گی 
ات اورا کو انار و افطراب سے یاس اوداص تک زت رکیل اورال کے 
اموال وا عراش کی بقاء ولاق کی خاطرامت پرعدور کے فا و اجرا م کضروری 
قراردیا :کہ امت امک رکون او رخوشوال ز نگ اجان داشتی کےذر ی 
من یق نے 
7 آ نکم نے بڑے bs‏ جرائم اورفررویتاعت او ا 
خط ناک رکا ر ول سک تاق وضاحت سے بیان فر مایا »اور رای کب تررس زا میں 
ھی وی یں گن ید رها اورندجیگی ء اور تی ان کے ناف ذکر نے میں سی 
کرنا جانتڑےء اوراس کے علاوه گے جرائم کی مزاو ںکویسلران مام کی صوابد ید 
پیچوڑد یا ےک وہ سنت عر ہک رل جوم زا نع مناسب کےا سے ان جرا س ۱ 
ناف کہ سے اور نفاذا یط رتست وجو اسلا مکی رواب کرد ےکہ اس س 
لوگوں کے اتم خی رخوابی اور می اشر ہکواجتا ی مغاس داو رمتا م سے پا کر کااراده 
و اور ہا کک ان بڑے راک بات ہے شک کیل رآ ن رتاک مزا لفق ری 
یں آودہ ہے پا ہیں :فک ءزناء چوری»راه زی اودلوگو ںکی عزتول مت کے زر یج 


4 ۲ ¢ 


اللمعان مارد ه_التبیان ۱ 1 . 
رسترراڑی ار م ۱ 


اورشای رک رآ فور بای قافن سا زگ او راضمان 1 تال »ول بت انون سا زی ے 
درمیان تیک خوبصوررت مال دوشیم اب جے رآ نکرم ج اچاگ مفاسراور 
معاشری بیار یں کےعلا جع کیل اپنے اخ رکردہ انش اط رہل ےکی وج عربول 2 
ولول کےا ٹر روز اسب ا ب‌طورکرا ای ےم رفاو 7 )کرد یار رگنا ولوان کےولاوں ہے ` 
ریت | ی »شک نک ع رسای یتک بین امت ہناد یا چنا وه ۱ 
پچرگ دنا رال کر نے گے اورعا ماش کی قیادت وسیاد تا لآصیب ہوئی- 
زی خا ان سے چندرمنا س : رآ نکی دنراد نون از یک رانا قواخین 
اورز ی تظا حول رت یک مشالوں 2 سے ایک ال وی سے سس کا مق زیرگ 
ین مشاب ہکرت یں مار 2 وزج فوع میں شراعت اسلامیرک درق مون 
پرفو ق تک طرف ہکا سا هرن ے: 

-ز مان تریب نی شی ام شراب پپانری این ده برک طرح نا 
#واء او رکا میا لی نہ اکا یواست یمان طلر یق ہک یتو شی نصیب دوگ کے اسلام 
نے شراب کے ما ممرنے می اخقارکیا ے چنا چ شراب کے ز بروست نتصان کے 
اختقاد کے پاوجودا روا کی دو ارہ اجا ت د ینا پڑگی۔ 

٣‏ ینف مغ رپ یما کیک اورتصو ص ]ارا نے لا ی اجازت د ےدک جک اس سے 
پل دہ ان کے ہا لا کی تخلیما تک وج ےممنو شی ین ود کک اس می نتصان 
ویر کک گے اورا کی ول طلا کی قاآول‌سازیدلهرو 14 نا 

٣ورپ‏ کے اصلاب پندلوک تعردیویاں رکنےکی اماز تک ضرورت پاب 
آواز ی لت دک ر ہے یں ہا نک کک رد یریک نہ میا ےے وا ی کورتو لگ کتک وچ ے 
اتک ا پتی کو ری بھی ا کا مط ہک ری ہیں »لوگ یہ پر یال لود فی معا شر ے کل بہت 
یمیت او رھ رور حطر اک صورت اغتا رل 

"از دوا گی برکنوانیاں مرن اور ی ماش ر ے میس اناگ یکر بی رشکل اورہولنا ال 
مورت بل عا وی »هالک کہ ہرخا نان ابی خا نال کڑ یو ںکی جرا ارو نے 


اللمعان غر اردوالتبیان 2 ۱ 282 
سے ہا ہو اہےہ اورلومولود یڑ ے ہے ہو ئے ے بیو ںک یکشزت سے رسب ما 
۱ ہرگ رای ساز ورن دا ور دزن کے اوت الا سب ےے۔ 
۵- وم این ے اپے کک ی رکا ری پر خاتوں )اور ہا کے رس میں ۔ 
عورتوں کے سوا ص۹ رر ےس مرن ےکا ایک فیملاورق] ون مار یکا یں 
٦-فرااس‏ کے صدرنے ددسربی جن نیم میں فرا شک کلت کے ا گے ون 
مرول کے سا ئے اعلا نکر ے مو ےک اک لوم فراس 0292 
و زی تکا ل سب ا کک ی وات یس من یل ہونا اورضاد وتو ں ی یرل بے ۱ 
جا آکے بڑھناے“ 2 
2 ہے فو و ی E‏ 
ری نکی تر رکرو ومز اول کے اعلان کے پاوجودجرائم شش روز بروز اضاف ور پا اورای 
۱ کے پاوچووتم نو جوا لڑکوں اورلڑکیوں کے او اکر نے ء لوگوں کے مارڈا ےہ اورون ۔ 
دیهاژ ےگھروں رن اور بای دی مارکیٹوں 2 مس ڈاک ہڈا لے کب خو اک چرام 
کا ماد هرت ہیںء ما لک کک ہم دہش تگردگور یلا تون کے وجود کے پارے 
میں بھی سفق سح ہیں ج لول کےا اورلوگو ںکی سام کے خرن ری ہیں ء وضتی 
نا موں اوریشریی توا نکی تاک ی پرسب ہے بڑئی دمل »الب اسلام ان وامان: 
ر ہے او درم هپس پیل کی اٹ کرد یتا ہے کمن دا نے تن ےکا ہی 
خو بانب 
یہ عضر الیشرین توگ عضرا تیر الوه مشعد الاسان 
لست ثورا, بل أَنتَ تار و ظلع مذ جعلت الائسان کَالعبوانِ 
نبا ت عثول ضغاف . من نظام الشهیمن لدان 
ر مراشجار: نے دک و ا و 
ابو رو کیں» بک گ اور ےء جب قوذ انا نکوجانور ایا ہوا ےہ 
کہا یکیو رکقلو ںکا مرت بکیا ہوا ظا م جاوما کے ما نک او مان ذات کے 
E‏ 2 


283 ۱ ۱ اللمعان شر اردہ التبیان‎ ٠ 
: کی دوفرقی سے جو رمان اوراضالل قافو سا ےدمان اج چا‎ - 
۱ اکٹلول ال ےا واتف ؤں-‎ 
00 هک کو یں وج :نی بک ین ری بتانا‎ 
وا فی بکی ی خر تا “اور بات ا لق رآ ن سک انان کےکلام د‎ 
بوذ ےک اتلد شورف اض ا مان نے‎ 
کول رای بات شیر ل» اوداگر یم خلا کارنایا موتا یبا کر مان نکاخیا ل تھا‎ 
72 توان نی بک رو لک آ پ الم کی بتا یکی ت کےخلاف وات ہونے کے سیب ال‎ 
علامات ور ظاہ رجا تل اورصاڈیھوٹ ےان مالک یک با وا جب‎ 
- آپ لادتعا لی روت باند نے ےکوسوں دور ہیں‎ 
اف ر وین‎ 
کوک کب وا ا‎ 
2ھ ہوناتھاءاود تراش تھا کے اس ارشادیشل مو جودے : ازم لی‎ 
1 +0 نج ال الازض وف قن مب بخ علوی مب‎ 
یله مر من قَبل ون بل ومیل یر المُْمِنُوْنَ6 بضر اللود يضر‎ 
۵: او الْعَزيْژ ال یم 4 (الروم:‎ 
می مغلوب ہو گے ء اوروه اسۓے‎ CL ام روم ایک قرب‎ 
موب دست سے تشن مال مت مال ین سے‎ 
اترراتررت‌اب 1 اماو پ بھی تشر بیکوتھا اور کے کی اورا‎ ۱ 
۱ روز لدان ال کی ال لاد شش ہوں کے دوکر چا ے فال بکرو چا ے‎ 
- اورووژ بروست ے( اور )ریم سب‎ 
علومت اورا برا نک نٹ پرس کلمت کے درمیان ایک با مس سرا‎ 
ردمیوں ال بآ »ال رش کین بہت خو ہو اور نہوں مسلرانوں پر‎ 
طز نی گی اد رام اہی ےآ پگ کاب کت ہواورحیسائ کی الاب تم نے‎ 


اللمعان شر اردوالتبیان 284 
وکل کہ جار سے( بت پرست) با ہار ے( ابی یکتا ۳ کاب ) با وں فا بآ گے 
ہیںء اور برا اج بھی تم برضرورغلبہ مامیں بان نان نکی ای کان رت 
عمللت ے روو لگ زی مت کی کت نارود سے بی 
انآ یا تکامزول ہوا میا نو ںکوقن ےوسالوں کےدرمیا نک ری رت ٰ 
س رویزل کےابراتوں نال بآ ےکا ورگ سا عال کال بشارت کے وشت 
2 کیان پرغااب آ آیانا تال ین تم کول رو عم یوور بنجگوں ےے زور و 
لا کرد یا تھا یہاں ک کک ہنیس ےکک کے اترم کی کیان یی »نز ای طرئ 
) کتک ررض تی مرا آ خر نے کی طات آرت 
وید یڑ اد اتا 

تام جب بہت مبارکہ نازل بو یتوحخرت ار نے ایک مشر کی بین 
خلف ےلو سا لکی یدرت مر رک کے سواوننڈ لکش رط »ای ہے رکز رک د 2 الم 
اق ران ا کک زک ی ارا شی روصو کور مول اقدایرانی 

کس تکھاگئ ء اور ول رآ نکی کی کول پو ری موی ۔ ہوا قو ۹۲۴ تسو یرطاب 

٢ئ‏ ری میس جن یآ یاء حطر تاور یش رط جیت گے لیا نب م نے ( ای شرط 
کے نا جائز مو ےک وج سے ) حطر ابویک واا کوان اون ل کے صد ق ےکا اد با 

ا لآ یت ما رک شش ایک دوس کی نوی کسان ردمیوں کے الب 
آ نے کے ونت ںہ ردول ہوں کے :يمن ہے اون یکر 
لو" اورای رو لدان ایحا ی ال اراد لبون ره 5 ۱ 

۳ ص9 90+ ی باس کے اک ود ےکی را پنایروعدہگ ی 
کرک یا سلراتو ںاو پر رش ای وق کا میا یی بو جس وقت می ردق قاع ہت » 
ورای رع ال رکشل ے ایک نوت لنویل پوری بر 

علامہ ری رحاش قر ہا ہیں :” یرآیبت ان دانع ول می سے ایک نے 
جنبو تک کت اورت رآ کے ال ہک طرف سے ہو نے رد ہا یں یگ ییا م 
خیب یر ہے اش گس شبات 3 


9 


اللمعان شرن اردد التبیان 5 

ب۔ رسو لکریم اللہ اورا پ کے سا شی الہ مک ین ای ان نے 
وف ہو ےی پچ کول ۱ 

قول ےک ہنی اکم ل نے د ید یکی طرف کے ے سوه میس ایک 
تواب یھ اکآ پ او رآ پ سا ہکرس قوف وال ہہوے ہیں »اور جول نے سر 
مایا سے ارپا کر سے ہیں ءآپ مال نے خاب اپنے صا پرکوسنایاتووہ بت 
ول ہوۓ اور سر تک انا رکیاء اور ارم ها کر دہ سب اک سا یمک یش وال 
ول کے اور کے گ ےک ہے یک رسول ای و کاخواب اے۔ چنا تب و 
کا مورآ باتو کرات اتا مکی حالت شش عم بین ےک پڑے اورقر بای کے چانوروں 
کوک کی طرف پا نے گے ا نکاارادہ جن کال ھا بک ا نک مقص رع ر کرو اور قر فی 
1 وای یکن ترش ےے ایس روک لی هگر رول اش قم 20 رر 
اوران مکش هر نهک وجہ سے ش رین کے سا تح ما دای نہ ہو ےتوق ریب تھاہکہ ۱ 
یاو اور کین کے درمیان جیگ رمان سال کی شرا ش سے یی تھاکہ 
آپ اورا آپ سای اس سال مد نوا لوت مان اوا ضا یی دفل 
یں 19 ری وج سے ملق نوف ال یبا لوگو ںکوو رفا نے اوی وفع 
کانشانہ نا ےکا موتح لگیایہاںک کک رخ امنا شین کر اش نی للعت: ار ) بول 
ا ۵اش ام !م نے نو ایکا نہ با یکت اس اور بسح رام دس کے!! 

0001 مہا رک نازل موی جوتنوں من وعروں تن کہ میس دخول »من سک کی 
2 ارش سے ہے خو یکو لے 19 او چوو ا ےک قرش کی گول 
وی گن» اورصل یی پاسدارگا ت کنا شمو ر ومروف اء الٹہ نے اپناوعدہ 
ارو یا معا لہ انام پذ ی موااور بال رمو شن ان ينان کر 2 

شس رال ہوئے۔ ای کے ن رآ نکر باب مت طسو لڑھا 7 

پاتی. َكل المج اترام ان شاء الله اییثت٠‏ ُلِقِنیَ رُءوْسكة 
وَمُقَطِرِنْكَ٠‏ لا مافون. لھ تال ارت 
(لفتح:»۲) 


اللمعان مر اردوالتبیان 26 
چم هک اٹہ تا نے اپنے سو لاو خواب وگلا یا جومطااق وال 
سکم و کی ر رام ( سم یکلہ )یس انا اضر وراک این وامان سک 
ات ھک یت مکوئی رمتا وگ + او رکوئی اکتا موی دک طر کااند یش نہ 
مرگ بسانت یمکووہ اتی معلوم ہیں جو زوم کل چھراس سے پیل ایک را 
دےدگ'۔ ۱ ۱ 
- جنگ سے پیلد رآ نکر مکامشرکی نکی کاس تخت کو یکنا 
۱ یت نگوئی سور رل اس فر ان نی کے اندر ہے :ار لوت تنم 
مُنکوڑ میرم الځ ون ابر یلاع موعدم وَالمَاعَةُ ذف 


وم (القمر:»۰.۳) ۱ 
ت ج :الوگ می کیچ ہی کہ مار اک اعت ے جو خالمب نی رس ء 
قرب (ا نک )ہے ماع تکس ت کیا ورزر این کے بل 
ت مت ا نکا(اصل )وع رہ ے اورقا مت بڑکی سخت اور ناگوار یز ہے“ 
سور تکرش نازل ولج جهاددوسری رک یس شرو ہواتوان عالات س 
ککاتصو رکس ےکن تھا؟ ا ورکس ےول میں یہ باق کشک نکی جما عت 
لت سے دو چار موی ؟ اورسلمران تخر اداورسامان تر بک قلت کے باوجودان 7 
یں گے لیکن کارت تبد بای مگ 
۱ ضر تمرم رص الم ےمنتول ہے دہف ماتے ہی ںکہ جب برآیت ازل ہوئی: 
سڑم المع ولو ره رت عرین خطاب 9 کے گ کر وہ 
کون رب جنقر جب لس تکھا ؟ من ند و بر کے موہ ی حطر ترس 
ج بآنحضرت مال کوزرہ مس لگن اور برآ ت :ت یز الخ ولو ال 
بڑ ے یاقا لآ یکی رو اک 
حعفررت اہ ع پا ی ری اش تھا یکتم سے مر وک ےکا ںیت کے تد ول اور جگ 
ید د کے ولو رع کے درمیان ساٹ ساکع صتھا۔ 
دس رآ نکاس تا ری فک کرد وکنا رت کف 
: 


اللمعان مارد التبيان ___ ۱ 287 
یرسور دخان یں اٹہ تا کے اس ارشادشٹ موجود سب :لا تقب توم اق 
اه تان مین یی الاس هذا عراب یم هربا کف عنا 
الاب را مویفونه آل لهم ال فزی ون جام رشول مرف ی 
ولوا عنۂ وَقَالُوا معلم تجتون۵ 5 افوا الاب قلبلااتکم عآیزونة 
وم هطش اب الْکُبْزی: کون (الدخان:۰.۰) ۱ 
2 چم سوآپ(ان کے لیے ) اس روک ا قارع ےک ہآ سا نکی طرف ایک 
نظ رن والادگوال پیراہوجوان سب لوگوں پرعام ہوجائے بے( ی ) ایک 
دردناک مڑاےء اے مارے رب! مم سے ال یر تکودورکرد سے مم 
ضرورایمان ےآ وی گے۔ ا کو( ال سے )کب تحت مون ہے ھا لاک اش 
کے )ان کے پا ظاہرشا نک جب رآ یاء ری یلگ اس ےرا یک ے 
وت اورک کچ ےکی دوسرے اٹ رکا) سکھلاباہواداوانہ ے 9 
چنرے اس عا بک ہٹا دی کے را ای الت پر جا وگ :جس روز ہم 
بک خت پل ہیں گے( اس روز) م2( پودا) ہدل ہس گے“ ۱ 
ا نآ یا تک بی کا شان ن ول: جب باش گا نکر نے تحضرت تلم ینز یب 
اورناغ مال کی او رپ 4 بخاوت پ کر ندم لوپ اڈ نے ال نکیل بددھا کی 
ری :"له آعنيعلیهم یسیع کسیم یوسف“”'یاللآپ ان خلاف لیسف 
ای کی سا ت اباسا یکی ط رع تسا کے و ر میرک مددفرماھیں۔ 
چنا نہ دہ ایب قط س بتلا ہہوۓ جس نے ہر رکوس اکر رکم د یا یہاں کک مش رن 
و کک شر تک وت چرس اورم دارکھانے ردب گے ان یں سکول ایک 
اسان ط رفظ راش تو دجو ی کل وھا دیق اُبوسغیا نآپ انم باس 
سے او رکہا: ا ےتا آ پتو ای دکی بنر»اورصل ریا رآ کے ہیں جب ہآ پک یو م 
لاک ٢وی‏ ہے آپ ال سے ال نکیل دمک »چا نج راتخاس[ ا نآ یات مارک 
وناز لکیا- ۱ جح 
ملام رز رقا رماشفرا2 #لکرانآیات ش ورگ کے بت پا خن 


اللمعان مر اردوالتبیان ۱ ۱ 288 
گیا ں معلوم بو ہیں: 

۱ -اس تیا او رک خرو نا جوش کین کاا حا دک لنگی EL‏ و گکواۓے 
اورا رآ سان کے رمیا ن وتو کی کل دا در ےک ۔ ۱ 

۲-ال را یرت کے ال پر کے کے ونت ان کے ال سا گے 
یی خردیا۔ ۱ 

۳- شتا ان سے رہ کب عذ ا بکودو رک ےکی اطلا رد ینا ۔ 

مش کاس درون مال کی جاب دو بارولوٹ جا ن کا بتانا۔ ۱ 

۵- یشرت یکاش رگن ےہا کے دن تن جنگ بد کے دن اقام لی ےک ردنا 

لآ کے فرماتے ہی ںکہ الثم ان سب شی نگوئیو ںکو ےکر رلا یا ءکوگی ایک 
جس کو ی فلز نہ مول * چا روهظ سا یکا شکار ہے باتک ال پیا ںی 
کھانا »روص ار سا نکی طرف وکت توا سکول او رکا فک خر تک 
وج سے اي اورا ان درمیان رعو کی رال دتاء روه بجو واکساری E‏ 
سا باس گ :وتا اهف علا الاب( هی نون" هتا 
م سے اس مصیب تکودورکرد سے“ براش تی نے ان سے پک مر تک کح عزاب 
کو ہناد دار موه کف رونا فر مان شی من ہک مو بسن ان سے بد کے دن 
انام لاء کچ ند نے ا نکی بای تپ کہ ان ٹیش سے مین بو اورسترگرفار 
وزات ا می لاو لک بر یکر ۱ ۱ 

آ کیال یخلوق مس ےکی فرد سے اس بی تا کا مو لک صر درکن 
من کل یقلت وا اش یکی شان ہے۔ ۱ 

ام ام دا مب پا بآ نے شتی کو یکر 

برا تھی ےا ران شل‌موتود_ب :وال آرسل سوه یی 
وو ایور فعل الیش که ولو كرة الم کون (التوبة:۳۳) 

من چنا وه اللہ ایا ےج ے ی اتام فو رکیل ) لۓ سول 

کیت ( ان تن ین( سم اک 


اللمعان رده التبیان 289 
ای( دن )کوققام(بقیہ )دیول الب ارس( کی اتام ے )کرک 
کیے ی ناخو ہوں“_ ۱ 

- اورا کی زرح خنقر یب ملمافو لوصا ہونے وا نے ای لیو کیل 
کردا 
شتا کے افر مان می کور ے: ۱ 

«وعَل الله لش امَثوا منک وعیلوا اليلحت یلبم فى الازض 

گتا اشتخلف تن من کبلهم. مکی هم دنام اَی ازتدی هم 

۱ وَلَيْمَیِلَتهُمْ بحر حَوْفِه م آمن۴ (الیور : ۵۵) 

تجہ: (اسے وع امت )اقم میس جولوک اھان لا وی اور ل میں ان 

> سے اللدتھاٹی وعدہفرماتا کا نکو(اس اتا کب کیت سے ) زین ش 

وت خطاغر ما گاجییاآن ے بل (ال بدایت) لوگو ںکوعکومت دی 

کی اوریشس دی کو(اش توائ نے ) ان کے لے پشفر ایا ہے (مشنی اسلام) 

اون سک( آخرت ے )ق ت دی اوران کے اس خوف کے بعش 

092 ۶ 

بت اوزیہوعد؟ لیگ ہوا سوا تھالٹی نے الا متام ادیان غاب اورسلرانوں 
رتور ریم زندگی ہی میں زین رومت عطافر بای یہا تب تماما لب 
4 مت رن کے اور ارب مرول بھی ایہاعلاقہ نہر پا 2 نے ےمم اتوں 1 
فرماتبرداری میں س رسای متم ہکرلیاہو بت نے الام قبول ‏ کیاتودومسلرانو ںکازی ین 

کرٹ ءا اقترا کول وکیا درل ہد ین لگا۔ 

رپ کے دتیاسے رلت فرب کے بح دآ پ اٹل کے سی قیص وکر یک 
نو ںکی طرف بل پا اورایرائیوںءاورزومیو کنو تفت وجارا کرد یا 
اور ایک صد ی کی ایی )کا لای لط تکارقہ دنع 7 موگیاء چا خرب مل 

رای( دتیانوی ) ے یرشرق میں بجی نکی سرعدوں تک کی گیا اورای ' 

سلطری الا می کی تو ہے اتم مبارکف ور یل ہوگیء اورانشہ تال کاوعدہ 


اللمعان ش‌اردوالتبیان 20 
ور وتا : 

اور کار لام اورا نس کشر ال ترآ میں موجور ہیں جن میں تتقبل سے 
پارے خن خر ہیں جوس بک سب و بت +وکل» اور چگ ایک تاوق 
عاد تار ےلپ یگوج وا یاز ل سےایک دج موک کیو ات رک دج 
ہوا رب اھر تک طرف سے بتانے سے یکن ہے۔ ۱ 

ورام سے یی بات او شیروکیس ہون چا ےک یق رآ نکر یمیس داردہونے وا نےتمام 
تھے ا ضہا رن یوب الراضی ملین یگزشنز مان ےکی نی نرو ںک یل ے ہیں مج نکی الد 
تیال نے اپنے پیا ے رسو لکواطلاغ دی جب رآ پ ٹڈ ان سے ناداقف سے اورای 
(آپ م کے واقف نہ ون هک )وج اتارک وت حطر لوج لس 
قم کے بعد ںآ یت میا رکذ رکا ے اراد پاک ہے :لك من اَنَاء الیب 
وبا ليك ما کنت تَعْلَمقَا آنت ولا مات من قبل هل قاضو ای 
اقب لقن (هود: :4( 

ا کے لوم وی a‏ ب 
کوپچیاتے ہیں ءا سکوایس سل نا پ ہا ادر دآ پک لوم ومر کے 
ینایک انا ییو بی کے لیے کے 

اور وہ هس تد رع و ہیں جو ام الم رشن موزل فر ہے که اوہ اب ات 

کےققلب مہارک کے کے موی اورمومنو ں کل ے بح ت تکاباث ہول ؟! ت قرآن 
کے رب العا نکی طرف سے ناززل ہہونے بت بژ ول ہیں کیا ری ٹر نکریم 1 

عا شا نت ہے؟ !اور قر رای کے بلند پا ہز ے قیں؟!۔ ۱ 
: از رآ نکی جچئی وجہ: : د کرک علوم کے سا تق رآ نکیاعدم تخانش : 
۱ از رآ نک ايوج یح سک ما علوم ی طرق وودد مشاب نة ل 
نے هر یرس‌لش کے شاف ے بہت بل سبقت رای ہے ران کان 
جد یدسا نظ رییات سے تاش کی کی نج نکا سائنس نے اشا فکیاے نف رآ نم 
نے اعمیاز کے ببلوول میں اس ببلو طرف ان ارشادخدا وندی بی اشا رہ فر ایاے: 


اللمعان شم ابده_التبیان ۱ 291 
ریم ایتا نی الاقان وق آنفیهم حى یبن له آله .ولم 
یک رك آنه عل کل کنر شهیل4(فضلت: ۳ 

زرد مر یب ا كاپ( ت رر تک )نظانیاں ان کےگر دونو اں س کی 
دکھاد لی کے اورخوداگی ارت لبھیء یہا لیک ککران رام جا ےگ کہ وہ 
رآن تت ے (تھاکیاآپ دبک ہے بات( آپ کی یقت کے 
)کل کہ ہپ رچ پقادرے“۔ رم 
یز مارا ےا قاد کت رآن پا کول فر یکل اک ر یی ی ویلوی یکی 
کول تابن بل وو تورف پرایت وارشاو اور" لش بخ واصلا“ کل تاب ہے 
ین اں کے باوج رآ آیات انض سی بھی اورتغرافیائی سا لک طرف 
ارت اشارون اور نان الیل یں ج رآ از اورای کے وی ۳ ۱ 
ہونے پرولالل تکرتے ہیں یکی ىہ پات ےک حطر ت ری ان علیہ وم نا خواندہ 
مسا یڑ ھتاہ پا کے س7 اورآپ و۳ نے تب رن کے مظاہرےکوسوں ۱ 
دورایک ا بے ماحول مکش ول ال جہاں علوم ومعارف ے اورنہ کی ای دار ن 
لک تا ,فا علوم پڑھاۓ اس ہوں »کیپ نم کی قوم اورقبیل سب کے 
سب نا هاوگ وال کے سا تسا تح دو اپ ی نظ ریا تج نکی ہا مق رآ لسن 
اشاره‌فرایا ہے ایس ہنی می سکول نہ چات ناسانش _ بھی ال رازول سے 
دہ پر یل ی نایا کے یسب نے زیاده ی کل س کہ یی رآ گم کک 
تین ےی کین کت رش نکی را ے سچ» بکد الہک جاب ے ایک وگ ے 
+ سکو یٹ تتھالی نے عم لذبان یں رالا تیا حر تر ماقم کےسی اہر ها تدای 
زو مفیف طبار ہ نے اپ کاب رو الم بن الا لای یل ال ضوع 
سے تق عدہ بیغ فر مکی ہےءانہوں هنتف مکی نکی ہیا نکیا سے( یہ 
مان جس سے چندای کک طور پر تصرف سا لکر تے ہیں : ۱ 
0 رآن یرس کور سای اشا فا تک بحث سے یه م اس باتک وضاحت ضرو ری یع ی ںکت رآن 
کر اقا تاد یر ہک طرف وت دیا جاور نی ا نکی تالش تک رت ہے :تا ہم ال بات = 


اللمعان شر اردوالتبیان ۱ 292 


کک رآ نکر نے بہت سے ایی ,ای یاو ریا تما ان ای نٹ ندری فرماکی ےج 

رون کے زمانے میں نامعلوم او رارع از مشاہدہ تھے مال نلم ید اب اکا نکی نقا بپکشائ یکر وی 
اور سای مو کي فائدہ ہوا ےک جے انا نک نس تح له اسر مال تو شتی نے 
ان پر بجت نما مکردگی ہے اود ال کے امکا نک واج کرد یا ہے٤‏ اس کے علاد وق رآ کرم کے تما بیانات و 
اشارا تک جد بی تحقیقات دالتطافات سا توق انا ناک اور پرخطرکام ہے کیونکہ ہے بات کیان ےک 
نل٣‏ نآ دی ی کی اہی ہیک لکوو بجرو یا سا دشار ہونے کے ال رل باس کا ہآ سے دن 
وتار تا ے۔اہناموجودو ہا سی تيتا تکوکین مسآ رآ ن امنا اوران مال ریق رآ نکی یادرکھنادرست 
ہیں برای ن سے م روب بو وی اکر کہ چودوصد او لک امت ! ی وگ اور اب ا لک 
تقیقتآ شکاراہوگی ہے ہت ی کیب بات »لاس قاری ای راتا ل کے درجریش بیا نکیاجاسکتا 
ےبد لضت وع بی ادر اع ریہ هلف ہو ق ری مفس رین ےکی اس سماخو بولک 
ول ریقف سےنظریا تک هکیت ہو ےکی آ ی یکی جا و لک مل نآ کے کرتقیقات اس کے ب کل 
ہکسںفل؟ یں :نس لول کے اناد ڈگ نے کے ج یقت کلام اور رآن سےا نظ ریا تکا 
کون تخت مفسرین نآ یا تکوجد ید اتنس ریات تالف یاال علق 
کت توان یں تالا تک کے ای کے مطابق بنا کیرش سک جاتے وج ہرز وا سلوب درست 
نیس اورسلفہ صا ین ٹر سکاف حطر تک مالاصت موم اش گی قا وی رح اڈفر ماتے ہیں: 
ر کل لوکوں نے ق رآن کے ماو یع کو کلت ارآ ٹس دہ بیعش نکی با ہیں 

جوکق رآ نک وضورع س ہیں پھر ج بکوئی فلگ نی شین ارو ےلو ا ںکوز یردق فرآن یر 

لول بڑ ےھر سے جیا نکیا جا اک رآ نے تب روس بر پیل ی ا کی تر دک ے او راس 

ےآ رآ نک بلاغ ت شام تک جا ہے رآ نگ۷ریح ایک نی قافو نک یکتاب سے رٹنس وفی اور 

را می ںآ ےگاتوقصود تال ہوک ےک چنا خی انس سے تخا نوف اس قد دک 

س بصتو عات ہیں اور رتور کے لے ایک صا کی ضرورت ی ا 

کی ضرورت گر ادال کے لیے ا کی ضرورت یں کہ ال چ کی تقیق تک در یافت 

بہوجاۓء بللیگ ما ا نک الم ہونا کان >" (مقدم۔ بیانالقرآن)- 

فلا کلام کت رآ تحقیققات دور کی ہیں :یتو دہ ہیں اج نک ق ران تروک ے ادراش = 


32 


اللمعان تثارده_التسیان ۱ 9 


وو وو سس ۱ 


7 


= نے ان دور ات رف رالا نات 0 نکھوں سکم ےکی راکرد اهوم موی مین می بدل دیاے. 
اور نہیں اکر فرش ایبنا ن قلب ما دق لگ ان اکشافات نے ود ط یرت مین ڈال دیا ےکن 
دوس ری تقیقات جد یرہ دہ ہیں ہن کے بار ےش رآن نےکوئی وا جر دی ء ہاں !کا کات اورا یک یق 
تیال انشا رات موجود ہیں مو ان ارات دابا تک توح تفیل بر ہرس نی مت ان مان ۱ 
مرن دورن بہت ی نا ککگھاٹی ہے هت سکا سای وس :نا لس 

رمال م تیا ت کا میات تا جو تسیل ہیا نکی ے وہ اب ب کل انل س“ 
ال ےق رم ری یت پرزد پڑے یا جد یرحقیقا تک ندز ادر چا چت رکم قلفرال کم طا ہو یا 
ہدید النشافات ا لکی تی دک ی من کی کی طر مناس بک کر رآ ن کوس یکنا بو اور ہر 
ریق نک رآ ن سے اب کر ن ےکی ر لاش یس اپناوقت بر اوک ی ۔ 

رآ نکم گرا نا کو یر کی کی شار وکر وا لک مقص ریز کیردموعظت س انان 
انآ شا ری ہک رک هر مو فی کے وجودوتوحید اور ا کی شال قدرت وق نکر ؛ اورخانوی درجہ 
میس یھی مقصود ےک وہ ال شور ےکم کرو وی ماع ما لکرے ملین ان سرا و رمو کو جو 
درتقیقت ا یمان ورف تک وسیل ہیں حا ت ایکا مقر وحید يب اور ال مق روط انا زگر کے وسیل یکو 
مق ری حیشیت د ےد ینان انان کے _لمفیر_اورنتی اسلا مالک اجاز تدیتاے- 


اللمعان تشر اردوالتبیان ۱ 294 
موی هل 
رآ نکریم سای رات 


اکا نمیا تک وصدت: یکی( تالف نظریات ہیں سب 0ھ 
نر کردا ےک ز نک کو کا ایک حص »رو سورخ ے جراہولرمزی 
وک اورانضان سر سسکا بل موی سا دان ار ب‌صراتت رز من 7 
تی موجود اض فتاں چذاثول اور شگیربادو ںکی م وج دگی ءاورز ین وق وت اس 
سے ہو ئۓے تش فشاںل لاو ے کته کے زر جات لا لکر ے ہیں۔ 
بی ری ایس بات کے موا فی ےپ سکی طرف ق رآ نک رکم نے اس فر مان یی یش 
ا رم :طاو لم یر . » 
رج کیا نکافرول کو روم ئ0 اورز خن 2 بنر کے 
کرم نے ان دونو ںاو( ابق ترت سے )کول دیا اور ے رش کے )انی 
سے ہرجاندار چیزگو نایا ےکی( ان پاتوں ےکر ری امن تلا 
پروفیسرعفیف طپارہ کت سک ریز رآ کے الع ترات شی سے ایک ےک 
کی تاک یرت کر ری ےہ ا ںکااعلان س کر مک مات بترم لیس سے لی 
مون ایک چ تی رک اجام اي نیم ہوگئیء اج رام مات 
کاس ۱ 
اورا ںآ ی تک راحص :و علا من الما لقن نپ آووه ا 
ساس ینف یک مقر وشات میں واردہہونے وا یآ یات مل سب سے زوو پنےا 
کے را زکوسائحنمدانوں نے پالیاے۔ چنا کیاکی درک کایف بڑاحصہ پا کا ان 
ہو ہے اود پل بور یکا تات وا تک زنرگ کے دوام وبا کے لیے بذیاد یح رہ 


اللمعان شي ارده لتبیان 28 
ریگ ال کے علاوہ ری ای تصوصیات ہیں جودلال تک لی ہی لک غالک تات 
نے پا کا ےا اء سے بنایاہے جوا یک تلوق کے ے فا تمن ہیں۔ تھے 
۱ پا کادر ج7 ارت ج بم ہوتا ےتوب یسوی نکی ا بہت بای مقدارایة 
اندرحجذ بک لیقاےء اور وتک شد وجا تا ےت و تار تک ایک بای مقرارال سے 
> ار مون سے جو ند رل ر بے وا ی کلف انر اراو قا کی زا 
ایرث رآ نکی کل تکس قدرانوگھی او ریب ےڑا الفاظ E‏ 
نل را کی نکرری ے!!“ 2 
جرت امن عباسس ری اللدتاٹی عن ےمنقول ےک انہوں نے ا آیت مہا ہک 
شیر فر مایا کهآ بان پیل بترت اکہ بار نہ برساساتھاءاورز ین بن کات ۔ 
دا »ی جب ال نے تن کے باشندو ںکوپیداف با یاقھ ا نکوبازش برسانے 
اورز ھا نکوخیا جات اگا نے کے ذر بی ےکھول ر“ 2 ۱ 
م شزو نک تفر یرادا تھی ہے جک استعار وک تی سے سے :جح مین 
مفس ری یی بی دائے ہے اکن ہہ بات ال سے ات نک رآن کش الک 
تین با ٹس پائی جا میں ج کاخ یر انیم نے ابھی کشا کیا و بت رآ نکی ' 
کا یات بہ تک وجو وکا اال ہیں اور من کے اسرارورمو زی مل الاو 
زیہد ق یں ت م رتب ہلیم مو اہ ےک متا نس ال با تک وبکر لیا ےک کک ق مین 
کک ۔اوراشتھا ی اے ہیں :رہم اییکا ن اقا وق 
وة عق نله آله ی 

ا" ”نپ تریب ا نکوابتی (قدر تک )نشانیاں ان ےکر دوفو ا می لبھی 
دکھاد کی گے اورخودا نکی ذات می بی یہا ںککلہان پرظاہ رو جا گاکدہ 
فرآنن ے“۔ ۱ 

اورشای کہ ىآ بت ی ا نآ یات ٹل ٤‏ ۳ 

ہد علوم الو ںکویسو میں ص ری می سیف مالیا ہوا 
۷ای کیا مات :ورام لکیات تین زکاکنا ےکک تا تکامادہ ابر مس فضا مس 


اللمعان زر ارنوالتبیان 296 
تیب کے ہا کے پیل ہو ے ایک“ کل تھا ءاورا نکیکشا ول یاتسود 
یی یکس ےکا ھے(سیال بد یکل متب ربل )موب ےکا تس 
اور ژ اکر جام و کے ہی ںکہ ےکا نات اق ایت دا ے فرش ٹیل ایک خاش مرب 
اور یں سے ی »اورای ےم تھا ملظ 7 و ات ۱ 
ال ری ےک تاعیام قرآن میں بھی پا ہیں۔اوراگرقرآن الک رد 
دیتاتوجارے لیے اس نظر ےکا کمن تعر وجال موا اٹہ تیل فرماتے ہیں: ٹم 
استوی. 4 1 
چم ان (کے بنانے )کی طرفتوچرفربال» ادرده (ال وق ) 
وقوال ساتھا وای سے اورز مین ےر ما یا کم دونوں خی ے17 یا ردق 
سے تودولول سکب خوگی سے حاض ہیں“ ۱ 
چنا رآن نے ا کا تک قق کے کی وعو یں کے ساتھ مت رش کی ہے٠‏ 
اورا لآو رہ وی اخیاءٹل ےگا ےآ یا دوہ یا کل ےو میس جب 
تل سک کات اورال کی راز و .چا ہو ل کی ای (نا خواندہ) 2 2 
یس میں ؛ اک کدرا ککر نت۱۲ ۱ 
۳۔ نیٹ مکی یم : انیس میں ص رک سک اتا دوش ریہ مایا ہک اٹم ی وہ 
سب سے وج مت لک کضرتل پیا جانا لکن ےہ وه نا تج زی ہے 
کیو کہ وہ ایاج ےج ک تھی مک نہیں اورا نظرے کل صدیاں پء 
و شور وسول سالول ےسا راون تدم 4 اور چات 1 که 
ست لک رف موڑاقو نع ا سکی ری ون بن کارا لماکت ان ذ بی 
ار ی اجا رشقل ے:(١)پروٹان-( ٢‏ )نیٹران۔(۳)ایلٹران- 
اورا ی شی وچ ا نکسلئ ا م اورا یرون 2 بنا الکن ہواءاورچپ 
و لکا ےو ریخ تال موتو متا م تک ا کی سے اورشیطا ن مرددد کے شر ے اق 
کی چناوطلبکر۔تے ہیں ! ۱ ۱ 
آپ الد کے ال اراد طر نورک ری کہ وہ ای مکی رد ے دبا :لاوما 


2 


اللمعان شم اردہ التبیان ۱ 297 
یعزب..) 
رھ ”لم تک دای اس درد 
سن میں (بللہ سب ال ا کے عم س حاضریں )اور ول ری . 
شر فاون ل اورت کول چز(اں سے )بڑی ےکر یسب (بوچہ 
ال اما کے تاب ٹین( سکف میں رقوم) ہے ۱ 
چنا نا مرش اید 6ات میم کانبات رح 
ے اورالل تال ان :ولاف السا میس اس با تک وضاحت جک زی 
ایٹوں کے وای معن سور ءستاروں اوسیارول میں موجوواییٹوں کے وال ہیںء 
تک هرت رصن اش علیہ وم ے اہم کے خو سکو ی ساعضرالن یا ماہرفللیات 
سے )یڈ ات اکہ ان کنیع انم ینیم اورشن وآسمان می | کے خوا سکوی نکن 
»و سک ںہ ر1 آن وکا ای ہونے مطبوی ا 
ان 9 دارگ ییاد کے دسر او که سارت یبد یی کسی بات 
رامو یکر فضاکے بالا قات می سآ تی نک یکا ہے چنا نچ ج ب کی انا نان 
کی فضا وس می نو پرواز ہوا اوربائری ریب جوں ول ای نے فضا ا 
کیاءاوراسے ال وت سذ دک ی + اوران شک کش نک احا س یباتک اے ایا 
اھ نائسول ہو »اک وچ سے ال حرا ت اور زک گل ساف رولا ایت دیاب 
28 چچازعوار بو ں۵ یزارف کی بلثر وں ےک اون یں نے جائ ےووہ 
مصنو 1 یں الیل مج رآ نکم نے پروازک ایچاداور جر چو سد ی ال اس سای 
هر جانب رما ی کر یکی ءآ پ الل کے اس ارشاد ورب ے یر 
۱ 3 سوت وان توا رستہ پرڈالتاچا سے ہیں ال کے ہی ثکواسلام 
کیل کار کرو تے تب» ور شک سپ راہ را 2 لب ان کے سی کول . 
بہت ٹن کرد یقت ونان پر مھا سس 
اور ربن یل سے عضرات قرب یتک ری منم وما سے 
یھ کی-2 جوان کے دورکے موان تھے چا دہ: لان ایصعدق 


اللمعان رن اردوالتبيان 298 
السا € کیان الفاظط ‏ ےکی اکر ے کے :مین یگ رات کی مال ایک ےج اک 
کو شآسان پچ ھن کااراد مر ےجب یا و کل > کون فیملن 
کم کےکرنےکاعز کے“ 
اور ادوا ال ترا وروت آبت 
رآ ن کے ات ےت رہ مآ تلو یی قیقر حطر ت لی اون علیہ 
مکی تک رات کم .ای رآ نکی ظمت ان دس 
ام 
۵ہ رئے میں جوز کا وچور: پیل لووں کاخیال تھاکہ زوجیت (جن 
ARO‏ انان وتوان) ہے وریان سی عام اورشا نح ہے دی 
جر یساش نے اک راہ یکرو یاکہذوجیت تا جات جمادات اور حا کون وتور کے 
زره شش پا ما ےه یہاں کب می ی پل ال ہے چنا اس س شبت 
Negative) sl( positive)‏ 14 وجود ایک تا اج 7 میں پار شده 
گی شت ہے اور ایک وتار ےجس می چا خد مکی ی ےه یہا ںک کور ہس ی 
روا اور یوٹرا ن کا تن ہےء اوران دونوں ل سے ری اور باد کے ہے جر 
اس شاف بی ق رن نے عرد یات میا رک ٹس است بیا ریقف دپ ان 
م الشان ولا لکی طرف زرا رگرب 
" (لف) (وس‌کل..4 
رج اور نے چ ولودود کم (ان مصتویارت ہۓے 
توحیرکو) م“ یاک ومن کل ھی( کول دا 
(ب)۶اولم یروا.. 4 
ند کنو نے ز شی کدی کال می سکس ترک ہ رهم ی 
وال ا کال ہیں ہاں تا جا تک طرف اشاردے۔ 


رج (سسان..» 
رم وہ اک ذات پٹ سا ملاس زین 


اللمعان 2 رز ردو التبیان: 299 
و رچچو رج وہو(ڑذژ ّچو LT‏ 
تاو( عام لوک نکی ہے وڈ ۱ 

سوا ! آ یکر بے نے زوجیت ( اور ماده کون ات٤‏ انسان ء اور رال چرس 
عامکرد یا شےہم جاننے ہیں بای ہا ےک ہے وہ ذات ای جوقد یرو ہے اورا 
کے نے ا کا ات کا حا طکررکھاہے ١اد‏ ہرچے زر نارکا 
-٦‏ رکم بادرس بی میا لاوز رد ے: ہے بات سای طور پنخابت ہو لی ےک 
این ان ت ول تن دول راتس »وب پردے ہار یک خحودد یی 
تو و ش؟ کے جک لگ سے اک ی ده ال تچ اوران تس 

۱ پردوں سکم می ہیں: ۱ 

رل ی درگ دنا 
٣۔رک‏ دلوار۔ 

٣‏ نزن 
اور وو میت سے سے جد یرطب نے ای ترآ نکر بھی ال 
اش حقیقت کی یرس داردےء اورے پات ره ز رس ال فان بلی 

مود :ملک 
رم دو مکوراوں کے یش یس ای ککیفیت کے بعردرک کیت 
پر بنا سے تار ول شی ء ہے ہے اش راربا یل ساطت ے 
چا ا ںآی تی قرآنکای ھی زوظرآ تا ےا مقر نانے اس بات 

کدی سکم باد رش رس رون پردے ہو تے میں ال (اظطلل ے44 ے 

يکي سب کیوں کہ ده ایا اوررکاوٹ ج و ےنارک اکور وکا سے 

7 ی 

-واوّل ال بارآوری: سان 8 یہ شاب تکیا کہ 

و ا رن کے علاوه مرن ٹیش زر اعضا کو مادہ اعضا ء کی طرف 

نل رن ہے۔ابراب پارآوری »وال کے ذر یچ انام 30 سے ا ےہاد ای سای 


اللمعان شر اردہالتبیان 300 
رآ رنه ارشا دخداوندی شل میا نکیا :وا رسلنا. 4 
"اور نی ہوائو ری دس 2 یں جک ادلو کو سے کرد ق 
ہیںء بمرت یآ ان سے ال ا روہ یت کے دتے ہیںء 

در ال کر کے نرک کے تھے“ 

۸- وا موی دلب نے کٹا فکیاہ دنکب ماد چو نے 
وس جوانات پل ے نہیں“ ضیوانا رت منو با ہے اورا نکا رکاش 
کے ن کل رپ خرن سے ی کال دے کت ہیں اورا . 
جس سے منوا کاای کر دنام لس یاب گل وصور ت شش جک 
کے مشاہ ہوتاہےہ او رال تیدا کلاپ جب نے سے مادہ انڈڑہ کے سا ہوتا ےتوہ 
سے عامل اداس ادر جب پا ریامض نوات 
اوراس کے بعادکوئی بھی رقم س وال ہیں ہو ,الب باق جوانات نوی مرجاتے 
ہیں۔اوراسی سی بل حیوا ن نوی اکل وصورت می جوتک کے مشاہ ہوا "کی 
قرآن ۳ کے اس فر ما نکی رف تو دی :اق آپانم 
رك لزق عَلَقَعَلَق لانن علي 

ترج ےر )اپ( جر آان نازل ہوا کر )اچ رب نام 
کر بڑھا کے (لڑنی جب داح اٹ الکن ال ٹم کہ کر بڑھا سے )وه 

جس نے( ملو قکو) پیداکیا یت نا نون ات ےل" 3 

چاچ یآیت قرآن ےرات مس سے ایک ای ره پتل ےجس 
کا ظبوراس کے تز ول کے ونت اورنہ بی اس کے بح ری ص د او ںکک ہو کاء یبا ککہ 
روپ خوردر ینک ایچادہوئی اور تلم ہوا اشک قدرت 2 و 
طرر)و ود لآ تاج 
انان ل گت کے نشانا کب اختلاف: گزشصری ۵۶۱۸۸۳ 
الیش سرکاری طور گر پش کے زر یه س کپ نز کاطریتہ اسما ل 
ایا ارام ون میس ا طریقہکارداع جل پڈاءاور نے ای لے ہواکہ اناف 


اللمعان 2 اردہ التبیان 301 
انیو ںکیکھال ہار وط OTE EPEC‏ ۱ 
کو کرک نون اورکڑ یو بی ہے وکوئی پچ رکید کی طرب۔ ا نککیزوں میس پوری زنرگ 
بر ینہ لآ لہ یہ یم ام اعضاء ایک دوصرے کے تاب ہو کے ہیں بین 
نگیو ںکی اتیازی ضصومیات ہیں کیرک تو وہ ہام کیساں مو ل» اور نہ ی قر جب 
تریب۔ برای کججزہالمیہ ہے۔ بی اک سے مہ بات معلوم ہو لی کاش تال نے مرنے 
2 پرا کے مدقم میں اون کے ورو نو کول اختیارکیا-ارغاد مار 

تال :طاسب 4 

7 "کیان خیا لکرتا ےک ہم اگ پڑیاں برع یع شکرس کے ۔ مم 
شرو رک یں گے(اور یٹ کر ایب یٹوازکیں )کیو ںک ہم ا ی قادریں 
کاک الیو کی پور یو ںکک درس کروی“ : 

اازٹ رآ مھت Ee‏ 
جس وعد ہک ی بھی خرد یگ ہے اورنس با کاک الد نے اس بندوں سے وع ہکیاے ال 
کوچ داکیاجاناے۔ادرا لپ وعد وک د یں ہیں: (الف) سرت 9 

ویرہ مق رما تال کاس سوک رکا وعد ان لوگ گر 
جا ےکاوعرہ جنہوں ن ےآ پ یڈ کا سے دن سے لاء اورم ناا 
دی ےکاوعدہ وفیره یام دم سے پورے ہو ے ۔ اگ رآپ چا ہی شتا ال ۱ 
ربا نکی لاو تفر ما کل ادافتحنا.. 4 ۱ 

7 بے نک چم ےا و پ ویک ملا ع دی :تا کہا تعا یآ پک سب 
اک عا من ےا با ااا تک کی لکرڑے 
اورا مآ پکوسید ہے ر سے پر لے چ ۔ اورال تھا آ پکوایاخلبہ ور ےجس س 
رت یکرت 6و - 

زرم ت مور کراورا وگول کے اسلام میں وخ درش ول و لے 
یری مول اورای کے سا تسیا ای لی ابش عل وم نت خراوندی و و ۱ 
»دایتعا نے توں کے ممقابلہ ‏ لآپ ملاک ردک ےآ پک ہو ںکو 


ےش 302 
رک :دا جاء. ‏ 
و ”(ا را سل اش وم جب غخداکی مددادد لگ )7( ع 
اپنے ار )1 نے( ن وا ہوجاۓ) اور( آشارجواس تفر ہونے 
دانے ہیں بہیں۲۔) پ لرکو یکاش کے دی( نی اسلام) یش جو درجوق 
وف و وک ,وا ر بک تخ کت اوراس سے استغفارکی 
ورتوا ست کے وو یڈ الو BJ‏ 8 
اورا تیل ے اي اتجیاء اوراولیا ھ0" ا کت i:‏ 
مسر 4 
ی تم اج مرو ںکواوزایمان اک دی زندگال یس کی 
ھکرتے ہیں اوراس زین کر دی دا کے( فرش جک ایال 
نس ےککھھن ہیں )کھرے ہوں گے“ 5 ۱ 
ارق 7 ب اراوفراندیق ی : ا ویاں ۱ 
حقاعلیدانصر الیو منین ۱ 
رما اورائل اما نکا ال بک رناجمارے ذ مر تھا اوت 
چنا تتح رومت بات غلا" رواد وراک ملاو ھی یم ان درون میس 
موی نکی با روز اسلام شابد دگواه ج آپ الشہ کے ال 
اشا پڑشیں :ولق 4 
ار اوہ اکن تا برش سور فر ایارک 
ہے سروسا مان تے:سوالڈرتاٹی سےڈرتے ر پکرو تم شک رگز ارم ۔ 
اورا فر مان یرد ڑا :9ولقں‌صدقکم 4 
مر "اور باتفا تم سے اچ دعر کاردا باق ی ونت 
ک کنا کم ونر لکررے تھے“ ۳ 
فص ہد کے اب ر کی 
نج اوق وعرے میں ایک اش تھا کی مارگ ے :اوعد‌الله.. » 
و :کون امت ات می نگ ال ان 


اللمعان مارد التبيان . ۱ 303 
سے الللد تی وعده فرماتاس ےکا کو( اک انار کیت ے) زین یں 
لومت عطاغرماۓ گا حیاان سے 4 رل ۸دایت) لوگو ںکوقلومت وک ` 
تیاور دی نکو(ارتعاٹی نے ان کے لے ندز ایا ہے( مق الام اس 
کوان کے( نع آ بت کے )تو ت اوران ال قوف کے بغرا نک 
رل ام دک - ۱ 

سو ییوگ را وا اوس مان یاب ٢و‏ ےہا لک کک ٦‏ 8 
کو 1 بااوران کے“ یلت جریا ا کے دوردرازعلاتول' کک جا پیج حط رت اور جب 

1 راد لیے رداد را تو ایل الیشر کے انی سے کے وان وعرو ںکوجنااتے ۱ 

ک ودی ر کے ات وق کی اتی کر یں اورا پت نکاما کانمن ہوجائۓے- 

اوراتعال یکا ار شایگی علق وعرول میس ے ایک ے :هو الزی. ۰ . 
رم "وه ال الما کال نے اچ سو لکوہدابیت رک اورا دہ( شی 
ماد ےگر(رنائش )چیا اما کا یف 7 ت +7 
کاٹ یگواہ ے“ ت 
مقر وټ رو٠‏ البمتروعر٥وہ‏ بے می کول یویر مو سا یک ٹر 
رکش اکور یک ھر کشر اوران کی رگا شراک 
فرمان ضداوندی :ان تنص رواالله..) 
7 ث2 ت۰ دوکروگے وہ باری عددکمرے گاءاورتہارے ت تپ 
جمادےگ'۔ 
اورارشادر بای ے و ک4 
رچ او رم اللہ سے دراب 1 تعال ال 2 1 7ت 
سے ) ضا تک کل ال دا سے اورا کو ہک ہے رز جانا تا ہے جہاں ال 
گان کک یں ہوح“_ 
اورا ش۶ و“ لرا کے یں :ومن یتق اللہ ) 
تس رج ورجش اللد سے ڈرے کاش تین الک رم یس ٢۔انی‏ 
کرد 6 - 


اللمعان مر اردوالتبیان ۱ 1 304 
اورانث تخالل مسلرائوں ے بر دکاوعره ابا سے بشرطیلہ وه مرگ ری جیبا کر 
ران ای :یبا البی.. ٩‏ ۱ ۱ 
تج سے برا آپ موش نکو جا دک رنیب د یں سے یں 
آ دی خابت ترم سب واے ہوں ٍآوروسو(۲۰۰)پرنالب آ جاو 94 
اور( ای طرں )ہکرعم ش ےوآ رک ہوں کےا ایک پرا رکفار رغال بآ جاو ی 
ال وج ےک و ہا ےلوک ہیں ج( د ںو ) یں مت 
ام زڈ رآ نک کو یں وجہ: علوم وموارف: ق رآ نکر مکی اا زک وجوهش سے 
ایک وچو هعلوم موارف ہیں ہین 7 نک | ااسج»! ورجوری گل اورتوت مت ۳ 
اس میک گے ہی رل اش علي ےم ال تھا کروه اش ابق طرف ےکر 
7 ؛٤کیوں‏ کرد ایک نا ا ننس اورت کا ندولوگوں کے درمیان! رل نے ول 
ا ء روم زس تام اویاء اورعلا کی » فلا سف اورگما لون سازاورگیشری 
صفات کے جال رات هن کرد انعمو عار یک شی ل ےآ میں 
اوروجوواڳاز مآن ین سے روج ایک نا لت دیدویل»اورروذ روش نکی طریج 
وا ان ےجو پرا وس اور دصر کر نے وا نے و نک یک رتو کر مکی ے 
ج یے وگو یکرتا ےک مھ جو لن ےک1 اب ووتو زی ساب تابو ںکی تلیات ہیں میں 
ماع زنر سیا الیل تاب سے ماک کر کے پچھراسے ا پروردگا ری طرف 
مو بک رلیا ےا کہ وہ ا نسبت ے ال ےڈ لکو باس کبرت کلہة) ڑکا 
بھار بات ےجوان مدق ے( اور )و ولوگ ب کل یمجھوٹ کے یں“ _ 
تم ان شل کے انرعوں سے کچ ی کر رآن سابقہستتابوں کل کون 
کرت ہے بل وہ ان کے بر دکاروں کی پر زور7 دی تایه اورا نک کاو ں کی 
اکثپتول کا حالف ے» یلق رآن تو کران کے عتا مد داؤذکار کے اصولو ںکوان 
ابو وتیل ردزما ہو کی وچ ے ال ولشیقراردیا؟!۔ 
اور کے ہکا ےک تیر توحی شیث کے پھنوابین چا ے جاك رول کے 
درمیا نآ بان وز می کافرق ہے؟ !کیا یپودونصاری کے بار ے میس ان وگول نے رآن 


اللمعان‌شرن‌انده_التبیان 305 
کا یت او رفص کنو کر سک کرد ہکافر ناف مان ہیں اوران علاءاوررابہو ںکی 
راکوت ہیں؟ !و وقالی .4 ۱ 
رج اور یور( شن ےش )کہ اک برغد ا کے بے ہیں۱ اورنصا ری 
ریں کے باکت دا سک ہیں با نکاتول »ان سمش 
هک یرگ ان لوگو ںیک پات کے گے جا سے هک 
ہیں۔ خداا ن کوغارت کے ب بکرع راك چارے ہیں ؟! انہوں نے" 
ارو کر ۓ علا واورمشا کو(باعتبا رطاعت 2 بنا رکا اور 
مر کی ارف ری ریا سک فقط ایک تور( مرن کارت 
کر بی ی وکو ادت کے لا کی ہووان ےترک سے پاک ےا“ ی 
رآ نکر عتا تروعيادات» تاتون واقظام» اغلاق ومجا مات ليم و میت » 
ساست راتا اورفلز ار کے مرو میرافول» اورای طح نقص واقعات» 
اورچرل ومنا رہ کے اصولوں کے تلف علوم ومع رف رآ اور بش ی جروج و 
اتھازشل سب ےڑزیادەظاہراورنمایال ے؛ ۱ 
چات ایک این شکب جو سا سنا اور تیم وش یعت کے )حول 
او رہز یب ورن کرش ا سکیا 0 ن 
موجوران علوم ومعارف کر علوم و موارف لےک رآ 2 کال کی ہوں 
وردلّل دیمان سے خاب کی +ول» چیہ انہوں نے ابق زنل کا ایک بڑاحصہ ای 
عالت تزا ردام ومار یکول خرن رکتے تھے۔ اور گی ا )ول جا عدہ 
اوراسول بیا نکیا ادرنہ تی ا نکی فروعات بیس سے کی فر کم سنا کرو هرگ 
نت 
ع ار 
اور اتا ہو ںکہ ان تعر ووتو علوم میں 0+ کت 
ور و تا پا اون چوک 1 0 یره ی مکش ے اورٹژزول ٹ1 لوت 
اسلا مکی تعلیات اور یبود مت ونصرانی کی تخلیمات کے درمیان مواز کرو ل »کر 


اللمعان مر اردوالتبیان 306 
صاحب یرت کے ساتے چیک رہ یداہوجاۓ ء اور کے ہن کی رو اورا کے رل 
فرب اورک مآ راکرد کرک اتارک بیان ا نکی ضرے 
مولع" ۳ 
قيا ملام رن رک دا کی ذات راس عون ےعلق ایی 
فان صاف؛ رون اورخا م عقیدہ لن ےک رآ یاء اور بتاد کہ اٹہ تی وولوں جہاں کے 
ددرگ ریں ءا کے ب ہاور بے ناز ہیں ءا کا باپ ہے شا تام سنا کال ای 
کے کت ی ات ات کے ای ل زات مق بون 
زاهک صفات ا لک صفات کل )لیس کوئ زاس کے 
لک آوروہ ربتکا نت لد والا ے" ۔اوروتی میں تی س بک محافظ وگ ران 
ہے اسے دا 1 ہے اور ند و ]سے وور ےھ کے کے عا پل 
کا ال ما فی .€ ا یکی کیت ہین جو چ رر یآسمانوں میس ہیں اورجوچرس زین 
شس ہیں اور ج چ ری ان کے درمیان ہیں او رجو چو کرت اش کی یس ہیں 

اوروی تلو یکو پیر ار نے والاےء اور وچو وتش م بلا کت تیر نبا لتق 
سے“ ای کے قبضہ قدرت مل بترو یی بٹایاں »ات چا بماد سے اور تے 
چاے ہاایت دس اوروه مرش پرقاددرے تام ا سک قلوق سے اورب ای 2 
ہندے ہیں٠‏ ڑاں کل . ”جن ےکی مسا زنل ہیں سب خداتعالی کے 
رویروظام وکر حاض ہو تے ہیں" ۴ 

9ص 00و0۰ 

ا ان الھکم..4 

ر ہار ا جود( ) ایک ہے٤‏ وہ پروردگازے آ 1ماوں اورشین 

کاو ج وران کے درمیان بی ے اور دوع کے موا“ 
۲ ان‌ربکم..4 
ی " ستمہار( نیقی )مجووتوصرف اٹہ ےجس کے سواون عبادت کے 
سے تا E‏ 


اللمعان ابده_التبیان ٰ 307 
۳ قل ادعوا نله > 
نو و 
پکاروگے سواس کے بہت (اعه) اک نام ہیں٠‏ اوراپتی نماز میں توبہت 
ارچ ورد کل کے کی پڈےءاوررووںل کے درمیان ایک‌طر تہ 
اف درک هنم قیال ای (پاک) کی ( خاش ) ہیں جود 
او درکتا سے اور تراسا کول سلطنت خن شرت اورن ہکن ور یکی وچ ے ال 
1 ٰ0 انی کے 
۳ أيپاالىاس. گ4 ۱ 
ماب لوگواتم (ی) خرا مان ہو اوراش ( تو بے یازج 
۰ اور( خودمام) خواتول والاس» او پا مارد و 
ید سيخ مش 
عقیرہ ابد بیت : ہودکی حت رت موک سکب گرا میس پٹ سور ب کی 
کے گے اود یو یک ک یز یر( علیہ السلام اید کے ہے »اور انا وال 
کے مشاب قر دادیم با زک اد تال ج بآ سان وز نک تق ےترک گے 
تو ہفتہ ےد نآ را مر نے گے اور نت ہوک لیٹ اوه چھے لتق رم ید سے 
بڑ سے اورکہاکہ اللہ تال انسا نکی شکل میس تظاہرہوئۓ اوراسرائیل (لعتقوب علیہ 
اسلام) ری یکن اس الب دا کے اوتاب ان ایس یہاں 
کی کک تقوب اورا کی اولاوکوبرکت سے نوازاءتو تقوب نے ال وقت رب 
کو وژ دیا(نعوذباللەمن ڈلک)۔ ۱ 
اورا نکازکوی تیک دہ تا تو موں میں سے چنیرہ اور پر یووم ےء اوروه الثر 
۱ کے مم اورکوب ہیں » اوردارآ زت صرف الک کے یی سے نہک دوسرےلوگوں کے 
۱ 27 ارگ ل‌صرف چتددن ( مه ےکی پاد تکر نے کے بتزر جوک باس 
دن ہیں )یی و گیء ای طررج انہوں نے حطرت یی با ے تلتق بہتان ٠‏ 
ا تدصااو رای اکہ وه زو اولا ری اورا ن کی بال زا یں( نوز بان اک کرت 


اللمعان رح اردوالتبیان 308 
کر کن انوا )اور اننہوں نے حرس یی نی کوسول پر ےڈ صاب جاک دہ نا 
سر کاس رل کےگناہ سے پا کرد یں قھام اور ای کے ی دی ود بہت 
سارک پل اود گرا هگن ال ڑیں میں رآن ےآ کرمٹاڈ الا ءاوران کےخلاف اعلان 
ج کرد یاء چنا چ یلگ کے برا نک یط ہی ںکیق رآ تورات ے ماخوزے؟ 
گقی رہ یا کیت :صا ر یکراہ مو سے اوران ہوں نے پیشیا لک کان کے لیے با ے٠‏ 
۱ رتیت ( ن باپ بنا اورروں الق دی )یمان سک ایک بت قير ہوا پتالیاء اوران 
نو لکنامنبول نے سے اقا 'رکھاہ چنا رکف تن خر ال کے جموصہ کے وہ 
در فی چپ ترس غاا شن ول انش ست راک درس 
کانمن »خن خد ایک لاو رایک نن یں ۔ 

زغ ملعت ۹ ۓے کےعلال وا مک کیا جؤمنصب صرف اور صرف 
ال کا تھاا سے اس ی علام اور جوا ال کے سپ ردکرد یا ءاور یہ پا لکتقیر اکال کے 
سول یرال لیے 7 کروه انان لوا نکی سز زات ھکار ا 
۱ نان ی یات ی وق رت ۱ 

نز یاه وگو ں کا یکنقید و هک تفر تک ین رن اللہ ہیں جوانا نک کل میس 

زین پرا ے٤‏ اورالں کے موی ھی ان رج کے ان اپ ریا ات ں 
جواننہوں نے ایل کی طرق موب ے ہیں : ته وَتل عا ون عُلؤا 
گناہ یلوگ جو کے ہیں اڈ دتھالی اس ے با Ga‏ ن 

کت رآ نکر کے لا ہو ےن اوران دو" ٦‏ 8ھ 
ا ض ل کلام یں ان ا رن ہے زیا ہک رن کم صرف ان 
اکن ریا تکوییا نکر نے اورا کات ی ان بارس ی ف ی و نے 
انا نی کیال رون ولال او رف لکن بر ان سے ا نکی تردیدفرمائی کے رآ نکی 
مر فکان لگا ی ںک وم نصا ری ےق بتار ا :اهل الکتاب 4 

ر ےا ب !تم اچ دین یں حد سے مت لوہ فاگ 

0 726 


اللمعان 2 ن‌ارده_التبیان 309 
ہیں ا ورای تھا لی اکن + سکواڈد ای نے مرکم کل اد اقا اور اڈ 
کی طرف سے ایک ان یں )سواہ پراوراں رن پرابمان لا 
اور لس کہ دک تن »رورس بو وت توایک ہی 
مور سء وہ صاحب اولا دس سے نزه ہے جو ےآ ول موجودات 
ی سب ال نکی کل ین اوراشر ای کارساز بوذ ایی کال سے ک5 
ہرز خداکے بن سے نے سے عار نکر کے ار عقرب فر مجن ءاو رن 
تک تک کا و 
کچ پاٹ ر ےر 

اا عور 0 00 :فا َفُضهد . 3 
7چ ”سوہ نے مزا پناک مکی می کی دج سے اوران کرک 
وچ ے ا ام اہ لی کے سات اوران کے کر ےکی دجہ سے انیا نا اوران 
د ر ی گان سک کف رسک بب ان : 
لوب شتا نے بندگادیاب»سوان میس ایما نک کرت رر ےیل ۱ 
ادان ےکی وجہ سے اورتضرت مرک (علیہ السلام) یران کے بڑابھاری 
ان هرس هگ دچ سے ادرا کےا دک دج ےک کک مرک 
سول ہیں اٹہ تیل »کرد ا ء ھالانہانہوں نے شرا کو کی ورن اوسولی 
این شاه یا درگ ان کے باد سے مس انا فکرتے ہیں 
هفخ شس »ان کے پا اس امم ہکوہ لیس تین باتوں پل 
کر ا ن بات ےل سکیا .را نوخا ےتیل 
نے ابی طرف لی ادراش تال ز بردس ت کک دانے ؤں“_ 
اور ران نے کل لفظوں س ال کیان کے جوا کناب سےتورات 
اوراگیل ٹیش ہو ے اور تاد یا ےک سول e‏ ےہا ا لںگھوٹ اور بان 
کیا اصلا ود یکر یٹ کا لاب نے ادا بیس ارت رات الک تون 
کیا نکی یکر نکوانہوں نے ایت میس جیا٤‏ دکھا۔ امل الکتاب.. ‏ 
اے اہ کناب !ہا ے یال »ارس یو لے ٹیں هناب شی سے 
۱ بن امو رکا تسه موان ٹیس سے »تک باتو هار تسام صاف 


اللمعان شر اردوالتبیان ۱ 310 
صاف لے یں اور ہت سے اموراو داز اش یکرو ہے یں ہارے 
پاک اشتعا کیا طرف سے ایک رو چ رآ ہے او ریک وا تا بک راس 
۳ سے اللتعا لی ا سے خضو ںکوجورضا ےت کے طالب ہوں سلاٹت کی 
ایل ظا سے درا کنا یی سےتاریکیوں سے کا لرن رک طرف ے 
2 ادان ووا ست رتام کت تا ۱ : 

آ یا ا روت دمل کے اعد ونیا اش عا وک مکی ص راتت یرگ ال سے 

ز یاد ہوا ت وکل موک ے؟ شتا فر ہے علام وک راو کیا ی قوب 

۳ 
گفاگ بالیلم نی الآیی فجز؛ۂ في الْجَامیيّة ایب في الیٹم 

7 جمہ:” آپ کے لیے بی رہ کے وکا ہ ےک دورجاہمیت نت 
َ2 اعم ہے اور شی یکی عالت یس ایک شیم اغاق و داب سے 


آراستہ ے“ ۳ 
ایز رآ نکی وس وج: قآ نانا 0ء00 وچ وھو 
اتمازیش سب سے رون اورمایاں ےک لکوشریعت اسلامیہ ٹس ہرفورکرنے 
وال اکا ہے چنا نچ بلاشیٹ رآ آن اک ہرایا تک لن ےک رآ یا ے جوکائل لا اور ہمہ 
۱ کر ر او ین مایا ت راان ن اوا قرآن ان 
شا ندارمتاص رکا چا ۶ہ لو تمیق رآن نے ایق بدایت وارشاد کی اه اباب 
توآ پ کے سان می با تآشکاراہوجا »ان مق ص اقرفلا ص لو بیا نکیا جا سا 

ےا دی اصلارج» ۲ ماش ہک سل ١‏ ۳ عت توک اصلارح > ۔عقا مد اصلابء 
٦ 010 ۱‏ اقا لک و عساست ہس یک ال رعء ۸ ال 
70 ٰ3 9" 0 
سرو ) عتا کر کقول وا کا روآ زاوکرنا۔ ۔ 
اور ۶ کیاکی قو بآهاس 


× سج ہے 


شَرِبْعَةُ الله نان تیان کل شیعء سوی القُژآن خشرانْ 


اللمعان ثم بّاردو التبیان : .31.1 
تمہت اش ربعت خداوند بے انان کے لیے ایک وا راسنتہ ہے ادر رآ کے 
ہوام رچ زم خار می شض اروے'۔ 
یاز رآ نکی دمو یں وج رآ نک واول تا خی :ایز رآ نکی وج شش سے 
ایل دہز برست رگ جوقرآن نے اچتول اور پرا ول کے ولوں مل پیا کیءیہاں 
ت٠‏ کک یف رآ نکی قوت خی راس عدکک جا ئگ کش رن بات خو سارانوں ہے تلاوت 
کلام کیل رات کے پہروں یل »او رای وهآ بل یل ایک دوس رےکو 
قرآن کے نہ »اور اش علیہ یلم ےت رآن بزح وت شورف هک لقن 
شیحتکرتے ہت کم هکیت سآپ پرایھان‌ن لےآ ے:طوقال الزیں >> 
تج :اور ےک( م کم کچ ہی ںکہ اس ق رآ سنوی مت اور کر 
سنآو ا کے پچ شورف نا اکر( ا لت ہیرس )تم ی الب رو 
قرآ نکی واول شش تاشخیریہاں کک بای کر اس کے نت ترین ول 
اورشٌر رر نا شین نے گی اک کے ما ہے گے ناد لی ء دوسا رب اور دا را نکفر 
یل مرف رست تعفر رہن نطاب »مرت عد جن مواز :رت اسب نت ری اڈ 
تفم وی ای کےسائے کے ۔ ۱ 
بحرت رہن اب ہیں جک نکی خد یرت ین بے یمسر نوں کے فلاف ان 
مد کت کی یک لوگ ان سک کے :را عمراس وق تک اما نیش 
> لائئیں گے ج بک کک خطا بکگدصاایمان نہ ےآ ے !( سی ع رک یمان لان ال ے ) 
اوران ات عراوت 1 عا تھا اکہایک دن دوچ اواپ وار گے ٹیس لکا ادص 
اش عل دم کی حرش میں کل پڑت اا ل کرو یکن (مشیت خداوندی 7 
منظورن, قمااوروو) شام ہونے سے یل یل ایی سن کے ران ری عدي 
زير لا چندآ یاس رآ ست کی وچ اتبوڈ اسلام رو اورا پ E‏ 
اسلام لان کا بت وچ 
او رآپ رگ شک تب رن کے سردارتخرت سر بن از اوران کے کی 
اسیرہ فی رٹل کے ا ملام لا ے؟ سیر تک یکابوں بقل ےک رسول رل اٹہ 


اللمعان شرّاردوالتبیان 312 
علیہ یلم ج بل تپ یئل ے پل دبنگ ایک جماع تآ لول عقبہ 
یش یج تک + چنا مآ پ ملقلانے ان مات دو مل ارفا کرو کرت روهار 
ران وس ینیم دیلء وہ دونوں رات مصحب نک اور رازثر بی امم ۱ 
ات ا م جب ہے دونوں حرا ت بد منورہ ول نے لوگو ں ل رآ کم 
دیناشرو ں کردی» ٤‏ بات جب تی رج کے سردارتخرت بعر موازنک کی 
۱ توانہوں نے اپنے کت اس .عیرس ےک ماک تم ان ول کے 7 بے 
ج یہاں رجا ناتواںلوگو ںکو بے وف نار ے ہیں کان دوفو لوا سکم ے 
رواواور خکرو؟!_ / 

سوضطرت اس ران وونل کے با ںآ اورجب ان کے پاک توان سےکہا: 
* لک چزیبال کاک ہے؟ تم اس 2-12 نوک مار ے شو ف لوگو ںکو ہے 
قوف بنا1ٗ پراش ژرایا» وا او راد گرم E E‏ مان 
با ریا ےس 

ال رترت مصحب تسه اسید ےہا کہآپ بیٹ کہ مارک بات سنا نر 
فا کل گے؟ ب راگ رآ پلوگوئی بات شرآ ےتوتہو لکر میں او راگ اے ناش ہک یتوم 
آ پک نا ند یدہبات سے رک جا میں گے“ 
۱ بیس کر اسب گے جب ضررت مصجب وف رآ نکی او یکر نے کے 
اوراسیز سے ر ہے اور رفاست نہ ہونے کسیر اسلا 2 سور 
رف لو اورا ترا کر دااٹش ان دوفو لآ وصول لول نتصان دہبات 
۱ کش ری )اورا سیخ اسلا مگوان کے سا نے تام کیاء اس سر کے _ اورخص 
ازج ۲ں ودا نکی طرف اش هکس ہے اوران دول مارا ا 
با ںکیاچچ زا لا ے؟ کیام اس لے ےآ موک ہمارے تا توا ں لوگو ںکو ے وٹوف بنا وا 
سے دور ماو _ 

تو صحب لئے ان سے فر مایا :ک کیا آپ مارک بات نتفر 
گے ؟ پگ رآ پکوئی بات پت کہ تقو لک ریس٠‏ اور ناپ کر یں ت مآ پکی 


اللمعان اردہ التبيان __ 313 
ایند یرہ پات ےرک چا گی گے ` 


اس رسد کہ اکم انصا فک با تک بتومصحب و تلاوت فرمانے گے 
اورسعد سن رہے:مصحب واا کی کر ںکہ بقدا اجب عد رآ کن ر سے تےتوا نک 
چرهورایمان رے چک رہاتھا یں حر مصعب ٹل راء ت م نکر پا ے کہ 
رداراول سا چغ ایا نکااعلا گرد یا - 
رای وت اور بایان ےکہا: کم نی گوس 
سکیسا ہہوں؟ انہوں کہ اکآ پ تاد ے سرداراورسردار کے ہے تف»الپسعده 
کہا:” حب نها مرول اورکورتوں سے کلام تام سے جب تک یتم مکی اش علیہ 
7 ایمان ند نے1 ان ال‌طرن کے پر سب کے سب اسلام E‏ 
ہو گے تک ری الشرانسعروآرضاه!! : 
ای‌طرن ٹرآن ے روستوں اورشتوں وولوں کے ولوں میں ایق خی ردرکھاکیء ۱ 
آپٹرآن ے مات ہونے وا لے وید بن می ر٥‏ عت .ند بیج اوران رولوں کے علاوہ 
دوسرےلوگوں کےتصو لو پاورکیں .اگ رسردار یک ہت اور چاو منص بک ی آڑے 
ترآ توسب کے سب ان کے یئ (اسلام یش دا ہوجاتے مین پرایت توانر کے 
: پا هل ے اظإیضل ۰ تو چا رایع یں ادن کو چا یں رایت دیتے 
یں ماد ہدایت پانے دالوں ( کی ایک ے 
ماح بآفیرالنار نے ڈیا کرای موشن نے ای ککتا تیش 
اس نے سا مش بولک اس دوس ےکور وکیا ےک رسکی الد علیہ وم ححضرت موی 
لیڈ او رر کی فلت یآ یات لن ےکرک ںآ کے اور اش علیہ سم سے اس سے 
پیل انیا نی فی تون نی ںک رل ہواء چنا تی و یکا ےک : 
بلا نل اش ما روم آ کات شرع ضوع دریگ اور بر 
وه و زار کے ا پڑے ووم لوگون کے رلو ںکوایمان کی طرف کے میں وہ 
1 مات رکز شتا ماسقا ماوقا دک خی رمنار۔ 
اورعلا مر رای رضراللہ نے ا تاب پ یرل امی ریب ارسلان رہ 


اللمعان شر ارروالتبيان 314 
اش کے حال سے ایک میق بات ذکرکی سیب ارسلان رہ اشر ا ے ہیں :سی 
تا میں 27200007 تارفن کاایک وف یی زا ور 
وئ“ کے سا سم کرہ ہواتوا یل رن ےکیا: کہ ہے دول رل اللہ علیہ رک 
جوتوں ےلان کی ہیں“ 
اجازقرآن لگیارتو ں وجر: :ال سے سلاستی: آ خرس ہم کچ ہی کہ 
ایا رآ نکی ایک وج رآ نکمم تاش تھا سے فا برضلا ف تام نا 
لا موں کےہ اوراللہ نے پاک رای ے: ولو کاں۔ € ۰۱“ ام کے واک 
اور طرف »وتات وال می کم ت تاوت پا ے“۔ 
تدا از رآ نکش وج مل اور یبال روگ پا انی ہی نین ہم نے 

طوالات کے جوف ےا سے اع را سکیا ہے ج بز ماشہ یش ہا ٹیا انف را نکی وج سکم بح 
رازوں سے پردہ انٹھا تار ہ ےگا ءچنا مہ جوں جوں زمانہ ترق کر ے گا از کے لف 
09 موی وسل ام جوم کک تاب کیم 
ورن تال زا تی طرف سے از لکردہ ہے ۔النتقام باقول کے او تسه کرام 

زک و ییار ارورمو زعاو مقر آن کے نر کےا ایک تطرہ سح باه با تل یں . 
تد ر چھیلا دیا اس اور ینتبم اس لکن اسکلا مکا ول اھا نی کرت 
یی اکا سک ا زات اویل القدرصفاتکااحا یھی کے یس عرش !۱ 
صرف کے اخترائ کا جوا ب :جب اج اقآ نی وجووکے بین سے فارغ ہو گے 
تم اپے ادزم ای یک ہم ا تو مکابھی جواب دس توا 
شیم انختیارکیاےء اورو دآ م وشیصر نک تول ہے اس اعت راخ کا خلاصہ ہے ےک الد 
تیل نے ایل عر بک رن کے مفا رض ے کیرد یاءباو جو ویک رآ ناب بلاغت شی ال 
e‏ شب کی لاسه سے انان ماش ا ن کا بھتوں 


پا یدک کک رز رش یز 
۱ رآ کے دوب ہیں: 


الامعان شیامه ه_التبیان . 345 
0 اسب : وه صارف ال سے مس نے الق رکون کے معارضف ے سرت 
“رد یاء چنا روہ مجارضےست دس او رکا و کر 
دو راہب وگال انت یر نے ا نکی یا میت یدقن 
کو ےکا کرد یا 
۱ ۷ی 010 
یو قطان ہے اور بطلا نکی ابا بک بنا تن 
. ال ار زد ( یرذا ردنت رآن 
مج بجع پل نج 
e‏ - رلک یرن قآ نیس ما یناک وو نز 
اج ت )موی ہکا یاز :کیو نک ال ونت ا سک ال لول موی 7و 
ان کال رات اس کے بعد ےکا مکلف بنا میں چا یاب 
سے لک کرو نی 1 ایل ے ہوگانے ۱ 
آلقاه في الیم مکتوفاوقال له ایاک ایاک 1 تبتل بالماء 
ا این نے دوسر ےکودد یال پاتھ بات ھک پچینک دیا او رال سے من 
کہ بای پیک سے پچ !ہوا“ 
۳۔1گردہا ںوی اکنا ہٹ وت یکا الما مان وصارف »وتا جر ال معارضہ سے بے 
ری کرو تووم بی اکر لی اش علیہ لم کے رو پر وک سے نس اورآ پکواو راہ 
کرام شی ائ مکو تا سے یو کوع راب میس بتلا اور ہلاون کر کے رت 
صلی الف علیہ سلم ورپ کے تبیل ہے بائیکاٹ اورشعب ایی طالب ع لکصور ہک ےک 
مس میں وہ سب ورختڑں ا وب یه او دکوت ےرا ےکچ وڈ 
کے آپ سے تبادلہ خیال اور ہا ٣‏ ےشکر تے ء برآ پ اورآپ کے ساب کرام ا 
کار یک نے پ بور نکر تے اوران کے علاوہ ووگوائل واسیاب نہ توس یک 2 
یلگ اسلام گن طم بش 7 کے کے را سے کل اد 
۴۔اگروہا لک ایی ناگھائی آفت ہو تس نے ا نکی بیان لتو ںکو ے 


اللمعان مر ارددالتبیان 316 
کارکرد پاتتا وه لول میں ال کا برا اعلا نکر سے ۰ت کہ دہ اپنے لی ےکوی عزرتظاش 
ریہ بیز رآ نکی شا نگھنا کل » اورت ول رآ کے بعدا نکی فصاحت وبلاغت مس 
نولت رآن سے ییک ضب تیآ ہا کہ یہ بات قراطلا ن ے۔ 

۵ - ار ]امد ادد ی اتآ اد سے ےکی اور فی ایب 
ندرج و ارات لیگ دورش کن بو دو را نک مور رگرب 
اورا تم رآ کے وی لججھوٹ تلا رکرو یں چیہ یا سورٹش با ل ہیں۔ 

کیان تام ول کے باو جود یکو یکر اپنے لے بنا پت ہک ےکک تام 
۶ بوک رآ ن در ن صلی ابعل یلم کے معارض سے کیرد یکی تیاور ورگ 
زوس لک طرف ال اورا ی میدان شش اتر نے سے بے رخبت وکا 
شی سک یمان سے جوا ہے شس ول ان رک ےک دہ ای تم موس الزام شن 
صلاعیتوں اورحوا کوخ روک صر ا نکر ےہ بعداز ی کر ال نے سرداراان 
قرب میس سےسب کت تین دنن ولیہ یره شہادت وکوا کوک نلیا ہوک جب 
ال نے انش وق لکھا:” کہ رال نے ابھی میک ایا کلام ناس جو ںی انان 
کاکلام ہے ری کابتو نک کلم »ارادم !اس میخض بکی شی بی اود لاک 
رن ہے ا لک الا حص پل داراو ر یلاح صرشاداب ہے ادر یکلام فاب بی ہتا چ 

مخلو کل وتا“ اورفضی لت آو وی موی ے2 سک یگوای ںی دس . 

آفرییش میں علامہفرٹھی رم اسکلا مکوجوانہوں کے فی الا زا ام 
رن جس ذک رک یاہے مینک ابا تک مرج ہوںء دوفر مات ی :ٹم بیش 
وجوہ ہیں جنہیں TS‏ کے ملل شس جیا نکیاے» 
و ایک دو قلخ ظا مخز نے ڈکرکیا کر ازل وج: 
ران O‏ لے کے کے ونت لرک ں ویر ےہ 
ادرو وردناس کر آن» تز رہ س کاٹ تعاس4 ا نک رآن کے 
2 ایک سورت لانے کے ھی کے راتھدان 1 تمتوں اورارادو ںا رآن کے معارضرے 
موژو با" ین يقل اسر ؛ یوک ہام تکاجماں ا چک رآ باس رتسب 


اللمعان شرن‌ارده_التبیان 317 
ہز اگ رم7 ک زع اورصرف ےآ رآ نج زہونے ےئل جا ےک“ 
شبات یہ ےکیقلوق می ےکوئی انی ک بھی ا بک کک ر نک کل پرقا درد 
ہوسکاءاورظار ا اا کی ای سورت جن 
لانے یش ےہک سےا سک فا ی اور بے یآ پ کےا ظا رہوجا هک 
ای _ 12 و ارس نی ے؟ روآ نار کے راوی نکاس 
A‏ کڑس ا کار ول ین 
۱ قرآن مار ضکاخیا ل کک ںآ یاادران مس سک ایک ےکی بقل کر 
ول م ان مار راد وو شش کی مو باوجو د یوو لوو ںکواسلام سے رو کے 
ارس الیو مکی رسال تک کک ی بکر کے می بہت ز یادہرلیش وت جے_ 
الیش پاس دا چ کے بے وقوف اورت وگل سے ہے بات خقول _ ےک 
وق رن سار ششک بایان دہ جو کر ود یک ماش 
یں جنہوں نے ا نکولوگوں کےا مش رس وا با روا اقلا کے ساس سخروبناد یاء چنا نی 
داشگ خحضب اورلوگو ںکی نا راشگ یکو سرا اورا ن کیک ای خیش 
دکامیالی اور رن کلام الد ہونے ریک شع دی لیکو اتان اک موا ریز 
ری 
الف مسیل کواب: + ان عنقاء یش سے ایک" کوٹ سے یس نے بوت 
کا وگو یگیاءاور تیا ل کیک وه وت کے موا تس سول ال اش يمک شکب 
ےآ رت کے دوہی سال ال س ےآ پ مکی اڈ لے طرف ایک کیاکی یں میں 
ان ےکھا:”أمابعدہ بلاشیہ که دنل تیرے ساتھ سای ہناد یاهبآ ری 
زین ا 7 اور تر کی e‏ ے4 انصائ یکر نے وال 7 وم 
“وریہ نے پیوو یکی اک اا کے با کک یا آن جا رآ ان 
۱ و و و تر ر ف 
نک دول راما تک یت کے ہیں کا ان وال 
6 لو تلا راور معا لصاف وھا وال 2 اب ہو ےکا لیت 3 


اللمعان مر اردوالتبیان 318 
سل لز ا بآ رها نے سورۃالعاد یات کے مقابل رٹل یی ںکبان و الطاحدات. 4 
۶ ےآ ٹا لین والیو ںکی جوا نت ہیں ء او رآ اگونر عۓ والیو ںکی ۱ 
۳4 بآ گنشق ں٠‏ اوررویاں اد والول کی چرویاں ال یل ادر ر یر 
0 0 0 و 
ال یں ۳ خاش ہیں دیا نت د گنچ تون 


نرو e‏ 
۱ اور ایک دوسرکی چگ رده ده دم یک تے >:والشاء .4 

ترجہ : مرول اوران کے کن کان یی سح ز یاده 
خوش اکا ی کیان اوران کے دودح یں نم ےکا کرک اورال کف دوده 
گیاء کل بت ای تبرت ییات ا دودح مش لاتا ام 
کرو ا گیا ے س ہی لکیام اکن ( دود او رور عوو) نی ںکھاے؟“'_ 

وراک کے نآ مس سے ایک یگ ج:الفيل ماالفیل .4 

مکی اش ںکیا مل کی اگ کی »الک ایک 
کت دم ہے اور مک ونژ سب 

ا لکا ای کلام یگب (یاضفرع 3 

چ اے غین ڈگ مین ڈ کک بی :تو ان بد نوا فک رجش قدرصاف 
کن ہے تیآ دعابرن لش جاور آ رجا یش ,تور پا ی کوک دلاکرنی 
او ت 

" اورای نے ہے دو لکیاگرال و ً01 چناشج وہ ای بلواس 

کولوگوں کےسا مه ے1 :نا عطیحالت. 3 

7 سب یش رعوام عطا کی رل 
تما اورک الا علان با تکہہہ تک ترا نار ی 

٠‏ ا سکا بکاتھامملام ای طرز یرہود اور پر سے جونہای وصلفزاس اورت ای ہام 
مر لوط» اور پجاتے ہیں )کا کر 1۳ ۱ بھی یں لکل مار ض کی صلاحیت“ تال که 


اللمعان شم ادده_التبیان ۳ 
علا م رافق رح افر مات ہیں سل سکف اب ےن بیان کے لوق رن 

کے موا رض کااراو م ی کي تا ال نے اراد کیا تیا کہ اہک قو موا ہے دام فرب شس 
هشال کی ایک دوسرے وتا تقرس ص دہواپنے لئے ز یادہآسان 
اورلوگوں کے ولول میں سا رل قرجب تی نجنا ہے اوردہ بین اکہ ا ے ۶عروں 
کو ویساک وہ زمانہ مایت میت شی لک بتو نک کته تجھےء اورکا بتو ںکا عام اسلوب 
بان ال یا یگنر نا وولو جناتکاکلا مکی تھے جاک 

کا نو ں کا قول ے: یا جلیغ آموزجيش ژ جل نیع یل لاله لاله 
۱ کے 7 ہےہآد یک ہے چوک لاا الا اللہ 


“¢ 


تاب 5 

02 ا کلام یی کرتر با اک دیشر ڈال د سے 
کا لک طرف و یکی ال کرو ہا سے اس حیل ہک رٹ لکامیاب هو :کو کال 
ات وت اور ×× گی اوردہ لوک کے ےک رابت کے 
استھا لکر نے میں ماہرہے اناوت کے دگ ے میس سیا س» اور ان وگو ںکا سی کی 
اتا کرم تن ےا تول ےطان تاک تید ر بیج کک ا بکیی تی رمز کے صادقق 
سے ز یا دوب ے۔ ۱ 

1 :اوی OE a‏ 1 و و سجن ٹیل ای نے 
بو تک وکو یکی اودا لسن یا کال پم تلع سب چا ده رز نگ 
طرف چا راو شتا رکه وں لو ںکیاکیا ےکن اس کے شیطان 
نے ول ان از اب التا کرت ے ہ کہا ےوہ ناش تین خضب مج 
او رکپاتقافي بتر ی تقر یر شع رورش بگوئی یل مروف »ال کے بارے بی ہے 
مرو یکل س کرای ن ےق رن کے محاارضک یکوشت کی ہوہ رال نے بوت سروس 
اوراپنے پروی نازل ہونے نے ری اکان الشیطین .یچ اور یقیناغ من ان 
وتو نکر - 
0 :لہ بن خو بل آسدگی: یک رن راسد“ چت نے نوت کا کا گی 


اللمعان شرا ردوالتبیان 320 
کیا اورا کیال ق کر ذوالٹون نا می شک اس کے پاس وک لیک را سے مر 
اب یز ا نکا رلک سکیا کیو ںکہا سک توم کے لوک نصحا تھے الب تقوم نے 
2 بور وک صرق اور صر ف یت اورجاه وشم یکو لے بل 1 5 
"مرن" کے م صف فر ہے ہی ںک ہا نک کلام تھا ٛ س ماس نے ول 
کیا کد کلام اس پروی کےطور پرنازل ہوا ہے اوراس (صا خب عم البلران ) صرف ۱ 
ای کےا کلام پرکامیا ی مال ہو ے: ”ان اله لایصنع بتعفیروجوھکم وقبح 
ادبا ر کم شيا فاذکرواللّهقیامافان ال غوه‌فوق الصر ي“ 
ا قال ار 2 Uf‏ کے نا پآ لود ہوۓ اورتھہارت ۓکاہوں 
ح کے سے و کرجا سوالڈ کے باو رکرو :2 ہے کر اع ےک راگ غا 
سش او پرہولی ے“۔ 
ا کیا مراد یک روح رہ کرو اورفماز س صرف تام اکت اکیاکروہ اور 
صرف عالت تیا م یس ذکر اللہ پا رمو 
` حطرت اور صر ان نے ا سکی طرف الین ولیدکی ارت س ایک 
اریپ چب دور ٢ت‏ کن تون پیردکار کی ایک بت بڑئی 
اعت 7 مرل جا نے دا او پرایک چادراوڑھ وروی کا ظا ر 
لگا حیدنہ نے ال س ےک اک کیااب کک وہ قطان تیرے پا کیل آیاچتویں بے 
اد کے چ ےی کہ کش غد اک م ایتک دو کی ںآ ےہ ال پرحیدینہ نے اس 
کاس کے اس مال می ںچچھوڑ ا کے ا لک ز اد وض رورت گی »رده 
کہا: اس فزارہ ہت وا سل اوراسے اس کے مطلوب یں برکت نہ دی 
۱ ای رتست ول اوروه‌شام کے مضا فا تک طرف چلاگیاءاو رکہاجا تا کرای 
کے بعرو ہا یمان ےآ )اور جنگ قاد سیر لا لک بت یکر دار پا۔ 
و: نر ہن ارت :اوران بل سے ایک ضر ہن صادست سے وور ل کے رمآ وردہ 
وگول اورکفر وضلالت کے رواروں میں ے تھا ء ان ےک بو ت کا وو یکی اورت ی وک 
اکن ا لکاگان تھ اک د دق رآ نکامعارض نک کے چنا مالس ایرانیوں اورم بے 


المعانم ده الثیان ۱ 321 
ول کے واقعات سے چند ت کے ورود قرش کے باس 27 ال تھے 
او رال سنا جا »انس تکیت کی پرنا ز ل شد و رآ سے ہت کر سب ! 

2 :م رک» ادرا یں :روایات لآ تاک وا ری ون 
نماض ششک تن ہیں نے ا کیشش پل یشرو 
کل کیاتواکہ وه نام ہو کے اوراکیں شر سار مون یڈہ چنا انہوں نے تلم توڑڑالاء 
اورکانحزات پھاڑڈالےء ہم کے ال شین ہق یی کاو کا ذک کیا تھا رموارضر 
کاعز م -اورال پلک نے کے اعدا نے ایک چا وا زک کرو الہ کےا ل کلام 
کی تلاوت کرد ہاتھا: :وقي رف ال ماءلب وَيْسَمَاء اق وغیش الا 


وَكيِىَالْامْزوَائ کور سے :۳۳( 
رم وم ہوا کرڑے زشن ااال نل جاوراے سان ام اور نی 
کھ کورتم وو کی چودی پ رک او کرد اگ اک ہکا روک رمت 


دور 

توا نے جو کیت یڑ رھش ا تک 
و ںکیء اوران نے اتا ولا اش مک انان کے ک با ایل 
0 0 ے2 

علام راق حالش ان | تع کا رقص کر نے کے بعدفر مات ہیں اش 
ا 
ا کیا وج صرف یی یک وہل کول شل سب سح یاو وخی شی تھے اورج بآ پ ےہا 
اسکلا لت موارض کےا رکا نکایری ےا ںکیلے دیس قا کرت ہے اوراس میں 
تا دپ کہ اران می دوش ےلو یی ے: : بانودوجائل سب 
ےا و ا 
آ وی باک ل یں ہوسکتا. تا ہم علام رافق رح اللہ آبوالحلا الع ری“ کی طرج ”این 

'' بھی اس قد کے ب ےکر ںہ چا ییدووں ردائی ا نک قرش 
20 پرا تان ے۔ 


اللمعان شر اردوالتبیان 322 
و بای اورقاد یا ی: اورزمانہفریبگیں جانا کر ا اورقادیا ی فرے سے 
وال نے چن هک ےر یر کے ےہ ان گان ےت اکہ دہ ان کے ذر بی ق رآنن 
کاموار کر ل و1 پچھرلوگوں کے سا ا نکتابچوں ےنا کر ےش نون 
ویر یشان ولگ اورمن سب ون تن کی امیر ی دی اکراے جات کے 
ال یک اس در 


از رآن کے بارے میں چند اکتزاضات اوران کے جوابات 
ا “یہلا اکت ڑا :خان اسلا مق رآن اورصاحب قآ نآتحضرتےملی اللہ علیہ یلم کے 
با سے ٹیل ددرا نیک ہی کر ان علیہ وم نے رآ ہی راراہب سے ال 
کر کے ای کی بت الد تھا ی گی طرفک۷ردی؟ اک ہلوگو کوان نف زس ارام ے 
ریبش چنہادے؟! 
چواب: ال بان وت وب ش لول پر کن اورال طررخ کی ترافارت 
01 ی ی‌صلیب پرست یل اوران کے معاو نی بین ک یکا اسب وہ 
لو یکتم ی فی لکونٹو ٹیش تست کر یں اورا یط رع شبات اور بہتانوں کے 
ذرۓۓ٤‌ان‏ تا لور ڈو ںاور یغ چند باتوی بناءپرفاہرے: 

اک ےہ : ریت ال علیہ وی مکاشا مکی طرف سگرن اصرف ووم رت بت 5 
بت تا ےت 
ری غلام مره" کے ساھ۔ ارتا رن ال بات سے امو ےک ہآپ 
شاه را سے سا کا و 7 ایک ی ماک لکیاہو۔ زیادہ ے زیادہ یی 
کہاجا تاس جک گرا راجیب نے جب ہاو لکود ی کے اس نے رسول ےسا ےکی ہوا ہے 
آواں نےآپ ام کے پچ یکو تا اراس پچ یعنقریب ا ایک نمی رشان بوک اوران سے 
ورتوا س تک کراس ےکک ہک طرف وال با یں ااا یبودکی طرف سے لی 
زک 
رش ول کر یلم نان ال 


3 


اللمعان ابده_التبیان 323 
کر پاش ظا مکی رح کلامم ےآ سے ید وو عم کے وسومیں سال می بھی وال 
یں ہوۓ 2؟! 5 
اوردوسرکی مرت هفرس ےآپ پک فش تاد تشگ اراک سفریمی ںآپ پک امت 

ےط قا تک نذا نک نان اف کیے ق ل تول ہرک ے؟! 

۳-دومرک بات 0 ۶ 9 0 
اتاق طاقات سے دنیاکے استا کا بلندمقام إل پاوجودای ےک بی مرت وه ۳ 
»او رد و متا ہو اورا ک‌طر و 2 راہب سےصرف ایک بادوع رہل ےکی با 
پراپنے نا خواندہ ہو نے کے باوجو یرتاب ےآ ے؟! 
مس میسری جات :ا ای ہداس رآ ن کا اتوت درسالت کے لان دہ 
خودزیادہ ہوتاء اک مثا لشخصیت ریا ی نان روزگ رتخصیتول ‏ فان موق 
:کیو ن کہ دہ ایی کلام نک رآ یا با اک ن سے اون داخ تنس بو ماج کرد یا توا ؟! 
کب -چی بات :کے ی کیک فرش ریش او ش کی نعرب ان ۳1 لے زیاده 
تن لم انکر تے :کیو ںکہ انہوں نے رسول اکم ٹڈ کی گذیب اوراس 
لا جوا برس ےکی عد سے زیاده رل کے پا جودیھی ا ہے لیے ا لگنا هو ٹکو ین رکیل 
گیا۔اورانہوں نے ن یس وش کہآپ فلس ره راہب تصرف 
دو قاقوں سے یا بیس با هکل اسآ ما یق لی کرتی۔ 

۳-وو ااختراش اد سالک یکت رن جرب دی کی 
تلیمات ہے ماخوزے وآ پ یلان یش اس سے اص لکمیں ا 
جواب: اش تیا نے اش مت کون ط ره او ره بیان رج کے 
معا اوخوا چ ذم ےگرفرمایا :«ولقد. 4 

'ثس ج اورت مکومعلوم س کہ پم لوگ بھی کچ یں کہ اکآ دی 

۱ ماج مرف ا کت کر لک زا بھی سے 

اوریٹر آن‌صاف/ لے '۔ 
ای رخ ا تم دی ےکی دب تک ے جم دہ 


اللمعان تر اردوالتبیان 324 
ایک دو مکار بے وال" ان تھا جو رب زبان سے اقا با آپ ی کوو ہت رآ نکی 
تی مکیو ںکرد ے 1 کض شور پارتھاءاودایھان ےآ یا تھا »چا 
آپ للا کا اکٹرجب اس س ےگ ترپ ال کے پا بی جاتے رش سک وج 
02 نے بے شروک کرد کہ مرا کو اق رن ٢کھانے‏ ولج رردئی کی ےہ 
اورک قااسے مارتااو ہت کیم رک وکیا کے ہو وتا کل !ارک یمم رده مه 
سکھاتے نہیں اورمی رکی راشا یکر ے ہیں - 
“۰'9 
لوگوں کے پان| ھی پیا ی ہے :چک اتا کلم لوپار شی اور ریز بان ے پل 
اوا قف ہونے کے پاوجوورسو ل کور ی ز با ن کم دینا ا کے کن مرکا ے؟ اکا پات 
رک سپ ہک اوی ی اق رآ ن مق ہ وک مر یکلام کاسب _عکره 
شاہکارے؟! بک بوک شیم ره اور بان اورا ی عرب کے بار ب! 
ای وجہ ےش رآانع نے کیل لا جاب اورنا قائل 2رد یجاب دیا ے: یسان ای 
بیع وه یسانعرنائینی ۹‏ 
۳۔ تس !اقترا : ار و ی یت عفر اوکری تھی ء اور ےکیوں 
یں واکان اقا رک ع بی ف رمو کنر یت ہہ اور یق رآ گر کی یب 
وا لیف ہو :کیو لکرده ایک بل یرت کے ا کک تے؟ 
اب :می بات کی ا لے با کے من سے بین لق ے جو حضور و زنری 
کے بارے میس چم جاضاہوءاورنہ بی آپ مآ کی قوم اورقیل کی جار ے واقف 
مو چنا سول اللد ٣‏ سال کک اہن قوم کے درمیان اس طرر] دس ےک ہآ پ 
ٹم کی رف ص رانک وامات»اورگزت وشرافت یں الگیوں کے و ر ہے اش ر کیا ما 
ا( ن آپ تالاص د انت واماغت » اورعمزت وشرافت میں لوگوں کے ورمیان مروف 
)با لک کرش رکی نت یآ پک الصادقی الان“ سک لقب سے پکارنے گے لپا 
ال شر یفاضہادد اکپاز زت ری کے بع رکشل ےکوا راک کرو هیک شم نز کلام 
ول ےکی رآ ال طرف سے ہے اورد وا سول ہیں؟ 


اللمعان رده التبیان 88 
چزانان 1 اترااں 1 انا پردلاامت 1 از ارسول کی مت زاورگیپ ہے 
اک تار اور کال وم حط رذن دگی کے ساتھ ا جو ٹف کا ملا پکیو کر وکا ے؟ جب 
رم کے اتا 7 ے آبسفیان رجوال وت مسا نس بے جح اورا کار 
روساے شرکین می ہوت تھا )سے رسول اش کے تحاق پاک کیان لوک سے 
ان پاقول کین یی ون کج تھے؟'' تاب وسغیان نے جواب میں ب کہ اک 
!ولو مار ے ہاں صادق اوران یں و که یں ہکوہ ۱ 
لوگوں وت نہ ہا ند ستاو ر انم رچھوٹ 
۱ ۶'۶ 0 بی باکت طور پہثابت ره 
۱ رای تے. یڑ ماد جات »ترآ ن بھی اپے انا سار 
لیات کول ردک جوم اکنت.4 
چم اورآپ ا کاب سے یط تاو یلاب پڑ سے ہو سے او ردول 
ناب اپنے اتھ سل کت گرا عالت مس بث اشا لوگ برش 

و ۱ ۱ 

٠‏ چنانر رسول اش اللہ علیہ ول مکو پیلے ابا مومت نک باتول» ال وت 
وتیل کے اترا روع کی با یو »کشت تون کے احوال اورسابقہلوگو نک خروں 
اع کے موق لو نان کوکناب کل ی ؟! ونر نی یلم 
کر اتی ارو وال بسک مام ےم لتا 

زج بک انا نک یرادارص لان ہے مال ول ارم سل زبروہست 
پات اور وکا و کی واف رمت رار م وپ ریگ خی بک پاتوں او رشبل کے احوال سے 
الک واقفیت دآ ی کے ہوکتی ے؟ اور انا نکی مک ن میس ام وهای بن مرک دہ 
نی بک ہا ی ا طور پر بتائ ےک مغیہات میں ےلو یی ا سک خر کےخلاف واک . 
ت وکر ےک وہ رسول صادق »واوراشک اب تالک طرف و قآ ہو ہر قل 


ات ون که تقو ری زارت 


کات ےو سر ے سڈ 4 


اللمعان شر ارددالتبیان ۱ 326 
طاقت کل رک اک یب کے پردو ںاو پا کک ڈاے پا غیرمقدور چ زی ٹردے- 

ارتفا ےب کل یرای ے: و کزللی. 4> ۱ 

تج :جس رع ہم نے مو یکا قصہ با نکیا) ای طرر ‏ آپ سے 

اوروا ٹا کشک ت ری بھی جیا نکر تے رت ںاور نآ پلا چت پا 
سے ایک کت نامه یاچ( ی رآن) 7 

جوتت اترا :کب یک انا نک رآ نکی شل لانے سے عا نراتس 
کرت کہ دہ ال ہکاکلام ہےه وا رح ہے ججی ا کلام ہو ی کیل لانے سے لوکوں 
کاعا ہو ےآوکیا سول کر مکی اٹک طرف سے چاه بیکہاجا ےک ا ذو کلام الہ ے؟ 
توا بے شک عد یش دنو کیا لا سے سے اکر چ ماگ مان توص ال 
ران کش نے ہے ماج یں اکر چو نف ایک عدیٹ یا ال کے کلام ی ایک 
رکیوں شود اوررسول الثر امامت دبلات کے مرت سک 
ین ری ورک کلام ہونے سید 

وی ایک انا نک کلام دوسرے سے مشاہ ہوجا تا ہے اک لئے تم کی کلام 
اورت خا اب سک کلم یس مشا بہت پا سے ل» ہم عد یث سن ہی ںتومجا ل ہم پر 
مشتبہہوجا تا ےک ہآیاببعد یٹ م فو سے جآ پ دا ے؟ با موف ےی 
پر الک کلام ے؟ اور با سقطو تال هل الک کلام ؟ اور جب کل ۱ 
تیال کے قا یک کے یس با ری راشا کی تس ءاور 
کن ال سے ناز گیا ے وہ می لاس بہت ز یادہ پا تاس» اور جب ت مھا ے عرب 
شی ےئ که کمخت واا ہاور ہم اس ول اٹہ 
یک کلام خی لک لیے ہیں۔ 

جب بات ےون کی یہاں رل زا نک تخصیت حطر ر نف 
۱ ےکم او دوسرے ان سکم شالت سا وجا ا ےل تن 
سم لک طر فگکان در سی:”المعدة بيت الدائ والحمية رس کل دوائ وعودوا 
کل جسممااعتاد“ ۱ 


اللمعان غر اردو التبیان 327 
تج :مور وار لو ںکا س» اوه هی رووا ۱ اکل ہے اوہ وال 
چک عادکی :نا یس کاد عادکی ے'۔ 
چناج ہاو ق اس تست _ تو ای کمن بت اورک اسلو بک و 
سےا کا عد یٹ ہونا عا ل یں کک اور شی نکر لتا ےوعد یٹ ریف ے۔ 
با جوداال کےکہ ہے عدت یں له رآ رب شورطبیب' ام کد کلام ے» 
ابر رآ نکی ایک انگ خان n‏ کے اتس یں رورپ 
زا کیلع اواس کے :کیو ںک جس وات نے سے اپ پراش نس 
۱ ا اتا کیا وش یں ا لکر سے زوم مر آ نک ری مکوعد یٹ اک 
تیا سکیا جاسکتاے؟ 
دوسرکی بات مہ ےک اکر یق رآ ن تمہ ام کی جالیف ہو توضردری تھا ہق رآن 
وسنت دونوں س اسلوب ایک موتا ؛ ؛ یو ں کہ وہ ایک ایک یس کم ہے کے سے رض سی 
استعراوی ایک اورعزار گی یک مان ان ےا کے درمیان 
وا فرق اور بون بعر هکت ہیں »چا را لوب رآ نایک ابی فو ےنس پرالوہیت ۱ 
دلو جی تک علامات ہو یداہیں جوکہ مشابہت وما رن اوراسلوپر 
صدربیث ایک دوسرکی لور ے جومشاببت وما لت ےم رال ہے پوو فضا 2 بان 
لا شان بشری اسالیب کے بق مت لا ری سب» او هک صورت م کی وہ ااذ رآن 
کے کاک رف نیس هک »اد رال پا تکااد راک چ رانا نک کا ے بط وه 
دونوں اسلو ہوں کے درمیان وسع تنظ رک ے موا زی سه-اوراشتال نے اکل یج 
رایاے: لۇ اماف اڵأرض.4 
2-7 دیدشت زشن رت ہیں ده سيم اک او 
جونذ د ہے ال کے علاو ہا تت رای می اورشا ی ہو جا یی تو اشک باس 
تخم نھوںء بے شک خد اتان ز ہروس تمت والا ے'_ 
ٹر ارشاوظرمایا: ۴ھ ی انش ابن َل آڑ ان با بیفل هلا 
لرا ی 1-0 کشوم لتخو ی دش ۸( 


اللمعان شرن اردوالتبيان ۱ ۱ 328 
ر آپ را دک هک الر تام انان اور جات ال بات کے N‏ 


موچاو ل کہ ایا رن J‏ وی جب ی ایا ۳ گے اور اگ چہ ایک 
دور ےکاید وکا ری بکن جاد ے'۔ 


اللمعان ارد التمیان ٠‏ 
9 
ندال م نرا میٹ تایان 


لام ی رال اپ لے ایا اام ارآ کے مقدمہ میں رآ 
سوتوں کےفضائل می وارد وضو ادیش یسک باب م درت ی کا رای 

ن سورتوں کے فضائل میں اوردجکردوسرے اعمال کے فض آل میں ج ومون 
اعاديیث اود بال روایات وکر نے والوں نے کی ہیں اورکھٹرنے والوں ری 
ہیں نا قائل التمات ہیں ءلوگو ںٹ ٹیر جیا عت نے ا لکا رگا بکیا ہے ا کل سے ان 
۱ کلف اغراش وتا ص ری : ۱ 
۔ انس سے ای ککگردہز ناد ق ہکا ے کی ے تخیر ہکونی اورمصلوب رش ی ویر ہکہ 
ول احادی کم زی او رچ راس میا نکر نے کے ؟؛ کے وہ ای کے زر بیج لوگوں 
کےولوں میں کرک پیراکوں ا کت روایول یش ایک ردایت و ہگ سے ے 
ال _ذحطرت لسن ا تک .او تولف رسول اود مال اق کیا ےک 
آپ ما نے فر مایا ”یش فان +ول+ عیرس بر ریس٦‏ گر ال 
هب چنا ال نے اپنے اس الھادو نرق یت رکب سکی وہ دہ دلوت د تھا آز جج 
ال اس( گر تاش پا ے ) کااضافکرلیا! 

٢‏ ان می سے ایکگردودد نکن ےرک 
رف وولوگو کو بلا سے تےاعادی ٹکو عکیا۔خوار نج کے مانس نے ای نخس نے 
انب وس کے بب دہ ا کہ بے شنک یاعد یش نبد بد ین ( کا حص ) ہیں »لزانم ”ی سے 

۱ ا ال لس ہد ات شرد انچ کم جب کی با نات 
مما | 


اللمعان عر اردہالتبیان 30 
۳-اوران بل سے ایک ف اوه ےجس نے بک کو او ا بک نیت سے اعاد یٹ 
کوک راکو ںکوفضائل اما لک طرف بلا یا جب اک روص مروزی سے مرول _ ےک ان 
سے جب لو چھاگ اکآ پ کے پا ق رآ نک رم سوت کے فضائل کے بارے یل ن 
رم گناب عباس کی سندکہاں سےآئی ؟ تدال نے جواب می کہ اک نے جب 
لوگو ںکود یلاک ووت رآن تا را کر نے کے ہیں اورا بوفیذ کی ف ا ور این اش نکی 
مناز ی شخول ہو گے ہیں جو شی نے نو ا بک امیر سے احاد ی گنن _ 
ای‌صلارج 9 ے ہی ںکہاسی رب ود گی مرح ج رآ نکی رہہ سرت 
رن جب ای نمی نے ال اعاد بش کج اوخ 6 شروک تو با1 وهای 
۱ تم یمج کل نے اخترا فک یرال ال نے وداو رای بقاعت ےگھڑراے_ ۱ 
ان احادیث کے مضو ہہونےکااتان کل نایاں ہے مفسرواحدی اوردوسرے وہ 
مفسرین جنہوں سل ال تفا ریل ذک کیا ے بلا شی بہت بی کج 
۴-ان میس سے ای کرو هگ اکرو لگ ےج پا رو لاور رول شک ے 
وجاتے درا ریاد ہو گی ی سند ذک رک کے عاد ی کر سول ار ی طرف 
مو بک لیے ل» چنا وه ان اسناد کے زر وضو اعاد یف با نک لیے یں ۔ 
تفر بن طیا کی رح الف مات ہی ںکہ: 
یی E O EE E E‏ 
از یڑ تونماز کے بعدان E‏ 
:میرن نکی من جن نے یا نکر تچ نے فیا زین 
رالراق نے ایا اوروه کے ہی لک سل مرس ےت ردیی اورانہوں نے قد سے 
اور قد نے حضرت الس ٹاو ٹڈ سے سن اکان ہوں نے فر ما اک ہآپ ضا نے نر مایا : 
ہج سض ے '' لاال الا ال کی 7ر ہر رف سے ایک ده 
داتس ی چو مو ےکی ادد پرمرجان کے ہوتے ہیں“ اور 
ات کے بتررروایت سناڈ الی» اتی مل ی نی نکی طرف 


اللمعان شر‌ارده التبیان 31 
او رګي ین مین امام مه طرف دج لاو ہر ایک نے دوسرمے س ےکپ کہ 
یام ے ا لک رواعت سال آودوسرے 02 ْاایم روایت 

. توس نے خودجھی ابھی یک ے» چنا | 
اس قص سے فاد یدیس ال کب اکم سے بعد ی ٹمس نے بیان 
گی ہے ؟ تو اس قص کو کہ اک تنل او ری جن ین »ال رسکی جن 
من نے فرما اک ںای تن ہوں اور بل ہیں ہم ےو سم 
حه بر سول و بھی نہیں ساموت اولناضروری ی ےکوہمارے 
عاو هک اور پر وه ال تکوس نهک سے لپ چھاکہکیا آ پ کی من ین ہیں 
ننہوں نے فرمایا: گی ہاں! 0 کہ اک سار تاک رت من جن 
ا آوی ہیں اور کے ال با تکام اب کر ھکل ہوا سی ین ان ت 
بو اکآ نے کی جا ن ل اک شا ہوں؟ قص ےگ وکین کے ایا لکنا کم 
دنا تم دونوں کےسواکوئی دو سی بن مین ,او رصن 7012 ا 
نے ا ںآ نیل کے علادوسترہ رش سے احاد شا یں ج کا نام 
این ملت“ 
یف رک ہی ںکہ یہ با تک یک اعد ہن مل نے ایآ تچ چرے پر دک 
وواا ]ار روز اسیا وه ال دن سے ا سط رب اش ھکھٹراہوا 

لی اکا ن حرا ت کا زان اڑا پا ہو- ۱ 
علا ےی راشا ے ب یک 
”چنا رده اور جوتی ا نک رش EAS‏ 

والو کار وه » ھر کے ما کہاگ رلک میا وم نیروفیر ی ان تصنیفات 

پگ الا ارس جوعلاء یش مت راول اور فت ست‌هروی ہی ںتواس یں ان 

کی هکیت ہوا سے اورتضور کی اس وید لکل جا کیں :ج نے کے 

ال بو چوک رگپموٹ با تاودا وکا نیم بیس بنا کے 
ںآپ رشان 7 ا تر باب س 

ری »ول اعاد یف سے دورد ڈیہ ان وس یکن ٹل سب سے ز یا دم قصان دہ ولوگ ۳ 


اللمعان غ ارددالتبیان 32 
ہے ہت خی ل کیا وا بک نیت 
سے احادی گی سء پچھ رلوگوں نے ان پاتتا اور نکی طرف میلا نک بنا پر نکی 
وضور اعد ی کیبل لیا ای لے خو یی وور نو ر ا 
کیا رآن شیر الفا کی ہیں ؟ با تن کت رآ مر ذبان س 
تال ہواء اور یرم ف کاب ب ج۶ ربوم پرصافع لی زبان مم اتر کی ؛تاکہا نکیل 
راو ات اوران کے متاششرے کے ۓیے ضاطل مو اور اک لوگ الا کرت 
عبت یڑ ی :لیر یروا . چ4 
مرجم اک لوگ ا نک آیتول غو رک بی اور اک ام تیت کل 
9 
اور ہت سار لصو یف رآ ےا بات رمو جد لک رآن اس »فده اسلوب 

وگب میں رل ہے اوداس میں ایکون نہیں جوک مفردات, جملوں» اسلوب 
او خطاب یی رب سر رت سکاف ہو ا لصو کر بل ےت در ذ یل ہیں : 

اسفران ایکون من الْمْنزرِفتيِلَْا عری شین 

ت :اکآ پ ( بھی )لہ ڈرانے والوں کے ہو کات 
۶رف زاك لے 

۴۔-ارشاد یاک ہے :کنب 4 

لو ا ا بل 
ایبافرآن جرا (زہان) یش ے ای لوگوں کے لے( سے ج 
رتشتری 

رل نارای 

تج ما کواتا را یق رآ نکر زا نک کت وا 

۴ فمان الق رانا. 4 

رم وول زاك س ےجس می ذ رال (اور) جک لوگ 
د 


اللمعان ارو التبیان 333 


اراس بات پر انار هرن رل ےت نال س ا نکااخلاف ‏ کہ 
TT‏ آن + لکلا جرب کےعلادہمفردالفا نام جودہیں با او ال یں علاء کے دو رہب ہیں : 
آلف-۔ یہلا ذب :یہو رکا رہب سے ء اوران مرن ست ققاض لیگران طیب ء 
اضر این جر رگ علامہ باقلا اوران کے علاوہ دنک رکپارعلاے کرام یں وہ 
را کے رآ ن تما مک تھا ری ہے اس می نی رع بی الفاط یا مضردا تک اوراس 
شس پا سے جانے وا وہ الفاظ جودنگر سب اقا کی جاع بوب ا ںآوان می انف تا 
لقا تک یال استعال ہوا ےه چنا نچ ان الفاظ با زار اورسشیوں ون و 
سب لیا 
رابت + یط داب چا ان 
الفاظ غیرگر فی ہیں ء اور ملظ اتیل تک دج سے ق رآ نوچ رن ہونے ےس 
ا لج بش : ۱ 
و رش توا 
اد کیل ے وضو Ns‏ ۱ 
۱ - او لو مود جوم ےش ہے یسب انز یں 
- یمر لالفاظ ہیں۔ 
- او را یر لف قیال ے وروی ذبان س رازہ یی من رت 
لقو یل“ ے جوایرانیو ںکی زین شش ری اورگار سسکا شل ے۔ 
سور سس مس 7 هن 
اور ریالی بان لاف سب جو سیرر ےئ میں ے۔ 
-اورلف طور ہے جو هار ۳۳ 
ان عط یرم لے ای یکا نبا تک یقت ےک انار 
ی ہر یکن عربوں نے یں استعا کی اورا ۶ے یز با نکی طفشل کرو چا 
ہے الفاظ ال اپار ے۶ یرب کاٹ رل زان والول الیل بل جول 
تاک بنا پر کی شی الفاط سے رگ گی مو اورائہوں نے ان الغا وا چے 


اللمعان‌شراردوالتبیان 334 
اشعاردمحاورات س استعا لکنا شرو یا یبالگ کک دہ عرف کے انم متام ہو گے 
اوراک عد ر رآ ن ان الفاظگو ےار ا ئ8 
ور کے وال : مہو رکا تال انش رزئل ہے سے جو ماب کے ر ۔ 
رآ ن عر لی سے اوراس یں غر فی الق موج ویش ء البت اس یس ان اشفا کے نام 
ضرورموجود ہیں تنل ز ہا ن۶م فی ,تسا رکیل گرا مد راو رادط وکرو 
ور ور رز ولا سے انت لا گر ے ہیں : 
۱ ا لی ول ٠‏ وہ رہ رآ آیات ہیں جنییں نے باب تکرد ایق رآن اس لفظ 
وا سلوب اورم ور رکیپ شل ساد س ےکا ارا رف سے چنا نچ رتخا نف رآن سر 
موک قرو سے و ای( قراناعر ہی( اد یاف تعددآ یات مس پا ارآ یاے٭ 
اور باتمعلوم س یروق رآ عام ےج وک تا م سورتوں اورآ یا تکوشائل ہے نتم 
نوف روا تلو شا لس 
+7 کیاولیل: بے کت آ ع بیز بان میں نازل ہوا اکروها 0 
حقیق ا اوراش سوام ورگ »اور پات نزن ےک راتا ی وم 
سے ایک ز بان شل نطاب فرما یں سے ده ہو ےکیے مرکا ےجب ہآ یات ای کے 
عر یز بان نسح ت ول کے لے نازل ہونے پ راحو دال کن ہیں :تا اترا 
رد ریا لعل تلو۳4 نے ا کو اتارا چت رآن ری ذبا ن٤‏ جک 
جھ ورای رح اراد ے: (قراتاعربیالقوم یعلمون4 ”العا رآ ج ۶ 
رل (ذبان) مش ابی وگول لیے (نائع سے جو رشن ہیں '۔اور ےآیات 
رآن می ں نیہ ری الفاط مو ےک ای ہیں۔ ۱ ۱ ۱ 
٣‏ تس ی ول : جب شرکین نے دو کیاکی ظافلا نے بیقرآنن ال کاب یل 
سے ایک جررش ایس سے ماک کیا ےتو ال تیل مخ کین پرردفرمایاءاوران 
پرزیاقول کے اختلاف زر بجت قل ادرفرا ی ول تل 4 ۰ 
ترچ اورم اوسعلوم کہ ہے وگ کی کے ہیں کہ ا کو آوی 
ملا ہا ہے :ہش یتح کی طرف اسک نمب تک تے ہیں ا کی ذبا نتوی ہے 


اللمعان ارد التبیان_- ۱ 335 
اوریٹ مآن‌صافۂ ی ےی ۱ ۱ 
ہیں 01 1 0ئ00 ےءاودولوں ےد رمان زین وآ ا نک ر 5 ہے؟ ٠‏ 
٣٢-وی‏ وکل :ار رآن شس عرف بان کے سوالو ھر موجورموت ایک بات مون 
جرب نکم سک با شھی الفاظ ہو توس کت ہن دیا ترا ( کت بش 
ےاوررسول عر فی )ایک دم کر ے اورال کے ذربجییے سے سول اللہ اف کے 
چان ہے پراست لا ل کر ے بجی اکر ان ای ہے :ولو جعللہ. 4 
تر جمہ:*اوراگرہم ا لکوٹھی (زبا نکا) تن بنا ےتویوں کی ےک راگیس 
صاف‌صا فک لس یا نک رکب اورم سول" - 
۵- پا وی دعل : تا رق رآن ار الفا اي جانا چو نم ول طرف 
ون ہی يلو وو لقا #9 بلا قص رتیت اورآو ان اتعال ہو هک قبل سے بے 
مطلپ ہے س جک رال لف ورب ےکی ولا چاوراال فارک» ال مور ےکک اس 
مکی ہہ چنا نیہ بایالط ےجس پک لفا کات ای ہو چک سب اوراقکا یل 
کہ ہے الفاظ یر فی یہ اہم جب اسےعرب نے مولاتوعرپی بی نگمیااورجب ال 
پیر رب لع کیا یا ھییوں نے اسے استتعال می لا یواست مہ باتع یا ہونے سے 
70 4+ ۱ 
2 باتوی ہے کے امن ج ےکرک رح اید اور نے ہورم غ اختیاریاے 
کیش کان تام کت م رل ہے اوراک باتک وہ ہے شا راصول اور نا قا بل تر وید ضبوطا 
دلا ل شہادت د سے تن زر یتلام اتدل ل کیا ے۔ ۱ 
لام ری اش کی ورک را ےک تع ا کی ہے :جک دوسرےف بت کی 
راۓکوردکیا سے دوفو یبول کے کرک نے کے رو ہف ماتے یک : 
۱ ات ا ہے کیو لک رترب دوعال 0 7 
الفاظ کے ذ ر یت نطاب نر ما گیا سے یل ؟ ہکم ال بات وه لفط 
ان کے کلا مک تہ ہو کے اوہہ با تک ب رکد سکیف ررب ان کات : 
عرب وان ہو گے ولاو راگ ران الفاظ کے زر جرب نطاب 


1 سز 1 336 


کل فر ما گیا اورنہ وه تست ہے بات مال ےکا تمالا ان 3 
زان مل خطاب فا یں صے وہ نہ تخ #ول» اورت بتو رآن عرل شدرے 
گاءاورتہ تی رسول اش ام سےا نکی بان میں طب ہوں کے ۱ 


ترآ نکی کٹ 

تج کا مطلب: تج رآ نکامطلب یہ ےک رآ نکوغی گر بی ای زبانو ںکی 
طرف لاور تر ج کو تمددخوں میس بچھاپنا؛ تا ایت رآ نک زان ۶ لون ہا ۓے 
دالا ال 2 جم ےواقف #وچا »او رال جمہ کے ذر یی کاب الثم ے ارزو لکی 
مرا سس 
لاقام یرجم دتصول رتم ہر : 

ازجم ےک کر چم 

یم نی (EZ‏ سے مراد یم بک رآ کا ال کے الفاظ ومفرداتء 
جملوں اور کہوں کے گر یرک ا کی پارا شی ذبان وفیرہ یش ایت ج کیاہاے 
جو اکل ما ہو یرلو ںکہاجا کرت رآ (بزبالن ار یزی) ا رآن (ہبان 
رورم وریہ جم ایک تم لف اس کے دوس رے ہم تی ی کہ رک ےکی 
اند چاو تحار ایت یڑ ولغ 7 تھ جم ی کت ہیں۔ 

ایمیک( یرک ت جم )کا مطلب یہ ےکآ یات هرکرک طور پر جمہ 
کر اکرانسان اس یل الفا کاپ بن نہ ہوہاس کے لظ رر فک ہوہ چنا چ ہد رآن 
کت جم اےے الفاظط کے ساتت ھکر ےھنن میں دوق رآن کےمفمردات وق اکی بک پابندکانہ 
کرےء باو صرف ال نک طر فوجد»ات 2 کے پک را سے دوس تج 
دای ذبا ك کے سے میس ڈ عال دے ادر کے ہوم الکو بر مفرداود رل 
کی شان رف تک مشقت میں ڈا نے !رصاح ب اس لکی مراد کے موا فی ہی تر مرگ 
ا م تی ری تمد موی ت جم کہاجاتاے۔ 
تر جم کی شر :جوا فی مو فی ری ا لکی نش ؛جنھیں ہم وہل میں ۱ 


اللمعان اهدو التبیان 337 
اختقار کے اتر ذک رک نے ہیں : 


کر رم( برا ےھ ماہو۔ 
۴- مٹیم ان پا ول کی خصوصیات واسالیب سے واقف وگن بل جک رن چاہ 
رہاے۔ ۱ 
۳س تج ہ کےا لئ ہوں :ایم یکا نال سم ا مون کن بو 
سمل عم قاروا بک ادا کک ر تہ سے سے ۔ 
ای ط رح ھ نی 7 جک ان شرا کیا کے علاد دمر یرد دشرا ہی لگا کی ہا ہیں : 
ا-2 جم کی زبان یش تھا م مفمردا تک پا يا ان جک ای زبان کےمفردات کے 
ساوک وں- 
۲ - ول زب و کپ شی ها ناو رکب با یدرون 
ارط س یال ہونا- 
کر آ نک سر 7۳ کےا تج کیم نی اور ی یش 
سے ہرای ککامطلب اورت جم مس ضروری طور پر پا جانے وای شرا کی کی حرفت کے 
کور دکلا مکی روق شم 7 کا موان کیت جم ناجا ماع ہے 
اوریعدم توازمررجڈ مل اال ماد 
اع رل زان روف !خر آ ن نایا مس بر ا ف تیل 
کا شکا رن ہو۔ 
۲ فرع لز باون یش دوالفاظ ومفردات ورتا یں جر 7٦‏ تام 
ب ۱ 
A EEE‏ 
اف ۱ ۱ 
ہیں مناسب معلوم ہوتا کہ یہاں مع وت رکے گا ڑکی نیش کرو 
جک محال خرب وا ہوجاۓ ء بل تم کچ ہی ںکہ اکم ای ارشادربائی ک2 جم 
کناچایں: (ولاتجعل يرك مغلولة ال عنقك. ولاتبسطهاكل البسط 


اللمعان شن اردوالتبیان ۱ 338 
فتقعں صلوصآ مور رتم الک لی تر ج کر ن چا یتو جے لول ہوگا: نہ 
رکدا پا رها کرد کے سان اور کول دس ا کو کک ل کول د ناج 
مت غاد ہے ق رآ نکی ال سح »بترم قواس طررج کے تر ج کوخود 
برا بختنا سے او رانا ےک اد تھا یی ں کر دن کے ساتھ بات با ند نے یا الک لکھول وین 
سکول سد و یقت پر ےک رآن می سے وال ص تو فضو ل خر تی او مل 
کانجام ہیا نکر ن هک کی نیل سے ہے۔ اور مایت ره معال یش سے ایک مع 
ےج شرف وت بج کا ے جوا سورب ٹن کے زر یربک پم 
فو می سط رز باس بیان ےو اتف ہو- 

ورای رح فران. خداودی ے: «واغهش لها جاح ال من 
اہ ےچ( ناس زاف تز جک ن یں کیو نک اس می بیغ یرل ایک نا 
نو پا ال سے جے''استھارة مکی کچ ہیں ہے استعارہ خی رع ری بان یل 
ابا 

ای ارشاو رای قم وق ل رې4 ااورول باری تیل 
ج تھری رآ زا4( اد راک رح زان ای :می لماش لک اش 
اش رھ € یں ارم انآ یا تکافش تج ےکر یں ےتوس اکل فاس داور ایک 
اوٹ پٹانگ سے کلام :ن ماس .ال کے ظا بہت ز با دہ ہیں اورا ن کافی ر 


ظط 
(۱)''اور تتو انا ات رون ای سے با ند لیا چا اور نہ بل ت کول د بنا چا بے ور نز امخورده ی رست 
موک یرو ۱ 


(۴)' اوران کےسا فقت سے اا ری کے سا تج تھے ر ہنا“ _ 

(۳)' ا کرب کے بای( او رام رہ لگا“ 

( )وشن مار ی کرای میں روا تی“ 

(۵) ہار ے( ا سے )اوڑ ع بو ( کے ) ہیں اورم ان کے( ماس )اوڑ ھن بچھو نے کے )ہو 
(0 یت ج نی من کے باق ,فا سک ردام سوم جوازکی دج دا خصنف تار = 


اللمعان شن اردہ التبیان ۱ 339 
فرآن رمک وی ترجہ : الب رآ نک نوی تج ےکر نای ورم شاد کے اتر 
جائڑے اورا ےآ نگل کہاجا ۓگ پتفیرقرآ نہیں یرال ےک اتی 
سل الفاط رہن ے بن یکی وگوت دک ےتہک ای کےعلاوہ دوسرے الفاظظ ست» 
چنا نس ل اش ےکا مکی روات پا جات سک ہی نک سول الہ ا نے 
راو و بے ترآ نکی ردایت کی ہا :یں مار ے کے 
چا ل کیک اتی فر ا لک ہے بآ ج تکی لاد تک ال کے 
7وف والفاظ کےضروری ہے :کو لک رک نم انا ون اشک جاب ےو لیا گیا 
ہےاوراس کے فان ومعالی دوفو جج زہیں_ 

ال ت جال شس ق رآ نک یں ہوا بلق رآن ای رق رآ ن26 وتا ۱ 
ہے بات تقیقّت ہس کال تیال نے اہ یکنا بکوقما مرکو ق کی طرف اتا را ے٤‏ کوان 
نے لے رایت واراراورسعاد کح ول مار ےر رآزن سا کر 
زان سے ناواقف درتو موں کک یناک وہ کی اس قرآن سے فور حاصس گرب 
ادرا کی ہدایت وارشا و ے استفاد هر یو شور با تی »لک وبا رآن 
کے قاس ے ایک مم متصد ہے :طیان هذا القران.. "با ییشرآن ایے 
مر یگ پرا تتا ےج سر ها( اسلام)“۔ 5 

الق کے ارت تم رآ نکوعلاء نے جاتزقراردیاےء بر ہے 
= کی درف ہیں این چ سنوی تکرام ارو یتال ہے یی مفاسداس لگ پا جاتے 
ہیں ءادراگرمراد بر ےک٦‏ من کے م یفن یتر جم با محاددہ یا کاور ہت جا کہ پا تک قائل الال - 
ہے فضسا زم یکی جوم مولف مضصوف نے گرا ہیں ان مس ےج ین یں اتل یاه 
زیت نی زی ہاو از گا مع ہیں ء بنا اوقت فسا ری قار کیٹ ہم ناسوت »ال 
میں تر ج کو یتصوریں ہوح وگو کی طل بک تور ,ارو ھن وا ور سوک اور اب نآ له 
اسے اس دالے سے د یاف ت لرل :در ییوش ارک بر مه ی لگ ل1 کے ہاں!جہاں 
۱ وا فا لازمآ ‏ ےتوصرف ال فی تچ ام نگ ءا لکی وج سے مطاقعدرم جوا زکاقول شک ل معلوم 


ہوتاے۔ 


اللمعان شرن ارددالتبيان 340 
توملراوں پر اجب س ےک وو لوگوں تک وکوت ایو ی یں اورا نکی طرف رآ نکی 
بدا توس ےگرچا رن خر رات ن دی نکی ان 
وشوکت اورال ت رآن سکن دجما لک پانالوگوں کے لیے کن ے: :واه ول 
اش هو یی الیل ”اورالشقی کے فرماتے ہیں اورسید ہے رات ےکی طرف 

۱ 500 .ھ20 09 
کاب لت گئی۔